وجود

... loading ...

وجود
وجود
ashaar

پاکستانی کرکٹ کی تاریخ کاسب سے خطرنا ک فاسٹ بائولر،ریورس سوئنگ کے موجد سرفرازنواز

جمعرات 24 مئی 2018 پاکستانی کرکٹ کی تاریخ کاسب سے خطرنا ک فاسٹ بائولر،ریورس سوئنگ کے موجد سرفرازنواز

یہ 1978 کی سردیوں کے دن تھے جب پاکستان اور ہندوستان ایک روزہ میچوں کی سیریز کے فیصلہ کن میچ کے لیے ساہیوال پہنچے۔پاکستان نے 40 اوورز میں 205 رنز کا مجموعی اسکور کیا، جواب میں ہندوستان نے 2 وکٹوں کے نقصان پر 183 رنز بنا لیے تھے۔ انہیں آخری 3 اوورز میں 23 رنز درکار تھے جب سرفراز نے 78 رنز پر بیٹنگ کرنے والے چھ فٹ لمبے انشومان گائیکواڈ کو گیند کرانے کے لیے بھاگنا شروع کیا۔یہ گیند شارٹ تھی اور گائیکواڈ کے سر کے کافی اوپر سے گزرتے ہوئے سیدھی وسیم باری کے دستانوں میں محفوظ ہو گئی۔ تمام نظریں پاکستانی امپائرز جاوید اختر اور خضر حیات پر مرکوز تھیں جو اپنی اپنی جگہ سے ہلے تک نہیں۔سرفراز نے اگلی تین گیندوں پر یہ عمل دہرایا۔ ہندوستانی کپتان بشن سنگھ بیدی شدید غصے میں تھے اور انہوں نے ہاتھ ہلا کر بلے بازوں کو واپس پویلین آنے کا اشارہ کیا۔یہ کرکٹ کی تاریخ کا پہلا ایک روزہ انٹرنیشنل میچ بنا جس میں کسی ٹیم نے شکست تسلیم کی اور میچ پاکستان کے نام کردیا گیا۔ اس طرح کا اگلا واقعہ 22 سال بعد ہوا جب انگلینڈ کے ایلک اسٹیورٹ احتجاجاً پچ چھوڑ کر ہیڈنگلے گراؤنڈ سے چلے گئے تھے، پاکستان کو اس وقت میچ جیتنے کے لیے 61 گیندوں پر چار رنز درکار تھے۔پاکستان نے ہندوستان کے خلاف 1978 کی سیریز 2-1 سے جیتی اور ساہیوال دوبارہ کسی انٹرنیشنل میچ کی میزبانی نہ کر سکا۔

یہ سوچنا بھی انتہائی مشکل ہے کہ سرفراز نے یہ طرز عمل کپتان مشتاق محمد کی منظوری اور پاکستان امپائرز کی مداخلت کے بغیر انجام دیا۔ معاملہ چاہے جو بھی، یہ سرفراز نواز ہی تھے جو رضاکارانہ طور پر پاکستان کرکٹ کے پہلے بدمعاش ۔بچپن میں سرفراز نواز نے کبھی بھی کرکٹ کھیلنے کے بارے میں نہیں سوچا تھا، 17 سال کی عمر میں وہ اپنے خاندانی کاروبار کا حصہ بن گئے اور لاہور گورنمنٹ کالج کے کرکٹ گراؤنڈ کی دیوار بنانے میں شریک رہے۔لیکن 1965 کی جنگ چھڑ گئی اور تعمیرات روک دی گئی۔ اسی گراؤنڈ میں سرفراز نے کرکٹ کھیلنے والے گروپ کو جوائن کر لیا اور پھر بقیہ کہانی تاریخ کا حصہ بن گئی۔انہوں نے اپنا فرسٹ کلاس ڈیبیو 1967 میں کیا اور 1969 میں انٹرنیشنل ڈیبیو سے قبل انہیں کاؤنٹی کے لیے منتخب کر لیا گیا۔نیٹ میں ان کی عمدہ سوئنگ باؤلنگ نے دورہ کرنے والی میری لیبون کرکٹ کلب (ایم سی سی) کے رکن اور نارتھیمپٹن شائر کے کپتان راجر پرے ڈیوکس کو خاصا متاثر کیا۔

مشتاق محمد کی قیادت میں سرفراز نواز کی صلاحیتیں خوب نکھر کر سامنے آئیں جہاں سابق کپتان 70 کی دہائی میں پاکستان کرکٹ کی سوچ کی تبدیلی میں مصروف تھے۔اپنے پیشرو باؤلرز سے روایت شکنی کرتے ہوئے کھیل میں جارحانہ مزاجی اور لڑنے کا جذبہ بیدار کرتے ہوئے سرفراز پاکستان کے نئے فاسٹ باؤلنگ اٹیک کے سرخیل بنے۔1975 میں ہیلمٹ سے پہلے دور میں جب نارتھمپٹن کے لیے کھیلنے والے سرفراز نواز کو جیف تھامسن نے ایک باؤنسر کرایا تو سرفراز نے چیخ کر کہا ‘مقامی قبرستان میں ایک قبر خالی ہے’۔جب تھامسن بیٹنگ کے لیے آئے تو سرفراز نے انہیں باؤنسر کرا کر آؤٹ کر دیا، اس وقت نارتھنٹس میں مشتاق محمد بھی سرفراز کی ٹیم کا حصہ تھے اور جلد ہی ان کے کپتان بنے۔1976 میں پاکستان ایک سال طویل آسٹریلیا اور ویسٹ انڈیز کے تاریخی دورے پر روانہ ہوا۔ مشتاق نے اس بات کا اندازہ لگا لیا تھا کہ آسٹریلیا کو ہرانے کے لیے پاکستان کو برابری کی سطح پر کھیلنا ہو گا، آسٹریلیا سے نمٹنے کے لیے کرکٹ میں مہارت کے ساتھ ساتھ فقرے بازی بھی انتہائی اہم تھی۔

پورے دورے کے دوران پاکستان کو ناکامی کا منہ دیکھنا پڑا یہاں تک کہ قومی ٹیم آخری ٹیسٹ کھیلنے سڈنی پہنچی۔ڈینس للی نے اپنی کتاب ‘مینس’ میں دورے کے بارے میں لکھا ہے کہ انہوں نے ‘ایک نسبتاً سخت رویے، ہر شعبے میں جارح مزاج’ پاکستانی ٹیم کا سامنا کیا۔للی اور گلمور نے پاکستانی بلے بازوں پر باؤنسر اور گالیوں کی بوچھاڑ کردی۔ للی کی ایک تیز گیند سرفراز کی پسلیوں میں لگی جس سے وہ انتہائی تکلیف میں نظر آئے۔ انہوں نے اپنا بلا پھینک دیا اور لیگ امپائر کی جانب جا کر عامیانہ انداز میں شکایت کی۔جب پاکستان باؤلنگ کے لیے میدان میں اترا تو یہ بدلہ چکانے کا وقت تھا۔ عمران خان اور سرفراز نواز نے اپنے ہی انداز میں حریف بیٹنگ لائن کو تہس نہس کردیا۔مشتاق نے 19 سالہ جاوید میانداد کو سلی پوائنٹ پر کھڑا کیا جو سرفراز نواز اور عمران کی باؤلنگ کے دوران مستقل بلے باز کو یہ جملہ کہہ رہے تھے کہ ‘اب یہ تمہیں ہلاک کر دے گا’۔ اس کے بعد میانداد نے اردو فلموں کے گانے گانا شروع کر دیئے۔للی نے شکایت کی اور بہت زیادہ جارحانہ رویہ اختیار کرنے پر امپائرز نے مشتاق کو تنبیہ کی لیکن انہوں نے اسے یکسر نظر انداز کردیا۔اس میچ میں عمران خان اور سرفراز نے 18 وکٹوں کا بٹوارا کیا جس کی بدولت پاکستان نے آسٹریلین سرزمین پر پہلی فتح حاصل کی۔اسی سال کے آخر میں مشتاق پانچ پاکستانی کھلاڑیوں کے ساتھ آسٹریلیا میڈیا ٹائیکون کیریر پیکر کی آسٹریلیا میں ہونے والی ورلڈ سیریز کھیلنے گئے۔پاکستان میں متعدد مرتبہ ریٹائرمنٹ کا اعلان کرنے کی روایت پہلی مرتبہ سرفراز نواز نے ڈالی۔ 1984 میں حتمی طور پر ریٹائر ہونے کے بعد وہ ایک بے باک کمنٹیٹر بنے۔

1985 میں جنرل ضیاء الحق کے دور میں رکن پارلیمنٹ بنے۔ اس وقت کے وزیراعلیٰ نواز شریف کے زیر سایہ وہ پنجاب اسپورٹس بورڈ کے وائس چیئرمین کے عہدے پر بھی خدمات انجام دیتے رہے جہاں وزیراعلیٰ خود بورڈ کے چیئرمین تھے۔1988 میں جب بینظیر بھٹو کی وطن واپسی ہوئی تو انہوں نے پیپلز پارٹی کے ٹکٹ سے الیکشن لڑا۔ 2011 میں وہ ایم کیو ایم کا حصہ بنے۔

1980 کی دہائی میں انہوں نے آصف اقبال اور سنیل گاوسکر پر میچ فکسنگ کا الزام عائد کیا۔جسٹس قیوم کی عدالت میں انہوں نے 1990 کی دہائی کے تقریباً تمام ہی کرکٹرز کے خلاف گواہی اور ثبوت دیئے۔انہوں نے دعویٰ کیا کہ پاکستانی ٹیم ورلڈ کپ میں ویسٹ انڈیز کے خلاف میچ جان بوجھ کر ہاری جس کے نتیجے میں جمیکا میں باب وولمر کی موت ہوئی۔میچ فکسنگ کے خلاف آواز اٹھانے پر اسلام آباد کے پارک میں مبینہ طور پر مسلح افراد نے ان پر حملہ کیا جس کی انہوں نے ایف آئی آر بھی کٹوائی۔انہوں نے لاہور کی نیشنل کرکٹ اکیڈمی میں پاکستانی باؤلرز اور دہلی کے کلینک میں ہندوستانی فاسٹ باؤلرز کی کوچنگ کی۔انہوں نے کینسر کے موذی مرض سے لڑنے والی اداکارہ رانی سے شادی کی اور انہیں اداکارہ کے ساتھ متعدد فلموں میں کام کرنے کی پیشکش بھی ہوئی جسے انہوں نے رد کردیا۔

لیکن تمام تر چک دمک، طاقت اور سیاست اور الزامات کے بعد یہ کرکٹ کے کھیل میں ان کی مہارت اور فن ہی تھا کہ جس کے لیے انہیں یاد رکھا جائے گا۔سرفراز ہمیشہ ہی ریورس سوئنگ کے موجد کے طور پر جانے جائیں گے۔

مستقل کوششوں اور غلطیوں سے سبق سیکھتے ہوئے سرفراز نے یہ پتہ چلایا کہ ایک کرکٹ کی گیند کو ایک طرف سے کھردرا کردیا جائے اور اگر دوسری سائیڈ کو نیا رکھیں تو بلے باز کے لیے گیند کھیلنا ناممکن ہو جائے گا۔

گیند کے دو حصوں میں جتنا زیادہ فرق ہو گا، اتنے ہی کم وزن اور زیادہ رفتار کے ساتھ گیند سفر کرتی ہوئی ہوا میں بے پناہ سوئنگ ہو گی۔ انہوں نے اپنے باؤلنگ پارٹنر اور دوست عمران خان کو بھی یہ گر سکھایا تھا۔

چاہے وہ ابتدا میں اس کے پیچھے چھپی مکمل سائنس جانتے ہوں یا نہیں لیکن وہ جانتے تھے کہ وہ فاسٹ باؤلنگ کے فن کو ہمیشہ کے لیے بدل رہے ہیں۔یہ فن خفیہ ہی رہا اور وسیم اکرم اور وقار یونس تک منتقل ہوا جو بعد میں ریورس سوئنگ کے بے تاج بادشاہ بنے۔ یہ وہ وقت تھا جب بہت کم لوگ اس بارے میں جانتے اور اس سے بھی کم لوگ سمجھتے تھے۔ایک بار پھر 1979 کی گرمیوں میں واپس چلتے ہیں جب میلبورن کرکٹ گراؤنڈ کے پانچویں دن کھیل کی چوتھی اننگز میں تاریخی 381 رنز کے تعاقب میں آسٹریلوی ٹیم تین وکٹ کے نقصان پر 305 رنز بنا چکی تھی۔اس کے بعد سرفراز نے بقیہ سات وکٹیں صرف ایک رن دے کر حاصل کیں۔ انہوں نے اننگز میں نو وکٹیں لیں؛ صرف گراہم ییلپ ان سے بچ سکے کیونکہ وہ رن آؤٹ ہوئے تھے۔پاکستان نے دوسری مرتبہ آسٹریلیا میں ٹیسٹ میچ جیتا اور سرفراز نے اس میں سب سے نمایاں کردار ادا کیا۔ انہوں نے کیریئر کی بہترین باؤلنگ کرتے ہوئے 86 رنز کے عوض نو وکٹیں لیں۔اس وقت دنیا کے کسی بھی اچھے باؤلنگ اٹیک میں ریورس سوئنگ ایک اہم ہتھیار سمجھا جاتا ہے اور مستقبل میں بھی سمجھا جاتا رہے گا۔انگلینڈ کے پرنس رنجیت سنجھی کے لیگ اور برنارڈ بوسانکوئیٹ کی گوگلی کی طرح سرفراز نواز کی میراث ریورس سوئنگ میں بھی ہمیشہ زندہ رہے گی۔سرفراز نواز نے کہا کہ مجھے اپنے کرکٹ کیریئر میں کوئی پشیمانی اور افسوس نہیں۔ میں نے بہت کچھ حاصل کیا اور کرکٹ کا شکریہ جس کی بدولت میں نے مکمل، متحرک اور رنگین زندگی گزاری۔آج بھی کرکٹ کی خدمت کے لیے بے چین رہتے ہیں۔


متعلقہ خبریں


مسجد نبویؐ کوعام نمازیوں کیلئے کھولنے کی اجازت وجود - اتوار 31 مئی 2020

خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے کورونا لاک ڈاؤن کے باعث گزشتہ دو ماہ سے بند مسجد بنوی کو عام نمازیوں کے لیے کھولنے کی اجازت دیدی۔سعودی میڈیا کے مطابق مسجد نبوی میں 31 مئی سے عام نمازیوں کے داخلے کی اجازت ہوگی اور خادمین الحرمین الشریفین نے اس فیصلے کی منظوری بھی دیدی ہے۔سعودی حکام کے مطابق احتیاطی تدابیرکے ساتھ مسجد نبوی کو عام نمازیوں کے لیے کھولنے کے احکامات دئیے گئے ۔ مسجد نبوی میں 40 فیصد نمازیوں کو ابتدائی دنوں میں داخلے کی اجازت ہو گی اور حکام کی جانب س...

مسجد نبویؐ کوعام نمازیوں کیلئے کھولنے کی اجازت

لداخ بھارت کے ہاتھ سے نکلنے لگا ، چین کا واپس جانے سے انکار وجود - اتوار 31 مئی 2020

لداخ بھارت کے ہاتھ سے نکلنے لگا ، چین نے واپس جانے سے انکار کر دیا۔ تفصیلات کے مطابق لائن آف کنٹرول سے 8 کلو میٹر اندر تک چین نے اپنا کیمپ قائم کر دیا ہے۔ جبکہ چین نے واپس جانے سے انکار کرتے ہوئے موقف اختیار کیا ہے کہ یہ جگہ بھارت کی نہیں ہے۔ دوسری جانب بھارتی حکومت اور میڈیا بوکھلاہٹ کا شکار ہے۔بھارت کی فوج کے دو ٹینکر پہلے ہی پہنچ چکے ہیں تاہم چینی فوج کے قریب جانے کی بھی ہمت نہیں رکھتے۔ یہ بات بھی قابل غور رہے کہ بھارت اور چین کے درمیان کشیدہ حالات کے باعث طے شدہ دوروں کے...

لداخ بھارت کے ہاتھ سے نکلنے لگا ، چین کا واپس جانے سے انکار

عالمی ادارہ صحت، 37 ممالک کا وائرس کیخلاف جنگ میں اتحاد کا فیصلہ وجود - اتوار 31 مئی 2020

عالمی ادارہ صحت اور 37 ممالک نے کورونا وائرس وبا سے لڑنے کے لیے ویکسین، ادویات اور تشخیصی آلات کی عام ملکیت کی اپیل کی اور کہا کہ پیٹنٹ قوانین اس اہم ترین اشیا کی سپلائی میں رکاوٹ ڈال سکتا ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق ترقی پذیر ممالک کے اس اقدام کو زیادہ زیادہ تر تنظیموں بشمول ڈاکٹرز ود آؤٹ بارڈرز کی جانب سے پذیرائی ملی۔ترقی پذیر اور چند چھوٹے ممالک کو خدشہ ہے کہ امیر ممالک کو ویکسین کی تلاش میں وسائل صرف کر رہے ہیں، کامیابی کے بعد اس قطار میں سب سے آگے کھڑے ہوجائیں گے۔کوسٹا ر...

عالمی ادارہ صحت، 37 ممالک کا وائرس کیخلاف جنگ میں اتحاد کا فیصلہ

لاک ڈائون بھارت میں لوگ مردار جانور کا گوشت کھانے پر مجبور وجود - اتوار 31 مئی 2020

بھارت میں لاک ڈاؤن کے دوران بھوک و افلاس کا عالم دیکھ کر انسانیت شرما گئی، کوئی ننگے پیر سیکڑوں میل پیدل سفر کرکے گھر پہنچا تو کسی کو بھوک نے مردار کھانے پر مجبور کر دیا۔بھارتی میڈیارپورٹس کے مطابق چلچلاتی دھوپ، تپتی زمین اور ننگے پیر میلوں کا سفر، ایسے میں عورتوں اور بچوں کا بھی ساتھ ہو تو غربت کا کیا عالم ہوگا، لاک ڈاؤن میں مودی کی ناکام منصوبہ بندی نے غریبوں کو دربدر رلنے پر مجبور کر دیا۔ اس تمام تر صورتحال کے باوجود مودی سرکار غریبوں کی پروا کے بجائے ہندوتوا کے پرچار او...

لاک ڈائون بھارت میں لوگ مردار جانور کا گوشت کھانے پر مجبور

مودی سرکار کا پاکستان کو بدنام کرنے کے لیے کشمیر میں جعلی آپریشن کا منصوبہ وجود - اتوار 31 مئی 2020

بھارت نے لداخ میں چین کے ہاتھوں ہزیمت اٹھانے کے بعد پاکستان کے خلاف مکروہ منصوبہ بنانا لیا، مودی سرکار نے مقبوضہ کشمیر میں فالس فلیگ آپریشن کا ڈرامہ رچا کر پاکستان کو بدنام کرنے کی منصوبہ بندی کرلی، وزیر اعظم عمران خان، وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی اور آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ بارہا عالمی برادری کو بھارتی عزائم بارے کئی مرتبہ خبردار کر چکے۔ذرائع کے مطابق بھارت نے مقبوضہ کشمیر میں فالس فلیگ آپریشن کرنے اور اس کا ملبہ پاکستان پر ڈالنے کی مکروہ منصوبہ بندی کر لی ہے، یہ سب ...

مودی سرکار کا پاکستان کو بدنام کرنے کے لیے کشمیر میں جعلی آپریشن کا منصوبہ

اجیت دوول کی پالیسی ناکام،بھارتی ملٹری قیادت اور دوول گروپ میں اختلافات وجود - هفته 30 مئی 2020

بھارت میں اجیت دوول کی پالیسی ناکام،بھارتی ملٹری قیادت اور دوول گروپ میں اختلافات کھل کر سامنے آگئے ،دوول کی غلط پالیسیوں نے بھارت کو بند گلی میں لا کھڑا کیا۔میڈیارپورٹ کے مطابق چائنا پالیسی اور جھوٹ پر جھوٹ نے بھارت کی بْنیادیں ہلا دیں،بھارت اقوامِ عالم میں تنہا ہو گیا،پہلے پلوامہ ڈرامے میں اپنے 40سپاہی مروائے ۔رپورٹ کے مطابق بالاکوٹ میں ہزیمت اْٹھانا پڑی،بھارتی ائیر فورس کی ناکامی سے بھارتی خواب چکنا چور ہو گئے ،کشمیر پالیسی بْری طرح ناکام،چائنہ نے بھارتی ملٹری کو بے نقاب ک...

اجیت دوول کی پالیسی ناکام،بھارتی ملٹری قیادت اور دوول گروپ میں اختلافات

ہانگ کانگ کے معاملے پر برطانیہ، امریکا مداخلت سے باز رہیں، چین وجود - هفته 30 مئی 2020

چین نے ہانگ کانگ میں نیشنل سیکیورٹی بل کے معاملے میں امریکا پر اقوام متحدہ کو یرغمال بنانے کا الزام عائد کردیا۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق بیجنگ نے مغربی ممالک کو خبردار کیا کہ وہ چین کے اندرونی معاملات میں مداخلت نہ کریں۔واضح رہے کہ امریکا، برطانیہ، کینیڈا اور آسٹریلیا نے نیشنل سیکیورٹی بل پر کڑی تنقید کی ہے جس کے تحت چین کی سیکیورٹی ایجنسیاں ہانگ کانگ میں کھلے عام کارروائیاں کرسکیں گی۔چاروں ممالک کی جانب سے جاری مشترکہ اعلامیہ میں کہا گیا تھا کہ بیجنگ کا نیشنل سیکیورٹی کا قانون...

ہانگ کانگ کے معاملے پر برطانیہ، امریکا مداخلت سے باز رہیں، چین

لداخ میں غیرقانونی بھارتی تعمیرات، چین نے فوجی قوت مزید بڑھا دی وجود - هفته 30 مئی 2020

لداخ میں غیر قانونی تعمیرات پربھارت کو لینے کے دینے پڑ گئے ، چین نے کشمیر کے علاقے اکسائے چن پر بھی فوجی قوت بڑھا دی۔بھارتی میڈیا کے مطابق لداخ میں صورتحال بدستور کشیدہ ہے ، چین لداخ میں متنازع سڑک پر پل کی تعمیر روکنا چاہتا ہے ، چین نے ائیرپورٹ پر ملٹری قوت میں اضافہ کر لیا۔لداخ میں بھارتی فوجیوں کی تعداد میں بھی اضافہ کر دیا گیا، گولوان وادی کے تین پوائنٹس اور پینگانگ جھیل پر بھارتی اور چینی فوجی آمنے سامنے ہیں۔واضح رہے کہ لداخ کے علاقے میں بھارت اور چین تنازع شروع ہوئے ایک...

لداخ میں غیرقانونی بھارتی تعمیرات، چین نے فوجی قوت مزید بڑھا دی

تمباکو کمپنیاں بچوں کو راغب کرنے کے لیے خطرناک ہتھکنڈے استعمال کر رہی ہیں، ڈبلیو ایچ او وجود - هفته 30 مئی 2020

عالمی ادارہ صحت نے خبردار کیا ہے کہ تمباکو کمپنیاں بچوں کو تمباکو نوشی کی طرف راغب کرنے کے لیے خطرناک اور جان لیوا ہتھکنڈے استعمال کر رہی ہیں۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق ڈبلیو ایچ او نے بتایاکہ یہ حیرانی کی بات نہیں کہ سگریٹ نوشی شروع کرنے والے زیادہ تر افراد کی عمر اٹھارہ برس سے بھی کم ہوتی ہے ۔ اس ادارے نے مزید بتایا کہ تیرہ سے پندرہ برس تک کی عمر کے درمیان چوالیس ملین بچے اس وقت سگریٹ نوشی کے عادی ہیں۔ اس بارے میں عالمی ادارہ صحت نے اپنی ایک رپورٹ اتوار اکتیس مئی کو منا...

تمباکو کمپنیاں بچوں کو راغب کرنے کے لیے خطرناک ہتھکنڈے استعمال کر رہی ہیں، ڈبلیو ایچ او

کورونا وائرس، ذیابیطس کے مریضوں کے لیے خطرے کی گھنٹی وجود - هفته 30 مئی 2020

ذیابیطس کا ہر دس میں سے ایک مریض کورونا وائرس میں مبتلا ہونے کی صورت میں ہسپتال جانے کے سات دن بعد ہی اپنی زندگی کی بازی ہار سکتا ہے ۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق یہ انکشاف ایک تازہ سائنسی مطالعے کے نتائج میں کیا گیا ہے ، جو جمعے کے روز ایک جریدے میں شائع ہوئے ۔ اس مطالعے کے دوران ذیابیطس کے تیرہ سو مریضوں کا جائزہ لیا گیا۔ پچھتر برس سے زائد عمر کے مریضوں میں پچپن برس سے کم عمر کے مریضوں کے مقابلے میں شرح اموات چودہ فیصد زیادہ رہی۔ دل، بلڈ پریشر اور پھیپھڑوں کے امراض میں مب...

کورونا وائرس، ذیابیطس کے مریضوں کے لیے خطرے کی گھنٹی

کورونا وائرس کے کیسز اور اموات، بھارت چین سے آگے نکل گیا وجود - هفته 30 مئی 2020

بھارت میں نئے کورونا وائرس سے ہلاک ہونے والوں کی تعداد چین میں اسی وائرس کے باعث اموات سے زیادہ ہو گئی ہے ۔ پچھلے چوبیس گھنٹوں کے دوران بھارت میں مزید 175 افراد ہلاک ہو گئے اور یوں ایسی اموات کی مجموعی تعداد 4,706 ہو گئی۔ بھارت میں نئے کورونا وائرس کے متاثرین کی تعداد 165,799 ہو گئی ہے ۔ مہاراشٹر سب سے زیادہ متاثرہ ریاست ہے ۔ دوسری جانب چین میں جمعے کو کووڈ انیس کا کوئی ایک بھی نیا مریض سامنے نہیں آیا اور نہ ہی اس بیماری کے باعث کوئی موت ہوئی۔ چین میں متاثرین کی تعداد 82,995 ...

کورونا وائرس کے کیسز اور اموات، بھارت چین سے آگے نکل گیا

ملائیشین سابق وزیراعظم مہاتیر محمد کو ان کی اپنی سیاسی جماعت سے نکال دیا گیا وجود - هفته 30 مئی 2020

ملائیشیا کی سیاسی جماعت یونائیٹڈ پارٹی کے چیئرمین اور سابق وزیراعظم مہاتیر محمد کو انہی کی پارٹی سے نکال دیا گیا۔عرب خبر رساں ادارے کے مطابق پارٹی چیئرمین مہاتیر محمد نے اپنی ہی جماعت کی پالیسیوں کی خلاف ورزی کی اور وہ 18 مئی کو ہونے والے پارلیمنٹ کے اجلاس میں اپوزیشن بینچوں پر بیٹھے تھے ۔ملائیشیا کی یونائیٹڈ پارٹی کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ مہاتیر محمد کی پارٹی رکنیت کو فوری طور پر منسوخ کردیا گیا ہے ۔عرب میڈیا کا بتانا ہیکہ پارٹی چیئرمین مہاتیر محمد کو ان کی اپن...

ملائیشین سابق وزیراعظم مہاتیر محمد کو ان کی اپنی سیاسی جماعت سے نکال دیا گیا