وجود

... loading ...

وجود
وجود
ashaar
طالبان ثابت کریں جنگجو ان کے کنٹرول میں ہیں، افغانستان وجود - بدھ 30 اکتوبر 2019

افغانستان کے قومی سلامتی کے مشیر نے طالبان سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ ملک میں ایک ماہ کے لیے جنگ بندی کا اعلان کریں تاکہ پتہ چل سکے کہ ملک میں جاری قتل و غارتگری میں ملوث جنگجو ان کے کنٹرول میں ہیں بھی یا نہیں۔میڈیارپورٹس کے مطابق کابل میں میڈیا سے بات چیت میں حمد اللہ محب نے کہا کہ ان کی نظر میں طالبان اب کوئی منظم تنظیم نہیں رہی اور ان کے کچھ کمانڈر داعش میں شامل ہو چکے ہیں۔ انہوں نے مزید کہاکہ اگر طالبان واقعی امن چاہتے ہیں تو انہیں ثابت کرنا ہوگا کہ اْن کا اپنے کمانڈروں پر کت...

طالبان ثابت کریں جنگجو ان کے کنٹرول میں ہیں، افغانستان

امریکا نے خاموشی سے افغانستان میں فوجیوں کی تعداد کم کر دی وجود - بدھ 23 اکتوبر 2019

امریکا نے خاموشی سے افغانستان سے اپنے دو ہزار امریکی فوجیوں کی تعداد میں کمی کی ہے، یہ تعداد میں کمی ایک سال کے دوران ہوئی ہے۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق اس بات کا انکشاف افغانستان میں امریکی فوج کے کمانڈر جنرل سکاٹ ملر نے امریکی وزیر دفاع مارک ایسپر کیساتھ پریس کانفرنس کے دوران کیا، امریکی وزیر دفاع مارک ایسپر گزشتہ روز افغانستان کے دورہ پر پہنچے تھے۔ نیوز کانفرنس کے دوران افغانستان کے قائم مقام وزیرِ دفاع اور وزارت دفاع کے اعلیٰ عہدے دار بھی موجود تھے۔ انہوں نے بھی اس با...

امریکا نے خاموشی سے افغانستان میں فوجیوں کی تعداد کم کر دی

نینسی پلوسی غیر اعلانیہ دورے پر افغانستان جا پہنچیں وجود - پیر 21 اکتوبر 2019

امریکا کے ایوان نمائندگان کی اسپیکر نینسی پلوسی اور کانگریس کے سینئر ارکان غیر علانیہ دورے پر افغانستان پہنچ چکے ہیں۔ نینسی پلوسی نے کابل افغان صدر اشرف غنی، امریکی وزیر دفاع مارک ایسپر اور امریکی فوج کے کمانڈروں و فوجیوں سے ملاقاتیں کیں۔نینسی پلوسی نے افغانستان کا دورہ ایسے موقع پر کیا ہے کہ جب امریکی وزیر دفاع مارک ایسپر بھی اْسی روز افغانستان پہنچے ہیں۔ہائوس اسپیکر اور وزیر دفاع کے ایک ہی روز دورہ افغانستان کو اتفاق قرار دیا جا رہا ہے۔ جب کہ مارک ایسپر کا کہنا تھا کہ ان کے...

نینسی پلوسی غیر اعلانیہ دورے پر افغانستان جا پہنچیں

کالعدم لشکر طیبہ کے 4 رہنماؤں کی گرفتاری پر امریکا کا خیرمقدم وجود - منگل 15 اکتوبر 2019

امریکا نے پاکستان کی جانب سے کالعدم عسکریت پسند گروپ لشکر طیبہ کے 4 رہنماؤں کی گرفتاری کا خیرمقدم کرتے ہوئے عندیہ دیا ہے کہ ایسے اقدامات سے دونوں ممالک کے درمیان تعلقات بہتر ہونے میں مدد ملے گی۔امریکا کی اسسٹنٹ سیکرٹری اسٹیٹ برائے جنوبی و وسطی ایشیائی امور ایلس ویلز نے کہا کہ ہم پاکستان کی جانب سے کالعدم لشکرِ طیبہ کے 4 رہنماؤں کی گرفتاری کا خیرمقدم کرتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ لشکر طیبہ کے ظالمانہ حملوں کا نشانہ بننے والے اب اِن افراد کے خلاف قانونی چارہ جوئی دیکھنے کے حقدار ہ...

کالعدم لشکر طیبہ کے 4 رہنماؤں کی گرفتاری پر امریکا کا خیرمقدم

طالبان کے ساتھ صلح کا معاہدہ مکہ مکرمہ میں ہوناچاہیے ، افغان سفیر وجود - هفته 05 اکتوبر 2019

سعودی عرب میں افغانستان کے سفیر سید جلال کریم نے افغان حکومت اور اور طالبان کے مابین براہ راست مذاکرات پر اصرار کرتے ہوئے کہا کہ طالبان اور امریکا کے درمیان قطر کی میزبانی میں ہونے والے مذاکرات سے افغان حکومت کا کوئی لینا دینا نہیں۔ جب تک افغان حکومت اس بات چیت کا فریق نہیں بنتی مذاکرات کا کوئی فائدہ نہیں۔ طالبان اور افغان حکومت کے درمیان صلح کا حتمی معاہدہ مکہ معظمہ میں ہونا چاہیے ۔العربیہ ڈاٹ نیٹ کو دیئے گئے ایک تفصیلی انٹرویو میں جلال کریم نے کہا کہ امریکا طے کرتا ہے کہ طا...

طالبان کے ساتھ صلح کا معاہدہ مکہ مکرمہ میں ہوناچاہیے ، افغان سفیر

خواہش ہے، فریقین جلد مذاکرات کی طرف راغب ہوں، شاہ محمود کی افغان طالبان سے ملاقات وجود - جمعرات 03 اکتوبر 2019

افغانستان میں تقریباً 2 دہائیوں سے جاری تنازع کو سیاسی طور پر حل کرنے کی ازسر نو کوشش کے تحت وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کی سربراہی میں پاکستانی حکام اور طالبان رہنمائوں کے درمیان دفترخارجہ میں ملاقات ہوئی ،جس میں مذاکرات کی جلد بحالی کی ضرورت پر اتفاق کیا گیا۔وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ پاکستان افغان امن عمل کو کامیاب بنانے کیلئے اپنا مصالحانہ کردار صدق دل سے ادا کرتا رہے گا، پاکستان، صدق دل سے سمجھتا ہے جنگ کسی مسئلے کا حل نہیں،افغانستان میں قیام امن کیلئے "مذاکرات"...

خواہش ہے، فریقین جلد مذاکرات کی طرف راغب ہوں، شاہ محمود کی افغان طالبان سے ملاقات

افغان صدارتی انتخاب، اشرف غنی کے بعد عبداللہ عبداللہ کا بھی کامیابی کا دعوی وجود - منگل 01 اکتوبر 2019

افغانستان میں صدارتی انتخاب کے بعد نتائج کے باقاعدہ اعلان سے قبل صدر اشرف غنی کے بعد چیف ایگزیکٹیو عبداللہ عبداللہ نے بھی کامیابی کا دعوی کردیاہے۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق افغانستان کے چیف ایگزیکٹیو عبداللہ عبداللہ نے کابل میں ایک پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ انہیں اشرف غنی پر برتری حاصل ہے۔عبداللہ عبداللہ نے کامیابی کا کوئی ثبوت پیش کیے بغیر دعوی کیا کہ انتخاب میں ہمیں زیادہ ووٹ ملے ہیں۔انہوں نے کہا کہ نتائج کا اعلان انڈیپنڈنٹ الیکشن کمیشن(آئی ای سی)کرے گا لیکن ہمیں زیا...

افغان صدارتی انتخاب، اشرف غنی کے بعد عبداللہ عبداللہ کا بھی کامیابی کا دعوی

طالبان نے صدارتی انتخابات روکنے کیلئے حملوں کی دھمکی دیدی وجود - بدھ 07 اگست 2019

طالبان نے افغانستان میں آئندہ ماہ صدارتی انتخابات روکنے کے لیے حملوں کی دھمکی دے دی۔ بین الاقوامی میڈیا رپورٹس کے مطابق طالبان نے صدارتی انتخابات کی مخالفت کی اور کہا کہ ان کے جنگجو انتخابات روکنے کے لیے کچھ بھی کرسکتے ہیں۔طالبان نے عوام پر زور دیا کہ انتخابی ریلی سے دور رہیں جنہیں نشانہ بنایا جا سکتا ہے۔واضح رہے کہ طالبان نے 28ستمبر کو انتخابات کے بائیکاٹ کا مطالبہ کیا اور کہا کہ غیرملکی طاقتیں افغان امن عمل پر اپنی توجہ مرکوز رکھیں۔انہوں نے اپنے اعلامیہ میں کہا کہ مذکورہ ان...

طالبان نے صدارتی انتخابات روکنے کیلئے حملوں کی دھمکی دیدی

روایتی ہتھیاروں سے تین دن میں افغانستان فتح کرسکتے ہیں، صدر ٹرمپ وجود - منگل 06 اگست 2019

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا ہے کہ افغان طالبان کے ساتھ بات چیت میں پیش رفت ہو رہی ہے تاہم انہوں نے یہ بات ایک مرتبہ پھر دہرائی ہے کہ امریکی فوج تین چار دن میں افغانستان کو فتح کرسکتی ہے مگر میں ایک کروڑ افراد کو مارنا نہیں چاہتا۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق وائٹ ہاؤس میں میڈیا سے گفتگو کے دوران انہوں نے واضح کیا کہ میں ایٹمی ہتھیار نہیں بلکہ روایتی ہتھیار استعمال کرنے کی بات کررہا ہوں۔یاد رہے کہ اس سے پہلے ٹرمپ نے گزشتہ ماہ بھی ایسا ہی بیان دیا تھا جس پر افغان حکومت نے احت...

روایتی ہتھیاروں سے تین دن میں افغانستان فتح کرسکتے ہیں، صدر ٹرمپ

امریکا،طالبان کے درمیان حتمی سمجھوتا 13 اگست کو متوقع ہے،پاکستانی سفیر کا دعویٰ وجود - منگل 06 اگست 2019

افغانستان میں پاکستان کے سفیر زاہد نصراللہ نے دعوی کیا ہے کہ امریکہ اور طالبان کے درمیان جاری امن مذاکرات کے حتمی سمجھوتے پر دستخط 13 اگست کو متوقع ہیں۔زاہد نصراللہ نے امریکی نشریاتی ادارے سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے 13 اگست کو حتمی سمجھوتہ طے پا جانے کا امکان ظاہر کیا ہے۔اس سے قبل افغان طالبان نے یہ بھی دعوی کیا تھا کہ امریکہ کے ساتھ جاری امن مذاکرات میں افغانستان سے غیر ملکی فوج کے انخلا کے معاملے پر اختلافات دور ہو گئے ہیں۔مذاکرات کے دوران طالبان نے بھی امریکہ کو یہ یقین دہان...

امریکا،طالبان کے درمیان حتمی سمجھوتا 13 اگست کو متوقع ہے،پاکستانی سفیر کا دعویٰ

افغانستان میں رواں سال کے ابتدائی 6 ماہ میں 4 ہزار افراد ہلاک ہوئے، اقوام متحدہ وجود - منگل 30 جولائی 2019

اقوام متحدہ کی رپورٹ کے مطابق رواں سال کے پہلے 6 ماہ میں افغانستان میں 4 ہزار شہری ہلاک ہوئے۔افغانستان میں اقوام متحدہ کے مشن کی رپورٹ کے مطابق شدت پسندوں کے خلاف جنگ میں سال 2019 کے پہلے 6 ماہ میں 3ہزار 812 افغان شہری ہلاک و زخمی ہوئے۔ رپورٹ میں بتایا گیا کہ کارروائیوں اور جھڑپوں کے درمیان سب سے زیادہ عام شہریوں کی ہلاکتیں ہوئیں جس کے بعد گھروں میں تیار کیے گئے بموں اور فضائی حملوں سے لوگ مارے گئے۔رپورٹ کے مطابق یکم جنوری 2019 سے 30 جون 2019 تک طالبان اور شدت پسندوں نے 531 ع...

افغانستان میں رواں سال کے ابتدائی 6 ماہ میں 4 ہزار افراد ہلاک ہوئے، اقوام متحدہ

افغانستان میں جھڑپیں اور میزائل حملے،17فوجی اور24طالبان ہلاک وجود - پیر 22 جولائی 2019

افغانستان کے مختلف صوبوں میں میں طالبان کے حملوں میں سکیورٹی فورسز کے 17اہلکار ہلاک ہوگئے ادھرافغانستان کے جنوبی صوبہ ارزگان میں گائیڈیڈ میزائل حملے میں 24 طالبان جاں بحق اور 17 زخمی ہوگئے تاہم افغان وزارت دفاع نے یہ نہیں بتایا ہے کہ اس حملے کو نیٹو کی قیادت والے اتحادی فوج نے یا پھر افغان فوج نے انجام دیا۔ اس حملے کے بارے میں ابھی تک طالبان کا رد عمل سامنے نہیں آیا۔ غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق گزشتہ روز افغانستان کے مختلف صوبوں میں میں طالبان کے حملوں میں سکیورٹی فورسز کے...

افغانستان میں جھڑپیں اور میزائل حملے،17فوجی اور24طالبان ہلاک

امریکاکے ساتھ اکثر معاملات پر مفاہمت ہو چکی ہے، افغان طالبان وجود - بدھ 17 جولائی 2019

طالبان کی مذاکراتی ٹیم کے سربراہ شیر عباس ا ستانکزئی نے کہاہے کہ امریکا کے ساتھ اکثر معاملات پر مفاہمت ہو چکی ہے اور صرف دومعاملات باقی ہیں جس پر امید ہے جلد فیصلہ ہو جائیگا۔شیر عباس ا ستانکزئی کے مطابق مذاکرات کے ساتواں دور دوبارہ جلدی شروع ہوگا اور مجھے امیدہے کہ مستقل قریب میں باقی معاملات پر بھی مفاہمت ہو جائیگی۔جب ان سے پوچھا گیا کہ جن دو معاملات پر ابھی تک اتفاق نہیں ہوا وہ کیا ہیں؟ انہوں نے جواب دیا کہ غیر ملکی افواج کا نظام الاوقات طے کر نا اور افغانستان کو مستقبل میں...

امریکاکے ساتھ اکثر معاملات پر مفاہمت ہو چکی ہے، افغان طالبان

امن معاہدے کے باوجود افغانستان میں سیکورٹی خطرات رہیں گے،امریکا وجود - پیر 01 جولائی 2019

امریکی اسپیشل انسپکٹر جنرل برائے افغانستان ری کنسٹرکشن (سگار) جان اسپوکو نے خبردار کیا ہے کہ امریکا اور طالبان کے درمیان مفاہمتی سمجھوتاہونے کے باوجود افغانستان شدت پسند تنظیموں سے نبرد آزما رہے گا۔میڈیارپورٹس کے مطابق سگار کو امریکی کانگریس کی جانب سے 18 سال سے جاری جنگ کی نگرانی اور جنگ زدہ ملک میں امن و استحکام کی بحالی کے حوالے سے سہ ماہی رپورٹس جمع کروانے کا مینڈیٹ دیا گیا ہے۔چنانچہ اپنی رپورٹ میں سگار نے بتایا کہ امن سمجھوتے کے ساتھ اور اس کے بغیر بھی ممکنہ طور پر افغان...

امن معاہدے کے باوجود افغانستان میں سیکورٹی خطرات رہیں گے،امریکا

افغان دارالحکومت کابل میں دھماکا، 53افراد زخمی، ہلاکتوں کا خطرہ وجود - پیر 01 جولائی 2019

افغانستان کے دارالحکومت کابل میں دھماکا ہوا جس کے نتیجے میں 53افراد زخمی ہو گئے، دھماکے کے نتیجے میں بڑے پیمانے پر زخمیوں کی اطلاع کے باعث ہلاکتوں کا خطرہ ظاہر کیا جا رہا ہے۔ غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق افغانستان کے دارالحکومت کابل میں امریکی سفارت خانے کے اطراف میں واقع گنجان آباد علاقہ طاقتور دھماکے سے گونج اٹھا، جس کے نتیجے میں قریبی عمارتوں کی کھڑکیوں کے شیشے ٹوٹ گئے۔افغان وزارتِ داخلہ کے ترجمان کے مطابق دھماکا کابل کے علاقے پی ڈی 16 میں کیا گیا، جس میں 2 حملہ آوروں نے...

افغان دارالحکومت کابل میں دھماکا، 53افراد زخمی، ہلاکتوں کا خطرہ

امریکا اور طالبان میں مذاکرات کا اگلا دور آج سے دوحہ میں شروع ہوگا وجود - جمعه 28 جون 2019

امریکا اور طالبان کے مابین امن مذاکرات کا اگلا دور دوحہ میں ہفتے (کل) سے شروع ہورہا ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق افغانستان میں 18 سال سے جاری جنگ ختم کرنے کے لیے دونوں فریقین دستاویزات کو حتمی شکل دینے کے لیے پر پرامید ہیں جن میں افغانستان سے امریکی فوجیوں کا انخلا، قومی سطح پر سیزفائر اور بین الافغان بات چیت جیسے اہم نکات شامل ہیں۔امریکی نمائندہ خصوصی برائے افغان مفاہمتی عمل زلمے خلیل زاد نے ٹوئٹ کرتے ہوئے کہا کہ قطر اور افغانستان کے حالیہ دورے کی بنیاد پر میں یقینی طور پر کہہ سک...

امریکا اور طالبان میں مذاکرات کا اگلا دور آج سے دوحہ میں شروع ہوگا

جاپان میں جی 20 سربراہ اجلاس شروع ہو گیا وجود - جمعرات 27 جون 2019

جاپان کے شہر اوساکا میں جی 20 سربراہ اجلاس کا شروع ہو گیا۔ عالمی رہنماؤں کے گروپ فوٹو کے دوران صدر ٹرمپ اور صدر شی جن پنگ نے آپس میں مصافحہ بھی کیا۔ اجلاس میں میزبان جاپانی وزیراعظم ابے شنزو نے سب سے پہلے خطاب کیا۔اجلاس کے پہلے سیشن میں ڈیجیٹل معیشت پر بات ہوئی، میزبان وزیراعظم شنزو ابے کے مختصر خطاب کے بعد امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور چینی صدر شی جن پنگ نے بھی خطاب کیا۔امریکی صدر نے عالمی رہنماؤں کے گروپ فوٹو کے دوران چینی صدر کے ساتھ بھی مصافحہ کیا۔ اس موقع پر برکس کا بھی اجلا...

جاپان میں جی 20 سربراہ اجلاس شروع ہو گیا

امریکی طالبان جان واکر 17 سال بعدبھارتی جیل سے رہا،امریکی وزیرخارجہ برہم وجود - جمعه 24 مئی 2019

افغان طالبان کے نام سے اپنی شناخت رکھنے والے کیلی فورنیا کے شہری جان واکر لنڈھ کو ریاست انڈیانا کی جیل سے رہا کیا کردیا گیا۔ لنڈھ افغانستان کے قید خانے میں داڑھی کے ساتھ دیکھا گیا جہاں وہ افغان قیدیوں کے ساتھ گھل مل کر رہ رہا تھا۔ یوں وہ امریکی طالبان کے نام سے پکارا جانے لگا۔ جان واکر لنڈھ کو نومبر 2001 میں افغانستان کے ایک محاذ جنگ سے گرفتار کیا گیا تھا۔امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے لنڈھ کی رہائی پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اس فیصلے پر نظر ثانی کی جانی چاہیے۔ اْن...

امریکی طالبان جان واکر 17 سال بعدبھارتی جیل سے  رہا،امریکی وزیرخارجہ برہم

افغان جنگ میں شہریوں کی ہلاکتیں ریکارڈ سطح پر پہنچ گئیں وجود - پیر 25 فروری 2019

اقوام متحدہ کی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ افغانستان میں تقریباً 2 دہائیوں سے جاری لڑائی کے دوران صرف سال 2018 میں ماضی کے مقابلے میں سب سے زیادہ شہری ہلاک ہوئے۔اعداد و شمار کے مطابق جنگ زدہ ملک میں خودکش حملوں اور بم دھماکوں نے تباہی پھیلائی اور شہریوں کی ہلاکت میں گزشتہ سال کے مقابلے میں 2017 میں 11 فیصد تک اضافہ ہوا اور 3 ہزار 8 سو 4 افراد ہلاک اور 7 ہزار ایک سو 89 زخمی ہوئے۔اقوام متحدہ کے مطابق جب تنظیم نے اعداد و شمار جمع کرنا شروع کیے تو پہلی دہائی میں 32 ہزار شہری ہلاک ہ...

افغان جنگ میں شہریوں کی ہلاکتیں ریکارڈ سطح پر پہنچ گئیں

افغانستان میں امن عمل کیلئے زلمے خلیل زاد کے نئے سفارتی مشن کا آغاز وجود - پیر 11 فروری 2019

امریکا کے نمائندہ خصوصی برائے افغان مفاہمتی عمل زلمے خلیل زاد افغانستان، قطر اور پاکستان میں مذاکرات کے لیے ایک اور امن مشن کا آغاز کرنے کے لیے واشنگٹن سے روانہ ہوگئے۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق واشنگٹن میں امریکی اسٹیٹ ڈیپارٹمنٹ کا کہنا تھا کہ زلمے خلیل زاد اور ان کے ہمراہ وفد خطے میں مذاکرات کے نئے دور کے آغاز سے قبل بیلجیئم، جرمنی اور ترکی کے حکام سے بھی مشاورت کرے گا۔امریکا کے نمائندہ خصوصی کا حالیہ مشن اتوار سے شروع ہونے کے بعد 28 فروری تک جاری رہے گا جس کے بعد وہ دوب...

افغانستان میں امن عمل کیلئے زلمے خلیل زاد کے نئے سفارتی مشن کا آغاز

مذاکرات پر آمادہ کرنے میں کسی ملک نے کردار ادا نہیں کیا ، افغان طالبان وجود - اتوار 10 فروری 2019

افغان طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے کہا ہے کہ امریکا سے مذاکرات پر آمادہ کرنے میں کسی ملک نے کردار نہیں کیا، اس سلسلے میں ہمیشہ ہماری پالیسی کا عمل دخل تھا۔ نجی ٹی وی کے مطابق خصوصی انٹرویو میں طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے کہا کہ اگر طالبان، افغانستان میں اقتدار میں آگئے تو وہ پاکستان سے ’ برادر ملک اور پڑوسی کے تحت ‘ باہمی مفادات پر مبنی جامع تعلقات کے قیام کے لیے رسائی حاصل کریں گے۔انہوں نے کہا کہ افغانستان میں سوویت یونین کے حملے کے دوران پاکستان، افغان پناہ گ...

مذاکرات پر آمادہ کرنے میں کسی ملک نے کردار ادا نہیں کیا ، افغان طالبان

طالبان کانصف امریکی فوج اپریل تک نکالنے کا عندیہ ،زلمے خلیل زاد کی تردید وجود - جمعه 08 فروری 2019

طالبان رہنما عبدالسلام حنیفی کا کہنا ہے کہ امریکا نے افغانستان سے اپنی نصف فوج اپریل کے آخر تک نکالنے کا وعدہ کیا ہے۔دوسری جانب پینٹاگون کے ترجمان کرنل راب میننگ نے بتایاہے کہ امریکی فوج کو انخلا کا کوئی حکم نہیں ملا، طالبان کے ساتھ امن مذاکرات جاری ہیں۔ ادھرافغانستان کے لیے امریکا کے نمائندہ خصوصی زلمے خلیل زاد نے بھی واضح کیا ہے کہ امریکا نے افغانستان سے فوج کی واپسی کا کوئی ٹائم ٹیبل نہیں دیا۔ سنا ہے کہ کچھ طالبان ذاتی طور پر اس حوالے سے دعویٰ کر رہے ہیں۔غیرملکی خبررساں...

طالبان کانصف امریکی فوج اپریل تک نکالنے کا عندیہ ،زلمے خلیل زاد کی تردید

داعش کو شکست نہیں ہوئی ، زیر زمین چلے گئے ، امریکی حکام کا خدشہ وجود - جمعه 08 فروری 2019

امریکی محکمہ دفاع کے بعض عہدے داروں نے اس خدشے کا اظہار کیا ہے کہ شام میں داعش شکست سے دوچار نہیں ہوئے بلکہ وہ وقت گزاری کے لیے زیر زمین چلے گئے ہیں اور وہ جنگ زدہ ملک سے امریکی فوجیوں کے انخلا ء کے منتظر ہیں۔اس کے بعد وہ دوبار ہ حملے کرسکتے ہیں۔امریکی ٹی وی کے مطابق عسکری حکام نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایاکہ داعش نے ایک طے شدہ حکمت عملی کے تحت یہ علاقے خالی کیے ہیں۔ وہ امریکی فوجیوں کی وطن واپسی کے بعد شام میں چھ ماہ سے ایک سال کے عرصے میں دوبارہ منظم ہوسکتے ہیں۔ان ...

داعش کو شکست نہیں ہوئی ، زیر زمین چلے گئے ، امریکی حکام کا خدشہ

ماسکو کانفرنس آج ہوگی،حامد کرزئی پہلی مرتبہ طالبان کے ساتھ مذاکرات کی میز پر بیٹھیں گے وجود - منگل 05 فروری 2019

افغانستان میں پائیدارقیام امن کے لیے روس کی جانب سے کی جانیوالی کوششوں کے سلسلے میں ماسکو فارمیٹ کے تحت پانچ فروری کی کانفرنس میں افغان طالبان کے وفد نے شرکت کی یقین دہانی کرادی تاہم طالبان کے اعتراض پر افغان حکومت کے نمائندوں کو مدعونہیں کیا جارہا،کانفرنس میں سابق صدرحامد کرزئی سمیت متعد د افغان سیاستدان بھی شرکت کرر ہے ہیں ،کانفرنس میں چین پاکستان،ایران سمیت دیگر ممالک کے نمائندے بھی شریک ہیں،بھارت کے علاوہ امریکی صدرکے نمائندہ خصوصی زلمے خلیل بھی مدعو ہیں،دوسری جانب غیرملک...

ماسکو کانفرنس آج ہوگی،حامد کرزئی پہلی مرتبہ طالبان کے ساتھ مذاکرات کی میز پر بیٹھیں گے