وجود

... loading ...

وجود
وجود
ashaar

خواہش ہے، فریقین جلد مذاکرات کی طرف راغب ہوں، شاہ محمود کی افغان طالبان سے ملاقات

جمعرات 03 اکتوبر 2019 خواہش ہے، فریقین جلد مذاکرات کی طرف راغب ہوں، شاہ محمود کی افغان طالبان سے ملاقات

افغانستان میں تقریباً 2 دہائیوں سے جاری تنازع کو سیاسی طور پر حل کرنے کی ازسر نو کوشش کے تحت وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کی سربراہی میں پاکستانی حکام اور طالبان رہنمائوں کے درمیان دفترخارجہ میں ملاقات ہوئی ،جس میں مذاکرات کی جلد بحالی کی ضرورت پر اتفاق کیا گیا۔وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ پاکستان افغان امن عمل کو کامیاب بنانے کیلئے اپنا مصالحانہ کردار صدق دل سے ادا کرتا رہے گا، پاکستان، صدق دل سے سمجھتا ہے جنگ کسی مسئلے کا حل نہیں،افغانستان میں قیام امن کیلئے “مذاکرات”ہی مثبت اور واحد راستا ہے ، ہماری خواہش ہے فریقین مذاکرات کی جلد بحالی کی طرف راغب ہوں تاکہ دیرپا، اور پائیدار امن و استحکام کی راہ ہموار ہو سکیں۔دفتر خارجہ میں ہونے والی ملاقات میں پاکستانی وفد کی سربراہی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی جبکہ طالبان وفد کی سربراہی ملا عبدالغنی برادر نے کی۔ دفتر خارجہ میں وفد کی آمد کے موقع پر وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے استقبال کیا جبکہ دوران ملاقات خطے کی صورتحال، افغان امن عمل سمیت باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ملاقات میں افغان طالبان کے اعلیٰ سطح وفد نے افغان امن عمل میں پاکستان کے مصالحانہ کردار کی تعریف کی اور دونوں فریق نے مذاکرات کی جلد بحالی کی ضرورت پر اتفاق کیا۔اس موقع پر وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ پاکستان اور افغانستان کے مابین دو طرفہ برادرانہ تعلقات، مذہبی ثقافتی اور تاریخی بنیادوں پر استوار ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ پاکستان، صدق دل سے سمجھتا ہے کہ جنگ کسی مسئلے کا حل نہیں ہے افغانستان میں قیام امن کیلئے “مذاکرات”ہی مثبت اور واحد راستا ہے اور ہمیں خوشی ہے کہ آج دنیا، افغانستان کے حوالے سے ہمارے موقف کی تائید کر رہی ہے ۔انہوں نے مزید کہا کہ گزشتہ چالیس برس سے افغانستان میں عدم استحکام کا خمیازہ دونوں ممالک یکساں طور پر بھگت رہے ہیں، پاکستان خوش دلی کے ساتھ گزشتہ 4 دہائیوں سے لاکھوں افغان مہاجرین بھائیوں کی میزبانی کرتا چلا آ رہا ہے ۔وزیر خارجہ کاکہنا تھا کہ پاکستان نے افغان امن عمل میں مشترکہ ذمہ داری کے تحت نہایت ایمانداری سے مصالحانہ کردار ادا کیا ہے کیوں کہ پرامن افغانستان پورے خطے کے امن و استحکام کیلئے ناگزیر ہے ۔انہوں نے یہ بھی کہا کہ ہماری خواہش ہے کہ فریقین مذاکرات کی جلد بحالی کی طرف راغب ہوں تاکہ دیرپا، اور پائیدار امن و استحکام کی راہ ہموار ہو سکیں۔طالبان وفد کے دیگر 11 افراد میں ملا فاضل اخوند، محمد نبی عمری، عبدالحق و ثیق، خیر اللہ خیرخواہ، امیر خان متقی مطیع الحق خالص، عبدالسلام حنیفی، ضیا الرحمان مدنی، شہاب الدین دلاور اور سید رسول حلیم شامل ہیں۔ادھر اسلام آباد میں موجود امریکی نمائندہ خصوصی زلمے خلیل زاد نے کہا امریکی قیادت افغانستان میں قیام امن کے لیے پاکستان کی کاوشوں کو قدر کی نگاہ سے دیکھتی ہے ۔ زلمے خلیل زاد نے امریکا اور طالبان کے درمیان براہ راست مذاکرات کرانے کے لیے سہولت کاری پر وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا شکریہ بھی ادا کیا۔


متعلقہ خبریں


افغانستان میں امدادی رقوم میں خورد برد.. عالمی برادری مزید امداد دینے میں تحفظات کاشکار صبا حیات - منگل 01 نومبر 2016

افغانستان کی مالی امداد کے لیے برسلز اجلاس میں 70ممالک اور 30 بین الاقوامی امدادی اداروں کے نمائندے شریک ہوں گے افغانستان کو مزید امداد دینے کے وعدوں کاانحصار اصلاحات اور بدعنوانی کی روک تھام کے لیے اقدامات پر ہوگا، امریکی حکام افغانستان کی حکومت ان دنوں شدید معاشی مشکلات کاشکار ہے اور صورت حال یہاں تک پہنچ چکی ہے کہ اب افغان حکومت کو نہ صرف یہ کہ سرکاری اہلکاروں کوتنخواہوں کی ادائیگی کے لیے مشکلات کا سامنا ہے بلکہ صورت حال اس حد تک خراب ہوچکی ہے کہ افغان نیشنل آرمی کے اہ...

افغانستان میں امدادی رقوم میں خورد برد.. عالمی برادری مزید امداد دینے میں تحفظات کاشکار

بھارتی خفیہ ایجنسیاں بلوچستان میں لڑائی کیلیے جنگجوبھرتی کررہی ہیں وجود - جمعه 28 اکتوبر 2016

افغان نیشنل آرمی کے کمانڈرز اور ارکان پارلیمنٹ طالبان اور داعش کے جنگجوؤں کو پرتعیش گاڑیوں میں بٹھاکر ان کے مطلوبہ مقام تک پہنچاتے ہیں موجودہ افغان حکومت کے ساتھ پاکستان، افغانستان اور بھارت کے درمیان انٹیلی جنس شیئرنگ کا معاہدہ ہواتھا،جس سے پاکستان کو اب تک کوئی فائدہ نہیں ہوسکاٹیکنالوجی کی ترقی کے ساتھ ہی دنیا اب روز بروز سکڑتی جارہی ہے اور جوں جوں دنیا سکڑ رہی ہے قوموں کے معاملات میں انٹیلی جنس ایجنسیوں کاکردار بھی بڑھتا جارہاہے، جس کا اندازہ برطانیہ،امریکا، جرمنی، فرانس ...

بھارتی خفیہ ایجنسیاں بلوچستان میں لڑائی کیلیے جنگجوبھرتی کررہی ہیں

 مالی بحران ,افغان آرمی طالبان کے ہاتھوں ’’از خود گرفتار ‘‘ہونے لگی ایچ اے نقوی - جمعه 21 اکتوبر 2016

بروقت تنخواہوں اور راشن کی فراہمی میں افغان حکومت کی ناکامی کے سبب افغان فوجیوں میں مایوسی بڑھ رہی ہے دوسری بڑی وجہ افغان فوج میں موجودہ افغان حکومت اور امریکی حکومت کے خلاف بڑھتی ہوئی نفرت بھی ہے افغانستان سے ملنے والی خبروں سے یہ انکشاف ہواہے کہ افغان فوج کو بروقت تنخواہوں اور راشن وغیرہ کی فراہمی میں افغان حکومت کی ناکامی کے سبب افغان فوجیوں میں مایوسی بڑھ رہی ہے اور اب انھوں نے اپنی مشکلات حل کرنے کے لیے اپنا اسلحہ اور یہاں تک کہ چیک پوسٹ تک طالبان اور دوسرے جنگجو گ...

 مالی بحران ,افغان آرمی طالبان کے ہاتھوں ’’از خود گرفتار ‘‘ہونے لگی

امریکا افغانستان سے نکل جائے! طالبان کے نئے امیر ہیبت اللہ اخونزادہ کا عید پر مفصل پیغام وجود - اتوار 03 جولائی 2016

افغانستان کے نئے امیر ہیبت اللہ اخونزادہ نے عید سے قبل اپنے پہلے مفصل بیان میں اپنے اہل وطن اور مجاہدین کو مخاطب کرتے ہوئے عید کی مبارک باد دی ہے اور تفصیل سے اپنے موقف میں کہا ہے کہ امریکا کو افغانستان میں مکمل ناکامی کا سامنا ہے اور وہ افغانستان سے نکل جائے۔اپنے مفصل پیغام میں افغانستان کے نئے امیر نے جہاں امریکا کو اپنی سرزمین سے نکلنے کے لیے کہا ہے وہاں یہ بھی کہا ہے کہ کچھ عناصر ہماری کامیابیوں کو ایران ، پاکستان یا دیگرعناصر کے ساتھ منسوب کرتے ہیں وہ دھوکے میں ہیں۔ افغا...

امریکا افغانستان سے نکل جائے! طالبان کے نئے امیر ہیبت اللہ اخونزادہ کا عید پر مفصل پیغام

وزارت داخلہ کی ملااختر منصور کی ہلاکت کی تصدیق! وجود - پیر 30 مئی 2016

تحریک طالبان افغانستان کے سابق امیر ملا اختر منصور کی ڈی این اے کے ذریعے بھی ہلاکت کی تصدیق ہو گئی۔ ترجمان وزارت داخلہ نے واضح کیا ہے کہ نوشکی ڈرون حملے میں جاں بحق ہونے والے دوسرے شخص کی شناخت ہو چکی ہے اور وہ تحریک طالبان افغانستان کے سابق امیر ملا اختر منصور ہی تھے۔وزارت داخلہ نے ڈی این اے ٹیسٹ کے لیے اُن کے قریبی عزیز سے اس کا میچ حاصل کیا تھا، یہ وہی قریبی عزیز تھے جو مبینہ طور پر ملااختر منصور کی میت لینے افغانستان سے آئے تھے۔ ملااختر منصور کی شناخت سے قبل ٹیکسی ڈرائیور...

وزارت داخلہ کی ملااختر منصور کی ہلاکت کی تصدیق!

امن مذاکراتی عمل مسترد:اپنے غم کو محاذوں پر طاقت میں بدلیں گے، ملا ہیبت اللہ اخوند زادہ وجود - جمعرات 26 مئی 2016

افغان طالبان کے نیے امیر ملاہیبت اللہ نے امن مذاکراتی عمل کو مکمل مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہم اپنے غم کو جنگی محاذوں پر طاقت میں بدلیں گے۔ ملاعمر اور ملا منصور اختر نے ہمارے لیے ایسی تاریخ نہیں چھوڑی کہ ہماری نظریں کبھی بھی جھک سکے۔یہ ناقابل فراموش تاریخ ہے اور اُنہیں ملااختر منصور کی شہادت پر فخر ہے۔ طالبان کے سابقہ امیروں ملا عمر اور ملا منصور کے حوالے سے نیے امیر کا کہنا تھا کہ انہوں نے نور محمد ترکئی، فضل الاہیم، ببرک کارمل، عبدالنعیم، نجیب اللہ، برہان الدین ربانی ...

امن مذاکراتی عمل مسترد:اپنے غم کو محاذوں پر طاقت میں بدلیں گے، ملا ہیبت اللہ اخوند زادہ

مولوی ہیبت اللہ اخوند زادہ نئے امیر منتخب وجود - بدھ 25 مئی 2016

افغان طالبان نے امریکی اور افغان حکام کے بعداپنے امیر ملا اختر منصور کی ڈرون حملے میں ہلاکت کی تصدیق کردی ہے۔ اب سے کچھ دیر قبل جاری ہونے والے اعلامیے میں طالبان کی جانب سے کہاگیا ہے کہ "امارت اسلامیہ کے زعیم امیر المومنین ملا اختر محمد منصور تقبلہ اللہ 14/ شعبان المعظم بمطابق 21/مئی 2016ء کو قندہا رکے ریگستان اور بلوچستان کے نوشکی کے سرحدی علاقے میں امریکی طاغوتی ڈرون حملے میں شہید ہوئے۔ " طالبان اعلامیے کے مطابق مولوی ہیبت اللہ اخوند زادہ کو طالبان شوریٰ نے متفقہ طور پر ...

مولوی ہیبت اللہ اخوند زادہ نئے امیر منتخب

افغان طالبان کے امیر ملامنصور پر حملہ، پاکستان نے امریکا سے وضاحت طلب کرلی! باسط علی - اتوار 22 مئی 2016

افغان امیر ملا اختر منصور کی ہلاکت کی اطلاع پاکستان کے مقتدر حلقوں کے درمیان ایک نئی رسہ کشی پیدا کرنے کا باعث بن سکتی ہے۔ ذمہ دار ذرائع کے مطابق پاکستان نے امریکا سے اس حملے کے حوالے سے وضاحت طلب کی ہے۔ جبکہ امریکا کا اس حوالے سے پہلے سے موقف یہ ہے کہ امریکا نے پاکستان کو اس حملے سے قبل اطلاع دے دی تھی۔ پاکستان میں یہ ایک نئی بحث کا عنوان بن سکتا ہے کہ امریکا نے یہ اطلاع سیاسی حکومت کو دی تھی یا دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاک فوج سے براہ راست تعلق کے باعث عسکری حلقوں کو اس س...

افغان طالبان کے امیر ملامنصور پر حملہ، پاکستان نے امریکا سے وضاحت طلب کرلی!

بلوچستان میں ڈرون حملہ، افغان طالبان کے امیر ملا اختر منصور ہلاک وجود - اتوار 22 مئی 2016

افغان طالبان کے امیر ملا اختر منصور بلوچستان کی تاریخ میں پہلے ڈرون حملے میں ہلاک ہو گیے ہیں۔ امریکی محکمہ دفاع نے ہفتے اور اتوار کی درمیانی شب پاک افغان سرحد پر ایک دور دراز علاقے کے حوالے سے دعوی کیا کہ ایک فضائی حملے میں افغان طالبان کے رہنما ملا اختر منصور ہلاک ہو گئے ہیں۔ ایک حساس اور انتہائی خطرناک پیش رفت کے باعث یہ ایک ایسا واقعہ ہے کہ امریکی محکمہ دفاع کے ترجمان نے اس دعوے کے ساتھ یہ بھی واضح کیا کہ حملے کی اجازت امریکی صدر نے دی تھی۔ اور اس حملے سے قبل پاکستان اور ا...

بلوچستان میں ڈرون حملہ، افغان طالبان کے امیر ملا اختر منصور ہلاک

افغانستان میں بچے بھی ہیروئن کی لت میں مبتلا وجود - جمعرات 12 مئی 2016

افغانستان میں امریکی جارحیت کی طویل تاریخ کا سب سے بھیانک 'پہلو' یہ ہے کہ اب افغانستان دنیا بھر کی 90 فیصد افیون پیدا کرتا ہے۔ اس کی ایک بہت بھاری قیمت افغانستان کو چکانا پڑ رہی ہے اور ایک افسوسناک پہلی یہ ہے کہ بچوں میں ہیروئن کے نشے کی لت میں بھیانک اضافہ ہوا ہے۔ کابل میں مقیم صحافی میتھیو ایکنز کے مطابق گزشتہ 13 سالوں میں افغانستان ایک نارکو-اسٹیٹ یعنی منشیاتی ریاست بن چکا ہے، جس کی تاریخ میں کوئی مثال نہيں ملتی۔ اس پر طرہ یہ کہ افغان معاشرہ ہر سطح پر اس تجارت کو آگے ب...

افغانستان میں بچے بھی ہیروئن کی لت میں مبتلا

کابل میں وزارت دفاع کی عمارت کے قریب خود کش حملہ :فوجی اہلکاروں سمیت 24 سے زائد ہلاکتیں وجود - منگل 19 اپریل 2016

افغان دارالحکومت کابل میں خودکش حملے کے نتیجے میں سیکیورٹی فوسز کے اہلکاروں سمیت 24 افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے ہیں۔ تازہ ترین اطلاعات کے مطابق کابل میں وزارت دفاع کی عمارت کے قریب کار میں سوار خودکش بمبار نے افغان فوجی قافلے کو نشانہ بنایا اور خود کو دھماکے سے اڑا لیا جس کے نتیجے میں فوجی اہلکاروں سمیت 24 افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے۔ دھماکے کے بعد علاقے میں فائرنگ کی بھی آوازیں سنی گئیں جب کہ فورسز نے شبہ ظاہر کیا ہے کہ خودکش بمبار کے ساتھی علاقے میں موجود ہیں جس کے...

کابل میں وزارت دفاع کی عمارت کے قریب خود کش حملہ :فوجی اہلکاروں سمیت 24 سے زائد ہلاکتیں

طالبان کا جنگ تیز کرنے کا منصوبہ محمد انیس الرحمٰن - بدھ 06 اپریل 2016

افغانستان سے ایسی اطلاعات آرہی ہیں کہ افغان طالبان کے عسکری بازو حقانی نیٹ ورک نے امریکا اور اس کے اتحادیوں کے ساتھ فیصلہ کن معرکے کی تیاری مکمل کر لی ہے۔ ایسا سب کچھ اس وقت سامنے آیا ،جب افغان طالبان نے امریکا کی چھتری تلے ’’امن مذاکرات‘‘ سے انکار کردیا ہے۔ ان مذاکرات میں امریکا خود کے بجائے کابل میں موجود اپنی کٹھ پتلی افغان انتظامیہ کو طالبان کے سامنے مذاکراتی فریق کے طور پر لانا چاہتا تھا ۔ اس سے پہلے دوحہ میں موجود چینی سفارتکاروں نے بھی بیجنگ کی ایماپر افغان طالبان کے آ...

طالبان کا جنگ تیز کرنے کا منصوبہ

مضامین
چلغوز۔یات (علی عمران جونیئر) وجود بدھ 13 نومبر 2019
چلغوز۔یات (علی عمران جونیئر)

پا شا احمد گل شہید اسلامی مزدور تحریک کا سچا سپاہی
(عطا محمد تبسم)
وجود جمعرات 07 نومبر 2019
پا شا احمد گل شہید اسلامی مزدور تحریک کا سچا سپاہی <br>(عطا محمد تبسم)

دھرنے کی آکاس بیل۔!
(راؤ محمد شاہد اقبال)
وجود جمعرات 07 نومبر 2019
دھرنے کی آکاس بیل۔!  <br>(راؤ محمد شاہد اقبال)

سیاسی چور۔(علی عمران جونیئر) وجود جمعرات 07 نومبر 2019
سیاسی چور۔(علی عمران جونیئر)

مولانا فضل الرحمن اور مسئلہ کشمیر
(حدِ ادب...انوار حسین حقی)
وجود پیر 04 نومبر 2019
مولانا فضل الرحمن  اور مسئلہ کشمیر  <BR>(حدِ ادب...انوار حسین حقی)

جسٹن ٹروڈو کی جیت یا مودی سرکارکی ہار؟
(سیاسی زائچہ..راؤ محمد شاہد اقبال)
وجود پیر 04 نومبر 2019
جسٹن ٹروڈو کی جیت یا مودی سرکارکی ہار؟ <BR>(سیاسی زائچہ..راؤ محمد شاہد اقبال)

طالبان تحریک اور حکومت
(جلال نُورزئی) قسط نمبر(7)
وجود هفته 02 نومبر 2019
طالبان تحریک اور حکومت <br> (جلال نُورزئی) قسط نمبر(7)

سخت فیصلے کا سیزن۔۔
(علی عمران جونیئر)
وجود هفته 02 نومبر 2019
سخت فیصلے کا سیزن۔۔ <br> (علی عمران جونیئر)

سیاسی اختلاف اور شہریت کی منسوخی
(جلال نُورزئی)
وجود بدھ 30 اکتوبر 2019
سیاسی اختلاف اور شہریت کی منسوخی<br>(جلال نُورزئی)

آٹھ آنے کا بچہ۔۔
(علی عمران جونیئر)
وجود بدھ 30 اکتوبر 2019
آٹھ آنے کا بچہ۔۔<br> (علی عمران جونیئر)

ڈکیتی!!!... (شعیب واجد) وجود پیر 28 اکتوبر 2019
ڈکیتی!!!... (شعیب واجد)

’’کُرد کارڈ ‘‘عالمی طاقتوں کے ہاتھ سے پھسل رہا ہے؟
(سیاسی زائچہ..راؤ محمد شاہد اقبال)
وجود پیر 28 اکتوبر 2019
’’کُرد کارڈ ‘‘عالمی طاقتوں کے ہاتھ سے پھسل رہا ہے؟<br>(سیاسی زائچہ..راؤ محمد شاہد اقبال)

اشتہار