وجود

... loading ...

وجود
وجود
ashaar

اسمبلی اجلاس میں ہمارا کوئی رکن نہیں جائیگا، پی ڈی ایم سربراہ کا اعلان

هفته 06 مارچ 2021 اسمبلی اجلاس میں ہمارا کوئی رکن نہیں جائیگا، پی ڈی ایم سربراہ کا اعلان

اپوزیشن اتحادپی ڈی ایم کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے اعلان کیا ہے کہ کے قومی اسمبلی کے اجلاس میں حزب اختلاف کا کوئی رکن شریک نہیں ہوگا، اپوزیشن کی عدم شرکت کے بعد اس کی کوئی حیثیت نہیں ہوگی، صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے لکھا ہے کہ عمران خان اکثریت کا اعتماد کھوچکے ہیں، ان کے ہاتھ سے سب کچھ نکل چکا ہے ،اس وقت ملک میں کوئی بھی حکومت نہیں ہے ،اس لئے نئے انتخابات کا اعلان کیا جانا چاہیے ۔سکھر میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمن نے کہا کہ عمران خان کے خطاب میں ان کی شکست جھلک رہی ہے ، ان کے بقول سینیٹ الیکشن میں بولی لگی، وہ اپنے ارکان کو بکائو مال کہہ رہے ہیں، کل وہ اسی بکائو مال سے اعماد کا ووٹ لیں گے ۔ جب عدم اعتماد ہوا تھا تو جن لوگوں نے اپنی وفاداریاں بیچی تھی تو اس وقت عمران خان نے کہا تھا کہ ان کی ضمیر آواز ہے آج اپنی پارٹی کے لوگوں ووٹ نہ دینے پر بکنے سے کیوں تعبیر کر رہے ہیں۔جو دعوے آج تک وہ کرتے رہے ہیں آج ان سب دعوئوں کی حقیقت کھل کر سامنے آگئی ہے ۔انہوں نے کہا کہ عمران خان کس کے خلاف لوگوں کو نکالیں گے ؟ اپوزیشن اتحاد کے خلاف؟، کیوں اور کس بات پر؟، اگر آپ نے ایسا کیا تو لوگ آپ سے پوچھیں گے کہ آپ نے 1 کروڑ نوکریاں دینے کی بات کی اور 30 لاکھ کو نکال دیا۔انہوں نے کہا کہ لوگ آپ سے پوچھیں گے اداروں سے کارکنوں کو نکال کر ان اداروں کو کمزور کیوں کیا، آٹا، چینی، گھی اور پیٹرول مہنگا کیوں کیا، اب لوگو آپ سے پوچھیں گے ، آپ نہیں پوچھ سکتے ۔انہوں نے کہاکہ عمران خان سے اب معیشت کی تباہی اور اداروں کو کمزور کرنے سے متعلق پوچھا جائے گا، لوگ ان سے غریب آدمی کی زندگی اجیرن کرنے کا پوچھیں گے ۔انہوں نے کہا کہ تجاوزات کے نام پر لاکھوں لوگوں کو بے گھر کر دیا ہے ، گھروں سے محروم کردیا ہے اور کوئی منصوبہ بندی نہیں ہے ۔مولانا فضل الرحمن نے کہا کہ الیکشن کمیشن کو مورد الزام ٹھہرایا، الیکشن کمیشن نے وضاحت کے ساتھ عمران خان کی تقریری کو غیر منطقی کہا اور ہم سمجھتے ہیں الیکشن کمیشن کو مود الزام ٹھہرانا اور سینیٹ کے انتخابات کے حوالے سے بات کرنا اصل موضوع نہیں ہے ۔الیکشن کمیشن کو اگر انہوں نے مورد الزام ٹھہرایا ہے تو فارن فنڈنگ کیس پر دبائو ڈالنے کے لیے کیا ہے ، ہم ان کے تمام چالوں کو جانتے ہیں، ہم آپ کو جان چکے ہیں لہٰذا قوم کو مزید بے وقوف نہیں بنایا جا سکتا۔صدر پی ڈی ایم نے کہا کہ(آج)ہفتہ کوقومی اسمبلی میں اپوزیشن کا کوئی رکن نہیں جائے گا اور اس بات کی ایک رکن کو کہہ کر دیکھیں کہ وہ وہاں کیا ڈراما بازی کر رہے ہیں تاکہ صورت حال واضح ہو۔انہوں نے کہا کہ یہ حواس باختگی ہے ، اب ان کے ہاتھ سے سب کچھ نکل چکا ہے اور پاکستان میں اس وقت کوئی حکومت نہیں ہے اس لیے فوری طور پر نئے انتخابات کا اعلان کر کے عوام کی حقیقی نمائندہ حکومت کو آنا چاہیے ۔یوسف رضا گیلانی کو چیئرمین سینیٹ کے امیدوار کے حوالے سے سوال پر انہوں نے کہاکہ کہ 8 مارچ کو اجلاس طلب کر لیا گیا وہاں فیصلے ہوں گے ۔مولانا فضل الرحمن نے کہا کہ قومی اسمبلی میں حکومتی اجلاس سے ان کا بیانیہ اور اس کی اہمیت ختم ہوجائے گی، یک طرفہ کارروائی ہو رہی ہیں اور آج تک جعلی اکثریت سے حکومت کرتے رہے ہیں، اب اس کے جعلی ہونا واضح ہو کر بے نقاب ہو گا۔انہوں نے کہاکہ جب سے ہم نے احتجاج شروع کیا، ہواوں کا رخ بدلنا شروع ہوگیا۔


متعلقہ خبریں


بھارت پاکستان کے خلاف طاقت کا استعمال کرسکتا ہے، امریکی انٹیلی جنس وجود - هفته 17 اپریل 2021

ایک امریکی انٹیلجنس رپورٹ میں خبردار کیا گیا ہے کہ وزیراعظم نریندر مودی کی قیادت میں بھارت، پاکستان کی جانب سے سمجھے جانے والی یا حقیقی اشتعال انگیزی پر فوجی طاقت سے جواب دے سکتا ہے۔ میڈیارپورٹس کے مطابق خطرے کے جائزے کی سالانہ رپورٹ 2021 یو ایس ڈائریکٹر آف نیشنل انٹیلیجنس نے تیار کر کے کانگریس کو ارسال کی ۔رپورٹ میں چین کی عالمی طاقت کے لیے کوشش کو امریکی مفادات کے لیے سب سے پہلا خطرہ قرار دیا گیا جس کے بعد روس کے اشتعال انگیز اقدامات اور ایران سے متعلق خطرات ہیں۔تعارفی نوٹ ...

بھارت پاکستان کے خلاف طاقت کا استعمال کرسکتا ہے، امریکی انٹیلی جنس

کورونا ویکسین لگوانے کے عمل میں پاکستان بہت پیچھے رہ گیا وجود - هفته 17 اپریل 2021

شہریوں کو کورونا ویکسین لگوانے کے عمل میں پاکستان بہت پیچھے رہ گیا،دنیا کے 123 ملکوں میں پاکستان کا 120 نمبر ہے ، بھارت سمیت پاکستان سے کئی اور ممالک بھی آگے بڑھ گئے ۔پاکستان سے نکل جانے والے ممالک کی فہرست میں سری لنکا، بنگلادیش، روانڈا، گھانا اور نائیجریا بھی شامل ہیں۔ماہرین کے مطابق اگر پاکستان میں اسی رفتار سے کام ہوتا رہا تو پوری آبادی کو ویکسین لگانے میں کئی سال لگ جائیں گے ۔نیویارک ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق دنیا بھر میں سب سے تیز ویکسینیشن کا عمل اسرائیل میں جاری ہے ، جہ...

کورونا ویکسین لگوانے کے عمل میں پاکستان بہت پیچھے رہ گیا

شہباز شریف کو ضمانت ملی پر رہائی نہ مل سکی وجود - هفته 17 اپریل 2021

قومی اسمبلی میںاپوزیشن لیڈر شہباز کو ضمانت ملی پر رہائی نہ مل سکی، معاملہ لٹک گیا، عدالت کے مختصر فیصلے میں دو میں سے ایک جج کے دستخط نہ ہونے کے باعث ضمانتی مچلکے جمع نہ ہوسکے ۔خیال رہے کہ لاہور ہائی کورٹ کے 2 رکنی بینچ نے 13 اپریل کو شہباز شریف کو آمدن ست زائد اثاثوں کے کیس میں ضمانت پر رہا کرنے کا فیصلہ دیا تھا، 14 اپریل کو مختصر فیصلہ سامنے آنے پر حکم نامے پر صرف جسٹس محمد سرفراز ڈوگر کے دستخط تھے ، جسٹس اسجد گھرال کے دستخط نہیں تھے ۔ذرائع کے مطابق جسٹس اسجد جاوید گھرال کی...

شہباز شریف کو ضمانت ملی پر رہائی نہ مل سکی

عسکری حکومت کو جڑ سے اکھاڑ پھینکنا چاہتے ہیں، میانمار میں متوازی حکومت تشکیل وجود - هفته 17 اپریل 2021

میانمار میں فوج مخالف اتحاد نے مِن کو نائنگ کی قیادت میں متوازی حکومت تشکیل دے دی۔مقامی میڈیارپورٹس کے مطابق متوازی حکومت میں سابق پارلیمنٹیرین اورمظاہرین کی قیادت کرنے والے افراد شامل ہیں۔ مِن کو نائنگ نے عوام سے متوازی حکومت سے تعاون کرنے کی اپیل کی ہے ۔من کو نائنگ نے کہا کہ ہم عسکری حکومت کو جڑ سے اکھاڑ پھینکنا چاہتے ہیں، عالمی برادری کی حمایت حاصل کرنا متوازی حکومت کی اولین ترجیح ہے ، امریکا اور برطانیہ وینزویلا کی طرز پر ہماری حکومت کو بھی تسلیم کریں۔

عسکری حکومت کو جڑ سے اکھاڑ پھینکنا چاہتے ہیں، میانمار میں متوازی حکومت تشکیل

پاکستان نے3 وکٹوں سے جنوبی افریقہ کو شکست دیکر ٹی ٹوئنٹی سیریز بھی جیت لی وجود - هفته 17 اپریل 2021

پاکستان نے فخر زمان کی جارحانہ نصف سنچری کی بدولت جنوبی افریقہ کو چوتھے ٹی20 میچ میں سنسنی خیز مقابلے کے بعد 3 وکٹوں سے شکست دیکر سیریز میں بھی 1ـ3 سے فتح حاصل کر لی، میزبان ٹیم 144رنز پر ڈھیر ہوگئی ،پاکستان نے مطلوبہ ہدف بمشکل ایک گیند قبل 7 وکٹ کے نقصان پر پورا کرلیا،فہیم اشرف کو مین آف دی میچ اور بابر اعظم کو سیریز کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا ۔سنچورین میں کھیلے گئے سیریز کے آخری ٹی20 میچ میں پاکستان نے ٹاس جیت کر ایک مرتبہ پھر جنوبی افریقہ کو بیٹنگ کی دعوت دی تھی۔جنوبی ا...

پاکستان نے3 وکٹوں سے جنوبی افریقہ کو شکست دیکر ٹی ٹوئنٹی سیریز بھی جیت لی

کراچی میں برطانوی اور جنوبی افریقی کورونا وائرس کی تصدیق وجود - هفته 17 اپریل 2021

صوبائی دارالحکومت کراچی میں برطانوی اور جنوبی افریقی کورونا وائرس کی موجودگی کی تصدیق ہوگئی۔نیشنل انسٹیٹیوٹ آف وائرولوجی میں تحقیق کے دوران برطانوی اور جنوبی افریقی کورونا وائرس کی موجودگی کا انکشاف ہوا۔ادارے نے شہر کے مختلف علاقوں سے 75 نمونے لیے ، جن میں سے 50 کیس برطانوی اقسام اور 25 کیسز جنوبی افریقی قسم کے آئے ہیں۔سندھ حکومت پہلے کہہ چکی ہے کہ صوبے میں برطانوی وائرس موجود نہیں ہے ۔

کراچی میں برطانوی اور جنوبی افریقی کورونا وائرس کی تصدیق

پیمرا نے تحریک لبیک پاکستان کی ہرقسم کی میڈیاکوریج پر پابندی لگادی وجود - جمعه 16 اپریل 2021

پاکستان الیکٹرانک میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی(پیمرا)نے کالعدم تحریک لبیک پاکستان (ٹی ایل پی)کی ہرقسم کی میڈیاکوریج پر پابندی لگادی۔پیمرا کی جانب سے جاری اعلامیے کے مطابق تمام ٹی وی چینلز اور ایف ایم ریڈیو اسٹیشنز کو اس حوالے سے ہدایت جاری کردی گئی ہیں۔پیمرا کے مطابق وزارت داخلہ نے تحریک لبیک پاکستان کو کالعدم قرار دیا ہے ،پیمرا کے ریگولیشن اورضابطہ اخلاق پیمرا آرڈیننس 2002 کے سیکشن 27 کے تحت کالعدم جماعتوں کی میڈیا کوریج پر پابندی ہے ۔خیال رہے کہ وفاقی وزارت داخلہ نے تحریک لبیک پ...

پیمرا نے تحریک لبیک پاکستان کی ہرقسم کی میڈیاکوریج پر پابندی لگادی

توقع ہے ہر شعبے میں پاکستان اور امریکا کا تعاون فروغ پائیگا،جنرل قمر جاوید باجوہ وجود - جمعه 16 اپریل 2021

چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا ہے کہ توقع ہے ہر شعبے میں پاکستان اور امریکا کا تعاون فروغ پائیگا۔پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر)کے مطابق آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے امریکی ناظم الامور و قائم مقام سفیر انجیلا ایگلر نے ملاقات کی جس میں باہمی دلچسپی کے امور اور خطے میں سکیورٹی صورتحال پر بات چیت کی گئی۔آئی ایس پی آر کے مطابق ملاقات میں افغان امن عمل میں حالیہ پیشرفت پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔اس موقع پر آرمی چیف نے کہاکہ توقع ہے ہر شعبے میں پاکستان...

توقع ہے ہر شعبے میں پاکستان اور امریکا کا تعاون فروغ پائیگا،جنرل قمر جاوید باجوہ

نیٹو اتحاد بھی یکم مئی سے افغانستان سے فوجی انخلا پر رضامند وجود - جمعه 16 اپریل 2021

امریکی صدر جو بائیڈن کے بعد نیٹو اتحاد بھی یکم مئی سے افغانستان سے فوجی انخلا کے آغاز پر رضامند ہوگیا۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق نیٹو اعلامیہ میں کہاگیاکہ افغانستان سے فوجوں کی واپسی منظم اور مربوط ہوگی، برسلز میں نیٹو سیکرٹری جنرل نے امریکی وزیر خارجہ اور وزیر دفاع کے ہمراہ پریس کانفرنس میں کہا کہ افغانستان سے فوجی انخلا چند ماہ میں مکمل ہو جائے گا۔اس سے قبل امریکا نے افغانستان سے فوج نکالنے کی تاریخ پانچ ماہ بڑھائی تھی، امریکی صدر جو بائیڈن نے کہا تھا کہ یکم مئی سے انخل...

نیٹو اتحاد بھی یکم مئی سے افغانستان سے فوجی انخلا پر رضامند

سائنسی تحقیقات کے لیے ٹائٹینک سے بڑا جدید آلات سے لیس بحری جہاز تیار وجود - جمعه 16 اپریل 2021

ماہرین نے سائنسی تحقیقات کے لیے جدید سہولیات سے آراستہ فٹ بال کے تین گرائونڈ کے حجم کے برابر اورٹائٹینک سے بڑا بحری جہاز تیار کرنا شروع کیا ہے ۔ یہ جہاز 2025 میں لانچ کیا جائے گا۔ یہ جہاز 22 جدید ترین تجربہ گاہوں سے آرستہ ہوگا اور اس میں 400 افراد کے کام کرنے کی گنجائش ہوگی۔ اگرچہ یہ سائنسی تحقیقاتی مشن جوہری توانائی پرکام کرے گا مگر اس سے کسی قسم کی تاب کاری کے اخراج کا خطرہ نہیں ہوگا۔برطانوی اخبار کے مطابق اس جہاز کا نام ارتھ300رکھا گیا ہے جس کا مقصد زمین پر بڑے بڑے چیلنجوں...

سائنسی تحقیقات کے لیے ٹائٹینک سے بڑا جدید آلات سے لیس بحری جہاز تیار

گردشی قرضوں میں کمی کے لیے بجلی کی قیمت بڑھانا ہوگی، آئی ایم ایف وجود - جمعرات 15 اپریل 2021

بین القوامی مالیاتی فنڈ(آئی ایم ایف) کی پاکستان میں موجود نمایندہ ٹریسا دوبان سنچے نے کہا ہے کہ کورونا کی تیسری لہر میں پاکستان کے مزید قرضے موخر کرنے پر بھی غور ہوسکتا ہے ۔ویب نارسے خطاب میں انہوںنے کہا کہ ہم پاکستان میں ٹیکس اصلاحات چاہتے ہیں جس کے لیے ٹیکس کی چھوٹ محدود کرنا ضروری ہیں، توانائی کے شعبے میں گردشی قرضوں میں کمی کے لیے بجلی کی قیمت میں اضافہ کرنا ہوگا تاہم ٹیکس آمدن بڑھانے کے لیے کورونا ٹیکس لگانا یا نہ لگانا پارلیمنٹ کا کام ہے ، انہوں نے کہا کہ آئی ایم ایف نے...

گردشی قرضوں میں کمی کے لیے بجلی کی قیمت بڑھانا ہوگی، آئی ایم ایف

وزارت خزانہ نے اگلے بجٹ کا اسٹریٹجی پیپر تیار کرلیا وجود - جمعرات 15 اپریل 2021

وزارت خزانہ نے اگلے مالی سال 2021ـ22 کیلئے بجٹ اسٹریٹجی پیپر تیار کرلیا ۔دستاویز کے مطابق آئندہ مالی سال کیلئے مجموعی ملکی پیداوار (جی ڈی پی) کا حجم 46 ہزار ارب سے بڑھا کر 52 ہزار ارب روپے مقرر کیا جائیگا۔دستاویز کے مطابق سال 2021ـ22 میں جی ڈی پی گروتھ 4اعشاریہ2 فیصد رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ،ٹیکس وصولیوں کا ہدف 6ہزار ارب روپے رکھا جائے گا۔وزارت خزانہ کی دستاویز کے مطابق آئندہ مالی مہنگائی 8 فیصد رہنے کی توقع ہے حکومتی پالیسیوں کے تسلسل سے 2022ـ23 میں مہنگائی 6 اعشاریہ8 فیصد...

وزارت خزانہ نے اگلے بجٹ کا اسٹریٹجی پیپر تیار کرلیا