وجود

... loading ...

وجود
وجود
ashaar
پاکستان کاروباری سرگرمیوں میں بہتری کیلیے درست راہ پرگامزن ہے ، عالمی بینک وجود - منگل 15 جون 2021

عالمی بینک کے کنٹری ڈائریکٹر برائے پاکستان ناجی بنہاسین نے کہا ہے کہ پاکستان کاروباری سرگرمیوں میں بہتری کے لیے درست سمت پر گامزن ہے ، تاہم کاروباری سرگرمیوں کے فروغ کے لیے ڈیجیٹالائزشن بہت ضروری ہے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے سرمایہ کاری بورڈ کے زیراہتمام منعقدہ تقریب سے خطاب میں کیا۔ تقریب سے خطاب میں برطانوی ہائی کمشنر کرسٹین ٹرنرنے کہاکہ پاکستان اور برطانیہ کے تعلقات بہت اچھے ہیں اورمیری ترجیح معیشت اور سرمایہ کاری ہے پاکستان کو جی ڈی پی کے دوگنا سرمایہ کاری کی ضرورت ہے ...

پاکستان کاروباری سرگرمیوں میں بہتری کیلیے درست راہ پرگامزن ہے ، عالمی بینک

پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں کم رکھی جائیں گی، شوکت ترین وجود - پیر 14 جون 2021

وفاقی وزیر خزانہ شوکت ترین نے ایک بار پھر واضح کیا ہے کہ عوام پر بوجھ نہیں ڈالیں گے ، پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں کم رکھی جائیں گی۔ ایک انٹرویو میں وزیر خزانہ شوکت ترین نے کہا کہ بڑی تحقیقات اور محنت کے بعد بہترین بجٹ بنایا ہے ، امید رکھتے ہیں بجٹ میں طے کیے گئے خدوخال مکمل کریں گے ۔انہوں نے کہا کہ عالمی سطح پرپٹرول قیمتیں گریں گی توپٹرول لیوی رکھنا شروع کریں گے ۔ انہوںنے کہاکہ سعودی عرب سے رعایتی قیمت پر تیل جلد ملنا شروع ہو جائے گا، امید ہے پٹرولیم لیوی میں اضافے کی ضرورت نہ...

پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں کم رکھی جائیں گی، شوکت ترین

امریکی فوجی تعاون کے ذریعے آئی ایم ایف سے مراعات لینے کی رپورٹ مسترد وجود - جمعه 11 جون 2021

وفاقی وزیرخزانہ شوکت ترین نے برطانوی اخباردی فنانشل ٹائمز کی رپورٹ کو مسترد کردی، جس میں ان کے حوالے سے کہا گیا تھا کہ امریکی فوج کے ساتھ تعاون کا فائدہ اٹھاتے ہوئے عالمی مالیاتی ادارے (آئی ایم ایف)سے مراعات حاصل کی جائیں گی۔اسلام آباد میں معاشی سروے 2020-21 پیش کرنے کے بعد سوالوں کے جواب دیتے ہوئے وزیرخزانہ شوکت ترین نے کہا کہ 'میں واضح کرتا چلوں کہ یہ ایک گھنٹہ طویل انٹرویو کیا تھا جو 19 پوائنٹس پر مبنی تھا اور ایک مرتبہ امریکا کا حوالہ دیا گیا تھا جبکہ پاکستان کے امریکا کے...

امریکی فوجی تعاون کے ذریعے آئی ایم ایف سے مراعات لینے کی رپورٹ مسترد

اقتصادی سروے رپورٹ ، گدھوں کی تعداد میں اضافہ وجود - جمعه 11 جون 2021

پاکستان کی اقتصادی سروے رپورٹ برائے سال 2020-21 میں انکشاف کیا گیا ہے کہ ملک میں گدھوں کی تعداد بڑھ گئی ہے لیکن گھوڑوں، خچروں اور اونٹوں کی تعداد میں اضافہ نہیں ہوا ہے ۔ اقتصادی سروے رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ملک میں گدھوں کی تعداد میں ایک لاکھ کا اضافہ ہوا ہے ۔ ملک میں گدھوں کی تعداد 55 لاکھ تھی جو 1 لاکھ کے اضافے کے بعد 56 تک پہنچ گئی ہے جب کہ ایک سال میں بھینسوں کی تعداد میں 12 لاکھ کا اضافہ ہوا ہے جو پہلے 4 کروڑ 12 لاکھ تھیں۔ اس وقت ان کی تعداد 4 کروڑ 24 لاکھ ہوچکی ہیں۔اق...

اقتصادی سروے رپورٹ ، گدھوں کی تعداد میں اضافہ

روس نے پاکستان سے چاول کی درآمد پر کئی سال سے عائد پابندی اٹھا لی وجود - جمعه 11 جون 2021

روس نے پاکستان سے چاول کی درآمد پر کئی سال سے عائد پابندی اٹھا لی۔ذرائع کے مطابق وزارت غذائی تحفظ کے ادارے ڈیپارٹمنٹ آف پلانٹ پروٹیکشن نے ایک سال کی محنت کے بعد کامیابی حاصل کی۔پاکستان کے چار یونٹس روس کو چاول برآمد کرسکیں گے ۔

روس نے پاکستان سے چاول کی درآمد پر کئی سال سے عائد پابندی اٹھا لی

آئی ایم ایف کا بجلی کے نرخ بڑھانے پر اصرار ،وزیراعظم نے انکار کردیا، وزیر خزانہ وجود - جمعه 11 جون 2021

وفاقی وزیر خزانہ شوکت ترین نے مالی سال 2020-21 کا اقتصادی سروے جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان کی معیشت نے رواں مالی سال کے دوران زبردست ترقی کی اور تقریبا چار فیصد کی شرح نمو حاصل کی جو گزشتہ دو برس کی نسبت کہیں زیادہ ہے ۔مالیاتی خسارہ آٹھ اعشاریہ ایک فیصد رہا، ایف بی آر کی ٹیکس وصولی میں گزشتہ سال کی نسبت اٹھارہ فیصد اضافہ ہوا، جبکہ اس سال ترسیلات زر میں انتیس فیصد اضافہ ہوا،زراعت کی شرح نمو دو اعشاریہ آٹھ فیصد' صنعتوں کی تین اعشاریہ چھ فیصد اور خدمات کے شعبے کی شرح نمو چا...

آئی ایم ایف کا بجلی کے نرخ بڑھانے پر اصرار ،وزیراعظم نے انکار کردیا، وزیر خزانہ

آئندہ مالی سال کا وفاقی بجٹ آج پیش ہو گا وجود - جمعه 11 جون 2021

آئندہ مالی سال2021-22 کاوفاقی بجٹ آج جمعہ کو پیش ہو گا ، وزیر خزانہ شوکت ترین پارلیمنٹ میں بجٹ پیش کریں گے ، جس کا حجم 8000 ارب روپے کے لگ بھگ ہوگا، 3100 ارب روپے قرضے اور سود پر خرچ ہوں گے ، ٹیکس چوروں کے خلاف ایکشن ہوگا۔آئندہ مالی سال بجٹ خسارہ 2915 ارب روپے ہوسکتا ہے ، سالانہ ترقیاتی پروگرام 900 ارب روپے رکھا جائے گا، سبسڈیز کی مد میں 530 ارب روپے رکھے جاسکتے ہیں، دفاعی بجٹ 1400 ارب رکھے جانے کا امکان ہے ۔ ایک لاکھ کی کی خریداری پر شناختی کارڈ کی شرط عائد ہوسکتی ہے ۔تنخواہ...

آئندہ مالی سال کا وفاقی بجٹ آج پیش ہو گا

وزیرخزانہ کی وزیراعظم سے ملاقات، اقتصادی سروے -21 2020 پیش کیا وجود - جمعه 11 جون 2021

وزیر خزانہ شوکت ترین نے جمعرات کے روز اسلام آباد میں وزیر اعظم عمران خان سے ملاقات کی اور انہیں اقتصادی سروے 2020-21 پیش کیا۔ریونیو کے بارے میں معاون خصوصی وقار مسعود بھی اس موقع پر موجود تھے ۔

وزیرخزانہ کی وزیراعظم سے ملاقات، اقتصادی سروے -21 2020 پیش کیا

قومی اقتصادی کونسل ، 2100 ارب روپے کے ترقیاتی بجٹ کی منظوری وجود - منگل 08 جون 2021

قومی اقتصادی کونسل ( این ای سی)نے آئندہ مالی سال کیلئے 2102 ارب روپے کے ترقیاتی بجٹ کی منظوری دیدی۔ وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت قومی اقتصادی کونسل کا اجلاس ہوا،اجلاس میں تمام وزرائے اعلی اور دیگر این ای سی ممبران شریک ہوئے ،اجلاس میں مالی سال 2021-22 کے لئے 2100 ارب روپے کے ترقیاتی بجٹ کی منظوری دیدی۔وفاق کا حصہ 900 ارب، صوبوں کا 1200 ارب روپے ہوگا۔ قومی پیداوارکی شرح نمو کا ہدف 4.8 فیصد مقرر کیا گیا ہے ،آئندہ مالی سال میں زراعت میں اضافے کا ہدف 3.5 فیصد، انڈسٹریئل سیکٹر ...

قومی اقتصادی کونسل ، 2100 ارب روپے کے ترقیاتی بجٹ کی منظوری

رواں سال کے 11 ماہ کے دوران برآمدات میں گیارہ فیصد اضافہ وجود - هفته 05 جون 2021

وزارت تجارت کی جانب سے جاری اعدادوشمار میں کہا گیا ہے کہ رواں سال کے 11 ماہ کے دوران ملکی برآمدات میں گیارہ فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے ۔وزارت تجارت کی جانب سے جاری اعدادوشمار میں کہا گیا ہے کہ جولائی تا مئی 2021ء برآمدات 22 ارب 56 کروڑ 30 لاکھ ڈالر تک پہنیں۔ گزشتہ سال مئی کی نسبت برآمدات میں 18.7 فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا۔اعلامیہ میں کہا گیا کہ پاکستانی برآمدات ایک ارب 65 کروڑ 70 لاکھ ڈالر ہو گئی ہیں جو ایک ارب 39 کروڑ 60 لاکھ ڈالر تھیں۔ تاہم عید کی چھٹیوں کے باعث مئی میں ب...

رواں سال کے 11 ماہ کے دوران برآمدات میں گیارہ فیصد اضافہ

اسٹیٹ بینک کاآئندہ دو ماہ کیلئے شرح سود 7 فیصد کی سطح پر برقرار رکھنے کا اعلان وجود - هفته 29 مئی 2021

اسٹیٹ بینک آف پاکستان نے آئندہ دو ماہ کیلئے شرح سود 7 فیصد کی سطح پر برقرار رکھنے کا اعلان کردیا،مرکزی بینک کا کہنا ہے کہ پرائیویٹ سیکٹر کے قرضوں میں 43 فیصد اضافہ ہوا ہے ۔ نئے مالی سال میں مہنگائی کم ہوگی، زرمبادلہ ذخائر 4 سال کی بلندترین سطح پرپہنچ گئے اور اس وقت اسٹیٹ بینک کے زرمبادلہ ذخائر 16 ارب ڈالرز ہیں۔اسٹیٹ بینک کی جانب سے جاری کردہ مانیٹری پالیسی کے مطابق مارچ کے بعد سے مہنگائی میں اضافہ ہوا ہے تاہم رواں مالی سال اوسط مہنگائی 9 فیصد تک رہنے کی توقع ہے اور وسط مدت می...

اسٹیٹ بینک کاآئندہ دو ماہ کیلئے شرح سود 7 فیصد کی سطح پر برقرار رکھنے کا اعلان

ملک میں 38 فیصد گھرانوں کے معاشی حالات پہلے سے بد تر ہوگئے ، ادارہ شماریات کا انکشاف وجود - جمعه 28 مئی 2021

ادارہ شماریات کے سروے میں انکشاف کیا گیا ہے کہ پاکستان میں 38 فیصد گھرانوں کے معاشی حالات پہلے سے بد تر ہوگئے ہیں ، سماجی و معیارات زندگی سے متعلق سروے رپورٹ کے مطابق 46 فیصد گھرانوں کے معاشی حالات پہلے جیسے ہیں ، صرف 2 فیصد گھرانوں نے معاشی حالات پہلے سے بہتر قرار دیئے ، گھریلو معاشی حالات کو بد تر قرار دینے والوں کی تعداد سندھ میں سب سے زیادہ 29 فیصد ہے ۔ادارہ شماریات کے سماجی و معیارات زندگی سے متعلق سروے میں 12فیصد گھرانوں نے گھریلو معاشی حالات پہلے سے بہت زیادہ بد تر قرا...

ملک میں 38 فیصد گھرانوں کے معاشی حالات پہلے سے بد تر ہوگئے ، ادارہ شماریات کا انکشاف

سی سی پی نے 19 پولٹری فیڈ ملوں کو کارٹیلائز یشن پر شوکاز نوٹس جاری کر دیا وجود - بدھ 26 مئی 2021

کمپٹیشن کمیشن آف پاکستان (سی سی پی) نے 19 پولٹری فیڈ ملوں کوکارٹیلائزیشن، ساز باز کرنے ، بادی النظر میں کمپٹیشن مخالف سرگرمیوں میں ملوث ہونے اور کمپیٹیشن ایکٹ کے سیکشن 4کی خلاف ورزی پر شو کاز نوٹس جاری کردیا ہے ۔سی سی پی نے پولٹری فیڈ کی قیمتوں میں اضافے کی شکایات موصول ہونے پر سو موٹو نوٹس لیتے ہوئے پولٹری فیڈ سیکٹر میں مشتبہ کمپیٹیشن مخالف سرگرمیوں پر انکوائری کا آغاز کیا تھا۔مارکیٹ زرائع سے اکٹھے کیے گئے اعدادوشمار سے بھی ظاہر ہوتا ہے کہ پولٹری فیڈ کی قیمتوں میں بیک وقت اض...

سی سی پی نے 19 پولٹری فیڈ ملوں کو کارٹیلائز یشن پر شوکاز نوٹس جاری کر دیا

آئندہ مالی سال کا بجٹ بھی کورونا سے متاثر ہونے کا امکان وجود - منگل 25 مئی 2021

آئندہ مالی سال 2021ـ22 کا بجٹ بھی کورونا سے متاثر ہونے کا امکان ہے ۔میڈیا رپورٹ کے مطابق مالی 2021ـ22 کے بجٹ کے لیے سندھ حکومت کی ترجیحات کا تعین آخری مراحل میں داخل ہوگیا، کورونا کے تناظر میں 25 ارب روپے کے ترقیاتی و غیر ترقیاتی مصارف کا تخمینہ لگایا گیا ہے ۔ذرائع کے مطابق بجٹ میں کاروباری سرگرمیوں کی بحالی کے لیے خطیر رقم، اسکیمز بھی شامل ہوں گی۔کورونا ویکسینیشن پروگرام، سینٹرز کے قیام پر اخراجات ہوں گے ، ڈویڑنل انفیکشن ڈیزیز اسپتالوں کا قیام، کورونا ٹیسٹنگ پر رقم خرچ کی جا...

آئندہ مالی سال کا بجٹ بھی کورونا سے متاثر ہونے کا امکان

تنخواہ داروں پر ٹیکس بڑھانے کی آئی ایم ایف تجویز ناقابل قبول قرار وجود - پیر 24 مئی 2021

وفاقی وزیر خزانہ شوکت ترین نے تنخواہ داروں پر ٹیکس بڑھانے کی آئی ایم ایف کی تجویز کو ناقابل قبول قرار دیتے ہوئے کہاہے کہ آئی ایم ایف کے ساتھ تجویز پر مذاکرات ہورہے ہیں ، ٹیکس نہ دینے والوں کے خلاف کارروائی کرینگے ،مہنگائی کو کم کر نا اولین ترجیح ہے ،حکومت عام آدمی کیلئے مختلف اسکیمز لیکر آرہی ہے ،امیر اورغریب کیلئے ایک جیسی گروتھ ہونی چاہیے ،اگلے مالی سال کے بجٹ کی تیاریاں عروج پر ہیں، یہ ایک جامع بجٹ ہوگا، اگلے مالی سال کا وفاقی بجٹ جون کے اوائل میں ہی پیش کیا جائے گا،امید ہ...

تنخواہ داروں پر ٹیکس بڑھانے کی آئی ایم ایف تجویز ناقابل قبول قرار

کھانے پینے کی اشیا ء کی درآمدات میں 57.31 فیصد اضافہ وجود - هفته 22 مئی 2021

ملک میں کھانے پینے کی اشیا ء کی درآمدات 10 ماہ میں 57.31 فیصد بڑھ گئیں۔ادارہ شماریات کے مطابق پاکستان نے جولائی تا اپریل1107 ارب 35 کروڑ 20 لاکھ روپے کی کھانے پینے کی اشیا ء درآمد کی گئیںجبکہ گزشتہ سال کھانے پینے کی اشیا ء کی درآمدات 703 ارب 92 کروڑ روپے تھیں۔ادارہ شماریات کا کہنا ہے کہ جولائی تا اپریل چینی کی درآمدات 4 ہزار 447 فیصد بڑھیں اور اس عرصے میں 20 ارب 78 کروڑ 10 لاکھ روپے کی چینی درآمد کی گئی، مالی سال کے 10 ماہ میں 2لاکھ 80 ہزار377 ٹن چینی درآمد کی گئی جبکہ گزشتہ ...

کھانے پینے کی اشیا ء کی درآمدات میں 57.31 فیصد اضافہ

کورونا کے باوجود پاکستان کی شرح نمو تین اعشاریہ نو فیصد سے زائد رہنے کا امکان وجود - هفته 22 مئی 2021

رواں مالی سال کورونا کے باوجود پاکستان کی شرح نمو میں تین اعشاریہ نو فیصد سے زائد اور رواں مالی سال زرعی شعبے کی پیداوار میں دو اعشاریہ سات فیصد ، صنعتی شعبے کی پیداوار میں ساڑھے تین فیصد جبکہ خدمات کے شعبے میں چار اعشاریہ چار فیصد سے زائد رہنے کا امکان ، وزیر اعظم عمران خان نے شرح نمو میں اضافے کو کورونا کے دوران حکومت کی درست حکمت عملی کو قرار دے دیا۔تفصیلات کے مطابق رواں مالی سال کی معاشی کارکردگی کا جائزہ لینے کیلئے نیشنل اکاونٹس کمیٹی کا اجلاس اسلام آباد میں ہوا اجلاس می...

کورونا کے باوجود پاکستان کی شرح نمو تین اعشاریہ نو فیصد سے زائد رہنے کا امکان

25 اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں اضافہ وجود - هفته 22 مئی 2021

اسلام آباد(این این آئی)عید الفطر کے بعد مہنگائی کی شرح میں 0.82 فیصد اضافہ ہوگیا اور سالانہ بنیادوں پر مہنگائی کی شرح بڑھ کر 17.23 فیصد ہوگئی۔رمضان کے ماہ مقدس میں مہنگائی نے عوام کی کمر توڑ دی تھی ،عید کے بعد بھی مہنگائی میں کمی ایک خواب ثابت ہوئی۔ ادارہ شماریات کے مطابق آٹا، انڈے ، لہسن، پیاز، چینی، دال چنا، دال ماش، تازہ دودھ، مٹن، بیف، ویجی ٹیبل گھی، گڑ، ماچس کی ڈبیا، باسمتی ٹوٹا چاول، چائے کی پتی اور چکن سمیت مجموعی طور پر 25 اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں اضافہ ہوا ہے ۔ادا...

25 اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں اضافہ

جی ڈی پی کا حجم 47709 ارب روپے رہنے کا امکان وجود - هفته 22 مئی 2021

وزارت منصوبہ بندی کے اعداد و شمار کے مطابق رواں مالی سال کے دوران گراس ڈومسیٹک پراڈکٹ (جی ڈی پی) کا حجم 47 ہزار709 ارب روپے رہنے کا امکان ہے ۔اعلامیے کے مطابق جی ڈی پی کا حجم گزشتہ سال 41556 ارب روپے تھا جو اب 6153 ارب روپے بڑھنے کا امکان ہے ۔وزارت منصوبہ بندی کے اعلامیے کے مطابق رواں سال کید وران جی ڈی پی میں 14 اعشاریہ 8 فیصد اضافہ دیکھنے میں آیا ہے ۔اعداد و شمار کے مطابق رواں مالی سال فی کس آمدن 2 لاکھ 46 ہزار 414 روپے ہے جو گزشتہ سال 2 لاکھ 15 ہزار60 روپے تھی۔وزارت منصوبہ...

جی ڈی پی کا حجم 47709 ارب روپے رہنے کا امکان

9 ماہ میں حکومت نے 7 ارب ڈالر سے زائد کا بیرونی قرضہ حاصل کیا وجود - اتوار 02 مئی 2021

رواں مالی سال کے پہلے 9 ماہ کے بیرونی قرضوں کی تفصیلات جاری کردی گئی ہیں۔تفصیلات کے مطابق حکومت نے رواں مالی سال کے پہلے 9 ماہ کے بیرونی قرضوں کی تفصیلات جاری کردی ہیں، جس کے تحت جولائی سے مارچ 2021 تک حکومت نے 7 ارب 41 کروڑ 30 لاکھ ڈالر کا بیرونی قرضہ حاصل کیا، اور رواں مالی سال کے پہلے 9 ماہ میں پاکستان نے 4 ارب 86 کروڑ 50 لاکھ ڈالر کا قرض واپس بھی کیا۔رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ایک ارب 34 کروڑ 90 لاکھ ڈالر بجٹ سپورٹ کی مد میں حاصل کئے گئے ،3 ارب 12 کروڑ ڈالر کمرشل قرضوں کی ...

9 ماہ میں حکومت نے 7 ارب ڈالر سے زائد کا بیرونی قرضہ حاصل کیا

وزارت خزانہ نے اگلے بجٹ کا اسٹریٹجی پیپر تیار کرلیا وجود - جمعرات 15 اپریل 2021

وزارت خزانہ نے اگلے مالی سال 2021ـ22 کیلئے بجٹ اسٹریٹجی پیپر تیار کرلیا ۔دستاویز کے مطابق آئندہ مالی سال کیلئے مجموعی ملکی پیداوار (جی ڈی پی) کا حجم 46 ہزار ارب سے بڑھا کر 52 ہزار ارب روپے مقرر کیا جائیگا۔دستاویز کے مطابق سال 2021ـ22 میں جی ڈی پی گروتھ 4اعشاریہ2 فیصد رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ،ٹیکس وصولیوں کا ہدف 6ہزار ارب روپے رکھا جائے گا۔وزارت خزانہ کی دستاویز کے مطابق آئندہ مالی مہنگائی 8 فیصد رہنے کی توقع ہے حکومتی پالیسیوں کے تسلسل سے 2022ـ23 میں مہنگائی 6 اعشاریہ8 فیصد...

وزارت خزانہ نے اگلے بجٹ کا اسٹریٹجی پیپر تیار کرلیا

آٹھ ماہ میں 867ارب روپے کھانے پینے کی اشیاء درآمد وجود - بدھ 17 مارچ 2021

پاکستان نے رواں مالی سال کے پہلے آٹھ ماہ کے دوران867ارب روپے کی کھانے پینے کی اشیاء درآمد کر لیں جو کہ گذشتہ مالی سال کے پہلے آٹھ ماہ کے مقابلہ میں 56.48فیصدزائد ہے ۔ بیرون ممالک سے پاکستان میں کھانے پینے کی اشیاء کی درآمد میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے جس سے پاکستان کے درآمدی بل میں بھی مسلسل اضافہ ہورہا ہے ۔ رواں سال جولائی سے فروری کے دوران 867ارب روپے کھانے پینے کی اشیاء درآمد کی گئی ہیں۔ ادارہ شماریات کی جانب سے جاری اعدادوشمار کے مطابق جولائی تا فروری کے دوران20ارب 63کروڑ 50ل...

آٹھ ماہ میں 867ارب روپے کھانے پینے کی اشیاء درآمد

سعودی عرب میں کھجور کی برآمدات 73 فی صد سے تجاوز وجود - بدھ 03 مارچ 2021

سعودی عرب میں کھجور کی برآمدات کا حجم ایک لاکھ 27 ہزار ٹن سے بڑھ کر 2 لاکھ 15 ہزار ٹن تک پہنچ گیا ہے جوکہ 68 فی صد کے برابر ہے ۔ برآمد کی جانے والی کھجور سے حاصل ہونے والے منافع کی قیمت 5 کروڑ 35 لاکھ ریال سے بڑھ کر 9 کروڑ 27 لاکھ ریال تک پہنچ گئی ہے اور سنہ 2015 کے بعد مجموعی طور پر 73 فی صد ہے ۔میڈٰارپورٹس کے مطابق سعودی عرب میں قومی مرکز برائے کھجور کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا کہ مملکت میں کھجور کی برآمدات کا حجم ایک لاکھ 27 ہزار ٹن سے بڑھ کر دو لاکھ 15 ہزار ٹ...

سعودی عرب میں کھجور کی برآمدات 73 فی صد سے تجاوز

ایف بی آر نے رواں مالی سال 8 ماہ کا ریونیو ہدف حاصل کرلیا وجود - هفته 27 فروری 2021

فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر ) نے رواں مالی سال 8 ماہ کا ریونیو ہدف حاصل کر لیا۔وزارت خزانہ نے مالی سال کی پہلی ششماہی جائزہ رپورٹ جاری کر دی جس کے مطابق جولائی سے جنوری تک مہنگائی کی شرح 8.2 فیصد رہی ہے ۔رپورٹ کے مطابق پہلی ششماہی میں بجٹ خسارہ بڑھا ہے ،ترسیلاتِ زر میں نمایاں اضافہ دیکھنے میں آیا ۔رپورٹ کے مطابق گندم کا پیداواری ہدف حاصل کر لیا گیا ہے ،کپاس کی پیداوار میں کمی کا خدشہ ہے ۔وزارت خزانہ کی جائزہ رپورٹ میں بتایا گیا کہ محاصل کی مد میں 2900 ارب روپے حاصل کیے گئ...

ایف بی آر نے رواں مالی سال 8 ماہ کا ریونیو ہدف حاصل کرلیا