وجود

... loading ...

وجود
وجود
ashaar

پولیو یورپ بھی پہنچ گیا

بدھ 02 ستمبر 2015 پولیو یورپ بھی پہنچ گیا

polio-vaccination

مغربی یوکرین میں پولیو کے دو مریضوں کی تصدیق ہوئی ہے، جو 2010ء کے بعد یورپ میں اس مرض کے اولین شکار ہیں۔

عالمی ادارۂ صحت (ڈبلیو ایچ او) کا کہنا ہے کہ یوکرین کے شمال مغربی علاقے میں ایک 10 ماہ اور ایک چار سال کے بچے میں پولیو وائرس کی تصدیق ہوئی ہے۔ ڈبلیو ایچ او ترجمان اولیور روسن بایر کا کہنا ہے کہ یہ 1996ء کے بعد یوکرین میں پولیو کے انکشاف کا پہلا واقعہ ہے۔

پولیو کے خاتمے کی عالمی مہم کے مطابق یوکرین میں ویکسین کے ناکافی استعمال کی وجہ سے پولیو وائرس کا خطرہ بڑھ گیا ہے، اور گزشتہ سال تو پولیو اور دیگر امراض کی ویکسین صرف ملک کے آدھے بچوں کو دی گئی۔

البتہ ڈبلیو ایچ او کا کہنا ہے کہ یوکرین سے اس مرض کے دیگر ممالک تک پھیلنے کے امکانات کم ہیں۔ اس سلسلے میں عالمی ادارہ اور یونی سیف دونوں یوکرین کی وزارت صحت کو تکنیکی اور عملی مدد فراہم کررہے ہیں۔

پانچ سال سے کم عمر بچوں کو متاثر کرنے والا یہ وائرس زندگی بھر کے لیے معذور کر سکتا ہے۔ گو کہ دنیا بھر میں پولیو کو بڑی حد تک ختم کردیا گیا ہے لیکن پاکستان سمیت تین ممالک ایسے ہیں جہاں اب بھی بڑے پیمانے پر پولیو موجود ہے۔ 1988ء میں اس وائرس سے متاثر ہونے والے بچوں کی تعداد ساڑھے تین لاکھ تھی لیکن 2013ء میں صرف 416 مریض شناخت ہوئے یعنی مرض کا 99 فیصد خاتمہ ہوچکا ہے۔


متعلقہ خبریں


چین، غیر محفوظ ویکسینز کا بڑا اسکینڈل منظر عام پر وجود - هفته 02 اپریل 2016

چین میں غیر قانونی ویکسین کی تقسیم کا اسکینڈل سامنے آیا ہے جس کے بعد شہری مطالبہ کررہے ہیں کہ آخر حکومت نے اس کا اعلان کرنے میں اتنی دیر کیوں لگائی جبکہ ان کے بچے خطرے سے دوچار تھے۔ حکومت کے مطابق 2011ء سے ایک غیر قانونی ویکسن کا دھندا چل رہا تھا کہ جس کے دوران 88 ملین ڈالرز کی ایسی ویکسینز تقسیم کی جن کی میعاد مکمل ہو چکی تھی یا انہیں اچھی طرح سرد ماحول میں نہيں رکھا گیا تھا۔ اس نے ان تمام بچوں کو معذوری یا موت کے خطرے سے دوچار کیا ہے جنہوں نے ویکسین لی تھی۔ فی الحال یہ ...

چین، غیر محفوظ ویکسینز کا بڑا اسکینڈل منظر عام پر

پولیو ویکسین میں کینسر کا سبب بننے والے وائرس کی تصدیق وجود - پیر 07 مارچ 2016

امریکا کے محکمہ صحت کے زیر انتظام اہم وفاقی ادارے امریکا کے سینٹرز فار ڈیزیز کنٹرول اینڈ پریوینشن (سی ڈی سی) نے تسلیم کیا ہے کہ 1955ء سے 1963ء کے دوران 98 ملین امریکی باشندوں کو پولیو سے بچاؤ کی ایسی ویکسین دی گئی کہ جو کینسر کا سبب بننے والے ایسے وائرس سے آلودہ تھی، جسے سیمین ووکولیٹنگ وائرس 40 (ایس وی 40) کہا جاتا ہے۔ اس ناقابل یقین اعتراف کو کچھ ہی دیر میں سی ڈی سی کی ویب سائٹ سے ہٹا لیا گیا لیکن خوش قسمتی سے یہ صفحہ گوگل کی کیشے میں محفوظ ہوگیا اور یوں بہت بڑے اعتراف ...

پولیو ویکسین میں کینسر کا سبب بننے والے وائرس کی تصدیق

’سازشی نظریات‘ جو بعد میں حقیقت ثابت ہوئے وجود - جمعرات 24 دسمبر 2015

سازشی نظریات، جنہیں انگریزی میں Conspiracy theories کہتے ہیں، کا نام سنتے ہی ذہن میں یہی آتا ہے کہ یہ کوئی بے وقوفانہ سی بات ہوگی، جو ایک حقیقت کو جھٹلانے کے لیے استعمال کی گئی ہوگی۔ یعنی ان نظریات کا حقیقت سے دور پرے کا بھی تعلق نہیں ہوتا۔ لیکن کیا آپ جانتے ہیں کہ واقعی چند ایسے "سازشی نظریات" وجود رکھتے ہیں، جن کا ابتدا میں تو بہت مذاق اڑایا گیا، لیکن بعد میں یہ حقیقت ثابت ہوئے۔ علاج کے نام پر تجربات امریکی محکمہ صحت نے 1932ء میں ٹسکیجی انسٹیٹیوٹ کے تعاون سے سیاہ ...

’سازشی نظریات‘ جو بعد میں حقیقت ثابت ہوئے

یوکرین کی پارلیمان میدان جنگ بن گئی وجود - اتوار 13 دسمبر 2015

یوکرین کی پارلیمان کا ایوان بالا میدان جنگ بن گیا جب ایک رکن اسمبلی نے وزیر اعظم ارسینی یاسینوک کو تقریر کے آغاز سے قبل ہی چبوترے سے اتارنے کی کوشش کی جس پر زبردست ہنگامہ آرائی ہوئی۔ وزیر اعظم یاسینوک حکومت کے کارگزاری کی سالانہ رپورٹ پیش کرنے والے تھے کہ صدر پیترو پوروشنکو کے سیاسی اتحاد کی نمائندگی کرنے والے رادا پارٹی کے اولیگ برنا ایک خوبصورت گلدستے کے ساتھ ان کی جانب بڑھے۔ انہوں نے پہلے تو وزیراعظم کو گلدستہ پیش کیا اور پھر ان کو پیچھے سے جاکر پکڑ لیا اور زبردستی نیچ...

یوکرین کی پارلیمان میدان جنگ بن گئی