وجود

... loading ...

وجود
وجود
ashaar
عظیم ثنا ء خواں،شاعر اورنغمہ نگار مظفر وارثی کی دسویں برسی منائی گئی وجود - جمعرات 28 جنوری 2021

عظیم ثنا ء خواں،شاعر اورنغمہ نگار مظفر وارثی کی دسویں برسی منائی جائے گی ۔مظفر وارثی 23 دسمبر 1933 کو میرٹھ میں پیدا ہوئے ۔ان کا اصل نام محمد مظفر الدین صدیقی تھا۔ ان کے والد الحاج محمد شرف الدین احمد صوفی وارثی کے نام سے معروف تھے ۔ وہ ایک خوش گو شاعر تھے اورانہیں فصیح الہند اورشرف الشعرا ء کے خطابات عطا ء ہوئے تھے ،قیام پاکستان کے بعد مظفر وارثی نے لاہور میں اقامت اختیار کی اور جلد ہی ممتاز شعرا ء کرام میں شمار ہونے لگے ۔ایک زمانہ تھا کہ پاکستانی فلم انڈسٹری مظفر وارثی کے ب...

عظیم ثنا ء خواں،شاعر اورنغمہ نگار مظفر وارثی کی دسویں برسی منائی گئی

لارنس آف عربیا، بچپن کیسے گزرا؟ وجود - منگل 20 اکتوبر 2020

پاکستان سمیت عالم اسلام کے اکثر ممالک میں آج کل ایک تاریخی ڈراما ’’ارطغرل‘‘ نہایت مقبول ہے۔ یہ ڈراما مسلمانوں کو اُن کی تاریخ کے کچھ پہلوؤں سے آشنا کرتا ہے، مگر بعد کے مسلم ادوار کی اصل حالت کو سمجھنے کے لیے ایک اور کردار ’’لارنس آف عربیا‘‘ کو سمجھنے کی ضرورت ہے۔ برطانوی فوج کا یہ افسر مختلف بہروپ سے خلافت عثمانیہ کی حدود میں داخل ہوا اور تنہا عربوں میں قوم پرستی کے جذبات پیدا کرکے اُنہیں خلافت عثمانیہ کے خلاف کردیا۔ یہاں تک کہ اسلامی خلافت کا خاتمہ ہوگیا۔ اس ایک شخص نے ت...

لارنس آف عربیا، بچپن کیسے گزرا؟

بیروت سے شائع کتاب میں اسرائیل نواز بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کا چہرہ بے نقاب وجود - جمعرات 17 جنوری 2019

لبنان کے صدر مقام بیروت میں قائم زیتونہ اسٹڈی سینٹرکی طرف سے جاری کتاب میں بھارت اور اسرائیل کے درمیان بڑھتے تعلقات بالخصوص اور موجودہ انتہا پسند بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کے مکروہ کردار کو بے نقاب کیا گیا ہے۔اطلاعات کے مطابق ’اسرائیل نواز بیانیہ اور بھارتی مثال‘ کے عنوان سے یہ کتاب ڈاکٹر محمد مکرم بلعاوی اور حسام عمران کی مشترکہ تالیف ہے۔ کتاب میں بھارت اور اسرائیل کے درمیان تعلقات کے اتارو چڑھاؤ، رائے عامہ اور فیصلہ ساز اداروں کے دونوں ممالک کے تعلقات کے فروغ پر اثرات اور...

بیروت سے شائع کتاب میں اسرائیل نواز بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کا چہرہ بے نقاب

14واں بین الاقوامی کتب میلہ کراچی ایکسپوسینٹر میں ہوگا وجود - پیر 10 دسمبر 2018

پاکستان پبلشرزاینڈ بک سیلرز ایسوسی ایشن کے تحت 14واں بین الاقوامی کتب میلہ جمعہ21دسمبرسے ایکسپوسینٹرکراچی میں سجے گا۔25دسمبر تک جاری رہنے والے عالمی کراچی کتب میلے کا افتتاح صوبائی وزیرتعلیم سردارعلی شاہ کریں گے،پاکستان پبلشرزاینڈبک سیلرز ایسوسی ایشن کے چیئرمین عزیزخالد کے مطابق کتب میلے کی تیاریاں مکمل کرلی گئی ہیں۔پبلشرزاوربک سیلرزکے لیے ایکسپو سینٹر میں 330اسٹال مختص کیے گئے ہیں جو ایکسپوسینٹرکے ہال نمبرایک ،دواورتین میں دیے جائیں گے ۔کراچی بین الاقوامی کتب میلے میں کئی...

14واں بین الاقوامی کتب میلہ کراچی ایکسپوسینٹر میں ہوگا

شاعر جون ایلیا کو مداحوں سے بچھڑے 16 برس بیت گئے وجود - جمعرات 08 نومبر 2018

جو گزاری نہ جاسکے ہم سے ہم نے وہ زندگی گزاری ہے شاعر جون ایلیا کو مداحوں سے بچھڑے 16 برس بیت گئے، انوکھے مصرعوں اور نت نئی تاویلوں کے شاعر جون ایلیا کی شاعری آج بھی زمانے کی تلخیوں اور بے اعتنائیوں کو بے نقاب کرتی ہے۔شاعر جون ایلیا 14 دسمبر 1931 کو امروہہ، اترپردیش کے ایک معزز خاندان میں پیدا ہوئے، وہ اپنے بہن بھائیوں میں سب سے چھوٹے تھے۔ ان کے والدعلامہ شفیق حسن ایلیا کوفن اورادب سے گہرا لگاؤ تھا اس کے علاوہ وہ نجومی اور شاعر بھی تھے۔ اس علمی ماحول نے جون کی طبیعت کی تشک...

شاعر جون ایلیا کو مداحوں سے بچھڑے 16 برس بیت گئے

استقبال کتب وجود - اتوار 03 جون 2018

لِقا (شعری مجموعہ) نام کتاب:لِقا(شعری مجموعہ) نامِ شاعر:حسنین بخاری موضوع:شاعری ضخامت:186 صفحات قیمت: 300 روپے ناشر:الحمد پبلی کیشنز، لاہور مبصر: مجید فکری حسنین بخاری کی شاعری کے باب میں محترم گلزار بخاری نے اپنے تبصرے میں لکھا ہے کہ شاعری شعور کے ساتھ ساتھ لاشعوری جذبات پر مشتمل ہوتی ہے اور کسی معاشرے کی ترجمان بھی، اور اب تک جو شاعری ہوچکی ہے اس میں اتنی گنجائش نہیں ہے کہ مزید کچھ لکھا جائے لیکن امکانات کا شعور کبھی نہیں رکتا۔اسی لئے شاعری کا سفر ہنوز جاری ہے۔ انگر...

استقبال کتب

استقبال کتب وجود - اتوار 27 مئی 2018

گستاخ بخاری کے دوتازہ حمدیہ و نعتیہ مجموعے ’’ارحم‘‘ اور ’’نعت خط‘‘ میرے پیشِ نظر گستاخ ؔبخاری کا حمدیہ مجموعہ ’’ اَرحم‘‘ ہے جو حمدیہ شاعری کے باب میں بے شمار حمدیہ اشعار کے گلدستہ کی مانند دل ودماغ تو کیا ، مرِی رُوح تک کی تاثیر میں روشنی کے چراغ جَلا رہا ہے۔ !اِس سے پہلے کہ ہم اُن کے حمدیہ اشعار سے مستفیض ہوں ضروری معلوم ہوتاہے کہ حمد اور حمد سے متعلق شعری ادب کی تاریخ وارتقا کا مختصر جائزہ لیں ۔ ہمیں اِس بات کو تو گرِہ میں باندھ لینا چاہیے کہ بحیثیت مسلمان ہم پر یہ فرض ع...

استقبال کتب

استقبال کتب وجود - اتوار 20 مئی 2018

نور سے نور تک (کلیاتِ حمد و نعت) نام کتاب:نور سے نور تک موضوع:حمد و نعت کلام:شاعر علی شاعر کمپوزنگ:رنگِ ادب کمپوزنگ سینٹر ضخامت:816 صفحات ناشر: راحیل پبلی کیشنز، اردو بازار، کراچی قیمت:750 روپے مبصر:مجید فکری اس وقت میرے ہاتھوں میں جناب شاعر علی شاعرؔ کی ایک ضخیم کتاب ’’کلیاتِ حمد و نعت‘‘ موجود ہے، جس کا عنوان ’’نور سے نور تک‘‘ ہے۔ اس کتاب کے سرورق کو دیکھتے ہی ایسا محسوس ہوتا ہے کہ میں خانہ خدا کے طواف میں موجود ہوں اور اسی کے ساتھ گنبدِ خضرا بھی نظر آتا ہے جو مجھے...

استقبال کتب

نئی نسل کی د لنشیں لہجے والی معرو ف نما ئندہ شاعرہ شگفتہ شفیق سے ملیے وجود - اتوار 13 مئی 2018

شگفتہ شفیق کی شاعری ہر ایک کو اپنی ہی داستان معلو م ہو تی ہے کہ ان کا شعر ی ا ظہا ر ان کی خو بصورت فکر کو نما یا ں کر تا ہے اور قاری کے د ل میں اتر تا چلا جا تا ہے شگفتہ شفیق کا پسند یدہ مو ضو ع شاعری میں محبت ہے اور محبت میں ہجر و فراق کو اُ نھو ں نے اپنے خو بصورت لہجے سے مجسم کر د یا ہے: خواب لوگوں نے جلا ڈالے تھے راکھ راہوں میں اُڑا دی ہم نے ہنستی مسکراتی ،پیار اور خلوص لٹاتی شگفتہ شفیق کے کیا اپنے کیا پرائے، سب ہی دیوانے ہیں اور ان دیوانوںمیں پاکستان، انڈیا، امریکہ، کی...

نئی نسل کی د لنشیں لہجے والی معرو ف نما ئندہ شاعرہ شگفتہ شفیق سے ملیے

کراچی کی ادبی ڈائری وجود - اتوار 13 مئی 2018

٭کاظم پاشا کے اعزاز میں منعقد تقریب بزم یاور مہدی کی 129 ویں تقریب TV کی معروف شخصیت کاظم پاشا کے اعزاز میں منعقد کی گئی جس کی صدارت عالمی شہرت یافتہ فنکار طلعت حسین نے کی ۔ اس موقع پر اظہار خیال کرتے ہوئے طلعت حسین نے کہا کہ یاور مہدی کھلے دل کی پیار کرنے والی شخصیت ہیں۔ یہ ہماری تہذیبی روایت کا ستون ہیں۔ میں نے ریڈیو پاکستان سے ڈرامہ کرنا سیکھا جووقت میں نے ریڈیو میں دیکھا وہ ہماری تہذیب کا آخری وقت تھا۔ ریڈیو پاکستان کراچی آموز گاہ بھی تھی اور تربیت گاہ بھی جہاں سلیم اح...

کراچی کی ادبی ڈائری

استقبال کتب وجود - اتوار 13 مئی 2018

1 بحر 100 غزلیں نام کتاب:1 بحر 100 غزلیں موضوع:شاعری شاعر:شاعر علی شاعرؔ ضخامت:224 صفحات قیمت:300 روپے ناشر:ظفر اکیڈمی، کراچی مبصر: مجید فکری پیش نظر مجموعۂ شاعری جناب شاعر علی شاعرؔ کا تخلیق کردہ ہے۔ جس میں شاعر موصوف نے ایک ہی بحر میں سو غزلیں کہہ کر اپنی انفرادیت کا ایک بیش بہا نمونۂ شاعری ادب اور ادب سے شغف رکھنے والے حضرات کے لئے تحفۂ خاص بنا کر پیش کردیا ہے۔یہ کتاب ظفر اکیڈمی نے اچھے گیٹ اَپ اور دیدہ زیب سرورق کے ساتھ شائع کی ہے۔ موصوف متعدد کتابوں کے مصنف، ...

استقبال کتب

کراچی کی ادبی ڈائری وجود - اتوار 06 مئی 2018

٭’’ ورلڈ بک ڈے‘‘ پر آرٹس کونسل لائبریری کمیٹی اور سوشل اسٹوڈنٹس فورم کی تقریب سوشل اسٹوڈنٹس فورم اور آرٹس کونسل لائبریری کمیٹی کے اشتراک سے ’’ورلڈ بک ڈے‘‘ کے سلسلے میں پُروقار تقریب سے خطاب کرتے ہوئے صدرِ تقریب جناب سعید الظفر صدیقی نے کہا کہ پوری دنیا میں کتاب کی بڑی اہمیت ہے۔ کسی بھی قوم کی ترقی کا راز ریسرچ اور جدید علم پر مہارت ہے۔ جب تک مسلمانوں نے علم و حکمت پر عمل کیا، ہر میدان میں کامیابی حاصل کی۔ ہمیں چاہیے کہ ہم بھی کتاب کی اہمیت کو سمجھیں اور اپنے طالب علموں کو...

کراچی کی ادبی ڈائری

استقبال کتب وجود - اتوار 06 مئی 2018

نام کتاب:عالمی کہانیاں(تراجم) ترجمہ:ظفر قریشی ناشر:دی ریسرچ فورم، کراچی قیمت:600روپے مبصر :مجیدفکری جناب ظفر قریشی ایک سینئر صحافی ہیں جن کا تعلق روشنیوں کے شہر کراچی سے رہاہے مگروہ ایک طویل مدت سے بہ سلسلۂ روزگار دیارِ غیر میں تھے۔اس دوران انھوں نے انگریزی ادب کا خوب مطالعہ کیا ۔انگریزی ادب کی عمدہ اور نئی کہانیوں کو اُردوزبان میں ترجمہ کرکے نہ صرف اُردوادب کا دامن مالامال کر دیا ہے بلکہ تاریخ اُردو ادب میں اضافہ بھی کیا ہے۔’’عالمی کہانیاں‘‘کے عنوان سے انھوں نے اُن 15م...

استقبال کتب

استبال کتب وجود - اتوار 22 اپریل 2018

نام کتاب:روشنی کے خدوخال(نعتیہ مسدس) شاعر:رفیع الدین رازؔ ضخامت:224 صفحات قیمت: 500 روپے ناشر:رنگِ ادب پبلی کیشنز، کراچی مبصر:مجید فکری پیش نظر مجموعۂ نعت محمد (صلی اللہ علیہ وآلہٖ وسلم) روشنی کے خدوخال ممتاز شاعر رفیع الدین راز کا تخلیق کردہ ہے جو بہ شکل مسدس 23 ابواب پر مشتمل ہے جسے رنگِ ادب پبلی کیشنز نے خاص اہتمام سے شائع کیا ہے۔ کتاب کے اندرونی فلیپ پر ڈاکٹر سید محمد ابو الخیر کشفی کا مختصر مگر جامع تبصرہ بھی شامل ہے۔ ڈاکٹر سید محمد ابوالخیر کشفی نے جس کتاب کا ب...

استبال کتب

آصف ثاقب وجود - اتوار 22 اپریل 2018

آصف ثاقب بات یہ بھی ہے ایک باتوں میں لوگ اعلیٰ ہیں نیچ ذاتوں میں کوئی مجھ سا غریب کیا ہو گا میں اکیلا ہوں کائناتوں میں میں اکیلا بہت اکیلا ہوں اب تو دینا ہے ہاتھ ہاتھوں میں روشنائی بنائی لکھنے کو چاند گھولا ہے کالی راتوں میں جانے کس کس کی ڈولیاں آئیں سب ستارے گئے براتوں میں کیسے لکھوں میں سرخ تحریریں خون کالا پڑا دواتوں میں جھوٹ اس میں نہیں کوئی ثاقب پیار سچا ملا دیہاتوں میں آصف رضارضوی اظہار میں پہلی سی وہ نفرت تو نہیں ہے یہ اور کوئی شے ہے، محبت تو ...

آصف ثاقب

ایک سلجھی ہوئی شاعرہ کی سلجھی ہوئی شاعری وجود - اتوار 15 اپریل 2018

یہ دسمبر 2008ء کی بات ہے۔ اکادمی ادبیات پاکستان کے تحت دو روزہ قومی اہل قلم کانفرنس کے اختتام پر ایک مشاعرہ منعقد ہوا۔ مشاعرہ قومی سطح کا ہو تو شاعروں کی تعداد کا اندازہ لگانا مشکل نہیں۔ اسی سے زیادہ تھے بہت سے چھوٹے بڑے شہروں کے شعرا طے شدہ پروگرام کے مطابق اپنے اپنے ’’ حلقہ داد رساں‘‘ کے ساتھ شریک بزم تھے۔ ایسے میں کراچی کی ایک منحنی سی نوجوان خاتون کو کسی فیاضانہ تعارف کے بغیر حمیرا راحت کے نام سے اسٹیج پر بلایا گیا۔ خاتون نے بڑی سادگی کے ساتھ دھیمی آواز میں (جوان کی جسام...

ایک سلجھی ہوئی شاعرہ کی سلجھی ہوئی شاعری

کراچی کی ادبی ڈائری وجود - اتوار 15 اپریل 2018

ایس ایم معین قریشی کی 25ویں کتاب کی تقریب رونمائی معروف ادیب، کالم نویس اور مزاح نگار ایس ایم معین قریشی کی 25ویں کتاب ’’کتنے آدمی تھے؟‘‘ کی تقریب پذیرائی گزشتہ دنوں آرٹس کونسل آف پاکستان کراچی میں منعقد ہوئی جس کی مجلس صدارت میں لیفٹیننٹ جنرل معین الدین حیدر، سردار یاسین ملک،عبدالحسیب خان اور میاں زاہد حسین شامل تھے۔ مہمان خصوصی محترمہ مہتاب اکبر راشدی تھیں اور معروف افسانہ نگار و کالم نویس محترمہ نسیم انجم اور معروف مزاح نگار محمد اسلام نے اظہارِ خیال کیا۔ نظامت کے فرا...

کراچی کی ادبی ڈائری

استقبال کتب وجود - اتوار 15 اپریل 2018

کتاب:جدید اُردو افسانہ۔…کل اور آج (تنقید، تحقیق، تجزیہ) مصنف :شفیق احمدشفیق قیمت :300 روپے ناشر:ایکٹو لیٹریری سوسائٹی، کراچی شفیق احمدشفیق کی اب تک متعدد کتابیں منظر عام پر آچکی ہیں جن میں ادراک، پس آئینہ، جدیدیت سے مابعد جدیدیت تک، فیض ایک عہد ساز شخصیت، مدحت خیر الوریٰ، چند ہم عصر ترقی پسند افسانہ نگار، نثر و تجزیہ، آئینہ دار، سوکھا ساون، فکر و فن کے محرکات، آہنگ نو، صبا اکبر آبادی، مقصدی شاعری، ایک جائزہ کا ناقدانہ تجزیہ شامل ہیں۔ اب ان کی کتاب جدید اردو افسانہ کل اور...

استقبال کتب

کراچی کی ادبی ڈائری وجود - اتوار 08 اپریل 2018

اکادمی ادبیات پاکستان، کراچی کے زیراہتمام پاکستانی ادب کے عالمی ادب پر اثرات مذاکرہ اور مشاعرہ منعقد کیا گیا جس کی صدارت ملک کے نامور شاعر،ادیب ،ماہر تعلیم، ڈاکٹر شاداب احسانی نے کی۔ مہمان خاص راولپنڈی سے آئے ہوئے ادیب شاعر کرنل سعید آغاتھے۔اعزازی مہمان سید اوسط علی جعفری، ریحانہ احسان تھیں۔ ڈاکٹر شاداب احسانی نے اپنے صدارتی خطاب میں کہا کہ عالمی ادب پر نظر ڈالی جائے تو چاہے بھوٹا ن کی رمز یہ شاعری ہویا بنگلہ دیش کا ادب ہو، نیپال کی لوک شاعری کی روایت سے جڑی ہوئی کوئی کتھا،...

کراچی کی ادبی ڈائری

استقبال کتب وجود - اتوار 08 اپریل 2018

کتاب:تمھارے شہر کا موسم(شعری انتخاب) شاعر:نذیر قیصر قیمت:۵۰۰؍روپے ناشر:رنگ ادب پبلی کیشنز،اُردو بازار،کراچی نذیر قیصر کا شمار ان شعرامیں ہوتاہے جن کو اللہ رب العزت نے شہرت سے نوازاہے۔ تمھارے شہر کا موسم بڑا سہانا لگے میں اک شام چرا لوں اگر برا نہ لگے نذیر قیصر کی مشہورزمانہ غزل ہے۔زیرنظر کتاب ان کی منتخب غزلیات کا انتخاب ہے جسے نوجوان شاعر اسامہ امیر نے ترتیب دیاہے۔اس کتاب کا دیباچہ کراچی کے معروف شاعرو نقاد جناب سرورجاوید نے لکھا ہے جب کہ اقتباسات فیض احمد فیض،احمد ند...

استقبال کتب

کراچی کی ادبی ڈائری وجود - اتوار 01 اپریل 2018

حلقۂ اربابِ ذوق کراچی کی ہفتہ وار نشست 20 مارچ 2018 بروز منگل ، کانفرنس روم، ڈائریکٹوریٹ آف الیکٹرانک میڈیا اینڈ پبلی کیشنز پاکستان سیکرٹیریٹ میں منعقد ہوئی۔ اجلاس کی صدارت معروف شاعر میر احمد نوید صاحب نے کی جب کہ نشست میں شاعر علی شاعر صاحب نے مہمان ادیب کے طور پر شرکت کی۔ سب سے پہلے عباس ممتاز نے اپنی غزل "کوئی تو ایسی بھی گھڑی ہوگی" تنقید کے لیے پیش کی۔ شبیر نازش نے گفتگو کا آغاز کرتے ہوئے کہا کہ غزل کے پانچوں اشعار سماعت کو بھلے لگتے ہیں، مصرعوں میں روانی بھی نظر آت...

کراچی کی ادبی ڈائری

استقبال کتب وجود - اتوار 01 اپریل 2018

کتاب :میرے ہمدم مرے دوست(مضامین) مصنف:شاعرصدیقی قیمت:۵۰۰؍روپے ناشر:رنگ ادب پبلی کیشنز،اُردو بازار،کراچی کتاب ’’میرے ہمدم مرے دوست‘‘جناب شاعرصدیقی کے ان مضامین کا مجموعہ ہے جو انھوں نے ایسے شاعروں اورادیبوں پر لکھے ہیں جن سے وہ مل چکے ہیں اور ان کے بارے میں بہت کچھ جان چکے ہیں۔ان اشخاص میں اختر لکھنوی(سانحہ مشرقی پاکستان مرحوم کا نوحہ گر)،اخی بیگ(شعور تنگ نظر کے آئینے میں)،امیر حسین چمن(ایک روشن شخصیت) ، حبیب احسن(کم گو سخن ور) رشیدالزماں خلش کلکتوی (ایک انسان دوست شاعر) ...

استقبال کتب

انور شعور وجود - اتوار 25 مارچ 2018

بیس ویں صدی کے اُردو ادب میں جن سخن وروں نے اپنی شاعری کی بنیاد عہدِ موجود کے مسائل و افکار پر رکھی، اُن میں عہدِ حاضر کے چند سخن وروں کے بعد انور شعورؔ کا نام سب سے زیادہ معتبر، اہم اور سنجیدہ ہے۔ انور شعورؔ کی شاعری تلخ و شیریں تجربات، عمیق مشاہدات، شدید جذبات اور نازک احساسات کی آئینہ دار ہے۔ اِن کے شعر عام فہم، سلیس اور سادہ ہوتے ہیں جس کی وجہ سے ناقدینِ فن و ہنر، ماہرینِ اُردو ادب اور قارئینِ شعر و سخن اِنھیں سہلِ ممتنع کا شاعر ماننے لگے ہیں۔ اِن کے پُرتاثیرا شعارپوری د...

انور شعور

کراچی کی ادبی ڈائری وجود - اتوار 25 مارچ 2018

مسلم کھتری ادبی کمیٹی کے زیر اہتمام مشاعرہ گزشتہ دنوں نارتھ کراچی میں مسلم کھتری ادبی کمیٹی کے زیر اہتمام ایک مشاعرے کا انعقاد کیا گیا جس کی صدارت پاکستان کے معروف شاعر جناب اعجاز رحمانی نے کی جب کہ مہمان خصوصی معروف شاعر و ادیب اور اسکالر جناب سعید الظفر صدیقی اور مہمانِ اعزازی بزرگ شاعر محمد فاروق شاد تھے۔ نظامت کے فرائض جناب نظر فاطمی نے انجام دیے اور تلاوتِ قرآنِ پاک سے مشاعرے کا آغاز کیا اور سینئر شاعر جناب اکرام راضی نے نعتِ رسولِ مقبول صلی اللہ علیہ وآلہٖ وسلم پیش ...

کراچی کی ادبی ڈائری