وجود

... loading ...

وجود
وجود
ashaar

امریکی صدر کا ایشیائی ممالک کاپہلا دورہ

جمعه 10 نومبر 2017 امریکی صدر کا ایشیائی ممالک کاپہلا دورہ

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اپنے دورِ صدارت کے پہلے ایشیائی دورے کا آغاز کردیاہے۔ جہاں وہ جاپان سے ہوتے ہوئے جنوبی کوریا، چین، ویتنام اور فلپائن جائیں گے۔تجارتی پالیسیوں سے لے کر صدر ٹرمپ کے طرز عمل اور رویے کو مد نظر رکھتے خیال ہے کہ یہ دورہ مختلف نوعیت کی مشکلات پیش کرے گا جس کے بارے میں چند چیدہ چیدہ معلومات اور اہم معاملات جو اس دورے میں زیر بحث آئیں گے وہ درج ذیل پیش ہیں۔صدر ٹرمپ اپنے دورے کا آغاز امریکا کے ایشیا میں اہم ترین اتحادی جاپان اور جنوبی کوریا سے کریں گے لیکن توقع ہے کہ ان دونوں ممالک میں ان کی گفتگو کا محور شمالی کوریا ہوگا۔
شمالی کوریا نے حالیہ دنوں میں جاپان کے اوپر سے طویل فاصلے پر وار کرنے والے دو میزائل کے تجربے کیے ہیں اور اس کے علاوہ انھوں نے اپنا چھٹا اور سب سے بڑا جوہری تجربہ بھی کیا ہے۔ سخت معاشی پابندیوں کے باوجود شمالی کوریا کہ رہنما کم جونگ ان نے ہتھیاروں کی تیاری روکنے میں کوئی دلچسپی نہیں دکھائی ہے۔چند ماہرین نے یہ سوال بھی اٹھایا ہے کہ آیا صدر ٹرمپ کے دورے کو دیکھتے ہوئے شمالی کوریا کے رہنما کوئی انتہائی قدم نہ اٹھائیں۔لیکن اگر صدر ٹرمپ مختلف رہنماؤں سے ملاقات میں صرف شمالی کوریا کے مسئلے پر بات کریں گے تو یہ ممکن نظر نہیں آتا کہ وہ کسی اتفاق رائے پر پہنچیں۔
اس حوالے سے صدر ٹرمپ کے دورے کے چند ضروری سوال یہ ہیں؟۔
صدر ٹرمپ کے دورہ جاپان اور جنوبی کوریا میں توقع ہے کہ ان کی گفتگو کا محور شمالی کوریا اور اس کے رہنما کم جونگ ان ہوں گے۔ شمالی کوریا سے ہونے والے خطرے کے باعث جاپانی شہری جوہری حملے سے بچاؤ کے لیے ہنگامی کارروائیوں کی مشق کر رہے ہیں اور اس حوالے سے جاپانی حکومت یہ جاننا چاہے گی کہ صدر ٹرمپ ان کو حوصلہ دینے کے لیے کیا کریں گے۔ شمالی کوریا کا قریبی ترین پڑوسی ملک جنوبی کوریا بھی صدر ٹرمپ سے یہی جاننا چاہے گا۔ دوسری جانب یہ سوال بھی پیدا ہوتا ہے کہ کیا صدر ٹرمپ اس دورے میں شمالی کوریا کے اتنے نزدیک ہوتے ہوئے بھی ان کے بارے میں کوئی اشتعال انگیز ٹویٹ کریں گے یا نہیں۔یاد رہے کہ حال ہی میں صدر ٹرمپ نے شمالی کوریا کے رہنما کو ٹوئٹر کے ذریعے دھمکی دی تھی اور بہتر رہے گا کہ اگر وہ افہام و تفہیم سے کام لیتے ہوئے بات چیت کے دروازے بند نہ کریں۔
یہاں یہ بھی سوال کیاجارہاہے کہ صدر ٹرمپ انٹرنیٹ پر وائرل ہو جانے والے پین پائن ایپل گانے کے بارے میں کیا ہیں گے؟ ان کی ٹوکیو میں اس گانے کے خالق پیکو ٹارو سے ملاقت متوقع ہے۔ صدر ٹرمپ کے بد سلیقہ مصافحہ کا کیا ہوگا؟ یاد رہے کہ صدر ٹرمپ اور جاپانی وزیر اعظم شنزو آبے کے تعلقات کافی اچھے لیکن جاپانی وزیر اعظم نے جب امریکا کا دورہ کیا تھا تو ان کا صدر ٹرمپ کے ساتھ 19 سیکنڈ طویل مصافحہ کافی مشہور ہوا تھا۔
پروگرام کے مطابق صدر ٹرمپ کے اس دورہ ایشیا میں ان کااگلا ا سٹاپ: بیجنگ ہوگا۔چین شمالی کوریا کا مرکزی اتحادی اور اصل معاشی مدد فراہم کرنے والا ساتھی ہے اور توقع کی جا رہی ہے کہ صدر ٹرمپ چین سے شمالی کوریا کے خلاف پابندیاں جاری رکھنے کے بارے میں گفتگو کریں گے۔لیکن 19ویں کمیونسٹ پارٹی کانگریس کے اجلاس میں متفقہ طور پر چین کے کرتا دھرتا منتخب ہونے والے چینی رہنما شی جن پنگ شاید صدر ٹرمپ کی درخواست ماننے پر مجبور نہ ہوں۔ دورے کے اس مرحلے میں سوال اٹھتا ہے کہ کیا صدر ٹرمپ چین پر امریکی عسکری غلبے کا اہمیت واضح کریں گے یا نہیں؟ کیا صدر ٹرمپ چین سے تجارت کے معاملے پر سخت موقف اپنائیں گے یا نہیں؟ واضح رہے کہ صدر ٹرمپ نے ماضی میں چین کی تجارتی پالیسیوں پر تنقید کی ہے اور ان پر امریکی ملازمتیں چوری کرنے کا الزام لگایا ہے تو سوال پیدا ہوتا ہے کہ وہ اس بارے میں کیا کریں گے؟۔ چینی سوشل میڈیا اپنے وائرل ہو جانے والے میمز (خاکوں) کے لیے مشہور ہے اور دیکھنا ہوگا کہ وہ صدر ٹرمپ کی ملاقات پر کیا کارنامہ انجام دیتے ہیں۔
صدر ٹرمپ کے ایشیا کے دورے کے حوالے سے جو شیڈول سامنے آیاہے اس کے مطابق ہو5نومبر کوجاپان کے دورے کاآغازِ کریں گے (جوتادم تحریرہوچاہے ) ،7 نومبر کو وہ جنوبی کوریا پہنچیں گے،اور8نومبر کو چین پہنچیں گے۔چین سے ڈونلڈ ٹرمپ 10 نومبر کوویتنام اور12 نومبر کوفلپائن جائیں گے،تجزیہ نگاروں کاکہنا ہے کہ جب تک صدر ٹرمپ اپنے دورے کے آخری مرحلے میں ویتنام اور فلپائن جائیں گے اس وقت تک یہ واضح ہو چکا ہوگا کہ امریکی کی ایشیا میں کیا پوزیشن ہے۔ اس دورے کے دوران مختلف رہنمائوں کے ساتھ مذاکرات میںتجارت پر امریکی موقف اس بات کی درست عکاسی کر سکے گا۔ امریکی صدر نے اپنے انتخابی مہم سے ‘سب سے پہلے امریکا’ کا نعرہ بلند کیا تھا لیکن ان کے غیر ملکی تجارتی ساتھی ممالک اس سے متفق نہیں ہوں گے۔ساتھ ساتھ صدر ٹرمپ کے بحرالکاہل کے تجارتی معاہدے کی رکنیت چھوڑنے کے فیصلے پر امریکی اتحادی بھی مایوس ہوئے تھے۔اس کے علاوہ جب صدر ٹرمپ فلپائن کے صدر دوتیرتے سے ملیں گے تو کیا ہوگا؟ یہ دونوں بے لاگ گفتگو کرنے کے لیے مشہور ہیں تو توقع ہے کہ ان کی ملاقات بھی کافی دلچسپ رہے گی۔لیکن تجارتی پالیسیوں کے علاوہ صدر ٹرمپ کے دورے میں مزید اہم سوال یہ بھی ہے کہ دونوں ویتنام اور فلپائن میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں ہوتی رہی ہیں تو کیا وہ انسانی حقوق کے بارے میں بات کریں گے؟ اور اگر وہ ایسا کرنے سے گریز کریں گے تو امریکا اور دنیا کے دوسرے علاقوں میںحقوق انسانی کے تحفظ کرنے والی تنظیموں اور کارکنوں کو کیا جواب دینگے ۔
امریکا کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اپنے دورے کے آغاز میں ہوائی میں مختصر قیام کیا جہاں انھیں امریکی پیسیفک کمانڈ کی طرف سے حساس بریفنگ دی گئی۔صدر ٹرمپ پیسیفک کمانڈ کے ہیڈ کوارٹر میں میرین کور کی تنصیب میں بھی گئے اور وہاں بحرالکاہل میں امریکا کی سب سے بڑی متحدہ لڑاکا کمانڈ کے سربراہ ایڈمرل ہیری ہیرس سے بات کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ وہ ان کی کمانڈ میں موجود لوگوں کو سراہتے ہیں۔صدر کو پرل ہاربر پر یو ایس ایس ایریزونا کے مارے جانے والے اہلکاروں کی یادگار پر پھول چڑھانے سے قبل حساس بریفنگ بھی دی گئی اور اسے خفیہ رکھا گیا۔پرل ہاربر پر سات دسمبر 1941 کو دوسری جنگ عظیم کے دوران جاپانیوں کے حملے میں یہاں امریکی بحری جہاز ڈوب گیا تھا اور درجنوں اہلکار ہلاک ہو گئے تھے۔اپنے صدارتی طیارے ‘ایئرفورس ون’ پر بات کرتے ہوئے ٹرمپ کا کہنا تھا کہ وہ اپنے اس بہت اہم دورے کے اختتام پر ہوائی میں ایک اور دن گزارنا چاہتے تھے لیکن فلپائن میں ہونے والی مشرقی ایشیائی کانفرنس میں زیادہ وقت گزارنے کے لیے انھوں نے یہ ارادہ ترک کر دیا۔


متعلقہ خبریں


مقبوضہ کشمیر میں آبادی کا تناسب بدلنے کی بھارتی سازش، پاکستان کی شدید مذمت وجود - جمعرات 02 اپریل 2020

ترجمان دفتر خاجہ عائشہ فاروقی نے کہا ہے کہ پاکستان مقبوضہ جموں وکشمیر میں آبادی کا تناسب تبدیل کرنے کی بھارتی حکومت کی تازہ ترین غیرقانونی کوششوں کی شدید مذمت کرتے ہوئے انہیں مسترد کرتا ہے ۔ جموں وکشمیر تشکیل نو آرڈر2020ایک اور غیرقانونی بھارتی اقدام ہے جس کا مقصد بھارت کے زیرقبضہ جموں وکشمیر کے ڈومیسائل قوانین کو تبدیل کرنا ہے ۔ یہ بین الاقوامی قانون اور چوتھے جینیوا کنونشن کی صریحا خلاف ورزی ہے ۔ انہوںنے جاری بیان میں کہا کہ تازہ ترین بھارتی قدام بھی 5 اگست 2019کے بھارت کے ...

مقبوضہ کشمیر میں آبادی کا تناسب بدلنے کی بھارتی سازش، پاکستان کی شدید مذمت

کورونا وائرس کے تیزی سے پھیلا ئوپر تشویش ہے ، ڈبلیوایچ او وجود - جمعرات 02 اپریل 2020

صحت سے متعلق اقوام متحدہ کے عالمی ادارے ڈبلیو ایچ او کے ڈائریکٹر جنرل تیدروس ادھانوم نے کورونا وائرس کے تیزی سے پھیلا ئو پر تشویش کا اظہار کیا اور کہا کہ کورونا سے نمٹنے کیلئے سب کو ملکر کوشش کرنا ہوگی۔ڈبلیو ایچ او کے ڈی جی تیدروس ادھا نوم نے جنیوا میں پریس بریفنگ کے دوران کہاکہ پچھلے ہفتے کورونا کے پھیلا میں تیزی دیکھی گئی جو ایک تشویشناک صورتحال ہے ۔اس مہلک وبا کو فوری طور پر سب کو مل کر روکنے کی ضرورت ہے بصورت دیگر بڑا جانی نقصان ہوگا۔ انہوں نے کہاکہ مہلک وبا کے باعث ایک ہ...

کورونا وائرس کے تیزی سے پھیلا ئوپر تشویش ہے ، ڈبلیوایچ او

کورونا وائرس، چین سے امدادی سامان لے کر طیارہ پاکستان پہنچ گیا وجود - جمعرات 02 اپریل 2020

کا خصوصی طیارہ چین سے امدادی سامان لے کر پاکستان پہنچ گیا۔پی آئی اے کی پرواز پی کے 8552 چین سے کورونا وائرس سے متعلق امدادی سامان لے کر اسلام آباد پہنچا۔ جہاز میں 20 کنٹینرز پر مشتمل امدادی سامان لایا گیا جس میں ٹیسٹنگ کٹس، گلوز اور ماسک شامل ہیں۔ترجمان پی آئی اے کے مطابق کسٹمز کلیئرنس کے بعد سامان نیشنل ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی(این ڈی ایم اے )حکام کے حوالے کر دیا گیا۔واضح رہے کہ پی آئی اے کا خصوصی طیارہ گذشتہ روز امدادی سامان لینے چین گیا تھا۔

کورونا وائرس، چین سے امدادی سامان لے کر طیارہ پاکستان پہنچ گیا

مقبوضہ جموں و کشمیر،سابق وزرا ئے اعلیٰ کی مراعات ختم وجود - بدھ 01 اپریل 2020

مقبوضہ جموں و کشمیر کے سابق وزرا اعلی کو حاصل خصوصی مراعات والے قانون کو مرکزی حکومت نے جموں و کشمیر تنظیم نو قانون 2019 کے تحت اختیارات کے ذریعے منسوخ کر دیا ہے ۔ بھارتی میڈیا کے مطابق مرکزی حکومت نے سٹیٹ لیجسلیٹر ممبرز پنشن ایکٹ 1984 کے سیکشن 3 کو منسوخ کر دیا ہے جس سے اب سابق وزرا اعلی کو ملنے والی مراعات حاصل نہیں ہوں گی۔اس سیکشن کے تحت سابق وزرا اعلی کو بغیر کرایہ سرکاری رہائش گاہ، مفت ٹیلیفون سروس، مفت بجلی، گاڑی، پٹرول اور طبی سہولیات ملتی تھیں۔ اس کے علاوہ ان کو سرکار...

مقبوضہ جموں و کشمیر،سابق وزرا ئے اعلیٰ کی مراعات ختم

طیارہ بردار امریکی بحری بیڑے پر کورونا کی وبا تیزی سے پھیلنے لگی وجود - بدھ 01 اپریل 2020

طیارہ بردار امریکی بحری بیڑے پر کورونا کی وبا تیزی سے پھیلنے لگی ،کورونا وائرس نے جہاں دنیا کے جدید ترین ممالک کو گھٹنے ٹیکنے پر مجبور کر دیا ہے وہیں سپرپاور امریکا کی فوج بھی اس وائرس کے سامنے بے بس نظر آتی ہے ۔کورونا وائرس کے باعث اب تک دنیا میں سب سے زیادہ ایک لاکھ 86 ہزار سے زائد کیسز امریکا سے سامنے آ چکے ہیں جب کہ امریکا میں اموات بھی چین اور اسپین سے زیادہ ہو گئی ہیں جہاں اب تک 4 ہزار سے زائد لوگ زندگی کی بازی ہار چکے ہیں۔امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ملک میں وبا سے دو لاکھ...

طیارہ بردار امریکی بحری بیڑے پر کورونا کی وبا تیزی سے پھیلنے لگی

امریکا میں کورونا سے دو پاکستانی جاں بحق وجود - بدھ 01 اپریل 2020

امریکی ریاست نیویارک میں کورونا وائرس میں مبتلا دو پاکستانی جان کی بازی ہار گئے ۔ یک میڈیا رپورٹ کے مطابق انتقال ہونے والے سید عطاالرحمان کورونا وائرس سے متاثر ہو گئے تھے جن کا تعلق کراچی سے تھا۔ان کے علاوہ کورونا سے جنگ لڑتے ہوئے پاکستانی امریکن روحیل خان بھی نیویارک میں دم توڑ گئے ۔ ریاست ٹیکساس میں بھی ایک پاکستانی ڈاکٹر اور تعمیراتی شعبے سے تعلق رکھنے والے شخص میں بھی کورونا کی علامات پائی گئی ہیں اور دونوں کا تعلق بھی کراچی سے ہے ۔واضح رہے کہ امریکی ریاست نیو یارک کورونا...

امریکا میں کورونا سے دو پاکستانی جاں بحق

کورونا وائرس سے دنیا بھر میں طبی آلات کی قلت ،طبی عملہ بھی کم پڑ گیا وجود - بدھ 01 اپریل 2020

کورونا وائرس کی وجہ سے دنیا بھر میں جہاں طبی آلات کی قلت پیدا ہوگئی ہے ، وہیں طبی عملہ بھی کم پڑ گیا ہے جب کہ ہسپتالوں سمیت کئی دیگر جگہوں کو عارضی آئسولیشن سینٹرز اور قرنطینہ میں تبدیل کردیا گیا ہے لیکن اس باوجود کئی ممالک میں کورونا تیزی سے پھیل رہا ہے ۔عام ہسپتالوں میں قرنطینہ سینٹرز بنانے اور وہاں پر دیگر مریضوں کے علاوہ زیادہ تر کورونا وائرس کے مریضوں کا علاج کرنے سمیت دنیا بھر میں دیگر بیماریوں میں مبتلا مریض پریشانیوں کا شکار ہیں، یہاں تک کہ امریکا اور برطانیہ جیسے مما...

کورونا وائرس سے دنیا بھر میں طبی آلات کی قلت ،طبی عملہ بھی کم پڑ گیا

کورونا وائرس 202 ممالک تک پھیل گیا ،ہلاکتیں 42 ہزار سے تجاوز وجود - بدھ 01 اپریل 2020

کورونا وائرس نے 202ممالک میں پنجے گاڑ لئے ، دنیا بھر میں مرنے والوں کی تعداد 42 ہزار 156 ہو گئی ۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق کورونا وائرس کی مہلک وبا نے 202ممالک کو اپنی لپیٹ میں لے لیا ، اٹلی میں صورتحال سب سے خوفناک ہے جہاں 12448 افراد ہلاک اور 1 لاکھ 5 ہزار 7 سو92 افراد کورونا سے متاثر ہو چکے ہیں۔اسپین میں کورونا سے 8 ہزار چار سو چونسٹھ افراد ہلاک ہو گئے ۔ چین میں کرونا سے مرنے والوں کی تعداد 3 ہزار تین سو پانچ ہے ۔ جرمنی میں کورونا سے سات سو پچھتر افراد ہلاک، فرانس میں...

کورونا وائرس 202 ممالک تک پھیل گیا ،ہلاکتیں 42 ہزار سے تجاوز

اقوام متحدہ نے کورونا وائرس جنگ عظیم دوئم کے بعد بدترین بحران قرار دیدیا وجود - بدھ 01 اپریل 2020

اقوام متحدہ نے کورونا وائرس کو جنگ عظیم دوئم کے بعد بدترین بحران قرار دے دیا۔ترجمان اقوام متحدہ نے کہا کہ کورونا وائرس سے دنیا کے ہر ملک کو عدم استحکام، بدامنی اور تنازعات کھڑے ہونے کا خطرہ ہے ۔انہوں نے بتایا کہ کورونا کے ثرات سے دنیا میں ڈھائی کروڑ افراد بیروزگار ہو جائیں گے ۔ا نہوں نے کہا کہ ترقی پذیر ممالک غریب ملکوں کی مدد کریں ورنہ وبا جنگل کی آگ کی طرح پھیلنے کا خدشہ ہے۔

اقوام متحدہ نے کورونا وائرس جنگ عظیم دوئم کے بعد بدترین بحران قرار دیدیا

کورونا وائرس، ایتھوپیا میں عام انتخابات ملتوی وجود - بدھ 01 اپریل 2020

افریقی ملک ایتھوپیا میں کورونا وائرس کی وبا پھیلنے کی وجہ سے عام انتخابات ملتوی کر دیے گئے ۔ایتھوپیا کے الیکشن کمیشن کی جانب سے جاری ایک بیان کے مطابق ملک میں رواں سال اگست میں ہونے والے انتخابات کا انعقاد کورونا وائرس کی وبا پھیلنے سے پیدا ہونے والے حالات میں ممکن نہیں رہا،عام انتخابات کے انعقاد کے لئے نئی تاریخ کا اعلان بعد میں کیا جائے گا۔ایتھوپیا میں نوبل امن انعام یافتہ ابہی احمد وزیر اعظم ہیں جو ایکبار پھر وزیر اعظم بننے کے امیدوار ہیں۔ایتھوپین الیکشن کمیشن کے مطابق انت...

کورونا وائرس، ایتھوپیا میں عام انتخابات ملتوی

بھارت میں ریاستی مشینری کورونا وباسے بڑا خطرہ بن چکی ، ایمنسٹی انٹرنیشنل ، ہیومن رائٹس واچ وجود - پیر 30 مارچ 2020

انسانی حقوق کی بین الاقوامی تنظیموں ایمنسٹی انٹرنیشنل اور ہیومن رائٹس واچ نے بھارت پر کورونا وائرس کے پیش نظر لاک ڈاؤن کے دوران ضبط و تحمل سے کام لینے پر زوردیتے ہوئے کہاہے کہ ریاستی مشینری کورونا وائر کی وباسے کہیں بڑا خطرہ بن چکی ہے ۔ کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق ایمنسٹی انٹرنیشنل انڈیا کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر اویناش کمار نے ایک بیان میں کہا ہے کہ لاک ڈاؤن سے لاکھوں افراد پھنسے ہوئے ہیں جو خوراک اور پانی کی تلاش میں جدوجہد کر رہے ہیں۔انہوںنے کہاکہ بدقسمتی سے ان افراد کیلئے ریاستی م...

بھارت میں ریاستی مشینری کورونا وباسے بڑا خطرہ بن چکی ، ایمنسٹی انٹرنیشنل ، ہیومن رائٹس واچ

کرونا وائرس کی ماسکو پر یلغار، دارالحکومت سے لوگوں کی نقل مکانی وجود - پیر 30 مارچ 2020

روس کے دارالحکومت ماسکو میں کرونا وائرس نے ایک نیا حملہ کیا ہے جس کے بعد حکومت کی طرف سے گھروں میں رہنے کے احکامات کے برخلاف لوگوں کی بڑی تعداد کو وہاں سے نکلتے دیکھا گیا ہے ۔میڈیارپورٹس کے مطابق دارالحکومت ماسکو کے میئر سیرگی سوبیانین نے ایک بیان میں خبردار کیا کہ کرونا کی وبا ایک نئے مرحلے میں داخل ہوگئی ہے ۔ دارالحکومت میں کرونا کے متاثرین کی تعداد ایک ہزار سے تجاوز کرگئی ہے ۔ حکومت کی طرف سے شہریوں سے گھروں کے اندر رہنے کو کہا گیا مگر اس کے باوجود بڑی تعداد میں لوگ پارکوں...

کرونا وائرس کی ماسکو پر یلغار، دارالحکومت سے لوگوں کی نقل مکانی