وجود

... loading ...

وجود
وجود
ashaar

تنہائی پسند افراد کے لیے 10 بہترین کام

هفته 12 ستمبر 2015 تنہائی پسند افراد کے لیے 10 بہترین کام

بہترین تنخواہ اور معاشرے میں اعلیٰ مقام، بس آجکل دوڑ اِسی کی ہے۔ یہ ملازمتیں آپ کو ایک کامیاب اور بہتر زندگی تو دے سکتی ہیں لیکن یہ آپ کو تنہا کردیں گی۔ اگر آپ تنہائی پسند ہیں، تو یہ 10 ملازمتیں آپ کا بہترین انتخاب ہوسکتی ہیں۔

کھلاڑی

Athlete

کھلاڑی اپنے دن کا بیشتر وقت جم یا کھیل کے میدان میں گزارتے ہیں، جہاں اُن کا رابطہ اپنے جیسے ہی کھلاڑیوں سے ہوتا ہے اور بیرونی دنیا سے ان کا زیادہ تعلق نہیں ہوتا۔ مرد کھلاڑی یہ سمجھتے ہیں کہ ان کے اردگرد موجود خواتین “مرد مار” قسم کی ہیں، جبکہ خواتین کھلاڑی یہ سمجھتی ہیں کہ ان کے قریب مرد اتنے نفیس نہیں ہیں۔


اداکار/اداکارہ

Actor-Actress

مشہور و معروف افراد کے چاہنے والے بھی بہت ہوتے ہیں، جیسا کا اداکاروں اور اداکاراؤں کے۔ وہ امیر ہوتے ہیں، خوبصورت بھی اور اپنے احساسات کی بہترین انداز میں ترجمانی بھی کرسکتے ہیں، لیکن عوام میں اپنی کشش کو برقرار رکھنے کے لیے انہیں سب سے علیحدہ رہنا پڑتا ہے۔ یہ ایسے افراد ہیں جن کے لیے ایک طویل عرصے تک کسی تعلق میں بندھے رہنا مشکل ہوگا۔


صحافی اور مدیر

Journalist-editor

صحافی اور مدیران کو مشہور شخصیات کے انٹرویو کرنا ہوتے ہیں، ان کا دائرۂ شناسائی بہت وسیع ہوتا ہے اور تمام ہی شعبہ جات کے بارے میں ہو کچھ نہ کچھ علم ضرور رکھتے ہیں۔ وہ نرگسیت پسند بھی ہوسکتے ہیں اور حاکمانہ مزاج کے بھی اور ان کے لیے کسی بھی تجویز قبول کرنا بھی بہت مشکل ہوتا ہے۔ ہر چیز کے بارے میں ان کا معیار بہت بلند ہوتا ہے یہاں تک کہ ساتھی کے چناؤ کے معاملے میں بھی۔


آئی ٹی اور انٹرنیٹ کمپنیوں کا عملہ

آئی ٹی کی صنعت سے وابستہ اور انٹرنیٹ اداروں میں کام کرنے والے افراد کمپیوٹر کی اسکرینوں پر ہی نظریں ٹکائے بیٹھے رہتے ہیں۔ یہ اپنی ساتھی خاتون کے لیے عموماً اچھے ثابت نہیں ہوتے جو ایک بردبار مرد کو ترجیح دیتی ہیں۔


بیوٹیشن/فوٹوگرافر

“گیسوئے تابدار کو اور بھی تابدار” کرنے والے اور پھر ان کی تصویر کشی کرنے والے مرد حضرات کے روز و شب خوبصورت عورتوں کے ساتھ گزرتے ہیں۔ وہ اتنا حسن اپنی آنکھوں میں سمیٹ لیتے ہیں کہ شاید ان میں مزید کی گنجائش نہیں رہتی۔ یہاں تک کہ عورت کو دیکھ کر ان کے اندر کوئی احساس ہی نہیں جاگتا۔ شاید اسی وجہ سے ان اردگرد موجود خواتین انہیں پسند نہیں کرتیں اور ویسے بھی ان کے پاس عورتوں کے ساتھ گزارنے کے لیے کافی وقت اور مواقع ہوتے ہیں۔


ملبوسات ڈیزائنر

ملبوسات تیار کرنے والے کبھی اپنے بنائے گئے لباس سے مطمئن نہیں ہوتے۔ یہ اپنا تمام جوش، جذبہ اور سعی اپنے کام میں لگا دیتے ہیں اور کسی بھی بندھن میں بندھنا ان کے لیے بہت مشکل ہوتا ہے۔


وکیل

ایک وکیل کو کرخت اور چہرے پر “پیشہ ورانہ مسکراہٹ” کا حامل ہونا چاہیے۔وکیل حضرات رومان پرور بھی نہیں ہوتے اور خاتون وکیل تواپنی زبان پر اتنا قابو رکھتی ہیں کہ مرد انہیں دور کر ہی دور بھاگ جائیں۔


پی آر کمپنیوں اور اشتہاری اداروں کا عملہ

PR-companies-advertising-agencies

تعلقات عامہ کے اداروں اور اشتہاری ایجنسیوں میں کام کرنے والے افراد کو دیگر لوگوں کو جاننے کے بہت سے مواقع ملتے ہیں۔ البتہ وہ ہمیشہ ایسے افراد کے ساتھ پیشہ ورانہ تعلق رکھتے ہیں اور انہیں اپنے قریبی حلقہ احباب میں کبھی نہیں لاتے۔


اکاؤنٹنٹ

Accountant

حساب گری یعنی اکاؤنٹنگ میں مردوں سے کہیں زیادہ عورتیں کام کرتی ہیں۔ ہمیشہ مصروف، فرصت ندارد اور طے شدہ اوقات سے زیادہ کام کرنا ان کا معمول۔ ان کے پاس تو شاید فون پر بات کرنے کا وقت ہی میسر نہ ہو، ملاقات و دن گزارنا تو دور کی بات ہے۔


کنسلٹنٹ

مشیر یعنی کنسلٹنٹ منصوبہ سازی کرتے ہیں، حل پیش کرتے ہیں اور صارفین کے لیے خصوصی خدمات بھی فراہم کرتے ہیں۔ ان کا زیادہ وقت زمین کے بجائے آسمان پر یعنی فضائی سفر میں گزرتا ہے۔ یہ خود بھی نہیں جانتے کہ کل وہ کہاں پر ہوں گے۔ بھلا ایسے آدمی کےساتھ زندگی اور وقت گزارنا کون پسند کرے گا؟


متعلقہ خبریں


یارب! اپنے خط کو ہم پہنچائیں کیا علی منظر - منگل 19 جنوری 2016

آج بہت دنوں بعد کسی کو خط لکھنے کے لئے قلم اٹھایا، تو خیال آیا کہ ہمیں دوست کا پتہ ہی معلوم نہیں ۔ سستی، بے پروائی اور وقت کی کمی کے بہانے تو پہلے بھی تھے، پھر بھی ہم طوعاً وکرہاً خط لکھ ہی لیا کرتے تھے۔ برق گرے اس ای میل پر جب سے ہم اپنے کمپیوٹر کے ذریعے انٹرنیٹ سے متصل ہوئے ہیں، ہمیں دوستوں کا پتہ نہیں اُن کا برقی پتہ محفوظ رکھنا پڑتا ہے۔ اور موبائل کی آمد کے بعد سے تو گویا قلم و کاغذ سے رہا سہا تعلق بھی جا تا رہا۔ خط و کتابت اب ماضی بعید کا قصہ بن چکا ہے۔ کورے کاغذ کی خوشب...

یارب! اپنے خط کو ہم پہنچائیں کیا

روس عالمی انٹرنیٹ سے غائب وجود - منگل 20 اکتوبر 2015

روس چند ایسے تجربات کررہا ہے جن کے ذریعے وہ دیکھے گاکہ وہ ورلڈ وائیڈ ویب سے نکل سکتا ہے یا نہیں تاکہ ملک کے اندر اور بیرون ملک معلومات کی ترسیل کو گھٹایا جا سکے۔ ماہرین نے برطانیہ کے روزنامہ ٹیلی گراف کو بتایا ہے کہ یہ تجربات کسی بھی ممکنہ مقامی سیاسی بحران کی صورت میں معلومات کو مکمل طور پر اپنے اختیار میں رکھا جا سکے اور اس سے بھی بڑھ کر مقصد یہ تھا کہ عالمی ناٹرنیٹ سے جدا ہونے کے بعد روس کا انٹرنیٹ کام جاری رکھ سکتا ہے یا نہیں۔ معلوم ہوا ہے کہ اس خاص تجربے کا حکم...

روس عالمی انٹرنیٹ سے غائب

معرکۂ وجود میں بدر و حنین بھی ہے عشق محمد طاہر - اتوار 06 ستمبر 2015

وجود کا تصورِ صحافت قارئین کے لئے اجنبی نہیں۔ ہمارے لئے صحافت ایک راستے کے طور پر جانا پہچانا پیشہ ہے۔ خود صحافت کے لئے بھی ہم کوئی انجان راہی نہیں۔ وجود تاریخ اور صحافت کے درمیان فرق کر تا ہے۔ اور ایسے جادۂ صحافت کو حقارت کی نظر سے دیکھتا ہے جو عرصۂ موجود کی گواہی ، لمحۂ موجود میں نہیں دیتا۔ صحافت آج کی گواہی آج ہی دینے کا نام ہے۔ وہ گواہی جو خطرات ٹلنے اور وقت گزرنے کے بعد دی جائے، اُس کے لئے صحافت نہیں کوئی اور پیشہ مناسب ہے۔ یہ جذبات کا نہیں جذبے کا معاملہ ہے۔جس کی بنیاد ...

معرکۂ وجود میں بدر و حنین بھی ہے عشق

امریکی ریاست ورجینیا میں دو صحافیوں کا قتل وجود - جمعرات 27 اگست 2015

امریکی ریاست ورجینیا میں مقامی ٹیلی ویژن سے وابستہ دو صحافیوں کو فائرنک کرکے اُس وقت ہلاک کردیا گیا جب وہ براہِ راست پروگرام کر رہے تھے۔ہلاک شدگان میں 27؍ سالہ کیمرہ مین ایڈم وارڈ اور 24؍ سالہ رپورٹر ایلیسن پارکر شامل ہیں۔دونوں کی منگنی ہو چکی تھی۔ مقامی اسٹیشن منیجر جیفری مارکس نے ہلاکتوں کی تصدیق کردی ہے۔منیجر کے مطابق قتل کے محرکات کے بارے میں وہ کچھ کہہ نہیں سکتے اور نہ ہی مشتبہ قاتل کے بارے میں اُنہیں کچھ پتا ہے۔قاتل جائے واردات سے فرار ہونے میں کامیاب ہوگیا ۔ قتل کی یہ ...

امریکی ریاست ورجینیا میں دو صحافیوں کا قتل