وجود

... loading ...

وجود
وجود
ashaar

امریکا نے روس اور چین کی تین اسلحہ ساز کمپنیوں پر پابندی لگادی

اتوار 06 ستمبر 2015 امریکا نے روس اور چین کی تین اسلحہ ساز کمپنیوں پر پابندی لگادی

US-Deptt-of-State

امریکا نے روس اور چین کی تین اسلحہ ساز کمپنیوں پر پابندی عائد کر دی ہے۔جس کی وجہ دونوں ممالک کی تین اسلحہ ساز کمپنیوں کی جانب سے ایران، شمالی کوریا اور شام کے ساتھ ہتھیاروں کی مبینہ تجارت بتائی جارہی ہے۔امریکی محکمۂ خارجہ کی جانب سے جاری کردہ مراسلے میں یہ الزام عائد کیا گیا ہے کہ روسی اور چینی کمپنیاں ایران، شمالی کوریا اور شام کو بیلسٹک میزائل کے پُرزے اور ٹیکنالوجی فراہم کر رہی ہیں۔ چین کی جن کمپنیوں پر پابندی عائد کی گئی ہے اُن میں مشہور چینی کمپنی بی ایس ٹی ٹیکنالوجی شامل ہیں جبکہ روس کی جو کمپنیاں پابندیوں کے نرغے میں آئی ہیں وہ دراصل سرکاری اسلحہ ساز کمپنیاں روسو بورو پورٹ اور رشین ائیر کرافٹ کارپوریشن ہیں۔


متعلقہ خبریں


علاقائی مسائل خطے میں حل ہونے چاہئیں، دوسرے ممالک کی مداخلت قبول نہیں: چین کا واضح اعلان وجود - هفته 10 ستمبر 2016

چین نے کہا ہے کہ علاقائی مسائل علاقے میں حل ہونے چاہئیں، کسی دوسرے کی مداخلت قبول نہیں۔ یہ بات مشرقی ایشیائی اجلاس کے بعد بحیرۂ جنوبی چین کے معاملے پر سوالات اٹھنے پر چینی نائب وزیر خارجہ لیو چینمن نے کہی۔ گو کہ انہوں نے کسی ملک کا نام نہیں لیا لیکن وہ ایک صحافی کے سوال کا جواب دے رہے تھے جنہوں نے پوچھا تھا کہ جاپان اور امریکا کے رہنماؤں نے بحیرۂ جنوبی چین کے حوالے سے تشویش ظاہر کی ہے۔ جس پر نائب وزیر خارجہ نے کہا کہ "غیر متعلقہ ممالک اس وقت مداخلت کرنا پسند کرتے ہیں جب و...

علاقائی مسائل خطے میں حل ہونے چاہئیں، دوسرے ممالک کی مداخلت قبول نہیں: چین کا واضح اعلان

ترکی میں ناکام انقلاب : امریکا اور روس میں براہ راست ٹکراؤ کے امکانات محمد انیس الرحمٰن - منگل 16 اگست 2016

ترکی کے صدر طیب اردگان نے گزشتہ دنوں امریکی سینٹرل کمانڈ کے چیف جنرل جوزف ووٹیل پر ناکام بغاوت میں ملوث افراد کی معاونت کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا تھا کہ امریکا کو اپنی اوقات میں رہنا چاہئے۔ اس سے پہلے جنرل جوزف نے اپنے ایک بیان میں کہا تھا کہ ترکی میں بغاوت میں ملوث سینکڑوں ترک فوجی افسروں کی گرفتاری سے دونوں ملکوں کے تعلقات متاثر ہوسکتے ہیں۔ترکی میں بغاوت کی ناکامی کے بعد اسے امریکا کی جانب سے دھمکی قرار دیا جاسکتاہے جبکہ ترک صدر طیب اردگان کا کہنا ہے کہ امریکا پہلے ہی اس ...

ترکی میں ناکام انقلاب : امریکا اور روس میں براہ راست ٹکراؤ کے امکانات

نیٹو سرگرمیوں میں اضافہ، روس نے سرحد پر افواج بڑھا لیں وجود - جمعرات 28 جولائی 2016

روس نے جنوب مغربی سرحد پر اپنی افواج کی تعداد میں اضافہ کرلیا ہے جس کی وجہ نیٹو کی جانب سے عسکری موجودگی میں اضافہ اور یوکرین میں عدم استحکام ہے۔ اس امر کا اعلان روس کے وزیر دفاع سرگئی شوئیگو نے کیا۔ ماسکو نے جنوب مغربی سرحد پر فضائی دفاع کا نظام بھی نصب کردیا ہے جبکہ کریمیا میں بڑے پیمانے پر فوجی دستے بھی صف آرا کردیے ہیں۔ سرگئی نے کہا کہ 2013ء سے ہم چار ڈویژن، 9 بریگیڈز اور 22 رجمنٹس بنا چکے ہیں۔ ان میں دو میزائل بریگیڈز بھی شامل ہیں جو اسکندر میزائل کمپلیکس سے لیس ...

نیٹو سرگرمیوں میں اضافہ، روس نے سرحد پر افواج بڑھا لیں

ڈیموکریٹک نیشنل کمیٹی کو روس نے ہیک کیا، ایف بی آئی کا شبہ وجود - منگل 26 جولائی 2016

امریکی ایف بی آئی کو شبہ ہے کہ روس کے سرکاری حمایت یافتہ ہیکرز نے ڈیموکریٹک نیشنل کمیٹی کے نیٹ ورکس میں دال ہو کر ای میلز چرائی ہیں جو جمعے کو وکی لیکس پر پیش کی گئیں۔ یہ وہ آپریشن تھا جس کے بارے میں متعدد امریکی حکام اب سمجھتے ہیں کہ صدارتی انتخابات کو ڈونلڈ ٹرمپ کے حق میں جھکانے کا ایک قدم ہے۔ یہ نظریہ کہ ماسکو ڈونلڈ ٹرمپ کو مدد دینے کے لیے یہ اقدامات اٹھا رہا ہے جو بارہا روسی صدر ولادیمر پوتن کو سراہ چکے ہیں اور نیٹو کے خاتمے کا بھی کہہ چکے ہیں، اوباما انتظامیہ میں بہت...

ڈیموکریٹک نیشنل کمیٹی کو روس نے ہیک کیا، ایف بی آئی کا شبہ

روس نیوکلیئر جنگ چھیڑ سکتا ہے، سابق نیٹو جرنیل کا انتباہ وجود - جمعرات 19 مئی 2016

نیٹو کے سینئر ترین ریٹائرڈ جرنیلوں میں سے ایک نے کہا ہے کہ اگر بالٹک ریاستوں میں نیٹو نے اپنی دفاعی صلاحیتوں میں اضافہ نہ کیا تو ایک سال کے اندر روس کے ساتھ ایک نیوکلیئر جنگ کا خطرہ ہے۔ طبل جنگ بجاتے ہوئے 2011ء سے 2014ء تک یورپ میں نیٹو کے ڈپٹی سپریم الائیڈ کمانڈر رہنے والے جنرل رچرڈ شیرف نے کہا کہ اسٹونیا، لتھووینیا اور لیٹویا پر، جو سب نیٹو اراکین ہیں، حملہ کے سنجیدہ اماکنات ہیں اور مغرب کو ممکنہ سانحے سے بچنے کے لیے ابھی قدم اٹھانا ہوگا۔ ان کا یہ تبصرہ رومانیہ میں ...

روس نیوکلیئر جنگ چھیڑ سکتا ہے، سابق نیٹو جرنیل کا انتباہ

چین کا نیا دفاعی بجٹ، صرف ساڑھے 7 فیصد کا اضافہ وجود - هفته 05 مارچ 2016

چین سال 2016ء میں اپنے دفاعی بجٹ میں صرف 7 اعشاریہ 6 فیصد کا اضافہ کرے گا۔ اس امر کا انکشاف سنیچر کو پارلیمان میں پیش کی گئی ایک بجٹ رپورٹ میں ہوا جس کے مطابق گزشتہ سالوں کے مقابلے میں دفاع پر رواں سال کہیں کم اخراجات کیے جائیں گے۔ سرکاری خبر رساں ادارے سن ہوا کے مطابق یہ چھ سالوں میں کیا گیا سب سے کم اضافہ ہے، جس کی وجہ معاشی طور پر چند کا سخت مراحل سے گزرنا اور فوجیوں کی تعداد میں کی گئی کمی ہے۔ صدر سی جن پنگ نے گزشتہ ستمبر میں پیپلز لبریشن آرمی میں 3 لاکھ اہلکاروں کی ک...

چین کا نیا دفاعی بجٹ، صرف ساڑھے 7 فیصد کا اضافہ

جنوبی کوریا میں میزائل اور ریڈار سسٹم کی تنصیب، چین کو تشویش وجود - جمعه 26 فروری 2016

چین نے امریکا کے طاقتور طویل فاصلاتی ریڈار اور میزائل نظام کی تنصیب پر تشویش کا اظہار کیا ہے اور کہا ہے کہ واشنگٹن اپنے منصوبوں کی وضاحت پیش کرے۔ چینی وزیر خارجہ وانگ یی نے سینٹر فار انٹرنیشنل اینڈ اسٹریٹجک اسٹڈیز کے تھنک ٹینک سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ چین امریکا اور دیگر ممالک کے ساتھ مل کر جزیرہ نما کوریا کو جوہری ہتھیاروں سے پاک کرنے کا عزم رکھتا ہے اور امید ہے کہ اقوام متحدہ شمالی کوریا کے جوہری تجربے کے خلاف قرارداد پر رضامند ہو جائے گی لیکن THAAD میزائل سسٹم اور ساتھ...

جنوبی کوریا میں میزائل اور ریڈار سسٹم کی تنصیب، چین کو تشویش

چین کا نیا تجربہ، میزائل شکن یا سیٹیلائٹ شکن نظام؟ وجود - جمعه 13 نومبر 2015

چین کے تازہ ترین میزائل شکن نظام کے ٹیسٹ نے ایک مرتبہ پھر ایسی افواہوں کو جنم دیا ہے کہ بیجنگ ایسا ہائپر سونک ہتھیار تیار کررہا ہے جو زمین کے مدار میں موجود دشمن کے سیٹیلائٹس یعنی مصنوعی سیارچوں کو تباہ کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے۔ اگر واقعی ایسا ہے تو یہ امریکا کے لیے بہت بڑا خطرہ ہوگا۔ چین نے یہ تازہ ترین ہمیشہ کی طرح انتہائی خفیہ انداز میں کیے ہیں، جس کے دوران مغربی صوبہ سنکیانگ میں واقع کورلا تنصیب سے ایک ایسا ہائپر سونک میزائل بالائی سمت میں داغا گیا، جو اپنے پیچھے عجیب ...

چین کا نیا تجربہ، میزائل شکن یا سیٹیلائٹ شکن نظام؟

امریکی جنگی بحری جہاز کی دراندازی، چین نے انتباہ جاری کردیا وجود - بدھ 28 اکتوبر 2015

بحیرۂ چین کے جنوبی علاقے میں امریکا کے جنگی بحری جہاز کی آمد کے بعد چین نے انتباہ جاری کردیا ہے اور اس کا کہنا ہے کہ اس نے تمام قوانین کو ملحوظ خاطر رکھتے ہوئے تنبیہ جاری کی ہے۔ امریکی بحریہ کا جہاز یو ایس ایس لیسن بحیرۂ جنوبی چین کے اس علاقے میں داخل ہوا ہے جس پر چین اپنا دعویٰ رکھتا ہے۔ اس پر چینی بحریہ کے میزائل بردار لانژو اور کروزر تائی ژو نے امریکی جہاز کو وارننگ جاری کی ہے کہ وہ بین الاقوامی بحری سرحدوں کی خلاف ورزی سے باز رہے۔ وزارت قومی دفاع کے ترجمان یانگ یو جن ...

امریکی جنگی بحری جہاز کی دراندازی، چین نے انتباہ جاری کردیا

بحیرۂ جنوبی چین میں چینی تعمیرات کا تنازع شدت پکڑگیا وجود - پیر 12 اکتوبر 2015

چین نے بحیرۂ جنوبی چین میں متنازع جزائر پر دو روشنی میناروں کی تعمیر مکمل کرلی ہے جس سے چین کےبحری عزائم کے حوالے سے خطے میں ایک مرتبہ پھر تناؤ کی کیفیت پیدا ہوگئی ہے۔ ویت نام، ملائیشیا، برونائی، فلپائن اور چین کے درمیان بحیرۂ جنوبی چین میں واقع اسپراٹلی جزائر میں چیف نے کویٹرون ریف اور جانسن ساؤتھ ریف پر روشنی میناروں کی تعمیر مکمل کی ہے۔ امریکا اور فلپائن پہلے ہی ان تعمیرات کی مخالفت کر چکے ہیں جبکہ چین اس بحیرے کے بیشتر علاقے پر اپنا دعویٰ رکھتا ہے۔ یہاں سے ہر سال 5 ٹر...

بحیرۂ جنوبی چین میں چینی تعمیرات کا تنازع شدت پکڑگیا

امریکا داعش پر حملے ہی نہیں کررہا وجود - اتوار 11 اکتوبر 2015

روس کے ایک اہم سیاست دان نے شام کے تنازع پر امریکا-روس کی باہمی کشمکش میں نیا ہنگامہ کردیا ہے، جن کا کہنا ہے کہ امریکا نام نہاد دولت اسلامیہ (داعش) پر حملے نہیں کررہا۔ پارلیمنٹ میں داخلی امور کی کمیٹی کے سربراہ الیکسی پشکوف نے ٹوئٹر پر چند ایسے پیغامات پیش کیے ہیں جو دونوں ملکوں کے درمیان بڑھتی ہوئی خلیج کو ظاہر کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا ہے کہ "امریکا ہم پر الزام لگا رہا ہے کہ ہم اُن کے تربیت یافتہ باغی عناصر پر حملے کررہے ہیں لیکن ہم سوال کرتے ہیں کہ امریکا کی قیادت میں اتحادیو...

امریکا داعش پر حملے ہی نہیں کررہا

امریکی چین کی فوجی نہیں بلکہ معاشی طاقت سے پریشان وجود - جمعرات 10 ستمبر 2015

امریکا کے باشندے چین کی فوجی طاقت سے اتنے پریشان نہیں ہیں جتنے معاشی قوت سے خائف دکھائے دیتے ہیں۔ ایک تازہ ترین سروے کے مطابق ہر 10 میں سے 8 امریکی کسی نہ کسی حوالے سے چین کے بارے میں منفی رائے رکھتے ہیں۔ پیو ریسرچ سینٹر کے جاری کردہ ایک سروے کے مطابق سروے میں 54 فیصد امریکی کسی بھی حوالے سے چین کے بارے میں مثبت رائے نہیں رکھتے اور ری پبلکنز اس معاملے میں ڈیموکریٹس سے کہیں آگے ہیں۔ معاملہ چاہے اقتصادی ہو، عسکری یا پھر سماجی، امریکی چین کو پسند نہیں کرتے اور ایسا ڈنکے کی ...

امریکی چین کی فوجی نہیں بلکہ معاشی طاقت سے پریشان

مضامین
کون کہتاہے وجود اتوار 25 جولائی 2021
کون کہتاہے

اپنا دھیان رکھنا وجود اتوار 25 جولائی 2021
اپنا دھیان رکھنا

محکمہ بہبودی آبادی کے گریڈ چودہ کے ملازم کے اختیارات و مراعات!! وجود هفته 24 جولائی 2021
محکمہ بہبودی آبادی کے گریڈ چودہ کے ملازم کے اختیارات و مراعات!!

اپنوں کی حوصلہ شکنی حب الوطنی نہیں وجود هفته 24 جولائی 2021
اپنوں کی حوصلہ شکنی حب الوطنی نہیں

مسلماں نہیں راکھ کا ڈھیر ہے وجود بدھ 21 جولائی 2021
مسلماں نہیں راکھ کا ڈھیر ہے

مساوات، قربانی اور انعام وجود بدھ 21 جولائی 2021
مساوات، قربانی اور انعام

’’ایف آئی آر‘‘ کے خلاف سندھ حکومت کی قانونی کارروائی وجود بدھ 21 جولائی 2021
’’ایف آئی آر‘‘ کے خلاف سندھ حکومت کی قانونی کارروائی

’’ بک رہا‘‘ عید ۔۔ وجود بدھ 21 جولائی 2021
’’ بک رہا‘‘ عید ۔۔

افغانستان میں نئی جنگ ! وجود منگل 20 جولائی 2021
افغانستان میں نئی جنگ !

امن کادرس وجود منگل 20 جولائی 2021
امن کادرس

تیسری عالمگیر جنگ 2034 امریکا میں بیسٹ سیلز ناول وجود منگل 20 جولائی 2021
تیسری عالمگیر جنگ 2034 امریکا میں بیسٹ سیلز ناول

خلافت ِ عثمانیہ کی بنیاد وجود پیر 19 جولائی 2021
خلافت ِ عثمانیہ کی بنیاد

اشتہار

افغانستان
امریکی جنگی طیاروں کے طالبان کے ٹھکانوں پر فضائی حملے وجود هفته 24 جولائی 2021
امریکی جنگی طیاروں کے طالبان کے ٹھکانوں پر فضائی حملے

افغان صدارتی محل میں نماز عید کے دوران راکٹ حملے کی ویڈیو وائرل وجود بدھ 21 جولائی 2021
افغان صدارتی محل میں نماز عید کے دوران راکٹ حملے کی ویڈیو وائرل

وزیر اعظم عمران خان نے افغان صدر اشرف غنی کو آئینہ دکھا دیا وجود هفته 17 جولائی 2021
وزیر اعظم عمران خان نے افغان صدر اشرف غنی کو آئینہ دکھا دیا

پاکستان سے 10ہزار جنگجو افغانستان میں داخل ہوئے ، اشرف غنی کا الزام وجود هفته 17 جولائی 2021
پاکستان سے 10ہزار جنگجو افغانستان میں داخل ہوئے ، اشرف غنی کا الزام

طالبان نے افغانستان کے شمالی علاقوں پر قبضہ کرلیا، امریکی میڈیا وجود پیر 12 جولائی 2021
طالبان نے افغانستان کے شمالی علاقوں پر قبضہ کرلیا، امریکی میڈیا

اشتہار

بھارت
بابری مسجد کی شہادت کے بعد مسلمان ہونے والے محمد عامر کی پر اسرار موت وجود اتوار 25 جولائی 2021
بابری مسجد کی شہادت کے بعد مسلمان ہونے والے محمد عامر کی پر اسرار موت

پیگاسس کے ذریعے جاسوسی،نریندر مودی نے غداری کا ارتکاب کیا، راہول گاندھی وجود هفته 24 جولائی 2021
پیگاسس کے ذریعے جاسوسی،نریندر مودی نے غداری کا ارتکاب کیا، راہول گاندھی

بھارت میں کورونا اموات سرکاری اعداد وشمار سے 10 گنا زیادہ ہوسکتی ہیں وجود بدھ 21 جولائی 2021
بھارت میں کورونا اموات سرکاری اعداد وشمار سے 10 گنا زیادہ ہوسکتی ہیں

افغانستان سے بھارتی سفارتکاروں کا انخلائ، سوشل میڈیا پہ مذاق اڑنے لگا وجود پیر 12 جولائی 2021
افغانستان سے بھارتی سفارتکاروں کا انخلائ، سوشل میڈیا پہ مذاق اڑنے لگا

نریندر مودی کی کابینہ میں شامل 42فیصدوزراء کے خلاف فوجداری مقدمات قائم ہیں'رپورٹ وجود پیر 12 جولائی 2021
نریندر مودی کی کابینہ میں شامل 42فیصدوزراء کے خلاف فوجداری مقدمات قائم ہیں'رپورٹ
ادبیات
عظیم ثنا ء خواں،شاعر اورنغمہ نگار مظفر وارثی کی دسویں برسی منائی گئی وجود جمعرات 28 جنوری 2021
عظیم ثنا ء خواں،شاعر اورنغمہ نگار مظفر وارثی کی دسویں برسی منائی گئی

لارنس آف عربیا، بچپن کیسے گزرا؟ وجود منگل 20 اکتوبر 2020
لارنس آف عربیا، بچپن کیسے گزرا؟

بیروت سے شائع کتاب میں اسرائیل نواز بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کا چہرہ بے نقاب وجود جمعرات 17 جنوری 2019
بیروت سے شائع کتاب میں اسرائیل نواز بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کا چہرہ بے نقاب

14واں بین الاقوامی کتب میلہ کراچی ایکسپوسینٹر میں ہوگا وجود پیر 10 دسمبر 2018
14واں بین الاقوامی کتب میلہ کراچی ایکسپوسینٹر میں ہوگا

شاعر جون ایلیا کو مداحوں سے بچھڑے 16 برس بیت گئے وجود جمعرات 08 نومبر 2018
شاعر جون ایلیا کو مداحوں سے بچھڑے 16 برس بیت گئے
شخصیات
188ارب ڈالر کے مالک ایلون مسک دنیا کے مالدار ترین آدمی بن گئے وجود جمعه 08 جنوری 2021
188ارب ڈالر کے مالک ایلون مسک دنیا کے مالدار ترین آدمی بن گئے

ہالی وڈ اداکار ادریس البا کی اہلیہ بھی کورونا سے متاثر وجود پیر 23 مارچ 2020
ہالی وڈ اداکار ادریس البا کی اہلیہ بھی کورونا سے متاثر

امریکی میگزین فوربز میں سب سے زیادہ کمانے والی شخصیات کی فہرست جاری وجود منگل 01 جنوری 2019
امریکی میگزین فوربز میں سب سے زیادہ کمانے والی شخصیات کی فہرست جاری

سال 2018، مختلف شعبہ ہائے حیات کی بہت سی عالمی شخصیات دنیا چھوڑ گئیں وجود بدھ 26 دسمبر 2018
سال 2018، مختلف شعبہ ہائے حیات کی بہت سی عالمی شخصیات دنیا چھوڑ گئیں

ماضی کی رہنما خواتین وجود پیر 14 مئی 2018
ماضی کی رہنما خواتین