وجود

... loading ...

وجود
وجود
ashaar
فضول یات وجود - اتوار 14 نومبر 2021

دوستو،ہم جب بچپن میں چھوٹے سے تھے، اب آپ یہ مت سوچئے گا کہ بچپن میں تو سب ہی چھوٹے ہوتے ہیں اس میں کیا نئی بات ہے، بات یہی ہے جو آپ سوچ رہے ہیں،لیکن ہمارے اس دوست کو پتہ نہیں تھی جو ایک بار جہلم کے ایک گاؤں سیر کے لئے گیا تو وہاں میزبان نے انہیں بتایا کہ،یہاں (یعنی اس گاؤں میں) بڑے بڑے لوگ پیدا ہوتے ہیں، جس پرہمارے پیارے دوست نے حیرت سے پوچھا، اچھا جی،بہت ہی انوکھا گاؤں ہے یہ ،ورنہ دنیا بھر میں تو بچے ہی پیدا ہوتے ہیں۔۔ ارے جناب، دماغ نہ بھٹکائیں،بچوں پر پھر سے یاد آگیا...

فضول یات

خود پسندی سے بے بسی تک وجود - هفته 13 نومبر 2021

اپوزیشن رہنمائوں سے ہاتھ ملانے کو عمران خان کرپشن تسلیم کرنے کے مترادف قرار دیتے ہیںاور قومی سلامتی کمیٹی کے اجلاس میں شرکت سے بھی گریز کرتے ہیں مبادا کسی اپوزیشن رہنما سے ہاتھ ملانے کی نوبت نہ آجائے حالانکہ پارلیمانی طرزِ حکومت میں حزبِ اقتدارکی طرح حزبِ اختلاف بھی اہم ہوتی ہے مگر وائے افسوس کہ پاکستان میں ایسی جمہوری قدریں نہیں بن سکیں موجودہ حکمراں تو اپنے سوا سب کو خائن سمجھتے ہیں عمران خان کی کامیابی سے امید تھی کہ شاید جمہوری قدریں مضبوط ہوںلیکن یہ خیال بھی خام ہی ثابت...

خود پسندی سے بے بسی تک

طوفان کاپیش خیمہ وجود - هفته 13 نومبر 2021

ایک وقت تھا اپوزیشن ۔۔حکومت کے خلاف تحریک چلانے کااعلان کرتی تو عوام میں ایک سنسنی اور برسر ِ اقتدار سیا ستدانوں میں سراسیمگی سی پھیل جاتی حکومت مخالف سیاسی رہنما جوڑ توڑ میں مصروف ہوتے تو کئی لوگوںکی نیندaیں حرام ہونے میں دیر نہ لگتی ، تھڑے مارکہ ہوٹل،چائے کی دکانیں ،ہیرسیلون اوپن ائر حجام کے پھٹے بحث و مباحثہ کے مراکز سمجھے جاتے تھے جہاں لوگ اپنے پسندیدہ سیاستدانوںکے حق میں عجیب و غریب دلائل اور سیاسی مخالفین کے لیے نفرت کا بر ملا اظہار کرتے رہتے جلسے ،جلوس عوام کا لہو گرما...

طوفان کاپیش خیمہ

شگفتہ شگفتہ بہانے ترے وجود - جمعه 12 نومبر 2021

وزیراعظم عمران خان اپنی جنگ ہار رہے ہیں۔ وہ خود کو تقدس کے ایسے مقام سے دیکھتے ہیں جو خود اُنہیں ہی دکھائی دیتا ہے۔ سوانگ بھرنا ہالی ووڈ کا کام ہے، رہنما کا نہیں۔ اگر کوئی اقتدار کو ”مزے کی چیز“ سمجھتا ہے تو وہ فاش غلطی پر ہے۔ رہنما کی پینترے بازی یا خود نمائی کارکردگی سے منسلک ہو کر نظرانداز کی جاتی ہے، لیکن اگر کوئی کارکردگی ہی خود نمائی یا پینترے بازی کی رکھتا ہو، تو وہ شکار ی نہیں رہ سکتا، وقت کے ہاتھوں شکار ہوگا۔ وزیر اعظم عمران خان کو یاد رکھنا چاہئے کہ ناموری (سلیبرٹی)...

شگفتہ شگفتہ بہانے ترے

سدابہار جھوٹ۔۔۔ وجود - جمعه 12 نومبر 2021

دوستو،خلیل جبران کہتا ہے کہ میں نے کبھی جھوٹ نہیں بولا، سوائے ایک جھوٹ کے کہ میں جھوٹ نہیں بولتا۔۔جون ایلیا کاکہنا ہے کہ ۔۔ "اگر میں اپنے جھوٹ کے ساتھ خوش ہوں تو تم مجھ پر اپنا سچ مسلط کرنے والے کون ہوتے ہو ؟ "۔۔ویسے تو نظریں چرا کر بولا جانے والا سچ بھی ایک مستند جھوٹ سمجھا جاتا ہے۔۔۔جھوٹ کی اس پرفریب دنیا میں جہاں ہر طرف جھوٹ ہی جھوٹ ہے۔۔ جہاں جھوٹ دکھتا ہے اور جھوٹ ہی بکتا ہے۔۔ جھوٹ بولنے کی تربیت تو ہمیں ہمارے والدین بچپن سے ہی دینا شروع کردیتے ہیں۔ ۔ جب گھر پر پپا کو کو...

سدابہار جھوٹ۔۔۔

شررفشاں ہوگی آہ میری، نفَس مرا شعلہ بار ہو گا وجود - بدھ 10 نومبر 2021

مسافر لاہور میں ہے، جہاں قرار وقیام کا احساس ہوتا ہے، مزارِ اقبال پر حاضری کو جی چاہتا ہے۔ مدت ہوئی جہاں حاضری نہیں دی۔ مسافر نے بادشاہی مسجد کے میناروں کو نظر بھر کردیکھا مگر بلندی تو یہاں قبر میں سوتی ہے۔رفعتیں تو یہاں گردن اُٹھا کر دیکھتی ہیں۔ موت نے اُن کے چہرے کو متبسم پایا ، وہ اپنی قبر میں سرخرو اُترے تھے۔کیا عجب کہ بادشاہی مسجد کے مینار روز جھک کر اُن کے لیے دُعا کرتے ہوں!!قوم 9 نومبر کو اُن کا یوم پیدائش مناتی ہے۔ بس مناتی ہے!!! وہ قوم کتنی بدقسمت ہے جس میں اقبال پی...

شررفشاں ہوگی آہ میری، نفَس مرا شعلہ بار ہو گا

وزیراعلیٰ بلوچستان سے دوبارہ حلف اٹھانے کا مطالبہ وجود - بدھ 10 نومبر 2021

فرور ی 2008 ء کے عام انتخابات کے نتیجے میں بلوچستان میں پیپلز پارٹی کی حکومت بنی۔ پیپلز پارٹی کی ٹکٹ پر محض چھ امیدوار کامیاب ہوئے تھے۔ چونکہ مرکز میں پیپلز پارٹی کی حکومت بنی۔ اس بنا آزاد حیثیت میں کامیاب ہونے والے اراکین اسمبلی پیپلز پارٹی میں شامل ہوئے۔ چناں چہ نواب اسلم رئیسانی کی وزارت اعلیٰ میںمسلم لیگ قائداعظم، ن لیگ، جمعیت علماء اسلام، بلوچستان نیشنل پارٹی عوامی اور عوامی نیشنل پارٹی پر مشتمل مخلوط حکومت کی تشکیل ہوئی ۔تقریبا تمام ارکان وزیرو مشیر لیے گئے۔ ایک محکمہ ...

وزیراعلیٰ بلوچستان سے دوبارہ حلف اٹھانے کا مطالبہ

خالصتان ریفرنڈم اور بھارت وجود - بدھ 10 نومبر 2021

سکھ فار جسٹس کوئی مسلح تحریک نہیں یہ پُر امن اور جمہوری جدوجہد پر یقین رکھتی ہے اِس تنظیم کے زیرِ اہتمام31 اکتوبر2021سے لندن کے الزبتھ کوئین ہال ٹو سے خالصتان کے کے لیے ریفرنڈم شروع ہو چکا ہے جس میں سکھ قوم جوش وجذبے سے حصہ لے رہی ہے ووٹنگ کے دوران سکھوں کو گاڑیاں کوئین الزبتھ ہال پہنچاتی رہیں بڑی تعداد میں ووٹرآنے سے بڑی بڑی لائنیں بن گئیں غیر جانبدار ماہرین کی زیرِ نگرانی جاری ریفرنڈم سے واضح ہو گیا ہے کہ سکھ بھارتی حکومت سے آزادی پر متفق ہیں اب یہ سمجھنے میں کسی کو دشوار...

خالصتان ریفرنڈم اور بھارت

شاعر مشرق علامہ اقبالؒ وجود - منگل 09 نومبر 2021

علامہ عماد الدین عندلیب یہ آج سے تقریباً دو سو ٗ سوا دو سو سال قبل انیسویں صدی کے اواخر یا بیسویں صدی کے اوائل کی بات ہے کہ کشمیری برہمنوں کے ایک خاندان نے اسلام قبول کر لیا تھا جس کی وجہ سے اسی وقت سے اس خاندان میں تقویٰ و طہارت اور خشیت و للہیت کا رنگ غالب ہوگیا تھا ۔اسلام قبول کرنے کے بعد کشمیری بر ہمنوں کایہ نومسلم خاندان کشمیر سے ہجرت کرکے غیر منقسم (برطانوی) ہندوستان کے مشہور صوبہ ٗ صوبہ پنجاب کے معروف شہر سیالکوٹ میں آکر آباد ہوگیاتھا۔ اس نو مسلم خاندان میں ایک شخص...

شاعر مشرق علامہ اقبالؒ

تالے اور چابی کی تاریخ وجود - منگل 09 نومبر 2021

(مہمان کالم) ٹام پیرس جدید تہذیب کے ظہور کے بعد ہمارے آباؤ اجداد نے اپنی قیمتی اشیا، اجناس اور دیگر تجارتی سامان غیروں کی رسائی سے محفوظ بنانے کے لیے مشینی آلات کے استعمال کی ضرورت محسوس کی، جس کی پہچان تالے اور چابی کے نام سے ہوئی۔ ابتدائی طور پر رسے یا اس سے ملتی جلتی دیگر اشیاء کو گانٹھیں لگا کر بطور تالا استعمال کیا گیا جو کہ چوری یا دوسروں کے غیر ضروری مداخلت سے کچھ حد تک محفوظ رکھتے تھے۔ گزرتے وقت کے ساتھ نت نئی ٹیکنالوجی سامنے آئی، جلد لکڑی اور دھات کے بنے تا...

تالے اور چابی کی تاریخ

سارے موسم بدل گئے ،انسان کب بدلے گا؟ وجود - پیر 08 نومبر 2021

  ہمارے کرہ ارض پر اَن گنت مخلوقات بستی ہیں،جن کا اگر کوئی شخص آج کے جدید سائنسی دور میں بھی شمار کرنا چاہے تو نہیں کرسکتاہے۔ لیکن کتنی بدقسمتی کی بات ہے کہ ہمارے کرہ ارض کے مستقبل پرمعدومی اور بربادی کے جتنے بھی سنگین خطرات منڈلارہے ہیں ،اُن سب کا سبب صرف اور صرف ایک مخلوق انسان ہے۔ جی ہاں! حضرت ِ انسان کے علاوہ باقی تمام مخلوقات زمین کے تہہ میں ،اُس کی گہرائیوں اور فضائے بسیط میں قدرتی ماحول پر اثرانداز ہوئے بغیر فقط اپنی زندگی بسر کرتی ہے مگرانسان اپنے طرز زندگی ک...

سارے موسم بدل گئے ،انسان کب بدلے گا؟

گڑگائوں میں نمازجمعہ کے دوران شرانگیزی وجود - پیر 08 نومبر 2021

راجدھانی دہلی سے متصل شہر گڑگائوں میں گزشتہ کئی ہفتوں سے نمازجمعہ کے دوران خلل ڈالنے کی کوششیں کی جارہی ہیں۔گڑگائوں ہریانہ کا ایک صنعتی شہر ہے ، جہاں بڑی تعداد میں مسلمان فیکٹریوں اورملٹی نیشنل کمپنیوں کے دفتروں میں کام کرتے ہیں۔انھیں جمعہ کی نماز ادا کرنے میں خاصی دشواری پیش آرہی ہے، کیونکہ انتظامیہ نے جن عوامی مقامات کو نمازجمعہ کے لیے نشان زد کررکھاہے، وہاں شرپسند عناصر ہر جمعہ کو رخنہ ڈالتے ہیں اور نماز کو رکوانے کی کوشش کرتے ہیں۔یہی وجہ ہے کہ انتظامیہ نے ان کے دبائو میں...

گڑگائوں میں نمازجمعہ کے دوران شرانگیزی

اچھا پہننا،اچھا کھانا وجود - اتوار 07 نومبر 2021

دوستو،ایک شخص نیکر پہن کر بیری سے بیر اتار رہا تھا۔ کسی نے پوچھا ’’جناب! کیا ہو رہا ہے‘‘ بولے زندگی میں دو ہی کام کیے ہیں‘ اچھا پہننا اور اچھا کھانا‘‘ ۔۔بیر کو چھوڑیے اب تو کھیرے کی اہمیت کس قدر بڑھ گئی ہے۔ حالانکہ ایک مرتبہ ایک شخص نے کھیرا پھانکوں میں کاٹ کر پاس بیٹھے ہوئے لوگوں میں بانٹ دیا اور خود آرام سے ایک طرف ہو کر بیٹھ گیا۔ ایک دوست نے کہا ’’یار تم خود کھیرا کیوں نہیں کھا رہے؟‘‘ اس نے ترت جواب دیا یہ کوئی بندے کھاتے ہیں؟ بس یہ سمجھ لیں کہ پوری قوم اس وقت نیکر میں ہ...

اچھا پہننا،اچھا کھانا

امریکی خلائی فورس وجود - اتوار 07 نومبر 2021

(مہمان کالم) والیری انسینا شروع میں ’’ خلائی فورس ‘‘ کا ذکر ایک مذاق لگا؛ بچپن کی کچھ کہانیوں اور ہالی ووڈ کے بعض کرداروں سپیس بالز، سپیس کیڈٹ کی بازگشت بھی محسوس ہوئی۔نیٹ فلیکس کے کامیڈین سٹیو کارل اور ٹوئٹر سمیت دیگر سوشل میڈیا پر پوسٹ ہونیوالے تصوراتی کرداروں کے برعکس امریکی سپیس فورس کا قیام ایک سنجیدہ معاملہ ہے، جس کے چمپئن صدر ٹرمپ تھے۔یہ بنیادی طور پر فوجی معاملات زمین کے مدار میں میں نمٹانے کا ایک نیا تصور ہے۔ اس کا مطلب یہ نہیں کہ جیمز بانڈ کی فلم’’ مون ریکر ‘‘...

امریکی خلائی فورس

خوشحالی کاخواب وجود - هفته 06 نومبر 2021

بچپن سے سنتے آئے ہیں کہ پاکستان ایک زرعی ملک ہے مگرآج تک زراعت کی حقیقی اہمیت کو محسوس نہیں کیا جا سکا ہے ، اسی باعث ہماری زراعت آج بھی روایتی ڈگر پر قائم ہے اور موسمیاتی تبدیلی اور دیگر مسائل کے باعث شعبہ زراعت زوال پذیر ہے یہی وجہ ہے یہ ملک آج بھی زرعی ان سکا نہ صنعتی ہمیشہ تجربات نے ماضی کے اقذامات کا دھڑن تختہ کرکے رکھ دیا بیجنگ کی ایک جامعہ میں زرعی تحقیق سے وابستہ پاکستانی اسکالر سمیرا اصغر رائے نے زراعت کی اہمیت پر مفصل روشنی ڈالتے ہوئے یہ سمجھانے کی کوشش کے دوران ...

خوشحالی کاخواب

افغان مسائل اور سفارتی ہلچل وجود - هفته 06 نومبر 2021

امریکی افواج کے انخلا کے دوران ہی افغانستان میں بدامنی جیسے مسائل سر اُٹھانے لگے تھے مگر بظاہر غیر جانبدار لیکن دل میں طالبان سے ہمدردی رکھنے والے کچھ تجزیہ کاروں کو یقین تھا کہ طالبان نہ صرف معاشی مسائل پرقابوپالیں گے بلکہ پُرامن افغانستان کی منزل بھی حاصل کر لیں گے لیکن معاشی اور عدمِ استحکام کے مسائل میں کمی نہیں آئی سفارتی ہلچل ضرورہے مگرنتائج کی بجائے ا بھی تک اٹھک بیٹھک تک محدود ہے امریکی افو اج کے انخلا کے دوران کابل ائرپورٹ کے نزدیک دھماکے ہوئے جن کے خلاف امریکانے کچ...

افغان مسائل اور سفارتی ہلچل

شمال مشرقی شام کو نہیں بھولنا چاہیے وجود - جمعه 05 نومبر 2021

(مہمان کالم) بل ٹریو شمال مشرقی شام کا منظر نامہ ایف سکاٹ فٹزجیرالڈ کی راکھ کی وادی کے سٹیج کی طرح افق تک بری طرح پھیلا ہوا ہے۔کبھی یہ شام کی خوراک کی پیداوار کا علاقہ تھا، لیکن اب یہ خطہ متعدد جنگوں، معاشی بحران اور حال ہی میں خشک سالی اور آلودگی کی وجہ سے تباہ ہو چکا ہے۔ وہ جگہیں جو دھول اور سموگ کی دھند میں تحلیل ہو چکی ہیں، جو سکاٹ فٹزجیرالڈ کے اندازِ بیاں میں اگر بیان کریں تو، عمارتوں، دیہاتوں اور کاریگروں کی تیل کی ریفائنریوں کی شکل اختیار کرلیتی ہیں، لوگ تیزی سے...

شمال مشرقی شام کو نہیں بھولنا چاہیے

طبلہ ایمبولینس وجود - جمعه 05 نومبر 2021

دوستو، بھارت میں ایمبولینس سائرن کی مخصوص آواز کو روایتی بانسری اور طبلے کی موسیقی سے بدلنے کا منصوبہ بنا لیا گیا ہے جس کا آغاز دارالحکومت نئی دہلی سے ہوگا۔اس کی تصدیق گزشتہ دنوں نئی دہلی کے یونین روڈ ٹرانسپورٹ منسٹر، نتن گاڈکری نے اپنے ایک بیان میں کی۔ان کا کہنا تھا کہ ایمبولینس سائرن کی چیختی چنگھاڑتی آواز سے لوگوں پر برا اثر پڑتا ہے اور وہ بوکھلاہٹ کا شکار ہوجاتے ہیں۔اس کے برعکس بانسری، طبلے اور ہارمونیم جیسے آلاتِ موسیقی پر روایتی دھنوں کی آواز، سننے والوں کو ایک خوش...

طبلہ ایمبولینس

ایڈمنسٹریٹر کراچی ۔۔۔ اختیاری و بے اختیاری وجود - جمعه 05 نومبر 2021

  مرتضی وہاب جب سے کراچی کے ایڈمنسٹریٹر تعینات ہوئے ہیں ، تب سے لے کر اَب تک انہیں ایک دن کے لیے بھی اُنہیں کامل سکون اور اطمینان کے ساتھ بلدیہ عظمی کراچی میں انتظامی اُمور انجام دینے کا موقع میسر نہ آسکا۔ ابتداء میں اُن کی تعیناتی کے معاملہ پر کراچی کی جملہ سیاسی جماعتوں نے خوب سیاسی شوروغوغا مچا کر پاکستان پیپلزپارٹی کو مرتضی وہاب کی بطور ایڈمنسٹریٹر باز رکھنے کی کوشش کی ۔لیکن جب ان کے مخالفین کو اپنے اِس مقصد میں کامیابی حاصل نہ ہوسکی تو پھر مرتضی وہاب کی انتظامی ...

ایڈمنسٹریٹر کراچی ۔۔۔ اختیاری و بے اختیاری

بھارت میں محصور افغان شہری وجود - جمعه 05 نومبر 2021

(مہمان کالم) مجیب مشال بھارت میں پھنسے افغانوں نے احتجاج کیا ‘ایک ایک دفتر میں گئے اور دنیا بھر میں پھیلے اپنے رشتے داروں سے التجا کی کہ ان کے لیے ٹکٹ کا بندوبست کریں۔صرف ایک فلائٹ دستیاب تھی جوانہیں اس ملک میں لے جا سکتی تھی جو اب طالبان کے قبضے میں ہے۔سب جانتے تھے کہ انہیں افغانستان میں کن مشکلات کا سامنا ہوگا‘ معاشی مشکلات‘انسانی آزادیوں سے محرومی حتیٰ کہ مقدمات کا سامنا بھی ممکن تھا۔ مگر گھر جلا ہوا ہو یا ٹوٹا ہو اس کی اپنی ہی کشش ہو تی ہے۔اس مہینے نئی دلی سے کابل ...

بھارت میں محصور افغان شہری

جام کمال کو ہٹاکر صوبے کو متبادل کیا دیا گیا؟ وجود - جمعه 05 نومبر 2021

بلوچستان کے اندر ستمبر سے شروع کی جانے والی اقتدار کی بازی اکتوبر2020ء کو اس طرح اختتام پذیر ہوئی کہ عبدالقدوس بزنجو دوسری بار صوبے کے وزیراعلیٰ بناد یے گئے۔ اسمبلی کے65ارکان میں سے 39نے انہیں قائد ایوان چنا ہے مقابل کوئی امیدوار نہ تھا۔30اکتوبر کو ہونے والے اسپیکر کے انتخاب میں بھی دوسرا امیدوار نہ تھا ۔ سو بی اے پی کے جان محمد جمالی اسپیکر منتخب ہوئے۔ بزنجو نے29اکتوبر کو حلف اُٹھالیا ۔ذہن و زبان ایک جگہ نہ تھی۔ حلف کے الفاظ ادا کرنے میں فاش غلطیاں کیں۔ وہیں گورنر ہائوس کے ا...

جام کمال کو ہٹاکر صوبے کو متبادل کیا دیا گیا؟

بھارت اور اسرائیل کی مشقیں وجود - جمعه 05 نومبر 2021

روایتی ہتھیاروں سے کوئی عرب ملک جوہری طاقت اسرائیل کا مقابلہ نہیںکر سکتا ویسے بھی قیادت سے نفرت یا جمہوریت کی بحالی کی تحریکوں کی وجہ سے کئی عرب ممالک عدمِ استحکام کا شکار ہیں اِس لیے مقابلے کا سوچا بھی نہیں جا سکتا کیا کوئی عرب ملک اسرائیلی سالمیت کے لیے خطرہ بن سکتا ہے؟ اِس سوال کا جواب بھی ہاں میں دینا اِس لیے ممکن نہیں کیونکہ ذیادہ تر عرب ممالک کے حکمران اقتدار برقرار رکھنے کے لیے اپنی ہی عوام سے برسرِ پیکار ہیںاِس لیے بیرونی خطرات کا سامنا کرنے یا کسی کے لیے خطرہ بننے کی...

بھارت اور اسرائیل کی مشقیں

غرورکاسرنیچا وجود - جمعه 05 نومبر 2021

دوستو،بچپن سے نصابی کتابوںمیں پڑھتے آرہے ہیں کہ ’’غرور کا سرنیچا‘‘۔۔لیکن ہمیں اس بات کی آج تک سمجھ نہیں آئی کہ بھارت میں بچوںکو نصابی کتب میں کیا پڑھایا جاتا ہے؟؟ کیا انہیں بتانے والا یا سمجھانے والا کوئی نہیں کہ کبھی ’’بڑا بول‘‘ نہیں بولتے۔۔بھارتی میڈیا جس طرح ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ شروع ہونے سے پہلے اپنی کرکٹ ٹیم کو بانس پر چڑھا چکا تھا،اب اسی بانس سے اپنی ٹیم کی ’’دھلائی ‘‘ میں مصروف نظر آتا ہے۔۔ بھارتی میڈیا کو پتہ ہے کہ کس طرح سے مال بنانا ہے، شعیب اختر نے ایک ٹی وی انٹرو...

غرورکاسرنیچا

نسلہ ٹاور کی مسماری کیوں ضروری ہے؟ وجود - منگل 02 نومبر 2021

بالآخر سپریم کورٹ نے ایک ہفتے کے اندر،اندر نسلہ ٹاور کی فلک فوس عمارت کو بارودی مواد کے دھماکے سے گرانے کا حتمی حکم صادر کردیا ہے۔ یوں نسلہ ٹاور کو مسمار ہونے سے بچانے کی آخری’’قانونی اُمید ‘‘بھی دم توڑ گئی ۔ یادر ہے کہ نسلہ ٹاور کراچی شہر کی اُن تجارتی و رہائشی عمارات میں سے ایک ہے، جسے قبضہ مافیا نے حکومتی اداروں کی ساز باز سے غیر قانونی طور پر تعمیر کیا تھا۔نسلہ ٹاور گزشتہ 40 برسوں میں کراچی میں ہونے والی چائنہ کٹنگ کے سبب وجود میں آنی والی عمارات میں سب سے نمایاں اور ب...

نسلہ ٹاور کی مسماری کیوں ضروری ہے؟

مضامین
غم و شرمندگی وجود بدھ 08 دسمبر 2021
غم و شرمندگی

گامیرے منوا وجود بدھ 08 دسمبر 2021
گامیرے منوا

گوادر دھرنا اورابتر گورننس وجود بدھ 08 دسمبر 2021
گوادر دھرنا اورابتر گورننس

تندور بنتی دنیا وجود بدھ 08 دسمبر 2021
تندور بنتی دنیا

کون نہائے گا وجود منگل 07 دسمبر 2021
کون نہائے گا

دوگززمین وجود پیر 06 دسمبر 2021
دوگززمین

سجدوں میں پڑے رہناعبادت نہیں ہوتی! وجود پیر 06 دسمبر 2021
سجدوں میں پڑے رہناعبادت نہیں ہوتی!

چین کی عسکری صلاحیت’’عالمی رونمائی‘‘ کی منتظر ہے! وجود پیر 06 دسمبر 2021
چین کی عسکری صلاحیت’’عالمی رونمائی‘‘ کی منتظر ہے!

دوگززمین وجود اتوار 05 دسمبر 2021
دوگززمین

یورپ کا مخمصہ وجود هفته 04 دسمبر 2021
یورپ کا مخمصہ

اے چاندیہاں نہ نکلاکر وجود جمعه 03 دسمبر 2021
اے چاندیہاں نہ نکلاکر

تاریخ پررحم کھائیں وجود جمعرات 02 دسمبر 2021
تاریخ پررحم کھائیں

اشتہار

افغانستان
اقوام متحدہ میں افغانستان کی نمائندگی کا فیصلہ ملتوی وجود بدھ 08 دسمبر 2021
اقوام متحدہ میں افغانستان کی نمائندگی کا فیصلہ ملتوی

طالبان کے خواتین سے متعلق حکم نامے کا خیرمقدم کرتے ہیں، تھامس ویسٹ وجود اتوار 05 دسمبر 2021
طالبان کے خواتین سے متعلق حکم نامے کا خیرمقدم کرتے ہیں، تھامس ویسٹ

15 سالہ افغان لڑکی برطانوی اخبار کی 2021 کی 25 با اثر خواتین کی فہرست میں شامل وجود هفته 04 دسمبر 2021
15 سالہ افغان لڑکی برطانوی اخبار کی 2021 کی 25 با اثر خواتین کی فہرست میں شامل

طالبان کی خواتین کو جائیداد میں حصہ دینے،شادی مرضی سے کرانے کی ہدایت وجود جمعه 03 دسمبر 2021
طالبان کی خواتین کو جائیداد میں حصہ دینے،شادی مرضی سے کرانے کی ہدایت

جھڑپ میں ایران کے 9سرحدی گارڈز ہلاک ہوئے،طالبان وجود جمعه 03 دسمبر 2021
جھڑپ میں ایران کے 9سرحدی گارڈز ہلاک ہوئے،طالبان

اشتہار

بھارت
بابری مسجد شہادت کے 29 برس بیت گئے وجود منگل 07 دسمبر 2021
بابری مسجد شہادت کے 29 برس بیت گئے

بھارت ، ٹیکس میں کمی، پیٹرول 8روپے فی لیٹرسستا ہوگیا وجود جمعرات 02 دسمبر 2021
بھارت ، ٹیکس میں کمی، پیٹرول 8روپے فی لیٹرسستا ہوگیا

بھارت میں مشتعل ہجوم کی چرچ میں تھوڑ پھوڑ ،عمارت کو نقصان،ایک شخص زخمی وجود بدھ 01 دسمبر 2021
بھارت میں مشتعل ہجوم کی چرچ میں تھوڑ پھوڑ ،عمارت کو نقصان،ایک شخص زخمی

بھارت میں نفرت جیت گئی، فنکار ہار گیا،مسلم کامیڈین وجود پیر 29 نومبر 2021
بھارت میں نفرت جیت گئی، فنکار ہار گیا،مسلم کامیڈین

بھارت میں ہندوانتہا پسندوں کی نماز جمعہ کے دوران ہلڑ بازی وجود هفته 27 نومبر 2021
بھارت میں ہندوانتہا پسندوں کی نماز جمعہ کے دوران ہلڑ بازی
ادبیات
جرمن امن انعام زمبابوے کی مصنفہ کے نام وجود منگل 26 اکتوبر 2021
جرمن امن انعام زمبابوے کی مصنفہ کے نام

پکاسو کے فن پارے 17 ارب روپے میں نیلام وجود پیر 25 اکتوبر 2021
پکاسو کے فن پارے 17 ارب روپے میں نیلام

اسرائیل کا ثقافتی بائیکاٹ، آئرش مصنف نے اپنی کتاب کا عبرانی ترجمہ روک دیا وجود بدھ 13 اکتوبر 2021
اسرائیل کا ثقافتی بائیکاٹ، آئرش مصنف نے اپنی کتاب کا عبرانی ترجمہ روک دیا

بھارت میں ہندوتوا کے خلاف رائے کو غداری سے جوڑا جاتا ہے، فرانسیسی مصنف کا انکشاف وجود جمعه 01 اکتوبر 2021
بھارت میں ہندوتوا کے خلاف رائے کو غداری سے جوڑا جاتا ہے، فرانسیسی مصنف کا انکشاف

اردو کو سرکاری زبان نہ بنانے پر وفاقی حکومت سے جواب طلب وجود پیر 20 ستمبر 2021
اردو کو سرکاری زبان نہ بنانے پر وفاقی حکومت سے جواب طلب
شخصیات
جنید جمشید کی پانچویں برسی آج منائی جائے گی وجود منگل 07 دسمبر 2021
جنید جمشید کی پانچویں برسی آج منائی جائے گی

نامور شاعر ، مزاح نگار پطرس بخاری کی 63 ویں برسی آج منائی جائیگی وجود اتوار 05 دسمبر 2021
نامور شاعر ، مزاح نگار پطرس بخاری کی 63 ویں برسی آج منائی جائیگی

سینئر صحافی ضیاءالدین ا نتقال کر گئے وجود پیر 29 نومبر 2021
سینئر صحافی ضیاءالدین ا نتقال کر گئے

پاکستانی سائنسدان مبشررحمانی مسلسل دوسری بار دنیا کے بااثرمحققین میں شامل وجود جمعرات 25 نومبر 2021
پاکستانی سائنسدان مبشررحمانی مسلسل دوسری بار دنیا کے بااثرمحققین میں شامل

سکھ مذہب کے بانی و روحانی پیشواباباگورونانک کے552ویں جنم دن کی تین روزہ تقریبات کا آغاز وجود جمعه 19 نومبر 2021
سکھ مذہب کے بانی و روحانی پیشواباباگورونانک کے552ویں جنم دن کی تین روزہ تقریبات کا آغاز