وجود

... loading ...

وجود
وجود
ashaar

پی ایس ایل کا جادو سرچڑھ کربولنے لگا

جمعرات 22 فروری 2018 پی ایس ایل کا جادو سرچڑھ کربولنے لگا

پاکستان کرکٹ بورڈ کے زیر اہتمام پی ایس ایل کا تیسرا ایڈیشن آج دبئی کے انٹرنیشنل کرکٹ ا سٹیڈیم میں شروع ہورہا ہے ،ہر گذرتے دن کے ساتھ شائقین کا جوش و جذبہ عروج پر پہنچ چکا ہے جس کے جادو کے سحر نے پوری قوم کے علاوہ دنیا بھر میں کرکٹ کے دیوانوں کو اپنے سحر میں جکڑ لیا ہے،پی ایس ایل کی مقبولیت اتنی ہو چکی ہے کہ اب شائقین سارا سال اس کا انتظار کرنے لگے ہیں اور یہ پاکستان میں کھیلوں کا سب سے بڑا ایونٹ بن چکا ہے جو نہ صرف نئے ٹیلنٹ کو پروان چڑھا رہا ہے بلکہ انٹرنیشنل کرکٹ کی واپسی کے لیے ثابت ہو رہا ہے،گذشتہ ایڈیشنزکی طرح اس بار بھی تمام ٹیموں نے اپنے اپنے نام کی تھیم پر آفیشل گانے بنا کر اپنے مداحوں کو پر جوش اور کھلاڑیوںکا جوش جذبہ بڑھانے کا کام شروع کر رکھا ہے ،اس سال پانچ کی بجائے چھٹی ٹیم ملتان سلطان کی وجہ سے مقابلے مزیدجاندار ہوں گے، پی ایس ایل کی رنگا رنگ افتتاحی تقریب جو رات آٹھ بجے شروع ہو گی جس میںایک بار پھر پاکستان کے ٹاپ ٹرینڈ گلوکار علی ظفر کے ساتھ فوک گلوکارہ عابدہ پروین ،امریکی پاپ سنگر جیسن ڈیرینولا اور شہزاد رائے اپنی آوزوںکا جادو جگائیں گے اس کے علاوہ اس تقریب میں شاندار تقریب میں آتش بازی سمیت کئی دلچسپ پروگرام شامل ہیں۔

علی ظفر نے پی ایس ایل 1میں ریگے گلوکار شان پال اورپی ایس ایل 2 میں معروف انگلش گلوکار شیگی نے افتتاحی تقاریب کا چار چاند لگائے تھے ،پہلا میچ رات دس بجے دفاعی چیمپئن پشاورزلمی اور پی ایس ایل کا پہلی مرتبہ حصہ بننے والی ٹیم ملتان سلطان کے مابین کھیلا جائے گا،پی ایس تھری کے تیسرے ایڈیشن جس میں مجموعی طور پر34میچز جو دبئی ،شارجہ ،لاہور اور(فائنل) کراچی میںکھیلے جائیں گے کی تیاریاں اکتوبر میں شروع ہو گئی تھیں کھلاڑیوں کی ڈرافٹنگ کے بعد پی سی بی کو یہ خطرہ لاحق ہو گیا تھاکہ فرنچائزرز کو اسپانسرز نہ ملنے پرمالی بحران کا سامنا ہے ،تاہم بعد میں وہ خدشہ ٹل گیا، کوئٹہ گلیڈیٹرز کے علاوہ تمام فرنچائزرز کے ذمے گذشتہ واجبات بھی تھے اور کوئٹہ گلیڈیٹرز واحد ٹیم ہے جس نے 2016 میں ہی اپنے تمام واجبات کلیئر کر دئے تھے یہ ٹیم معروف کاروباری ٹائیکون ندیم عمر کی ملکیت ہے۔

یہ مسئلہ حل ہوا تو فرنچائزرز نے ہائی فائی تقریبات کا آغاز کیا جو کھلاڑیوں کی دبئی روانگی تک جاری رہا اس وجہ سے پاکستان سپر لیگ کا ماحول مزید سحر انگیز ہوتا چلاگیا،لاہور میں دو میچز اورکراچی کے نیشنل ا سٹیڈیم میں فائنل کی تیاریاں بھی آخری مراحل میں داخل ہو چکی ہیں ،سیکیورٹی کے لیے فل ڈریس ریہرسل ہو چکی ہے، آئی سی سی کے سیکیورٹی مبصرین کی ٹیم ریگ ڈیکاس کی سربراہی میں دورہ مکمل اور مطمئن ہو کر واپس جا چکے ہیںاس ریہرسل میں 10کے قریب اہلکاروں نے حصہ لیا تھا فائنل کی سیکیورٹی پولیس،رینجرز کے علاوہ فوج کے سپرد بھی کی جا چکی ہے،،پی ایس ایل کی تمام ٹیمیں دبئی پہنچ کر آئی سی سی کی کرکٹ اکیڈمی میں بھرپور پریکٹس جاری رکھے ہوئے ہیں،غیر ملکی کھلاڑی بھی اپنی اپنی ٹیموں کو جوائن کر چکے ہیں،توقع کی جا رہی ہے کہ پاکستان سپر لیگ اپنی بڑھتی ہوئی مقبولیت کے باعث آئندہ ایڈیشن تک آئی پی ایل کے بعد دوسری بڑی اور دلچسپ کرکٹ لیگ کا روپ دھار لے گی کیونکہ یہ پی ایس ایل عالمی حیثیت حاصل کر چکی ہے۔

پر عزم اور با صلاحیت کھلاڑیوں کو میدان میں دیکھنے کے لیے جہاں ہر کوئی بے چین ہے، وہیں اس سے ماضی میں حسن علی،فخر زمان،عماد وسیم،محمد نوازاور انڈر19کے کپتان حسان خان ۔کی طرح اس بار بھی نئے ا سٹارز ابھرکرکرکٹ افق پر چمکنے کاامکان ہے ۔

پی ایس ایل کے موجودہ ایڈیشن میں شامل ٹیمیں پشاور زلمی ،کوئٹہ گلیڈیٹرز،اسلام آباد یونائیٹڈ،لاہور قلندر ،کراچی کنگز اور ملتان سلطان کی ٹیمیں پلے آف گروپ سے پہلے گروپ کی سطح پر دو دو میچ کھیلیں گی جہاں سے چار ٹیمیں اگلے مرحلے میں چلی جائیں گی، پی ایس ایل انتظامیہ نے ٹیم کے چنائو کے لیے پلاٹینئیم ،گولڈ ،سلور ،ایمرجنگ کھلاڑیوں میں سے انتخاب کے بعد دیگر کھلاڑیوں کا انتخاب کیا،پی ایس ایل کے اس ایڈیشن میں حصہ لینے والوں غیر ملکی کھلاڑیوں کا تعلق ویسٹ انڈیز،سری لنکا،بنگلہ دیش،نیوزی لینڈ ،آسٹریلیا ،افغانستان اور انگلینڈ سے ہے،غیر ملکی کھلاڑیوں سب سے زیادہ کا تعلق ویسٹ انڈیز سے ہے، اس پی ایس ایل میں گیارہ میچز ڈے اینڈ نائٹ کھیلے جائیں گے ،جس روز صرف ایک میچ ہو گا وہ پاکستانی وقت کے مطابق رات نو بجے اور جب دو میچ کھیلیں جائیں گے تب پہلا میچ 4.30اور دوسرا میچ رات 9بجے کھیلا جا ئے گا،سب سے پہلے 26 فروری تک دبئی ،28فروری سے 4مارچ تک شارجہ ، 6مارچ سے11مارچ تک دبئی ، 13 سے 16مارچ تک شارجہ ،18مارچ کو پہلا پلے آف میچ دبئی،20اور21مارچ کو لاہور میں دو میچ جبکہ 25کو کراچی میں فائنل اور اختتامی تقریب کا انعقاد ہو گا،

دبئی انٹرنیشنل کرکٹ سٹیڈیم میں شائقین کی گنجائش 30ہزار،شارجہ میں 15 ہزار ، قذافی اسٹیڈیم لاہور میں 27ہزار جبکہ نیشنل سٹیڈیم کراچی میں یہ تعداد34228ہے،پی ایس کے سابق دو ایڈیشنز میں سب سے زیادہ 21 میچ کھیلنے کااعزاز دفاعی چیمپئین پشاور زلمی کو حاصل ہے سب سے زیادہ فتوحات 12 بھی اسی ٹیم نے حاصل کی 8میں ہاری جبکہ ایک بلا نتیجہ رہااس کی کامیبابی کا تناسب60فیصد رہا،کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی ٹیم اب تک پی ایس ایل کے20میچ کھیل کر اسلام آباد یونائٹیڈ کے ساتھ مشترکہ طور پر زیادہ میچ کھیلنے والی ٹیموں میں دوسرے نمبر پر ہے جس کی کامیابی کا تناسب 63.15فیصد ہے جو پی ایس ایل کی تمام ٹیموں سے زیادہ ہے اس نے سب سے کم سات میچ ہارے جبکہ اس کا بھی ایک میچ بلا نتیجہ رہا حالانکہ اس ٹیم کو فائنل لاہور میں منعقد ہونے پر اہم انٹرنیشنل کھلاڑیوں سے محروم ہونا پڑا تھا،اسلام آباد یونائٹیڈ نے 20میچ کھیل کر 9میں 55فیصد کے تناسب سے کامیابی حاصل کی ،کراچی کنگر نے 19میچ کھیل کر سات جیتی اور 12میں شکست سے دوچار ہوئی اس کی کامیابی کا تناسب صرف36.89فیصد ہے گزشتہ دونوں ایڈیشننز میں کراچی کنگز نے سب سے زیادہ میچ ہارے ، سب سے کم میچ لاہور قلندر کے حصہ میں آئے وہ اب تک پی ایس ایل کے 16میچ کھیل سکی ہے جس میں صرف پانچ میں وہ سرخرو ہوئی اور 11میں ہار اس کا مقدر بنی،کسی ایک میچ میں سب سے بڑا ٹوٹل 202رنز کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کا اور سب سے کم مجموعہ لاہور قلندر کا ہے وہ پشاور زلمی کے خلاف کھیلتے ہوئے صرف59 رنز بنا پائی تھی ، کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے احمد شہزاد532رنز کے ساتھ ٹاپ پر ہیں دوسرے نمبر پر پشاور زلمی کے کامران اکمل 504رنز،لاہور قلندر کے عمر اکمل نے15میچ کھیل کر 499سکور کے ساتھ تیسرے نمبر پرہیں جبکہ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے کیون پیٹرسن18میچوں میں456اور کراچی کنگز کے روی بوپارہ بھی18ہی میچوں میں 448رنز بنا بیٹسمینوں کی فہرست میں نمایاں ہیں۔

پشاور زلمی کے کامران اکمل نے گذشتہ ایڈیشن2017میںسب سے زیادہ 353رنز بنانے کا اعزاز حاصل کیا جبکہ2016میں یہی اعزاز ان کے بھائی عمر اکمل نے 325رنز بنا کر حاصل کیا تھا،پی ایس ایل کے پہلے ایڈیشن میں ا سپاٹ فکسنگ میں ملوث شرجیل خان نے ایک اننگز میں62 گیندوں پر117رنز کی شاندارباری کھیلی جبکہ دوسرے ایڈیشن میں کامران اکمل نے65گیندوں پر 104رنز بنائے،دونوں ایڈیشنز میں عمر اکمل نے 11اننگز میں سب سے زیادہ 25چھکے لگائے ہیں،شاہد آفریدی پی ایس ایل میں سب سے زیادہ اسٹرائیک ریٹ168.15رکھتے ہیں، بائولنگ کے شعبہ میں پشاور زلمی کے وہاب ریاض19میچوں میں 30وکٹیں لے کر پہلے نمبر،اسلام آباد یونائٹیڈ کے محمد سمیع 24 دوسرے اورکوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے محمد نواز23 تیسرے نمبر پر ہیں،گذشتہ سال کراچی کنگز کے سہیل خان نے 9میچوں میں 16وکٹیں لے کر سب سے زیادہ وکٹ ٹیکر بائولر رہے، سہیل خان گذشتہ سال کراچی کنگز کے ساتھ تھے بہترین کارکردگی کے باوجود کوچ مکی آرتھر نے انہیں ڈانٹ پلائی تھی سہیل خان اس بار لاہور قلندر کے ساتھ بہت پر عزم ہیں ،2016 اور 2017میں وہاب ریاض نے15.15وکٹیں حاصل کیں،پی ایس ایل میں اب تک کسی ایک اننگز میں بہترین بائولنگ کا اعزاز 16رنز کے عوض6وکٹ روی بوپارہ کے پاس ہے،اسی طرح شاہد آفریدی کی بہترین بائولنگ سات رنز کے عوض5وکٹیں اور محمد سمیع کی 8رنز دے کر 5وکٹیں ہیں۔

دوسرے ایڈیشن کے پہلے ہی میچ میں ا سپاٹ فکسنگ اسکینڈل نے پاکستانی کرکٹ حلقوں پر سکتہ جاری کر دیا تھا پہلے ایڈیشن کے ہیرو شرجیل خان اور خالد لطیف کو فوری طور پر واپس بھیج دیا گیا بعد میں محمد عرفان کا نام بھی اسی اسکینڈل میں سامنے آیا تھا،پی ایل ایس کو مزید چار چاند لگانے والے غیرملکی کھلاڑیوں میں آندر ے سیموئل بدری ،لیوک رونچی،سیم بلنگز،جین پال ڈومینی ،ایلکس ہیلز،ڈیوڈ ولی،روی بوپارہ،کولن بلنگرام،مچل جانسن،برینڈن میک کولم،کرس لن،مستفیض الرحمان،سمیت پاٹیل ،سنیل نرائن،کیمرون ڈیلپورٹ،،ڈیرن برائوو،کیران پولارڈ،کمارا سنگا کارا،نکولس پوران،عمران طاہر،کیون پیٹرسن،رلی روسو،شین واٹس،ڈیرن سیمی،تمیم اقبال،شکیب الحسن،کرس جورڈن،ڈیوین برائوو اور شامل ہیں، جبکہ سپلیمنٹری غیر ملکی کھلاڑیوں کے لیے ایلکس ہیلزس،،کولن منرو ،آئن مورگن،مچل میک کلینیگن،روز وائٹلی ،اسٹیون فن،ہرڈس ولجوئن،راشد خان (افغانستان) ، آندرے فلیچر،ایوپین لوئیس کا نام فپرست میں ہے،کراچی کنگز کے 6غیر ملکی

کھلاڑیوں میں سے 6کامیابی کی صورت میں پاکستان آئیں گے جبکہ انگلش کپتان آئن مورگن مصروفیت کی وجہ سے دیر سے شرکت اور جلدی پی ایس ایل سے واپس چلے جائیں گے،عمران طاہر بھی پہلے دو میچوں میں ملتان سلطان کو دستیاب نہیں ہوں گے ،پی ایس ایل تھری ایڈیشن میں سب سے کم عمر مگر ابھرتا ہوافاسٹ بائولر 17سالہ شاہین آفریدی ہے جنہوں نے ورلڈ کپ انڈر19میں بہترین بائولنگ کے ساتھ سب کی توجہ اپنی جانب مبذول کروا لی سینئر کھلاڑیوں کے ساتھ گھل مل چکے ہیں۔

پی ایس ایل تھری کی ٹراافی کی تقریب رونمائی انٹرنیشنل کرکٹ سٹیڈیم دبئی میں منعقد ہوگی جس میں چیئرمین پاکستان کرکٹ بورڈ نجم سیٹھی ،ٹیموں کے کپتان سرفراز احمد،شعیب ملک ،عماد وسیم،مصباح الحق ،ڈیرن سیمی ، برینڈن میک کولم ،تمام ٹیموں کے فرنچائزر زمالکان ،ٹیم منیجرز،کوچ اور دیگر آفیشل نے شرکت کی،اس موقع پر چیر مین نجم سیٹھی اور تمام کپتانوں نے پریس کانفرنس میں کرکٹ کی بہتری اور اعلیٰ کاکردگی کے عزم کا اظہار کیا،ننجم سیٹھی کے مطابق دو سال تک پی ایس ایل مکمل طور پر پاکستان میں ہوا کرے گی۔


متعلقہ خبریں


کنزرویٹو پارٹی کی جیت کیخلاف سیکڑوں افراد کا احتجاج، بورس کیخلاف نعرے بازیکنزرویٹو پارٹی کی جیت کیخلاف سیکڑوں افراد کا احتجاج، بورس کیخلاف نعرے بازی وجود - هفته 14 دسمبر 2019

کنزرویٹو پارٹی کی جیت کے خلاف سیکڑوں افراد نے وسطی لندن میں احتجاجی مظاہرہ کیا، انہوں نے وزیراعظم بورس جانسن کے خلاف نعرے بازی کی۔برطانیا میں پارلیمانی انتخابات میں کنزرویٹو پارٹی کی جیت کے خلاف سیکڑوں افراد لندن کی سڑکوں پر نکل آئے ، مظاہرین نے بورس جانسن میرے وزیراعظم نہیں اور بورس آئوٹ کے نعرے لگائے ، بینرز تھامے مظاہرین نے مختلف سڑکوں پر مارچ کرتے ہوئے سڑک بلاک کر دی۔پولیس کی بھاری نفری موقع پر موجود تھی، وزیراعظم بورس جانسن کی پارٹی نے گزشتہ روز ہونے والے انتخابات میں وا...

کنزرویٹو پارٹی کی جیت کیخلاف سیکڑوں افراد کا احتجاج، بورس کیخلاف نعرے بازیکنزرویٹو پارٹی کی جیت کیخلاف سیکڑوں افراد کا احتجاج، بورس کیخلاف نعرے بازی

عراق میں امریکی مفادات کو گزند پہنچانے کی قیمت ایران ادا کرے گا، پومپیو وجود - هفته 14 دسمبر 2019

امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے خبردار کیا ہے کہ مشرق وسطی بالخصوص عراق میں واشنگٹن کے مفادات اور تنصیبات کو کسی قسم کا نقصان پہنچا تو اس کی قیمت ایران کو چکانا ہوگی کیونکہ حالیہ دنوں کے دوران عراق میں ہمارے فوجی اڈوں پر میزائل اور راکٹ حملوں کے پیچھے ایرانی وفادار ملیشیائوں کا ہاتھ ہے ۔امریکی وزیر خارجہ نے ایک بیان میں کہا کہ ہم اس موقع کو ایران کویقین دہانی کرکے بہتر موقع سمجھتے ہیں اور اسے یاد دلاتے ہیں کہ ایران یا اس کے کسی وفادار ایجنٹ نے امریکا یا اس کے اتحادیوں میں س...

عراق میں امریکی مفادات کو گزند پہنچانے کی قیمت ایران ادا کرے گا، پومپیو

جرمنی ،راکیلئے کشمیریوں کی جاسوسی کرنیوالے بھارتی جوڑے کو 18سال قید کا حکم وجود - هفته 14 دسمبر 2019

جرمنی میں بھارت کی خفیہ ایجنسی'' را ''کے لیے کشمیریوں اور سکھوں کی جاسوسی کرنے والے جوڑے 50سالہ منموہن سنگھ اور 51سالہ کنول جیت کو بالتریب 18سال قید اور 180دن کی تنخواہ کا جرمانہ عائد کردیا گیا۔بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق جرمنی میں فرینکفرٹ کی ایک عدالت نے کشمیریوں اور سکھوں کی جاسوسی کرنے پر دو بھارتی شہریوں کو سزائیں سنائی ہیں۔ دونوں شہری میاں بیوی ہیں اور کافی عرصے سے جرمنی میں مقیم تھے ۔ یہ جوڑا جرمنی میں قیام پذیر دیگر کشمیریوں اور سکھوں کی معلومات اور سرگرمیوں ...

جرمنی ،راکیلئے کشمیریوں کی جاسوسی کرنیوالے بھارتی جوڑے کو 18سال قید کا حکم

سعودی عرب'خود کار طریقے سے چلنے والی بسوں کا کا میاب تجربہ وجود - هفته 14 دسمبر 2019

سعودی عرب کی کنگ عبداللہ یونیورسٹی میں خود کار طریقے سے چلنے والی بسوں کا کا میاب تجربہ کیا گیاہے ۔سعودی عرب میں بھی پہلی بار خود کار طریقے سے چلنے والی نئی گاڑیاں متعارف کروائی جا رہی ہیں، سعودی عرب کی کنگ عبداللہ یونیورسٹی برائے سائنس اینڈ ٹیکنالوجی میں دو بسوں سے لوکل موٹرز اور ایزی مائل کمپنیوں کے اشتراک سے اس جدید ٹیکنالوجی سے آراستہ بس سروس کا آغاز کیا گیا ہے ۔کنگ عبداللہ یونیورسٹی برائے سائنس و ٹیکنالوجی(کاوسٹ)کے اس اقدام سے اسمارٹ بسوں کا پروگرام نافذ ہوگیا ہے جو بہت ...

سعودی عرب'خود کار طریقے سے چلنے والی بسوں کا کا میاب تجربہ

امریکی ایئر فورس کا بیلسٹک میزائل کا ایک اور تجربہ وجود - جمعه 13 دسمبر 2019

امریکی ایئر فورس نے بیلسٹک میزائل کا ایک اور تجربہ کیا ہے ، تین ماہ سے بھی کم وقت میں امریکی نیو کلیئر میزائل فورس کا یہ اپنی نوعیت کا دوسرا تجربہ ہے ۔بیلسٹک میزائل کیلی فورنیا میں وینڈن برگ ایئر فورس بیس سے داغا گیا جس نے بحر الکاہل میں ہدف کو نشانہ بنایا۔امریکی حکام نے اس میزائل تجربے کی کوئی وجہ نہیں بتائی ، تاہم اسے امریکی نیوکلیئر میزائل ڈیفنس سسٹم کی آپریشنل صلاحیت کے اظہار کے طور پر دیکھا جارہا ہے ۔واضح رہے کہ 2 اکتوبر کو بھی امریکی ایئر فورس نے بین البراعظمی بیلسٹک می...

امریکی ایئر فورس کا بیلسٹک میزائل کا ایک اور تجربہ

ایران ، حالیہ احتجاج میں 1360 مظاہرین ہلاک، 10 ہزار گرفتار وجود - جمعه 13 دسمبر 2019

یکم نومبر کو ایران میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کے خلاف اٹھنے والی احتجاجی تحریک کے دوران پولیس اور پاسداران انقلاب نے طاقت کا وحشیانہ استعمال کیا جس کے نتیجے میں ہزاروں مظاہرین جاں بحق اور زخمی ہوئے ہیں۔ایران میں نومبر کے وسط میں شروع ہونے والے احتجاج کے دوران پہلی ہلاکت سیرجان شہرمیں ہوئی۔ اس کے بعد دیکھتے ہی دیکھتے احتجاج ملک کے طول وعرض میں پھیل گیا۔ حکومت نے احتجاج کا دائرہ پھیلتے دیکھا تو انٹرنیٹ پرپابندی عائد کردی اور طاقت کا استعمال بڑھا دیا۔ ایرانی حکومت ک...

ایران ، حالیہ احتجاج میں 1360 مظاہرین ہلاک، 10 ہزار گرفتار

امریکا کا چین کے ساتھ تجارتی معاہدہ طے، صدر ٹرمپ کی منظوری کا انتظار وجود - جمعه 13 دسمبر 2019

بلومبرگ نے ایک رپورٹ میں بتایا ہے کہ امریکا اور چین تجارتی معاہدے کی طرف بڑھ رہے ہیں۔ امریکی انتظامیہ نے معاہدے کا ابتدائی مسودہ تیار کرلیا ہے اور معاہدے کے اصول بھی وضع کرلیے ہیں تاہم صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی طرف سے اس کی منظوری باقی ہے ۔امریکی نشریاتی ادارے کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ چین کے ساتھ تجارتی تعلقات کی بحالی کا ایک مرحلہ باقی ہے اور وہ صدر ٹرمپ کی طرف سے اس کی منظوری ہے ۔"بلومبرگ" کا کہنا ہے کہ اسے چین اور امریکا کیدرمیان ممکنہ سمجھوتے کے حوالے سے باخبر ذرائع کی طرف سے ا...

امریکا کا چین کے ساتھ تجارتی معاہدہ طے، صدر ٹرمپ کی منظوری کا انتظار

امریکی سینیٹ کی قرارداد نے امریکا ترکی تعلقات خطرے میں ڈال دیے ، انقرہ وجود - جمعه 13 دسمبر 2019

ترکی نے امریکی سینٹ کی طرف سے آرمینی باشندوں کے قتل عام سے متعلق ایک بل کی منظوری پر سخت رد عمل ظاہرکیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ امریکی سینٹ کی قرارداد سے واشنگٹن اور انقرہ کے درمیان تعلقات خطرے سے دوچار ہوسکتے ہیں۔خبر رساں اداروں کے مطابق انقرہ نے متنبہ کیا ہے کہ امریکی سینیٹ نے آرمینی نسل کشی کو تسلیم کرنے کے لیے ایک قرارداد منظور کرکے امریکا اور ترکی کے باہمی تعلقات خطرے میں ڈال دئیے ہیں۔ترکی کے ایوان صدر کے ڈائریکٹراطلاعات فخرالدین الٹن نے ایک بیان میں کہا ہے کہ امریکی کان...

امریکی سینیٹ کی قرارداد نے امریکا ترکی تعلقات خطرے میں ڈال دیے ، انقرہ

اب کسی بھی زبان میں بات کرنا گوگل اسسٹنٹ سے ممکن وجود - جمعه 13 دسمبر 2019

اب کوئی میسجنگ یا چیٹنگ ایپ ہو یا روزمرہ کی زندگی، آپ کو بات چیت کے دوران دوسرے کی زبان نہ بھی آتی ہو تو بھی کوئی مسئلہ نہیں ہوگا، آپ کو بس گوگل کے اس بہترین فیچر کو استعمال کرنا ہوگا۔درحقیقت گوگل کے اس فیچر کی بدولت بیشتر افراد تو کوئی دوسری زبان سیکھنے کی زحمت ہی نہیں کریں گے کیونکہ زندگی کے ہر شعبے میں مدد کے لیے گوگل ہے نا۔گوگل نے اینڈرائیڈ اور آئی او ایس ڈیوائسز کے لیے اپنے ڈیجیٹل اسسٹنٹ میں انٹرپریٹر موڈ کو متعارف کرانے کا اعلان کیا ہے جو آپ کے فون میں رئیل ٹائم می...

اب کسی بھی زبان میں بات کرنا گوگل اسسٹنٹ سے ممکن

ایران کو پوری طاقت سے جواب دیں گے ،امریکی وزیر دفاع وجود - جمعرات 12 دسمبر 2019

امریکی وزیر دفاع مارک ایسپر نے ایوان نمائندگان کی آرمڈ فورس کمیٹی کو بتایا کہ ان کا ملک اپنے دفاع کو مستحکم کرنے اور اپنے اتحادیوں کو ایران کے خطرات کا مقابلہ کرنے کا اہل بنانا چاہتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ اگر ایران ہمارے مفادات یا افواج پر حملہ کرتا ہے تو ہم فیصلہ کن طاقت کے ساتھ جواب دیں گے ۔ادھر امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے گزشتہ روز کہا تھا کہ واشنگٹن ایران پر نئی پابندیوں کا اعلان کرنے کی تیاری کررہا ہے ۔ ان کا کہنا تھا کہ ایران کے مختلف اداروں، کمپنیوں اور افراد کے خل...

ایران کو پوری طاقت سے جواب دیں گے ،امریکی وزیر دفاع

ٹرمپ کا یہود مخالف بائیکاٹ روکنے کیلئے صدارتی حکم نامہ جاری وجود - جمعرات 12 دسمبر 2019

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کالج کیمپسز میں یہودیوں کی مخالفت اور اسرائیل کا بائیکاٹ روکنے کے لیے نیا صدارتی حکم نامہ جاری کردیا ہے ۔ٹرمپ کے اس متنازع اقدام کے تحت ایسے تعلیمی اداروں کی حکومتی امداد روکی جاسکے گی جو یہودی اور اسرائیل مخالف واقعات کی روک تھام میں ناکام رہیں گے ۔صدارتی حکم نامے کے تحت محکمہ تعلیم کالج کیمپس میں یہود مخالف عناصر کے خلاف براہ راست کارروائی کر سکے گا۔اس ایگزیکٹو آرڈر کے تحت حکومت کو بحیثیت نسل، قوم یا مذہب یہودیت کی تشریح کی اجازت ہوگی ۔

ٹرمپ کا یہود مخالف بائیکاٹ روکنے کیلئے صدارتی حکم نامہ جاری

امریکا کا افغانستان میں فوج کو محدود کرنے پر غور وجود - جمعرات 12 دسمبر 2019

امریکا افغانستان میں اپنے فوجیوں کی تعداد کو کم کرنے پر غور کررہا ہے ۔ جس کے لئے حکام کئی طریقہ کار کا جائزہ لے رہے ہیں۔چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف جنرل مارک ملی نے کہا ہے کہ افغانستان میں دہشتگردوں سے لڑنے کے لئے امریکی فوجیوں کی تعداد کم کی جائیگی، تاہم انہوں نے حتمی تعداد نہیں بتائی۔انہوں نے مزید کہا کہ ہمارے پاس اختیارات ہیں۔ اس وقت افغانستان میں امریکی فوجیوں کی تعداد 13ہزار ہے جن میں سے 5 ہزار سیکورٹی سے متعلق آپریشن میں حصہ لے رہے ہیں۔ باقی اہلکار افغان سیکورٹی فورسز ...

امریکا کا افغانستان میں فوج کو محدود کرنے پر غور