وجود

... loading ...

وجود
وجود
ashaar

آزاد کرد ریاست کے لیے ریفرنڈم کا وقت آ چکا ہے: عراقی رہنما

جمعرات 04 فروری 2016 آزاد کرد ریاست کے لیے ریفرنڈم کا وقت آ چکا ہے: عراقی رہنما

massud-barzani

عراق کے کرد رہنما مسعود برزانی نے اعلان کیا ہے کہ اب وقت آ چکا ہے کہ کرد ریاست کے لیے ریفرنڈم کروایا جائے۔ ان کا یہ اعلان ملک میں ایک نئے ہنگامے کا سبب بن سکتا ہے۔

آزاد کرد ریاست کی راہ میں سیاسی چیلنجز تو ہیں ہی لیکن تیل کی کم قیمتوں کی وجہ سے خطے کو درپیش بڑے معاشی مسائل بھی کرد آزادی کی راہ میں بڑی رکاوٹ ہیں۔

گزشتہ جاری ہونے والے ایک بیان میں کرد رہنما نے کہا کہ وقت آ چکا ہے اور عوام کے لیے بھی حالات سازگار ہیں کہ وہ اپنے مستقبل کے بارے میں ریفرنڈم کے ذریعے فیصلہ کریں۔ ضروری نہیں کہ یہ ریفرنڈم ریاست کے قیام کے فوری اعلان تک جائے، لیکن اس کے بجائے کردستان کے عوام کی مستقبل کے بارے میں خواہش اور رائے جاننے کے لیے ضروری ہے۔

صدارت کا عہدہ مکمل ہونے کے باوجود برزانی اس وقت ملک کی اہم سیاسی طاقت ہیں اور وہ ماضی میں بھی ایسے مطالبہ کر چکے ہیں، البتہ اس مرتبہ انہوں نے کسی خاص تاریخ کا اعلان نہیں کیا۔

ان کی جماعت کردستان ڈیموکریٹک پارٹی کے رہنما علی عونی سے جب پوچھا گیا تو ان کا کہنا تھا کہ “کل سے بہتر ہے کہ آج”، البتہ مخصوص تاریخ انہوں نے بھی نہیں دی۔ عونی کا کہنا تھا کہ کردوں نے داعش کے خلاف جنگ کے ذریعے بین القاوامی ہمدردی حاصل کرلی ہے اور اب ہمیں دنیا کو اپنے عوام کے لیے آزادی اور حق خود ارادیت کی خواہش ظاہر کرنی چاہیے۔

امریکا کا کہنا ہے کہ برزانی کا یہ اعلان “عراق کا داخلی معاملہ” ہے۔ لیکن امریکا ایک وفاقی، جمہوری اور متحد عراق کی حمایت جاری رکھے گا۔

کرد ریاست کا معاملہ اتنا آسان نہیں ہوگا بالخصوص پڑوسی ممالک ترکی، شام اور ایران بھی خاصی کرد آبادی رکھتے ہیں وہ کبھی ایک آزاد کرد ریاست نہیں چاہیں گے جو ان کے ممالک میں مقیم کردوں کو تحریک دے۔ پھر عراقی کردستان اپنے تیل کی برآمدات کے لیے ترکی پر انحصار کرے گا اور آزاد ریاست کے قیام سے براہ راست ترک مفادات سے ٹکرانے کی وجہ سے نئی ریاست کو معاشی طور پر بقا کا مسئلہ آڑے آئے گا۔


متعلقہ خبریں


صدام حسین کے نائب کی ویڈیو سامنے آگئی! ایران کے خلاف صف آرا ہونے کی اپیل وجود - جمعه 08 اپریل 2016

عراق کے سابق صدر صدام حسین کے معروف زمانہ نائب عزت الدوری نے اپنے ایک ویڈیو پیغام میں کہا ہے کہ اگر امریکی انتظامیہ عراق اور اس کے عوام کو ایرانی تسلط سے بچانے اور خوں ریزی روکنے کے لیے حرکت میں نہ آئی تو عراق میں ایران اور اس کی ملیشیاؤں کی تمام حرکتوں کا ذمہ دار امریکا ہی ہوگا۔ گزشتہ برس 17 اپریل کو عراق کے شہر تکریت کے نزدیک ایک جھڑپ میں عزت الدوری کے ہلاک ہونے سے متعلق افواہوں نے جنم لیا تھا ۔تب بھورے بالوں اور داڑھی والے ایک شخص کی لاش کی تصاویر کے متعلق باور کیا جار...

صدام حسین کے نائب کی ویڈیو سامنے آگئی! ایران کے خلاف صف آرا ہونے کی اپیل

شیعہ-سنی تنازع شدت پکڑ گیا، عراق میں سنیوں کی دو مساجد شہید، دو افراد قتل وجود - پیر 04 جنوری 2016

سعودی عرب میں شیعہ عالم نمر النمر کو سزائے موت دیے جانے پر دنیا بھر میں ردعمل ظاہر کیا جا رہا ہے لیکن شیعہ اکثریتی علاقوں میں یہ ردعمل حدوں کو عبور کر رہا ہے۔ عراق کے ایک شیعہ اکثریتی علاقے میں نہ صرف دو مختلف مساجد پر حملے کیے گئے بلکہ ایک سنی عالم دین سمیت دو افراد کو قتل بھی کیا گیا ہے۔ عراق کے معروف شیعہ عالم دین مقتدا الصدر کے حکم پر دارالحکومت بغداد کے علاوہ بصرہ، نجف اور کربلا کے شیعہ اکثریتی شہروں میں سعودی عرب کے خلاف زبردست مظاہرے ہوئے جن میں مظاہرین نے حکومت سے...

شیعہ-سنی تنازع شدت پکڑ گیا، عراق میں سنیوں کی دو مساجد شہید، دو افراد قتل

شام کی تازہ صورتحال، ترکی دوراہے پر وجود - بدھ 14 اکتوبر 2015

امریکا کا سعودی عرب کے ذریعے شام کے شمال مغربی علاقوں حماہ اور ادلب میں فراہم کردہ اسلحہ امریکا-روس کو ایک مرتبہ پھر 80ء کی دہائی کے حالات پر واپس لا رہا ہے۔ اس وقت افغانستان عالمی طاقتوں کی باہمی کشمکش کا میدان بنا ہوا تھا، اب شام ہے۔ لیکن یہ معاملہ افغانستان جتنا سیدھا سادا نہیں ہے۔ خاص طور پر گزشتہ چند دنوں میں ہونے والی پیشرفت نے حالات کو کافی تبدیل کردیا ہے۔ شمال مشرقی شام میں عرب اور کرد جنگجوؤں کا ایک اتحاد تشکیل پایا ہے جس میں کردوں کا عوامی حفاظت یونٹ (وائی پی جی) ب...

شام کی تازہ صورتحال، ترکی دوراہے پر

داعش کے 8 اہم کمانڈرز فضائی حملے میں مارے گئے، غالباً بغدادی شامل نہیں وجود - پیر 12 اکتوبر 2015

مغربی عراق کے ایک قصبے میں ملاقات کے لیے جمع ہونے والے دولت اسلامیہ (داعش) کے 8 اہم کمانڈرز ایک فضائی حملے میں مارے گئے ہیں جبکہ سربراہ ابو بکر بغدادی کے بارے میں متضاد اطلاعات سامنے آ رہی ہیں۔ عراقی افواج کا کہنا ہے کہ اس کی فضائیہ نے ایک حملے میں ایسے قافلے کو نشانہ بنایا ہے جس میں ابوبکر بغدادی موجود تھے، جو اسی ملاقات میں شامل ہونے کے لیے جا رہے تھے۔ ایک سال قبل امریکا کے حملے میں، اور اس کے بعد متعدد واقعات میں بچ نکلنے کے بعد یہ بغدادی پر حملے کی تازہ ترین خبر ہے لی...

داعش کے 8 اہم کمانڈرز فضائی حملے میں مارے گئے، غالباً بغدادی شامل نہیں