وجود

... loading ...

وجود
وجود
ashaar

پاکستانی استاد احمد سایا کیمبرج یونیورسٹی کے ایوارڈ کیلئے نامزد

هفته    26    جنوری    2019 پاکستانی استاد احمد سایا کیمبرج یونیورسٹی کے ایوارڈ کیلئے نامزد

پاکستان سے تعلق رکھنے والے احمد سایا کو لندن کی کیمبرج یونیورسٹی کے محنتی استاد برائے 2019کے اعزاز کیلئے نامزد کرلیا گیا۔ کیمبرج یونیورسٹی پریس نے ٹوئٹر پر اعلان کیا کہ ماہر ین تعلیم کے ایک خصوصی پینل نے محنتی استاد کے اعزاز کے لیے پاکستانی استاد احمد سایا سمیت 6 افراد کو نامزد کیا ۔ٹوئٹ میں بتایا گیا کہ ججز کے لیے ناموں کا انتخاب کرنا انتہائی مشکل تھا لیکن انہوں نے اس اعزاز کے لیے صرف 6 نام فائنل کیے ، تاہم اس اعزاز کا حقدار کون بنے گا اس کا فیصلہ ووٹنگ کی بنیاد پر ہوگا۔کیمبرج یونیورسٹی پریس ویب سائٹ کے مطابق دنیا بھر کے تمام طلبا سے گزشتہ برس اکتوبر سے دسمبر تک پوچھا گیا تھا کہ وہ جن اساتذہ کرام کو سب سے زیادہ محنتی سمجھتے ہیں ان کے نام بھیج دیں۔

کیمبرج یونیورسٹی پریس ویب سائٹ کے مطابق ووٹنگ کا عمل 27جنوری تک اختتام پزیر ہوگا، جس کے بعد فاتح استاد کے نام کا اعلان کیا جائے گا۔ جو بھی استاد یہ اعزاز حاصل کرے گا، اسے کیمبرج یونیورسٹی کا دورہ کروایا جائے گا اور ساتھ ہی انہیں اپنے اسکول کے لیے کنٹینوئنگ پروفیشنل ڈ ویلپمنٹ (سی پی ڈی)کی سہولیات فراہم کرنے کے ساتھ ساتھ دیگر انعامات بھی دیے جائیں گے ۔ واضح رہے کہ احمد سایا کراچی میں واقع کورڈوبا اسکول میں اے لیولز پڑھاتے ہیں۔اس ایوارڈ کے لیے دنیا بھر سے 6معتبر اساتذہ کرام کو نامزد کیا گیا ہے ، جس میں پاکستان کے احمد سایا کے علاوہ بھارت کے ابھے نندن بھٹیاچاریا، سری لنکا کے اینتھونی چیلیاہ، آسٹریلیا کے کینڈس گرین، فلپائن کے جمری ڈیپن اور ملائیشیا کے شارون کونگ فونگ شامل ہیں۔