وجود

... loading ...

وجود
وجود
ashaar

امریکی صدر کا ایشیائی ممالک کاپہلا دورہ

جمعه 10 نومبر 2017 امریکی صدر کا ایشیائی ممالک کاپہلا دورہ

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اپنے دورِ صدارت کے پہلے ایشیائی دورے کا آغاز کردیاہے۔ جہاں وہ جاپان سے ہوتے ہوئے جنوبی کوریا، چین، ویتنام اور فلپائن جائیں گے۔تجارتی پالیسیوں سے لے کر صدر ٹرمپ کے طرز عمل اور رویے کو مد نظر رکھتے خیال ہے کہ یہ دورہ مختلف نوعیت کی مشکلات پیش کرے گا جس کے بارے میں چند چیدہ چیدہ معلومات اور اہم معاملات جو اس دورے میں زیر بحث آئیں گے وہ درج ذیل پیش ہیں۔صدر ٹرمپ اپنے دورے کا آغاز امریکا کے ایشیا میں اہم ترین اتحادی جاپان اور جنوبی کوریا سے کریں گے لیکن توقع ہے کہ ان دونوں ممالک میں ان کی گفتگو کا محور شمالی کوریا ہوگا۔
شمالی کوریا نے حالیہ دنوں میں جاپان کے اوپر سے طویل فاصلے پر وار کرنے والے دو میزائل کے تجربے کیے ہیں اور اس کے علاوہ انھوں نے اپنا چھٹا اور سب سے بڑا جوہری تجربہ بھی کیا ہے۔ سخت معاشی پابندیوں کے باوجود شمالی کوریا کہ رہنما کم جونگ ان نے ہتھیاروں کی تیاری روکنے میں کوئی دلچسپی نہیں دکھائی ہے۔چند ماہرین نے یہ سوال بھی اٹھایا ہے کہ آیا صدر ٹرمپ کے دورے کو دیکھتے ہوئے شمالی کوریا کے رہنما کوئی انتہائی قدم نہ اٹھائیں۔لیکن اگر صدر ٹرمپ مختلف رہنماؤں سے ملاقات میں صرف شمالی کوریا کے مسئلے پر بات کریں گے تو یہ ممکن نظر نہیں آتا کہ وہ کسی اتفاق رائے پر پہنچیں۔
اس حوالے سے صدر ٹرمپ کے دورے کے چند ضروری سوال یہ ہیں؟۔
صدر ٹرمپ کے دورہ جاپان اور جنوبی کوریا میں توقع ہے کہ ان کی گفتگو کا محور شمالی کوریا اور اس کے رہنما کم جونگ ان ہوں گے۔ شمالی کوریا سے ہونے والے خطرے کے باعث جاپانی شہری جوہری حملے سے بچاؤ کے لیے ہنگامی کارروائیوں کی مشق کر رہے ہیں اور اس حوالے سے جاپانی حکومت یہ جاننا چاہے گی کہ صدر ٹرمپ ان کو حوصلہ دینے کے لیے کیا کریں گے۔ شمالی کوریا کا قریبی ترین پڑوسی ملک جنوبی کوریا بھی صدر ٹرمپ سے یہی جاننا چاہے گا۔ دوسری جانب یہ سوال بھی پیدا ہوتا ہے کہ کیا صدر ٹرمپ اس دورے میں شمالی کوریا کے اتنے نزدیک ہوتے ہوئے بھی ان کے بارے میں کوئی اشتعال انگیز ٹویٹ کریں گے یا نہیں۔یاد رہے کہ حال ہی میں صدر ٹرمپ نے شمالی کوریا کے رہنما کو ٹوئٹر کے ذریعے دھمکی دی تھی اور بہتر رہے گا کہ اگر وہ افہام و تفہیم سے کام لیتے ہوئے بات چیت کے دروازے بند نہ کریں۔
یہاں یہ بھی سوال کیاجارہاہے کہ صدر ٹرمپ انٹرنیٹ پر وائرل ہو جانے والے پین پائن ایپل گانے کے بارے میں کیا ہیں گے؟ ان کی ٹوکیو میں اس گانے کے خالق پیکو ٹارو سے ملاقت متوقع ہے۔ صدر ٹرمپ کے بد سلیقہ مصافحہ کا کیا ہوگا؟ یاد رہے کہ صدر ٹرمپ اور جاپانی وزیر اعظم شنزو آبے کے تعلقات کافی اچھے لیکن جاپانی وزیر اعظم نے جب امریکا کا دورہ کیا تھا تو ان کا صدر ٹرمپ کے ساتھ 19 سیکنڈ طویل مصافحہ کافی مشہور ہوا تھا۔
پروگرام کے مطابق صدر ٹرمپ کے اس دورہ ایشیا میں ان کااگلا ا سٹاپ: بیجنگ ہوگا۔چین شمالی کوریا کا مرکزی اتحادی اور اصل معاشی مدد فراہم کرنے والا ساتھی ہے اور توقع کی جا رہی ہے کہ صدر ٹرمپ چین سے شمالی کوریا کے خلاف پابندیاں جاری رکھنے کے بارے میں گفتگو کریں گے۔لیکن 19ویں کمیونسٹ پارٹی کانگریس کے اجلاس میں متفقہ طور پر چین کے کرتا دھرتا منتخب ہونے والے چینی رہنما شی جن پنگ شاید صدر ٹرمپ کی درخواست ماننے پر مجبور نہ ہوں۔ دورے کے اس مرحلے میں سوال اٹھتا ہے کہ کیا صدر ٹرمپ چین پر امریکی عسکری غلبے کا اہمیت واضح کریں گے یا نہیں؟ کیا صدر ٹرمپ چین سے تجارت کے معاملے پر سخت موقف اپنائیں گے یا نہیں؟ واضح رہے کہ صدر ٹرمپ نے ماضی میں چین کی تجارتی پالیسیوں پر تنقید کی ہے اور ان پر امریکی ملازمتیں چوری کرنے کا الزام لگایا ہے تو سوال پیدا ہوتا ہے کہ وہ اس بارے میں کیا کریں گے؟۔ چینی سوشل میڈیا اپنے وائرل ہو جانے والے میمز (خاکوں) کے لیے مشہور ہے اور دیکھنا ہوگا کہ وہ صدر ٹرمپ کی ملاقات پر کیا کارنامہ انجام دیتے ہیں۔
صدر ٹرمپ کے ایشیا کے دورے کے حوالے سے جو شیڈول سامنے آیاہے اس کے مطابق ہو5نومبر کوجاپان کے دورے کاآغازِ کریں گے (جوتادم تحریرہوچاہے ) ،7 نومبر کو وہ جنوبی کوریا پہنچیں گے،اور8نومبر کو چین پہنچیں گے۔چین سے ڈونلڈ ٹرمپ 10 نومبر کوویتنام اور12 نومبر کوفلپائن جائیں گے،تجزیہ نگاروں کاکہنا ہے کہ جب تک صدر ٹرمپ اپنے دورے کے آخری مرحلے میں ویتنام اور فلپائن جائیں گے اس وقت تک یہ واضح ہو چکا ہوگا کہ امریکی کی ایشیا میں کیا پوزیشن ہے۔ اس دورے کے دوران مختلف رہنمائوں کے ساتھ مذاکرات میںتجارت پر امریکی موقف اس بات کی درست عکاسی کر سکے گا۔ امریکی صدر نے اپنے انتخابی مہم سے ‘سب سے پہلے امریکا’ کا نعرہ بلند کیا تھا لیکن ان کے غیر ملکی تجارتی ساتھی ممالک اس سے متفق نہیں ہوں گے۔ساتھ ساتھ صدر ٹرمپ کے بحرالکاہل کے تجارتی معاہدے کی رکنیت چھوڑنے کے فیصلے پر امریکی اتحادی بھی مایوس ہوئے تھے۔اس کے علاوہ جب صدر ٹرمپ فلپائن کے صدر دوتیرتے سے ملیں گے تو کیا ہوگا؟ یہ دونوں بے لاگ گفتگو کرنے کے لیے مشہور ہیں تو توقع ہے کہ ان کی ملاقات بھی کافی دلچسپ رہے گی۔لیکن تجارتی پالیسیوں کے علاوہ صدر ٹرمپ کے دورے میں مزید اہم سوال یہ بھی ہے کہ دونوں ویتنام اور فلپائن میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں ہوتی رہی ہیں تو کیا وہ انسانی حقوق کے بارے میں بات کریں گے؟ اور اگر وہ ایسا کرنے سے گریز کریں گے تو امریکا اور دنیا کے دوسرے علاقوں میںحقوق انسانی کے تحفظ کرنے والی تنظیموں اور کارکنوں کو کیا جواب دینگے ۔
امریکا کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اپنے دورے کے آغاز میں ہوائی میں مختصر قیام کیا جہاں انھیں امریکی پیسیفک کمانڈ کی طرف سے حساس بریفنگ دی گئی۔صدر ٹرمپ پیسیفک کمانڈ کے ہیڈ کوارٹر میں میرین کور کی تنصیب میں بھی گئے اور وہاں بحرالکاہل میں امریکا کی سب سے بڑی متحدہ لڑاکا کمانڈ کے سربراہ ایڈمرل ہیری ہیرس سے بات کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ وہ ان کی کمانڈ میں موجود لوگوں کو سراہتے ہیں۔صدر کو پرل ہاربر پر یو ایس ایس ایریزونا کے مارے جانے والے اہلکاروں کی یادگار پر پھول چڑھانے سے قبل حساس بریفنگ بھی دی گئی اور اسے خفیہ رکھا گیا۔پرل ہاربر پر سات دسمبر 1941 کو دوسری جنگ عظیم کے دوران جاپانیوں کے حملے میں یہاں امریکی بحری جہاز ڈوب گیا تھا اور درجنوں اہلکار ہلاک ہو گئے تھے۔اپنے صدارتی طیارے ‘ایئرفورس ون’ پر بات کرتے ہوئے ٹرمپ کا کہنا تھا کہ وہ اپنے اس بہت اہم دورے کے اختتام پر ہوائی میں ایک اور دن گزارنا چاہتے تھے لیکن فلپائن میں ہونے والی مشرقی ایشیائی کانفرنس میں زیادہ وقت گزارنے کے لیے انھوں نے یہ ارادہ ترک کر دیا۔


متعلقہ خبریں


تہران، جنرل قاسم سلیمانی کا قریبی کمانڈر قاتلانہ حملے میں قتل وجود - جمعرات 23 جنوری 2020

ایران کی پیراملٹری فوج بسیج کے کمانڈرعبدالحسین مجدمی کو نامعلوم افراد نے فائرنگ کر کے ہلاک کر دیا ۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق کمانڈرعبدالحسین مجدمی کوصوبہ خوزستان کے شہردرخوین میں گھرکے سامنے نقاب پوش افراد نے نشانہ بنایا۔ پیراملٹری فوج کے سربراہ عبدالحسین مجدمی امریکی ڈرون حملے میں ہلاک ہونے والے جنرل قاسم سلیمانی کے ساتھی تھے ۔ موٹرسائیکل پر سوار دو بندوق برداروں نے حملہ کیا، حملہ آوروں کے چہرے ڈھکے ہوئے تھے اور چار گولیاں چلائی گئی ہیں۔ معاملے کی تفتیش جاری ہے تاہم اس ...

تہران، جنرل قاسم سلیمانی کا قریبی کمانڈر قاتلانہ حملے میں قتل

چین ، کرونا وائرس بے قابو، ہلاکتیں 17ہو گئیں وجود - جمعرات 23 جنوری 2020

چین کے شہر ووہان سے پھیلنے والا پراسرار کورونا وائرس اب ملک بھر کے دیگر شہروں میں بھی پھیلنے لگا ، چین کے صوبے ہوبائی کے دارلحکومت ووہان میں کورونا وائرس سے 17 افراد ہلاک ہو گئے ہیں جبکہ وائرس سے متاثر ہونے والوں کی تعداد 547 تک پہنچ گئی ۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق چین کے صحت حکام نے وائرس کے پھیلا سے بچنے کے لئے 1 کروڑ افراد پر مشتمل شہر ووہان کو مکمل طور سیل کرنے کی کوششیں شروع کر دی ہیں۔ چین میں ٹرینوں اور بس سروسز کا نظام معطل ہونے کے باعث قمری سال کی تعطیلات گزارن...

چین ، کرونا وائرس بے قابو، ہلاکتیں 17ہو گئیں

فرانسیسی صدر چرچ کے باہر اسرائیلی اہلکاروں کو دیکھ کر برہم وجود - جمعرات 23 جنوری 2020

فرانسیسی صدر ایمانویل میکرون چرچ کے دورے کے دوران فرانسیسی اہلکاروں کے ساتھ اسرائیلی سکیورٹی اہلکاروں کو دیکھ کربرہم ہو گئے ۔ ایمانویل میکرون نے انگریزی میں ڈانٹتے ہوئے اسرائیلی سکیورٹی اہلکار سے کہا کہ باہر جائوجو تم نے میرے سامنے کیا وہ بالکل پسند نہیں آیا، سب کو رولز معلوم ہیں ناں؟ یہ قواعد صدیوں سے ہیں، میرے ساتھ فرانسیسی اہلکار ہی رہیں گے ، قانون کا احترام کریں ۔واضح رہے کہ مقبوضہ بیت المقدس کا چرچ آف سینٹ این فرانس کی ملکیت ہے ، 1967 ء میں یہاں اسرائیلی قبضے کو بھی فران...

فرانسیسی صدر چرچ کے باہر اسرائیلی اہلکاروں کو دیکھ کر برہم

امریکا ، پولیس کے نسل پرستانہ رویے کے خلاف احتجاجی مظاہرے وجود - بدھ 22 جنوری 2020

امریکا میں نسل پرستی کے خلاف جدوجہد کرنے والی مختلف تنظیموں کے سینکڑوں کارکنوں نے پورٹ لینڈ شہر میں مظاہرے کیے ۔ غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق امریکی پولیس کے نسل پرستانہ رویئے کے خلاف اس مظاہروں کی کال بلیک لائف میٹر اور نسل پرستی کے خلاف جدوجہد کرنے والی دوسری تنظیموں نے دی تھی۔ مظاہرے کے شرکا نے زمین پر لیٹ کر پولیس کے نسل پرستانہ تشدد کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے حکومت سے لازمی اقدامات کی اپیل کی۔امریکہ میں کرائے جانے والے رائے عامہ کے تازہ جائزوں کے مطابق 56 فی صد امریکی شہ...

امریکا ، پولیس کے نسل پرستانہ رویے کے خلاف احتجاجی مظاہرے

مکیش امبانی مسلسل 12 ویں بار امیر ترین بھارتی قرار وجود - بدھ 22 جنوری 2020

بھارتی بزنس مین مکیش امبانی مسلسل 12 ویں مرتبہ بھارت کے امیر ترین شخص قرار پائے ، 2019 میں ان کی دولت 58.4 ارب ڈالر رہی۔ غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق بھارت کے 15 ارب پتی شخصیات کی مجموعی دولت 197.8 ارب ڈالر کے برابر ہے ۔ سالانہ رپورٹ کے مطابق 2019 میں متعدد بھارتی ارب پتی شخصیات کی دولت میں کمی ہوئی لیکن مکیش امبانی مسلسل 12 ویں مرتبہ بھارت کے امیر ترین شخص قرار پائے ۔15عشاریہ 3ارب ڈالر کے ساتھ بھارتی صنعت کار شیونادر دوسرے نمبر پر رہے ، جبکہ بھارت کے تیسرے امیر ترین شخص بی...

مکیش امبانی مسلسل 12 ویں بار امیر ترین بھارتی قرار

امریکا کی بزدلانہ کارروائی کا مردانہ وار جواب دیں گے ، ایران وجود - بدھ 22 جنوری 2020

ایران کی قدس فورس کے نئے سربراہ اسماعیل قانی نے امریکا کو مخاطب کرتے ہوئے کہا ہے کہ جنرل قاسم سلیمانی کو بزدلانہ حملے میں شہید کرنے والے امریکا پر مردانہ وار کارروائی کرکے جواب دیں گے ۔ غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق ایران کی قدس فورس کے سربراہ اسماعیل قانی نے کہا کہ امریکا نے بزدلوں کی طرح حملہ کرکے جنرل قاسم سلیمانی کو شہید کیا ہے جس کا ہم مردوں کی طرح بہادری سے جواب دیں گے ۔قدس فورس کے سربراہ نے کہا کہ ایران امریکا کی طرح پیچھے سے بزدلانہ وار نہیں کرتا بلکہ مردوں کی طرح سا...

امریکا کی بزدلانہ کارروائی کا مردانہ وار جواب دیں گے ، ایران

کورونا وائرس امریکا پہنچ گیا، پہلے متاثرہ شخص کی تصدیق وجود - بدھ 22 جنوری 2020

کورونا وائرس امریکا پہنچ گیا ، امریکی حکام کی جانب سے پہلے متاثرہ شخص کی تصدیق کی گئی ۔ غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق امریکی حکام کی جانب سے تصدیق کی گئی ہے کہ چائنا وائرس، یعنی کورونا وائرس سے متاثرہ ایک شخص کی تصدیق ہوئی ہے جو حال ہی میں چین کے سفر سے واپس آیا تھا۔امریکا کے سینٹر فار ڈیزیز کنٹرول (سی ڈی سی)کی جانب سے کہا گیا کہ چین میں دریافت ہونے والا وائرس امریکی شہر سیاٹل میں ایک ایسے شخص میں پایا گیا جو چین کے سفر سے واپس آیا تھا۔امریکہ میں پائے جانے والا مریض 30 کی دہ...

کورونا وائرس امریکا پہنچ گیا، پہلے متاثرہ شخص کی تصدیق

ٹرمپ عنقریب صدی کی ڈیل کے حوالے سے حتمی اعلان کرنے والے ہیں، امریکی عہدیدار وجود - منگل 21 جنوری 2020

  وائٹ ہائوس کے ایک عہدیدار نے کہا ہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کچھ دن میں مشرق وسطیٰ کے لیے اپنے مجوزہ امن منصوبے صدی کی ڈیل کے بارے میں حتمی اعلان کرنے کی تیاری کررہے ہیں۔ا نہوں نے غیرملکی خبررساں ادارے کو بتایا کہ صدی کی ڈیل کے حوالے سے صدرٹرمپ خود ہی کوئی فیصلہ کریں گے ۔اس فیصلے کے حوالے سے وقت ایک اہم عنصرہوگا کیونکہ اس معاملے میں تاخیرامریکی صدارتی انتخابات کی وجہ سے اس منصوبے کے مفاد میں نہیں ہوگی۔وائٹ ہائوس نے بحرین کے دارالحکومت منامہ میں امن سے خوشحالی کے نام...

ٹرمپ عنقریب صدی کی ڈیل کے حوالے سے حتمی اعلان کرنے والے ہیں، امریکی عہدیدار

چین میں فی کس جی ڈی پی 10 ہزار ڈالرسے تجاوز کرگئی وجود - منگل 21 جنوری 2020

چین کی قومی ترقی و اصلاحات کی کمیٹی کے ترجمان مینگ وے نے کہا ہے کہ 2019 میں چین میں فی کس جی ڈی پی دس ہزار امریکی ڈالر سے تجاوز کرگئی ہے ۔بیجنگ میں ایک پریس کانفرنس کے دوران انہوں نے کہا کہ اس سے چین کی مجموعی طاقت میں اضافے ، سماجی پیداواری صلاحیت کے فروغ اور عوامی زندگی کی بہتری کی عکاسی ہوتی ہے ۔یہ چین کے ہمہ گیر خوشحال معاشرے کی تعمیر کے راستے میں حاصل کردہ ایک اہم کامیابی ہے ۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ ترقی یافتہ ممالک میں فی کس جی ڈی پی تیس ہزار امریکی ڈالر سے زیادہ ہے ، ا...

چین میں فی کس جی ڈی پی 10 ہزار ڈالرسے تجاوز کرگئی

ایرانی سپریم لیڈر الفاظ کے چنائو میں احتیاط کریں، ٹرمپ وجود - اتوار 19 جنوری 2020

امریکی صدر ٹرمپ نے ایران کے سپریم لیڈر آیت اللہ خامنہ ای کو الفاظ کے چناومیں محتاط رہنے کی تنبیہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ امریکا اور یورپ کے بارے میں غلط باتوں سے پرہیز کریں۔سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے ایک پیغام میں انہوں نے کہا کہ ایران کی معیشت تباہ ہو رہی ہے ،وہاں لوگ مشکلات کا شکار ہیں۔انہوں نے کہا کہ ایرانی سپریم لیڈر آیت اللہ خامنہ ای الفاظ کے چنائو میں احتیاط کریں۔ واضح رہے کہ گذشتہ روز 8 سال بعد پہلی مرتبہ نماز جمعہ کی امامت کرتے ہوئے ایرانی سپریم لیڈر آیت الل...

ایرانی سپریم لیڈر الفاظ کے چنائو میں احتیاط کریں، ٹرمپ

جاپان، کوبے میں آنے والے شدید زلزلے کو 25 سال مکمل وجود - اتوار 19 جنوری 2020

جاپان کے مغربی علاقے کوبے اور اِردگرد کے علاقوں کو ہلا کر رکھ دینے والے تباہ کن زلزلے کو آئے 25 سال مکمل ہو گئے ہیں، اس زلزلے کے باعث 6 ہزار 4 سو 34 افراد ہلاک ہو گئے تھے ۔ غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق 17 جنوری 1995 کو آنے والا یہ زلزلہ گریٹ ہانشن اواجی زلزلہ کہلاتا ہے ، اس زلزلے سے کئی عمارتیں تباہ ہوئی تھیں اور کئی میں آگ لگ گئی تھی۔سب سے متاثرہ کوبے شہر کے ایک پارک میں ہلاک شدگان کی یاد میں بانس سے بنی لالٹینیں روشن کی گئیں۔

جاپان، کوبے میں آنے والے شدید زلزلے کو 25 سال مکمل

بانی اسرائیل کے بیٹے کی ریاست کے مجرمانہ پروگرام پر اظہار شرمندگی وجود - اتوار 19 جنوری 2020

اسرائیلی ریاست کے بانی کے بیٹے ''یعقوف شریٹ''نے صہیونی ریاست کے مجرمانہ پروگرام پر افسوس اور شرمندگی کا اظہار کیا ہے ۔ ان کا کہنا ہے کہ انہیں نہ صرف 1940 ء کی د ہائی میں جزیرہ نما النقب پر سمجھوتے پر افسوس ہے بلکہ وہ صہیونی ریاست کے پورے پروگرام پر شرمندہ ہیں۔ دیے گئے انٹرویو میں مسٹر یعقوف شریٹ نے کہا کہ اگرچہ ان کے آبائو اجداد نے ارض فلسطین میں اسرائیلی ریاست قائم کی۔ وہ اسرائیل کے بانی موشے شریٹ کا بیٹا ہونے کے باوجود صہیونی ریاست کے جرائم کی حمایت نہیں کرسکتے ۔ وہ اسرائیل...

بانی اسرائیل کے بیٹے کی ریاست کے مجرمانہ پروگرام پر اظہار شرمندگی