گیارہ ستمبر حملوں کے پانچ ملزمان کے خلاف مقدمے شروع نہ ہوسکا

امریکا میں جن پانچ ملزمان پر 11 ستمبر 2001ء کے امریکا پر دہشت گرد حملوں میں اہم کردار کا الزام ہے، اْن کے خلاف مقدمہ انتہائی سست روی کا شکار ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق پکڑے جانے کے 15 برس یا زیادہ مدت کے بعد بھی پانچ دہشت گرد جن پر حملوں کا الزام ہے کیوبا کے گوانتاناموبے کے امریکی فوجی اڈے پر قائم حراستی مرکز میں قید ہیں، اور کئی وجوہ کی بنا پر، امریکی حکام کو یہ مقدمہ 2020ء سے پہلے شروع ہونے کی توقع نہیں، جبکہ اِس کے بعد مقدمے کی تکمیل میں متعدد سال لگ سکتے ہیں۔قانونی چارہ جوئی کا معاملہ غیر معمولی طور پر پیچیدہ ہے، جس میں وکلائے صفائی نے، جو شہری اور فوجی وکلاء پر مشتمل ہیں، سینکڑوں تحریری سوالات کیے جن میں ملزمان کو پکڑے جانے میں امریکی اہلکاروں کے کردار پر سوال اُٹھائے گئے ، پھر مشتبہ افراد کی حراست اور اْن سے روا رکھا گیا سلوک، پہلے تھائی لینڈ اور پولینڈ کے خفیہ مقامات پر اور بعدازاں گوانتانامو بے میں زیر حراست رکھنے سے متعلق سوال شامل ہیں۔

Electrolux