وجود

... loading ...

وجود
وجود
ashaar
کے(کہاں)الیکٹرک؟؟ وجود - بدھ 29 مئی 2019

دوستو، بجلی یا بتی کی ضرورت عام دنوں سے زیادہ رمضان المبارک میں ہوتی ہے۔۔ ہر شہرمیں بجلی کا ترسیلی نظام حکومت کے ہاتھ میں ہے لیکن ملک کا واحد شہر کراچی ہے جہاں بجلی نجی شعبے کے حوالے کردی گئی ہے اور نجی شعبے کی مرضی ہے کہ وہ اپنی مرضی میں جب چاہے عوام پر بجلی گرادے۔۔ گرمیوں میں شارٹ فال بڑھ جاتا ہے جس کے باعث پورے پاکستان میں 12 سے 16 گھنٹے تک کی اعلانیہ اور غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ ہوتی تھی اور اس موسم میں لوگ ایک دوسرے کا حال چال نہیں بلکہ ان کے علاقے اور شہر میں بجلی کا شیڈول ...

کے(کہاں)الیکٹرک؟؟

قومی تاریخ کی سنگینی محمد طاہر - بدھ 29 مئی 2019

محسن داور اور علی وزیر کو اُن کے حال پر چھوڑتے ہیں!! ابھی خڑ کمار چیک پوسٹ پر حملے کا قضیہ رہنے دیجیے!! ماضی کے جھروکوں میں جھانکتے ہیں۔نوگیارہ کے بعد پاکستان کے اندر جو حالات برپا تھے، وہ مملکت کی شناخت اور جواز کے درپے ہو گئے تھے۔ امریکی ہیبت سے دم بخود اور اپنی سرگرمیوں میں بے خود جنرل پرویز مشرف دھما چوکڑی میں مصروف تھے۔ ایک برطانوی خبر رساں ادارے نے لکھا تھا کہ پاکستان چوراہے پر بیٹھے لاوارث بچے کی طرح ہو گیا ہے جسے کوئی بھی دھتکار دیتا ہے، اُس پر چلتے چلتے ہاتھ جڑ دیتا...

قومی تاریخ کی سنگینی

کچھ داغ اچھے نہیں ہو تے! عبید شاہ - منگل 28 مئی 2019

امریکی گلو کار ڈریک گراہم نے اپنی البم ” اسکارپیو” کا گانا ” کی کی ،ڈویو لومی؟“ جون 2018 کے اواخر میں ریلیز کیا، امریکی مزاحیہ اداکار ” شیگی“ نے 29 جون کو اپنے انسٹا گرام اکاﺅنٹ پر ایک ویڈیو شیر کی جس میں اس نے چلتی گاڑی سے اتر کر اس گانے پر لب ہلائے اور اپنے فالوورز کو چیلنج دیا کہ وہ بھی ایسا کرکے دکھائیں، شیگی کے فالوورز کی تعداد 20 لاکھ سے بھی زیادہ ہے، دیکھتے ہی دیکھتے یہ ویڈیو وائرل ہو گئی، دیوانگی کے متوالے نوجوان دنیا بھر میں ایسی ہی حرکات پر مبنی اپنی ویڈیوز سوشل میڈ...

کچھ داغ اچھے نہیں ہو تے!

بے شک سیاسی لڑائی آپ کریں۔۔۔ لیکن عوام کو معاف کریں!!! راؤ محمد شاہد اقبال - اتوار 26 مئی 2019

آخر کار اٹھارویں ترمیم کے پھول بھی ایک ایک کر کے مرجھانا شروع ہوچکے ہیں، ابتدا سپریم کورٹ آف پاکستان کی طرف سے جاری کیے گئے ایک فیصلہ سے ہورہی ہے۔ جس میں اعلیٰ عدلیہ نے تمام وفاقی ہسپتال جنہیں اٹھارویں ترمیم کے تحت صوبوں نے اپنے اختیار میں لے لیا تھا،اُنہیں ایک بار پھر سے واپس وفاق کے اختیار میں دینے کا حکم صادر فرمادیا ہے اور یوں سپریم کورٹ آف پاکستان کے اِس حکم کی روشنی میں سندھ کے چار ہسپتال اور پنجاب کا ایک ہسپتال وفاق کو واپس اپنے اختیار میں لینے کی اجازت مل گئی ہے۔ گو ک...

بے شک سیاسی لڑائی آپ کریں۔۔۔ لیکن عوام کو معاف کریں!!!

لایعنیت اور امید محمد طاہر - اتوار 26 مئی 2019

زندگی اے زندگی!!!کیا ہمارا کوئی سراغ ملتا ہے؟ ہم آخر کون ہیں؟گہرے معانی کے سمندر میں غرقاب دراصل لایعنیت کے شکار! چیکو سلواکیہ کا ممتاز ادیب کافکا اچانک مطلع ذہن پر اُبھرتا ہے۔جس کی تخلیقات میں لایعنیت اور امید کی لہریں گاہے گڈ مڈ ہوجاتیں تھیں۔ ایک احمق کی کہانی ایسے ہی تو نہیں تھی جو نہانے کے ٹب میں مچھلیاں پکڑتا تھا۔ کافکا کی کہانی میں ایسے احمق کے ہاتھ کبھی مچھلیاں نہ آتی ہوں گی۔ مگر ہم کیا چیز ہے ہمارے ہاتھوں میں نہانے کے ٹب سے منوں ٹنوں وزنی مچھلیاں نکل آتی ہیں۔ کسی کو ...

لایعنیت اور امید

کپتان کی نمناک آنکھیں اور عیسیٰ خیلوی کا بوسہ انوار حسین حقی - پیر 06 مئی 2019

یکم مئی 2019 ء کو اسلام آباد کا کنونشن سینٹر چاہت، وارفتگی اور محبت کا شہر آباد کیے ہوئے تھا۔بائیس سالہ جدوجہد کے پسینے سے شرابور پروانے شمع کے گرد ناچتے دکھائی دے رہے تھے۔ یہ کہا درست ثابت ہو رہا تھا کہ ”جو پسینہ بہاتے ہیں وہی تاریخ رقم کرتے ہیں“۔ اسٹیج کے راستے ایک وہیل چیئر ایوان میں داخل ہوتی ہے۔ایک لیجنڈ اپنے محبوب، اپنے دوست اور اپنے لیڈر کے حضور دو شعر پیش کرتے ہوئے کہتا ہے کہ ”اچھے دن بھی آ ئیں گے یار“۔اُس کے بعد گائے جانے والے پی ٹی آئی کے معروف ترانے کا اختتام ہوا ہ...

کپتان کی نمناک آنکھیں اور عیسیٰ خیلوی کا بوسہ

پولیو مہم، دہشت گردی اور کج بیانی جلال نورزئی - پیر 06 مئی 2019

پاکستان کے اندر پولیو سے بچاؤکے قطرے پلانے کی مہم کی راہ میں ہر طرح کے روڑے اٹکائے گئے ہیں، حالانکہ ملک کے بڑے بڑے دانشور، علمائے کرام، خصوصاً بڑے معتبر دینی مدارس، مدارس کی بڑی تنظیمات، دینی جماعتیں اور ان کے اکابر اس بابت عوام الناس سے بچوں کو پولیو ویکسین کے قطرے پلانے کی بارہا تاکید کرچکے ہیں۔ چنانچہ ملک بھر میں مہم کامیابی سے چل پڑی۔ ایسا ہی ماحول بلوچستان کے اندر بھی بنا ہے۔ بلوچستان اس لحاظ سے مشکل صوبہ ہے کہ یہاں شرح خواندگی کم ہے۔ اس بنا پر مسائل کا سامنا رہا ہے، جو ...

پولیو مہم، دہشت گردی اور کج بیانی

رائیونڈ میں بکسے دھوپ کھارہے ہیں محمد طاہر - پیر 06 مئی 2019

ایک مزاح نگار نے لکھا تھا: پاکستانی افواہوں کی سب سے بڑی”خرابی“ یہ ہے کہ سچ نکلتی ہے۔ایک بات کہنے سے رہ گئی، پاکستانی خبروں کی سب سے بڑی”خوبی“یہ ہے کہ اکثر جھوٹ نکلتی ہے۔ بات مکمل ہوئی، مگر کہاں؟ وطن عزیز کا ایک مسئلہ یہ بھی ہے کہ یہاں ماضی دُہراتے دُہراتے ایسے تحیر خیز حالات مہیا کیے جاتے ہیں کہ لگتا ہی نہیں کہ ”یہ تو وہی جگہ ہے گزرے تھے ہم جہاں سے“!!چنانچہ خبروں کے کاروبار میں جھوٹ کو سچ اور سچ کو جھوٹ باور کرانے کا کاروبار بھی کبھی مندا نہیں پڑتا۔ جس آدمی کا گواہ اُس کا ما...

رائیونڈ میں بکسے دھوپ کھارہے ہیں

انصاف کے نام پر ماجرا محمد طاہر - پیر 08 اپریل 2019

ابھی اس انوکھے لاڈلے کو چھوڑیئے! جو معصوم بچوں کے درمیان ہمیں تعلیم کرتا تھا کہ اگر کوئی کرپشن کرتا ہے تو کرنے دیں، پانچ سال بعد عوام اُن کا احتساب خود کریں گے۔ قانون و انصاف کو ایسی انوکھی تعبیر دینے والے حمزہ شہباز کو اگلے زمانوں میں کوئی پاکستان کے مونٹیسکو سے کیوں نہ یاد کرے گا؟وہ حمزہ نیب کے چھاپے میں اپنے چنیدہ جتھے کو ڈھال بنا کر قانون کو اپنے گھر کی دہلیز پر اُٹھک بیٹھک کیوں نہ کروائے؟ پاکستان کی اشرافی ریاست میں جو بچے سونے کا چمچ لے کر پیدا ہوئے، جنہوں نے اپنے گھروں...

انصاف کے نام پر ماجرا

کدی سوچنا وی ناں۔۔ علی عمران جونیئر - اتوار 03 مارچ 2019

دوستو، جب سے بھارتی طیارے تباہ ہوئے پاکستانی قوم کافی ’’شوخی‘‘ بنی ہوئی ہے، ان کی خوشیوں کا کوئی ٹھکانا نہیں۔۔عوام کا مورال عزم و حوصلے کے انڈیکس پر انتہائی بلندیوں پر ہے، کراچی میں ہم نے کئی علاقوں میں گھوم پھر کر دیکھا، بازار کھلے ہوئے تھے، سارے کام نارمل انداز میں چل رہے تھے، چائے خانوں اور ’’تھڑوں‘‘ پر طیارہ کی تباہی موضوع سخن تھی، سب اپنی فوج پر دادوتحسین کے ڈونگرے برسارہے تھے، کہیں سے ایسا نہیں لگ رہا تھا کہ یہ قوم خوف زدہ ہے یا پھر ان پر جنگ مسلط ہونے کا خدشہ ہے۔۔ بات ...

کدی سوچنا وی ناں۔۔

محتاط وزیر اعلیٰ اور مسائل کے انبار جلال نورزئی - اتوار 03 مارچ 2019

بلوچستان کے وزیراعلیٰ بہت محتاط شخص ہیں۔ ان کی پوری کوشش ہے کہ اپنی حکومت میں صوبے کی بہتری کے لیے بڑے پیمانے پر کام کریں۔ یقیناًوہ اس جانب بڑھنے کے لیے اپنی صلاحیتوں کو استعمال بھی کررہے ہیں۔ اس مقصد کے لیے وقت بھی دے رکھا ہے۔ ظاہر ہے کہ کوئی بھی انقلابی اقدام اور تبدیلی تنہا کسی شخص کے بس و اختیار میں نہیں ہے۔اس مقصد کی خاطر ہمہ پہلو تعاون اور ہمرکابی کی ضرورت ہوتی ہے۔ ممکن ہے کہ جام کمال اپنی حکومت اور اتحادیوں سے مطمئن ہوں۔ مگر ماضی کا مشاہدہ سامنے ہے ، اور اب بھی اس ضمن ...

محتاط وزیر اعلیٰ اور مسائل کے انبار

طیارے زمین پر۔۔ علی عمران جونیئر - جمعه 01 مارچ 2019

دوستو، منگل کی صبح عین فجر کے وقت بزدل دشمن فوج کے جہازوں نے پاکستانی سرحدوں میں داخل ہوکر اپنے ناپاک عزائم پورے کرنے کی کوشش کی، لیکن بہادر شاہین جیسے ہی جھپٹے تو پھر بھارتی جہازوں نے پلٹ کر بھی نہیں دیکھا، بلکہ جہازوں کی رفتار بڑھانے کے لیے ایک ہزار کلوگرام سے زائد بارودی مواد بھی گرادیا، تاکہ بھاگ نکلنے میں آسانی ہو۔۔ پاکستانی سوشل میڈیا صارفین نے بھارتی سرجیکل اسٹرائیک کے جھوٹے دعوے کا پول کھولتے ہوئے کہا کہ بھارتی فضائیہ حملے میں صرف درختوں کو مارنے میں کامیاب ہوئی ہے۔ س...

طیارے زمین پر۔۔

شاباش پاک فوج ، شاباش عمران خان محمد طاہر - جمعرات 28 فروری 2019

بھارت میں عام انتخابات اپریل اور مئی میں متوقع ہے۔ مودی حکومت پانچ ریاستوں کے انتخابات ہارنے کے بعد تیزی سے اپنی مقبولیت کھورہی ہے۔ چنانچہ بھارتی وزیراعظم نریندر مودی (جنہیں گجرات کا قصاب بھی کہا جاتا ہے )ایک بار پھر گجرات کی وہی بوسیدہ وفرسودہ حکمت عملی اختیار کرتے ہوئے پورے بھارت کو مسلم دشمنی کے جنون میں مبتلا کرچکے ہیں اور اب وہ اپنے ارذل واسفل ذہن کے ساتھ پاکستان کے خلاف محاذآرا ہیں۔ بھارتی طیارے منگل کے روز آزاد جموں وکشمیر میں تین سے چار میل تک اندر آئے اور پاکستانی طی...

شاباش پاک فوج ، شاباش عمران خان

شور بازار کا صبغت اللہ مجددی جلال نورزئی - پیر 25 فروری 2019

کابل کے شور بازار کے معروف علمی و روحانی حضرات گھرانے کے صبغت اللہ مجددی 11 ؍فروری کو 93 برس کی عمر میں خالق حقیقی سے جا ملے۔ اللہ تعالیٰ انہیں اپنی جوارِ رحمت میں جگہ دے ، خطاؤں ا ور لغزشوں سے درگزر فرمائے۔ افغان سرکردہ جہادی رہنماؤں سے تعارف اپنے قبلہ محترم مولانا نیاز محمددرانی مرحوم کے طفیل ہوا۔جنہوں نے زندگی کا ایک بڑاحصہ مفلوک الحال افغان مہاجرین کی خدمت میں بسر کیا۔ والد محترم کے انجینئر گلبدین حکمت یار ، مولوی یونس خالص، برہان الدین ربانی سمیت سب ہی قائدین سے اچھے تعل...

شور بازار کا صبغت اللہ مجددی

اپنی اپنی ڈفلی اپنا اپنا راگ محمد طاہر - جمعه 22 فروری 2019

بدترین تعصب اور بے پناہ لالچ نے ہمارا تماشا بنا دیا۔ مرعوب لوگوں کی دانائی بھی مضحکہ خیز ہوتی ہے۔ ولی عہد محمد بن سلمان کامیاب دورے کے بعد رخصت ہوئے مگر اس دورے کو ناکام دیکھنے کے خواہشمندوں کا ماتم ختم نہیں ہورہا۔ کیسے لوگ ہیں ہم؟ تعصبات نے جنہیں اندھا کردیا۔ گروہی نفسیات کے سامنے یہ پھلتا پھولتا ،چمکتا دمکتا ملک کم پڑنے لگا ۔ مسلم لیگ نون اور پیپلزپارٹی کے جرائم صرف یہ تو نہیں کہ انہوں نے باجماعت ، پورے خشوع وخضوع کے ساتھ ملک لُوٹا۔ چارچار ہاتھوں سے دولت سمیٹی ۔وسائل سے ما...

اپنی اپنی ڈفلی اپنا اپنا راگ

یومِ محبت یا یومِ اوباشی انوار حسین حقی - جمعرات 14 فروری 2019

آج چودہ فروری ہے۔ گزشتہ ایک ڈیڑھ عشرے سے مغربی دنیا کی طرح ہمارے ہاں بھی مغربی معاشرے کی نقالی کے زیر اثر لوگ اہتمام کے ساتھ ’’ ویلنٹائن ڈے ‘‘ کو منانے لگے ہیں ۔ خود کو ماڈرن سمجھنے اور ظاہر کرنے کے نفسیاتی مرض میں مبتلا ہمارے معاشرے کے اس مٹھی بھر جنونی گروہ کو اس سے کوئی غرض نہیں ہے کہ مغربی معاشرے میں منائے جانے والے تہواروں یا ایام کا پس منظر کیا ہے ۔ ان لوگوں کا مقصد تو اپنے بدیسی آقاؤں کی اندھی تقلید یا نقالی ہوتا ہے ۔ ایسے لوگ ہندوؤں کی دیوالی، ہولی اور بسنت کے تہواروں...

یومِ محبت یا یومِ اوباشی

’’ویلا۔ٹائم ڈے۔۔‘‘ علی عمران جونیئر - جمعرات 14 فروری 2019

دوستو،ہرسال کی طرح اس بار بھی فروری کا سورج چڑھتے ہی یوم ویلنٹائن منانے یا نہ منانے کی بحث نے اٹھانوے فیصد مسلمان پاکستانیوں کو آن گھیرا ہے۔۔ہرسال 14 ؍فروری کو دنیابھر میں ویلنٹائن ڈے منایا جاتا ہے۔ اس دن کی تاریخ کے متعلق مختلف روایات ملتی ہیں جن میں بہر حال یہ بات مشترک ہے کہ یہ دن کسی سینٹ ویلنٹائن نامی غیر مسلم کی یاد میں منایا جاتا ہے جسے ملکی قوانین کو توڑنے پر جیل کی سزا ہوئی اور بعد میں جیلر کی بیٹی سے ناجائز تعلقات رکھنے کی بناء پر، روم کے بادشاہ کلاڈیس نے 14 فروری 2...

’’ویلا۔ٹائم ڈے۔۔‘‘

میرا یہ مشورہ آزمائیے ضرور عطا تبسم - جمعرات 14 فروری 2019

'قائد اعظم محمد علی جناح کی سحر انگیز شخصیت کے بہت پہلو ہیں، وہ مضبوط اعصاب، ذہانت، متانت، اور بروقت درست فیصلے کرنے کی صلاحیت سے مالا مال تھے۔ اور انکی کرک دار آواز سننے والوں پر سحر طاری کردیتی تھی ۔قائد اعظم کی شخصیت کا ایک اور پہلو یہ بھی ہے کہ وہ لباس ، اس کی تراش خراش کا بہت خیال رکھتے تھے۔ بہت نفیس اور دیدہ زیب لباس پہنتے ، اور یہ لباس ان پر سجتے بھی بہت تھے۔ مولاناسید ابو اعلی مودودی کی شخصیت کا بھی ایک وصف یہ ہے کہ وہ اپنے لباس کا بہت خیال کرتے، شیروانی اور کرتا پا...

میرا یہ مشورہ آزمائیے ضرور

ؒلگ گئی نظر۔۔؟؟ علی عمران جونیئر - اتوار 10 فروری 2019

دوستو، پندرہ ،سولہ سال قبل اسی عنوان سے جرأت میں لکھا کرتا تھا، یہ اپنے وقت کا سب سے ہٹ سلسلہ تھا، جس کی شہرت کا اندازہ ہمیں اس بات سے ہوا کہ دوتین ماہ لکھنے کے بعد جب ہم نے کالم لکھنا بند کیا تو ہمیں انتظامیہ نے کہا کہ کالم لکھیں، ہم نے کہا اور بھی کام ہیں زمانے میں کالم کے سوا۔۔ جس پر ہمیں جرأت کی تاریخ میں پہلی بار کالم لکھنے کا معاوضہ ملنے لگا تھا۔۔ ہمیں جب پیسے ملنے لگے تو پھر سے لکھنا شروع کردیا، اور اس وقت تک لکھتے رہے جب تک جرأت میں جاب کرتے رہے۔۔ یہ سلسلہ دو،تین سال ...

ؒلگ گئی نظر۔۔؟؟

پاکستان مخالف مثلث جلال نورزئی - اتوار 10 فروری 2019

پانچ اور چھ فروری2019 ء کو روس کے دار الحکومت ماسکو میں افغانستان کی سیاسی احزاب و شخصیات کا اجلاس افغانستان میں امن اور غیر ملکی افواج کے انخلاء کی سمت ایک اور پیش رفت ہے۔ ایک بڑی تبدیلی درماندہ افغانستان کے اندر رونما ہونے والی ہے، جس کی حمایت و نصرت ہونی چاہیے۔ خصوصاً پاکستان کے اندر قرار تب آسکتا ہے جب افغانستان کامل طور پر خود مختار اور پرامن ملک ہوگا۔ حیرت ہے کہ افغان کٹھ پتلی صدر اشرف غنی پر پریشانی طاری ہوگئی اور امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ سے امریکی و نیٹو افواج نہ نکالنے...

پاکستان مخالف مثلث

ناموس یوں ہی جائے گی آبِ حیات کی محمد طاہر - بدھ 06 فروری 2019

پاکستان میں طاقت کے سب سے عالی مرکز پر جلوہ افروز شخصیت کے خیالاتِ عالیہ کا یہ نکتہ تمام بڑے حلقوں میں زیرِ گردش ہے کہ ’’وہ ایک نارمل پاکستان چاہتے ہیں‘‘۔ متوازی طور پر ایک اور تصورِ پاکستان سے بھی ہمیں سابقہ ہے۔ یہ ریاست مدینہ کا تصور ہے جو ہمارے پیارے وزیراعظم عمران خا ن کا ہے۔ جن سے مذکورہ طاقت ور شخصیت کو سب سے زیادہ میلان ہے۔ اور وہ گاہے اُن کی تعریف سے نہیں چوکتے۔ یہاں پہلا سوال تو یہ اُٹھتا ہے کہ کیا ایک نارمل پاکستان اور ریاست مدینہ میں کوئی مطابقت ہے؟واضح رہنا چاہئے ...

ناموس یوں ہی جائے گی آبِ حیات کی

آزادی کی جانب گامزن افغانستان جلال نورزئی - پیر 04 فروری 2019

خطے کے ممالک اور افغان عوام کے لیے خوشی اور راحت کا مقام ہے کہ افغانستان میں امارت اسلامیہ کی طویل اور صبر آزما مزاحمت (جس میں یقیناًحزب اسلامی افغانستان کا بھی حصہ ہے) کے نتیجے میں آزادی کی نئی صبح طلوع ہونے کے امکانات روشن ہو گئے ہیں ۔ قابض امریکا اس امر کے لیے آمادہ وبے چین ہے کہ وہ اپنی افواج افغان مومن عوام کی سرزمین سے نکال لے ۔ قطر کے دارلحکومت دوحہ میں 21 تا 26 جنوری 2019 ء ہونے والے مذاکرات کے بعد میرے دماغ میں افغانستان کی تاریخ کے اوراق پلٹنا شروع ہو گئے ۔ جدید اف...

آزادی کی جانب گامزن افغانستان

سانحۂ ساہیوال: تماشے پر تماشا محمد طاہر - پیر 28 جنوری 2019

انحہ ساہیوال دل میں برچھی بن کر اُترتا ہے۔ زندگی ہم سے روٹھ گئی ۔ ہمار اطرزِ فکر تباہی کو دعوت دیتا ہے۔ یہ تبدیلی سرکار کا امتحان ہے، کڑا امتحان!!!کہا جاتا ہے ، جنگ میں بوڑھے بچوں کے لاشے اُٹھاتے ہیں جبکہ امن میں بچے بوڑھوں کو دفناتے ہیں۔پاکستان میں زمانہ امن و جنگ کی تمیز مشکل ہے ۔ بچوں کے سامنے گھر کے بڑوں کو گالیوں کے ساتھ گولیوں کا نشانا بنایا گیا۔ المیوں کا المیہ یہ ہے کہ ریاست نے اس کا تماشا نہیں دیکھا بلکہ اس اندوہ ناک واقعے کو تماشا بنادیا۔ ساہیوال کا واقعہ دراصل تحر...

سانحۂ ساہیوال: تماشے پر تماشا

وزیر اعلیٰ مخالف ریشہ دوانی جلال نورزئی - پیر 21 جنوری 2019

جام حکومت کے خلاف اندریں شورُ اٹھانے اور فضاء بنانے کی بہت کوششیں ہوئی ہیں۔ سرِدست ان لوگوں کو شرمندگی کا سامنا ہوا ہے۔ یقیناًجام کمال خان کی چند مجبوریاں ہیں وگرنہ شاید یہ لوگ موجودہ مقام پر بھی نہ ہوتے۔دیکھا جائے تو حالات جنوری 2018 ء جیسے نہیں ہیں۔ ان صاحبانِ بے خِرد کو معلوم ہونا چاہیے کہ تب مرکز میں نواز شریف کی حکومت تھی۔ صوبے میں بھی وزیراعلیٰ نواز لیگ کے تھے۔ ماحول پوری طرح نواز لیگ کے خلاف بنا ہوا تھا۔ اور پھر جو کچھ بلوچستان میں تحریک عدم اعتماد کے عنوان سے ہوا وہ س...

وزیر اعلیٰ مخالف ریشہ دوانی

اہلِ صحافت محمد طاہر - پیر 21 جنوری 2019

صحافی کو ہمیشہ باسی روٹی اور تازہ سفر درپیش رہتا ہے۔ اسلام آباد کا سہ روزہ قیام غیر معمولی حالات کی تفہیم میں نہایت معاون رہا۔ سی پی این ای کے پاکستان میڈیا کنونشن نے مالکان ومدیران کے کان کھڑے کیے۔ اخبارات وجرائد جن مصائب کے شکار ہیں، مدیران اس کا سامنا کرنے کے لیے کمربستہ ہوچکے۔ مگر اُنہیں ادراک ہے کہ نیا سفر بجائے خود صبر آزما ہے۔ میڈیا کی صنعت بحران در بحران سے دوچار ہے۔ اخباری مالکان کی نمائندہ تنظیم اے پی این ایس کچھ ہاتھوں میں یرغمال بن گئی۔اپنے آئین کے محور سے نکل کر ...

اہلِ صحافت

پیپلزپارٹی کا سیاسی افلاس محمد طاہر - پیر 14 جنوری 2019

ابھی تو بلاول بھٹو نے اپنی سیاست کا آغاز کیا ہے! مگر یہ کیا ،وہ اپنے انجام کو گلے لگانے کے لیے اتنے اُتاؤلے کیوں ہوگئے؟ الیگزینڈر پوپ نے 1711ء میں ایک نظم’’An Essay on Criticism‘‘ لکھی جس کے ایک جزوِ فقرہ نے انگریزی زبان کو ایک کہاوت دینے میں مدد دی: ’’Fools rush in where angels fear to tread‘‘ (بے وقوف وہاں جاگھستے ہیں جہاں فرشتے بھی قدم رکھنے سے گھبراتے ہیں)۔ بلاول بھٹو خود کو ایک ایسے ہی انجام سے دوچار کرنے پر بضد ہیں۔ جناب آصف علی زرداری کے پاس کھینچنے کے لیے رسیاں باق...

پیپلزپارٹی کا سیاسی افلاس

بھٹو زندہ ہے، مگر یہ جیتے لوگ!! محمد طاہر - پیر 07 جنوری 2019

بھٹو رجحان کے متعلق تاریخ اپنا فیصلہ صادر کرنے والی ہے۔ مسلم سرزمین پر کبھی علم کے مینار دنیا کو شرماتے تھے۔ اندلس کو یاد کرتے ہیں جہاں عظمت ٹوٹ کر برستی تھی۔ مسلم دینا کے بڑے دماغ جہاں اکٹھے ہوئے۔ عظیم مفسر امام قرطبی ؒ یہیں قرطبہ میں 1214 میں پیدا ہوئے تھے۔ یہ مغرب کا وہی شہر ہے جہاں مشرق کا شاعررویا تھا۔اموی خلیفہ عبدالرحمن نے 754ء میں مشرق ومغرب کی تمدنی میراث کو مسجد قرطبہ میں یکجا کردیا ۔جس پر عروج کا سورج صدیوں طلوع رہا ۔ لگ بھگ گیارہ سو برسوں بعد جب مشرق کے عظیم شاعر...

بھٹو زندہ ہے، مگر یہ جیتے لوگ!!

نشانا پاکستان ہے! جلال نورزئی - پیر 07 جنوری 2019

مشرقی پاکستان میں علیحدگی کی بھارتی تخریب میں ہر گزرتے دن کے ساتھ اضافہ ہو رہا تھا ۔ایک بھارتی مبصر’’ سبرا مینیم سوامی ‘‘ جن کا شاید آج کل بھارتیہ جنتا پارٹی سے تعلق ہے نے پندرہ جون 1971ء کی ڈیلی مدر لینڈ میں لکھا تھا کہ’’ پاکستان کے مٹ جانے سے ہندوستان کی خارجی و داخلی سلامتی مستحکم ہو گی ۔ ہندوستان کو ایک بڑی طاقت بننا ہے جس کیلئے پاکستان کا ختم ہونا ضروری شرط ہے ۔‘‘16دسمبر 1971ء کو پاکستان دولخت ہوا ،بنگلہ دیش سے بڑھ کر بھارت میں جشن کا سما ں تھا ۔ بھارت کی سرحدیں بنگلہ دی...

نشانا پاکستان ہے!

ہزارہ ڈیموکریٹک پارٹی کی جیت جلال نورزئی - بدھ 02 جنوری 2019

کوئٹہ کے حلقہ چھبیس کے ضمنی انتخاب میں ہزارہ ڈیموکریٹک پارٹی کے اُمیدوار قادر علی نائل بالآخر کامیاب ہو گئے ۔اس جماعت کے ارکان کی تعداد بلوچستان اسمبلی میں دو ہوگئی۔یوں65 رُکنی بلوچستان اسمبلی ارکان کی تعداد کے لحاظ سے پوری ہوگئی۔ پچیس جولائی کے عام انتخابات کے بعد مختلف وجوہ کی بناء پر چند حلقوں پر ضمنی انتخابات کرانے پڑے۔14 اکتوبر کو ضمنی انتخاب میں پی بی 35 مستونگ سے نواب اسلم رئیسانی اور اور پی بی 40 خضدار سے بی این پی کے محمد اکبر مینگل کامیاب ہوئے۔پی بی 35 مستونگ پر سرا...

ہزارہ ڈیموکریٹک پارٹی کی جیت

دو لاکھ دلہنوں کے عروسی جوڑے مفت عطا تبسم - پیر 31 دسمبر 2018

اظہر سید سے ملاقات اتفاقی تھی، کراچی پریس کلب میں ظہرانے کا اہتمام عبدالسلام سلامی نے کیا تھا، ڈاکٹر شیر شاہ سید سمیت ہم چار افراد تھے، اچانک ڈاکٹر شیر شاہ سید نے بتایا کہ اظہر سید اس بار دو لاکھ سے زائد شادی کے جوڑے لے کر پاکستان آئے ہیں، جو غریب مستحق ایسی خواتین کو تقسیم ہوں گے، جو بہت جلد دلہن بننے والی ہیں۔ پاکستان میں جہاں جہیز کے مسائل ہیں، وہاں غریب خاندانوں کے لیے شادی کے دلہن کے جوڑے بھی ایک مسئلہ ہیں، شادی پر خواتین چاہے غریب ہوں یا امیر، شادی کا عروسی جوڑا ضرور پہ...

دو لاکھ دلہنوں کے عروسی جوڑے مفت

دنیا بدل رہی ہے مگر پی پی نہیں! محمد طاہر - پیر 31 دسمبر 2018

گردش لیل ونہار میں پاکستان کے زمین وآسمان بدل رہے ہیں۔ عمران خان اگر ناکام بھی ہوئے تو بھی ہر آن تغیر پزیر حقائق نہیں بدل سکیں گے۔گردوپیش کا پرانا پن لوٹ نہ سکے گا۔ عوامی ذہن کا اجتماعی سانچہ پُرانی ساخت سے اوبھ گیا ہے ۔ رہنماؤں کا مسئلہ یہ ہے کہ وہ اس تبدیلی سے آگاہ نہیں۔عوامی ذہن کی تبدیل ہوتی ساخت میں ردِ عمل کی نفسیات موجود ہے۔ اِس میں رعب قبول کرنے کی پرانی عادت سے ایک بغاوت ہے۔ مگرسیاست دان پُرانی عادتوں کے اسیر ہیں۔ شریف خاندان تیزی سے اپنے انجام سے بغلگیر ہورہا ہے۔ م...

دنیا بدل رہی ہے مگر پی پی نہیں!

بے وطنیت اور وزیر اعظم کا وژن انوار حسین حقی - پیر 31 دسمبر 2018

ایک ایسے دوراور ماحول میں جب آنکھوں سے چمک اور باتوں سے خوشبو اُڑ چُکی ہو۔چہروں سے تازگی اور جذبوں سے سرمستی رُوٹھی رُوٹھی سی محسوس ہو۔ کوئی صدا لگائے، آواز بلند کرے، اذان دے تو بہت بھلا لگتا ہے۔سید لیاقت بنوری ایڈوکیٹ ایک ایسی ہی دل آویز شخصیت کا نام ہے۔جنہوں نے ہمیشہ اندھیرے میں چراغ جلانے کی کوشش کی ہے۔یہ ہمیشہ سرشار و شرابور جذبوں کی خوشبوئیں مہکاتے ہیں ۔ان سے میرا تعارف میانوالی میں قائم افغان مہاجر کیمپ کوٹ چاندنہ کی وساطت سے ہوا تھا ۔ میں کوئی دو دہائیوں سے ان کی نگران...

بے وطنیت اور وزیر اعظم کا وژن

پہلے سو دن اور پنجاب کے جنگلات انوار حسین حقی - پیر 24 دسمبر 2018

وزیر اعظم عمران خان گزشتہ روز پنجاب حکومت کے پہلے سو دنوں کی کارکردگی کا جائزہ لینے کے لیے لاہور میں تھے۔ اُسی روز ایچی سن کالج لاہور کے ایک سابق ممتاز معلم ’’پروفیسر مولن ‘‘کا ایک ویڈیو پیغام نشر ہوا۔ یہ پیغام کرسمس کے موقع پر جاری ہوا ہے۔ پروفیسر نے اپنے شاگرد اور پاکستان کے وزیر اعظم کے نام اس پیغام میں انہیں خاص طور ہر نصیحت کی ہے کہ استقامت کامیابی کی کنجی ہے۔’’ پروفیسر مولن ‘‘ اپنے دور میں لاہور کے ایچی سن کالج کے ایک نامور اُستاد تھے انہوں نے تعلیمی شعبے میں گراں قدر خ...

پہلے سو دن اور پنجاب کے جنگلات

کرتار پور راہداری بھارت کے گلے کی ہڈی کیوں بنی؟ محمد انیس الرحمٰن - پیر 24 دسمبر 2018

ایسا محسوس ہوتا ہے کہ بھارتی نیتا آنے والے وقت کے خوف سے سہمے ہوئے ہیں،یہی وجہ ہے کہ کرتارپور بارڈر کی راہداری کھلنے سے آواز ان کے حلق میں پھنسی ہوئی ہے۔ بھارتی وزیر خارج سشما سوراج اسے پاکستان کی چال قرار دے رہی ہیں۔ بھارتی میڈیا کی بدحواسی کا یہ عالم ہے کہ چند روز قبل ایک دینی مدارس کے دو طلبہ نے سوشل میڈیا پر ایک تصویر اپ لوڈ کردی جس میں دہلی تک کا فاصلہ بھی تحریر تھا، پھر کیا ہوا پورے بھارت میں ایک کہرام مچ گیا۔ ملک کے طول وعرض میں ان دو پاکستانی طلبہ کے پوسٹر لگا دیے گئے...

کرتار پور راہداری بھارت کے گلے کی ہڈی کیوں بنی؟

حلقہ’’ چھبیس‘‘ کا ضمنی انتخاب جلال نورزئی - پیر 24 دسمبر 2018

ہزارہ ڈیموکریٹک پارٹی کے سیکریٹری جنرل علی احمد کوہزاد 25جولائی2018ء کے عام انتخابات میں حلقہ پی بی26کوئٹہ پر کامیاب ہوئے تھے۔ ازیں بعد ان کی پاکستانی شہریت کا مسئلہ کھڑا ہوا ۔چنا ں چہ الیکشن کمیشن نے یہ نشست خالی قرار دیدی اور ضمنی انتخاب کیلئے 31دسمبر کا دن مقرر کردیا۔ جس کے لیے تیاریاں زور و شور سے جاری ہیں۔ بلوچستان اسمبلی کے اندر حزب اختلاف کی جماعتیں پشتونخوامیپ، بلوچستان نیشنل پارٹی، جے یو آئی (ایم ایم اے) کے امیدوار مولانا ولی محمد ترابی کے نام پر متفق ہوئی ہیں ۔ گویا...

حلقہ’’ چھبیس‘‘ کا ضمنی انتخاب

بلی اور پنجاب کے ادبی و ثقافتی ادارے انوار حسین حقی - جمعه 21 دسمبر 2018

گزشتہ پورا ہفتہ لاہور میں گزرا یا یوں کہئے کہ اس تاریخی شہر کی نذر ہوگیا ۔ فن و ثقافت کے مرکز اور علم و ادب کے گہوارے اس شہر کے بارے میں اب کے بار بار یہ گُماں گزرا کہ یہ فکری یتیموں کا شیلٹر ہوم بن چُکا ہے۔ چھوٹے بڑے شاعر، ادیب اور دانشور کہلانے والے مختلف عہدوں اور اداروں کی سربراہی کے لیے مارے مارے اور للچائے للچائے پھر رہے ہیں ۔ وزیر اعلیٰ عثمان بزدار او ر وزیر اطلاعات فیاض الحسن چوہان اداروں اور عہدوں کی فہرستیں سامنے رکھ کر قابل اور اہل افراد تلاش کرنے میں مصروف ہیں ۔ ا...

بلی اور پنجاب کے ادبی و ثقافتی ادارے

خشک سالی اور پانی کا مسئلہ جلال نورزئی - بدھ 19 دسمبر 2018

یقیناًآفات ارضی و سماوی پر انسان کا بس و قدرت نہیں ہوتا، تاہم حکومتیں پیش بندی کرتی ہیں، تاکہ نقصانات کم سے کم ہوں ۔اور لوگوں کے تحفظ کے لیے جامع منصوبہ بندی کرتی ہیں۔ بلوچستان کے کئی اضلاع اس وقت خشک سالی کی لپیٹ میں ہیں۔ ایک لمبے عرصے سے بارشیں نہیں ہوئی ہیں۔ جس کی وجہ سے فصلیں، باغات ، مال مویشی تباہی کے دہانے پر ہیں۔پیش ازیں نوے کی دہائی میں طویل خشک سالی کے نتیجے میں بلوچستان کے اندر زمینداری و زراعت کو شدید نقصان پہنچا۔ گلہ بانی کا شعبہ شدید متاثر ہوا۔چنا ں چہ اس وقت صو...

خشک سالی اور پانی کا مسئلہ

نجومی کیا کرے !!! ارم ہاشمی - بدھ 19 دسمبر 2018

جب سے ملک میں بھوک بڑھی ہے نجوم پڑھنے والوں کی تعداد میں روز بروز اضافہ ہونے لگا ہے ۔ گورنمنٹ نے اناج کے واسطے جگہ جگہ یوٹیلیٹی اسٹورز کھول رکھے ہیں مگر یہاں خوراک نہیں ملتی،تھوڑی تھوڑی بھوک ملتی ہے ۔آہستہ آہستہ بڑھتی ہوئی موت ملتی ہے ۔گورنمنٹ جو امن کی بات کرتی ہے اگر پیٹ میں لگی بھوک کی جنگ کو ختم کر دے تو دنیا میں خودبخود امن قائم ہو جائے ۔مہنگائی،بھوک اور افلاس کے مارے لوگ‘‘ اچھے دنوں’’ کو ‘‘ستاروں کی چال’’میں تلاشنے لگے ہیں۔ان زائچوں میں یہ پیٹ بھرنے کو روٹی،تن کے ڈھکنے ...

نجومی کیا کرے !!!

نیب کا انٹروگیشن سینٹر انوار حسین حقی - پیر 17 دسمبر 2018

ارہ اکتوبر1999 کی درمیانی شب جنرل پرویز مشرف کے جرنیلی بندوبست آغاز ہوا تو میاں نواز شریف نظر بند کر دیے گئے تھے ۔ دو تین دن کسی کو کوئی خبر نہ ہوئی کہ سابق وزیر اعظم کو کہاں رکھا گیا ہے۔ کُچھ دنوں کے بعد وہ منظر عام پر آئے ۔ طیارہ سازش کیس کی ایف آئی آر درج کرنے کے بعد انہیں جوڈیشل میجسٹریٹ کے روبرو پیش کیا گیا تو دُنیا ان کے پہلے بیانیہ کی منتظر تھی ۔جب صحافیوں کا اُن سے آمنا سامنا ہوا تو وقت گویا رُک سا گیا تھا ۔ لیکن جب ایک جرنیل کے ہاتھوں سبکدوش کیے گئے عوامی وزیر اعظم گ...

نیب کا انٹروگیشن سینٹر

سہرے کے پھول انوار حسین حقی - جمعرات 13 دسمبر 2018

ڈیرہ اسماعیل خان سے تعلق اُتنا ہی پُرانا ہے جتنی میری عمر ہے ۔اس شہر پُر جمال سے محبتوں میں میری مرحوم والدہ کی لوریوں کی بازگشت بھی شامل ہے ۔ بچپن کی یادوں کا سحر سوا ہے ۔اب جب کبھی بھی زندگی کی بے ترتیب مصروفیات اس شہر میں لے جاتی ہیں تو ڈیرہ کے درودیوار کی طرف اس انداز سے نظریں اُٹھتی ہیں کہ دل کے ساتھ آنکھیں بھی بھر آتی ہیں ۔اپناماضی تلاش کرتے ہیں تیری آنکھوں میں زندگی اور میں ۱۹۹۷میں یہاں کے صحافتی حلقوں سے محمد عرفان مُغل او ر عثمان غنی اسرا کے ذریعے سے قائم ہ...

سہرے کے پھول

عنبرین سواتی کی بددُعا ؟ انوار حسین حقی - هفته 08 دسمبر 2018

وزیر اعظم عمران خان کا کہناتھا کہ ’’ قصور وار ثابت ہونے پر اعظم سواتی کو مستعفی ہونا پڑے گا ۔۔ ‘‘ وقت نے کپتان کا کہا درست ثابت کر دیا ۔ وزیر اعظم کو انہوں نے اپنا استعفیٰ پیش کر دیا جو فوری طور پر منظور کر لیا گیا اور اعظم سواتی کی وزارت قصہ پارینہ ہو گئی ہے ۔ معاملہ عدالتِ عظمیٰ میں زیر سماعت ہے ۔ فیصلے سے پہلے ہی ’’ بڑے بے آبرو ہو کر تیرے کوچے سے ہم نکلے ‘‘ والی صورتحال اس ارب پتی سیاستدان کو درپیش ہے ۔ اس موقع پر سب کو پاکستان تحریک انصاف کی سرگرم خاتون رہنما عنبرین سوات...

عنبرین سواتی کی بددُعا ؟

کوئی سرخی ہو تو افسانہ سمجھ میں آئے! محمد طاہر - پیر 03 دسمبر 2018

وزیراعظم عمران خان کی حکومت کو سو دن ہوئے!ان سو دنوں میں عمران خان نے پوری محنت کی کہ اُن کی رہی سہی حمایت بھی باقی نہ رہے۔ اُنہوں نے خود پر اعتماد کے چراغ اپنی بے تدبیریوں کی پھونکوں سے ایک ایک کرکے بجھائے۔ یہ سودن نئے پاکستان کا دیباچہ تھے، اب شاعر کی زبان میں پوچھ رہے ہیں کہ نیا چار دن میں پُرانا ہوا یہی سب ہوا تو نیا کیا ہوا درحقیقت عمران خان کے سو دنوں کے بعد اب وہ دن آگیا ہے کہ اس حکومت کے متعلق ایک حتمی اور منصفانہ رائے قائم کی جائے۔ آج 3؍ دسمبر کو جب آپ یہ سطور پڑھ...

کوئی سرخی ہو تو افسانہ سمجھ میں آئے!

انتخابات2018 شفاف تھے ؟ انوار حسین حقی - پیر 03 دسمبر 2018

گزشتہ روز ایک شادی میں شرکت کے لیے بھکر جانا ہوا ہے۔ ایک نوجوان سے ملاقات ہوئی ۔ چھوٹی سی کریانہ کی دُکان چلاتے ہیں موصوف اسکول گئے لیکن پرائمری پاس کرنے سے پہلے ہی دُکانداری پیشے کے ہو کر رہ گئے تھے، میرے قریب بیٹھے تو گویا ہوئے کہ کیا 25 جولائی کے انتخابات منصفانہ تھے ۔؟جواب دیا گیا میری دانست اور تجزیئے کے مطابق ہر لحاظ سے شفافیت نظر آئی ہے۔ ایسی کوئی بے ضابطگی یا قباحت سامنے نہیں آئی جس کی وجہ سے نتائج پر کوئی الزام دھرا جا ئے۔ میرے جواب پر اُس نے معنی خیز نگاہوں سے دیکھا...

انتخابات2018 شفاف تھے ؟

افغان مسئلہ اور کور چشمی جلال نورزئی - پیر 03 دسمبر 2018

امریکا کی زیر دست کابل انتظامیہ داخلی و خارجی امور و معاملات میں قطعی بے اختیار ہے ۔ افغانستان کے نظام کار کی طنابیں مکمل طور پر امریکا کے ہاتھ میں ہیں۔ یہاں تک کہ کابل انتظامیہ کو اپنی خفیہ ایجنسی جو بھارت کے جاسوسی کے ادارے ’’را‘‘ کی رکھیل بنی ہوئی ہے ، پربھی مکمل دسترس نہیں۔ خصوصاً پاکستان کے خلاف یہ ادارہ ’’را ‘‘کے ہر سیاہ عمل میں بلارادہ شریک ہے۔ امریکا افغانستان میں اپنی ناکامی کی تلخ حقیقت بھانپ چکا ہے۔ پاکستان کو اربوں ڈالر دینے اور بدلے میں کچھ نہ کرنے ، اسامہ بن لاد...

افغان مسئلہ اور کور چشمی

سکھ کون ہیں ؟ انوار حسین حقی - اتوار 02 دسمبر 2018

کرتارپور راہداری کے افتتاح نے بابا گورونانک اور سکھ مت کو ایک مرتبہ پھر ذرائع ابلاغ کا موضوع بنا دیا ہے۔ ہندوؤں کے حوالے سے سکھوں کی تاریخ اور سکھوں کے حوالے سے ہماری تاریخ تلخ یادوں سے بھری پڑی ہے۔ مہاراجہ رنجیت سنگھ کے مظالم اپنی جگہ قیام پاکستان کے وقت مشرقی پنجاب میں سکھوں نے ہندوؤں کے ساتھ مل کر مسلمانوں پر جو مظالم ڈھائے وہ بھلائے نہیں بھولتے ۔بہر حال پاکستان کی جانب سے جو قدم اُٹھایا گیا اُس نے بھارتی حکومت کو چاروں شانے چِت کر دیا ہے۔ سکھ مت کے مطالعے سے معلوم ہوا ہے...

سکھ کون ہیں ؟

کراچی حملہ جلال نورزئی - بدھ 28 نومبر 2018

کراچی میں چینی قونصل خانے پر دہشت گرد وں کا حملہ لمحہ فکریہ ہے۔حملے کی ذمہ داری بلوچستان سے تعلق رکھنے والی عسکریت پسند تنظیم بلوچ لبریشن آرمی ( بی ایل اے ) نے قبول کرلی ہے ۔اس گروہ نے کسی امر کو چھپانے کی ضرورت محسوس نہیں کی۔ حملہ آوروں کی تصاویر، ویڈیوز اور پیغامات سب ہی جاری کردیے۔ اس حملے میں پولیس اہلکاروں اور شہریوں سمیت سات افراد جاں بحق ہوئے جن میں سے دو افرادحاجی نیاز محمد اور ان کے بیٹے ظاہر شاہ کا تعلق کوئٹہ کے علاقے خوشحال روڈ سے تھا ۔ دونوں کی میتیں کوئٹہ لاکر تد...

کراچی حملہ

برہمن ذہنیت محمد طاہر - منگل 27 نومبر 2018

پاکستان نے اپنی آزادی کی حقیقت کو ہی نہیں سمجھا۔ یہ برہمن ذہن سے ناقابلِ نباہ یقین سے پھوٹی تھی۔ انگریز سے بغاوت ہمارے تصورات کا لازمی نتیجہ تھا۔ مگر ہندوؤں سے دوری تو اُن کے برتاؤ سے پیداہوئی تھی۔ اس کی سب سے بڑی مثال قائداعظمؒ تھے۔ وہ ایک دانا اور مثالی عملیت پسندتھے۔وہ ہندو مسلم اتحاد کے سفیر کہلاتے تھے، ہندوؤں کو بار بار برتنے پر اُنہیں یہ یقین ہوا کہ دنیا میں یہ واحد قوم ہے جن کے اوپر بھروسے کا مطلب اپنی زندگی سے دستبردار ہونا ہے۔ہندو ذہنیت سے تعلق کی ہر شکل توہین آمیز ب...

برہمن ذہنیت

’’صوبہ نیلاب ‘‘ انوار حسین حقی - منگل 27 نومبر 2018

موجودہ حکومت کے سو دن کی کارکردگی بتا رہی ہے کہ وزیر اعظم اپنے نصب العین کی تکمیل میں سنجیدہ ہیں ۔ یہی وجہ ہے کہ انہوں نے ماضی کی حکومتوں کے مقابلے میں نا تجربہ کار ارباب اختیار کے ساتھ کامیابی سے حکومتی اُمور سر انجام دیے ہیں ۔۔ بلاشُبہ ٹیم کا کپتان حوصلے اور عزم کے ساتھ سب کو کامیابی سے چلا رہا ہے۔ الیکشن سے پہلے کیے گئے وعدے پورے کرنے پر توجہ دی جا رہی ہے۔ انتہائی عرق ریزی اور ذمہ داری کے ساتھ جنوبی پنجاب صوبہ کے قیام کے معاملات کو بھی آخری شکل دینے کی بھرپور کوشش کی جا رہ...

’’صوبہ نیلاب ‘‘

دہشت گردی اور مستقبل کی آہٹیں محمد طاہر - پیر 26 نومبر 2018

چینی قونصلیٹ پر حملے نے پاکستان کے اندر بھارت کو سمجھنے کے لیے کچھ نئی راہیں کشادہ کردی ہیں۔ بھارت کی برہمن ذہنیت نسلی برتری کے ساتھ کس پست طریقے سے بروئے کار آتی ہے، اس کی تفہیم پاکستان میں ریاستی سطح پر ہی نہیں دانشوروں کی سطح پر بھی دشوار رہی ہے۔ افسوس ناک طور پر پاکستان میں بھارت کو محض ایک روایتی حریف سمجھ کر روایتی طریقوں سے اُسے برتنے کی باتیں کی جاتی ہیں۔ مگر بھارت ایسا ملک نہیں۔ اس کی دشمنی روایتی نہیں۔ بھارت نے ایک خطرناک اور تہہ دار پالیسی کے تحت پاکستان کو مستقل ...

دہشت گردی اور مستقبل کی آہٹیں

’’خان آف میانوالی ‘‘ کو سیلوٹ انوار حسین حقی - جمعه 23 نومبر 2018

ایک ڈیڑھ سال پہلے کی بات ہے کہ بنی گالہ کے عمران خان چوک پر رانا مختار خالد کی گاڑی نے چڑھائی چڑھنا شروع ہی کی تھی کہ عمران خان کے تین گاڑیوں پر مشتمل قافلے نے ہمیں کراس کیا ۔۔ گیٹ میں داخل ہونے سے پہلے ہی خیبر پختونخواہ تحریک انصاف کی آبرو مند بیٹیوں فرزانہ زین اور فلک ناز چترالی نے بھی ہمیں آ لیا ۔ لان کی ہلکی دھوپ میں’’ خان آف میانوالی‘‘ اپنے ساتھیوں علیم خان ، جہانگیر خان ترین اور دوسروں کے ساتھ بیٹھے ہوئے تھے ۔ کپتان نے دیکھتے ہی اُٹھتے ہوئے کہا کہ آ گئے ہو۔وہ ہمارے ساتھ...

’’خان آف میانوالی ‘‘ کو سیلوٹ

جام کمال کے خلاف محاذ کی کو ششیں ! جلال نورزئی - جمعه 23 نومبر 2018

نواب اسلم رئیسانی بطور وزیراعلیٰ کئی حوالوں سے دبنگ ثابت ہوئے۔ وہ اتحادیوں کو ساتھ لیکر چلنے کا فن بھی جانتے تھے اور مخالفین سے نمٹنے کا گُر بھی ۔ من کی بات ببانگ دہل کہہ ڈالتے۔ انہیں ضرورت پڑی توگویا اسمبلی کے تقریباً سب ہی اراکین کو وزیر مشیر مقرر کردیا۔ کسی کے دباؤ اور مخالفانہ حربوں کو خاطر میں نہ لاتے۔ اپنی جماعت کے لوگوں کی تو پہلی فرصت میں ہی خبر لے لیتے۔ حتیٰ کہ آصف علی زرداری تک کے آگے کبھی زیر نہ ہوئے۔ اسلم رئیسانی کو پہلے دن ہی سے اپنی جماعت کے لوگوں کی مخالفت، ریش...

جام کمال کے خلاف محاذ کی کو ششیں !

گورنر ہاؤس کراچی انوار حسین حقی - پیر 19 نومبر 2018

وزیر اعلیٰ پنجاب کے مسکن اور بزدار بلوچوں کے علاقے میں بہنے والی ’’ سنگڑھ ندی ‘‘ اور اردگرد کے تمدن کے بارے میں کچھ قلمبند کرنے بیٹھا ہی تھا کہ ایک صاحب سے ملاقات درمیان میں آ گئی ۔۔۔ ان کی کراچی کے گورنر ہاؤس میں سرکاری خدمات کا تیسرا عشرہ اختتام پزیر ہونے والا ہے۔۔۔ ۔ کراچی کے بارے میں ان کے تاثرات جاننا چاہے تو ’’ رینجرز کے آپریشن ‘‘ کے لیے خراجَ تحسین سُننے کو ملا۔۔ بولے کہ کراچی نے نئی کروٹ لی ہے ۔۔ عدم تحفظ کا احساس بہت حد تک ختم ہو گیا ہے ۔۔ایک دور وہ بھی تھا کہ سرشام ...

گورنر ہاؤس کراچی

داغ اور یوٹرن اچھے ہوتے ہیں!! محمد طاہر - پیر 19 نومبر 2018

یوٹرن’’ اچھے‘‘ ہوتے ہیں جیسے صابن فروشوں کے لیے داغ، جیسے اداکاراؤں کے لیے اسکینڈلز۔ جیسے سنی لیون کے لیے۔ ۔۔۔ ارے چھوڑیے!!! یہ بھی کوئی بحث ہے۔عمران خان کا سب سے بڑا مسئلہ یہ ہے کہ وہ بڑے بہت ہوگئے ہیں۔اُن کے موضوعات کی فہرست دیکھتے ہیں تو لگتا ہے کہ کانٹ ، ہابس اور ہیگل کو ہی زیبا ہے کہ وہ اُن پر بات کریں۔ آپ بھی اُن موضوعات کی فہرست پر نگاہ ڈالیں جو عمران خان کی گفتار کا ہدف رہے ، تویقین کیے بغیر نہ رہ سکیں گے۔ مدینہ کی ریاست ،روحانی دنیا، علامہ اقبال کا شاہین اور اب یہ یو...

داغ اور یوٹرن اچھے ہوتے ہیں!!

صحافت اور احتساب انوار حسین حقی - هفته 17 نومبر 2018

میرے ایک صحافی دوست دوماہ قبل بے روزگار ہو ئے تو انہوں نے ’’ ویج بورڈ ‘‘ کے حصول کے لیے متعلقہ ادارے سے رجوع کیا ۔ ویج بورڈ کے معاملے پر قلمکاروں اور مالکان کے درمیان تصفیہ کروانے ، معاملات طے کرنے یا انصاف کی فراہمی کے لیے قائم کیے گئے ادارے نے ’’اسٹے آرڈر‘‘ جاری کردیا ۔ اخبار کی مینجمنٹ نے ماننے سے انکار کر دیا ۔ اور ساتھ ہی مدعی صحافی کے اخبار کی عمارت تک میں داخلے پر پابندی عائد کر دی ۔ مدعی کو تاریخ پر تاریخ والا معاملہ درپیش ہے ۔۔۔۔۔۔۔ میں نے دوست سے دریافت کیا کہ آپ ...

صحافت اور احتساب

بلوچستان، سیاسی نیرنگیاں جلال نورزئی - منگل 13 نومبر 2018

وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان عالیانی بہت ساری خوبیوں اور صلاحیتوں کے مالک ہیں۔ نواز شریف کی حکومت میں ان کے پاس وزیر مملکت برائے پیٹرولیم و قدرتی وسائل کا قلمدان تھا۔ اس وزارت کے دوران اپنے دامن کو بُرائیوں سے بچائے رکھا۔ گو کہ مقتدرہ کے زیر اثر ہیں۔ جس سے شاید ہی کوئی بچا ہو، ہر ایک کسی نہ کسی لحاظ کے تحت زیر اثر ہی رہا ہے۔ سیاست و قیادت میں رائے، سوچ اور فیصلوں میں خود اختیاری لازم ہے۔ اگر ایسا نہ ہو تو قیادت آپ سے آپ ڈھیر ہوجائے گی۔ ہمیں معلوم ہے کہ جام کمال پھونک پھونک...

بلوچستان، سیاسی نیرنگیاں

کراچی کی نمائندگی کا کیا ہوگا؟؟ محمد طاہر - پیر 12 نومبر 2018

متحدہ قومی موومنٹ پر ہرگزرتاد ن تنگ سے تنگ ہوتا جارہا ہے۔ بانی متحدہ کے خود کش حملے نے اسے ٹکڑوں میں تقسیم کردیا ۔ ایم کیوایم کے ساتھ اب وہی کچھ ہورہا ہے جو کبھی ایم کیوایم نے کراچی اور اہلِ کراچی کے ساتھ کیا تھا۔ ہر ایک کا سانس بند کرنے اور ہر ایک پر زمین تنگ کردینے والی متحدہ اب اسی انجام سے دوچار ہے۔ایم کیوایم کے لیے ان دنوں سب سے بڑا چیلنج کراچی کی بکھرتی اور پھسلتی نمائندگی ہے۔ مگر وہ اس چیلنج سے آنکھیں چار نہیں کرپارہی۔ کیونکہ وہ فوری بحرانوں سے خود کو نکالنے کی بصیرت ا...

کراچی کی نمائندگی کا کیا ہوگا؟؟

عثمان بزدار کے لیے انوار حسین حقی - پیر 12 نومبر 2018

اپنے حالیہ دورہ لاہور کے دوران وزیر اعظم عمران خان نے پنجاب کے وزیر اعلیٰ سردار عثمان بزدار پر اپنے مکمل اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے ان کی خوابیدہ صلاحیتوں کے جلد اُجاگر ہونے کی اُمید کا دیا روشن کیا ہے۔ وزیر اعظم کو اپنے انتخاب پر اعتماد کا اعادہ اس لیے بھی کرنا پڑا کہ عثمان بزدار کو سیاست میں حاسدین کے ساتھ ساتھ بیوروکریسی کی جانب سے بھی مخالفت کا سامنا ہے۔ پنجاب کی افسر شاہی نے وزیر اعلیٰ کو نا تجربہ کارہونے کی وجہ سے اپنا آسان ہدف سمجھ لیا ہے۔ اضلاع کے ڈپٹی کمشنروں اور ڈسٹر...

عثمان بزدار کے لیے

کی محمدﷺ سے وفا تونے تو ہم تیرے ہیں محمد طاہر - جمعه 09 نومبر 2018

دیکھیئے! حضرت علامہ اقبال کا دن کب طلوع ہوتا ہے، جب ماہ ربیع الاول ہمارے دلوں کی دہلیز پردستک دے رہا ہے۔ کبھی وہ دن تھے جب لطف اللہ خان شہر قائد میں اپنے آواز خزانے کے ساتھ رونق بڑھاتے تھے۔ گاہے اُن کی خدمت میں حاضر ہوتا ، اور قدیم ادوار کی عمیق آوازوں میں گداختہ گم ہوجاتا۔ ہائے یہ شورش کا انٹرویو تھا، اکابرین کی قطار سے لگاتار آتے آخری شہشوارِخطابت!!!ماہر القادری نے مرحوم کو یادکیا تو رعایتِ لفظی کا لحاظ بھی کیسا رکھا: دل لگانے کا جہاں موقع بھی تھا کوشش بھی تھی ہائے وہ محف...

کی محمدﷺ سے وفا تونے تو ہم تیرے ہیں

گوادر میں ایشیائی پارلیمانی اسمبلی کا اجلاس جلال نورزئی - منگل 06 نومبر 2018

گوادر کے گہرے پانی کی بندرگاہ کی شہرت و چرچا دنیا بھر میں ہے ۔ یہ بندرگاہ تاحال پوری طرح فعال نہیں۔ آمرپرویز مشرف کے دوراقتدار میں کوسٹل ہائی وے کی تعمیر مکمل ہوئی۔ یہ منصوبہ ان سے قبل میاں نواز شریف کی حکومت کے پیش نظر تھا۔ چنانچہ پرویز مشرف کے دور میں چند دیگر شاہراہوں پر( جو گوادر کو ملک کے دوسرے علاقوں سے منسلک کرتی ہے) پیشرفت ہوئی۔ کوسٹل ہائی وے کی تکمیل بلاشبہ ایک بڑا اقدام تھا۔ گوادر پورٹ کی تعمیر، انتظام و انصرام پورٹ آف سنگا پور کو ایک معاہدے کے تحت چالیس سال کے لیے ...

گوادر میں ایشیائی پارلیمانی اسمبلی کا اجلاس

اوراقِ تاریخ سے ایک سبق جلال نورزئی - بدھ 31 اکتوبر 2018

خوارزم شاہی سلطنت ایشیاء کی سب سے بڑی مملکت تھی ۔جس کی فرمانروائی سلطان محمد خوارزم شاہ کے پاس تھی ۔ سلطان محمد خوارزم شاہ جلال الدین خوارزم کے والد تھے ۔ اُدھر انسانی تاریخ کے سفاک کردار، تہذیب انسانی سے نا بلدچنگیز خان منگول ،چین ، تمخاج، ترکستان کی بالائی منطقوں تک رسائی کے بعد آگے کی جانب بڑھنے کی تدبیر و سوچ بچار میں لگا تھا۔ سلطان محمد خوارزم کی سلطنت و فرماں روائی قرب و جوار کی حکومتیں متاثر و مرعوب تھیں۔ اس کشش کا اسیر چنگیز خان بھی تھا۔ شان و عروج کے ان ایام میں سلطا...

اوراقِ تاریخ سے ایک سبق

حزب اختلاف کی صف بندی محمد طاہر - پیر 29 اکتوبر 2018

یہ ایک نئے عہد کی کتاب ہے، جس کا ابھی دیباچہ بھی نہیں لکھا جاسکا۔ مگر لوگ اتنے اُتاؤلے ہو گئے کہ ابھی سے اس کا تتمہ پڑھنے کو بے تاب ہیں۔ پاکستانی سیاست کا بارہواں کھلاڑی اب پہلا بلے باز بن چکا ہے، یہاں تک کہ قومی سیاست کا کپتان بھی۔ دوسری طرف پہلے بلے بازی کرنے والے دونوں سیاسی جماعتوں کے قائدین بارہویں کھلاڑی بننے کے خوف میں مبتلا ہیں۔ پاکستانی کرکٹ کی طرح سیاست میں بھی ’’پاؤر پلیئر‘‘ اصل قوت رکھتے ہیں۔ کھیل کی بساط اور کھلاڑیوں کی صف بندی سے واضح ہے کہ مایوسی آخری بار’’ ہل...

حزب اختلاف کی صف بندی

بلوچستان چین شراکت داری وجود - بدھ 24 اکتوبر 2018

چین اکتوبر 1949ء کو ماؤزے تنگ اور چُواین لائی جیسے قدآور رہنماؤں کی قیادت میں بھوک، افلاس،بد عنوانیوں، خانہ جنگیوں اور نیم نو آبادیاتی دور سے نکل آیا۔ یہ کمیونسٹ انقلاب تھا ۔حالانکہ سویت یونین کی صورت میں اشتراکی طاقت کا طوطی نصف د نیا میں بولتا تھا۔ جو چاہتا تھا کہ چین بھی اس کا مطیع وزیر نگیں رہے۔جس کی سُرخ طاقت نے ساٹھ اور سترکی دہائیوں میں عملاً کو ششیں بھی کیں ۔ چینی قیادت نے اپنی خو دمختاری پر قطعی سمجھوتا نہ کیا ، اپنے قومی و ملی وقار کوبلند کیے رکھا۔اورخم ٹھونک کر مید...

بلوچستان چین شراکت داری

صحافت کے’’ سیونگلی ‘‘ محمد طاہر - منگل 23 اکتوبر 2018

وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کے بعد صحافت کے’’ سیونگلیوں‘‘ نے اپنا کھیل شروع کردیا ہے۔ سیونگلی بھی کیا زبردست کردار ہے۔ ذرا جان لیجیے!انیسویں صدی کے کارٹونسٹ اور ناول نگار جارج ڈو موریئر اپنے زبردست ناول ٹرلبائی (Trilby) کے حوالے سے بہت مقبول ہوا۔ سیونگلی اُسی ناول کا ایک افسانوی کردا رہے جو ہپناٹزم کا ماہر تھا اور’’ بدنیتی ‘‘سے دوسروں کو اپنی مرضی کا تابع بناتا تھا۔ پاکستانی صحافت میں بھی کچھ ’’خوامخواہ‘‘ کے سیونگلی پیدا ہوگئے ہیں جو دوسروں کی مرضی کو اپنا تابع مہمل دیکھنا چ...

صحافت کے’’ سیونگلی ‘‘

پیٹ کا معاملہ ! محمد طاہر - پیر 22 اکتوبر 2018

ترک شاعر اور ناول نگار ناظم حکمت نے کہا: ’’غرض کہ یہ سب دل کا معاملہ ہے‘‘۔ رومانوی انقلابی کہلانے والے ناظم حکمت کا انتقال جون1963 ء کو ہوا، اُن کا سابقہ پاکستانی ذرائع ابلاغ کے ’’جغادریوں ‘‘ سے نہیں پڑا، وگرنہ وہ کہتے: ’’غرض کہ یہ سب پیٹ کا معاملہ ہے‘‘۔ ابھی ابھی ایک تحریر نظر سے گزری، کچھ لوگ نکتہ آفرینیوں میں گزارا کرتے ہیں۔ ایک صحافی اور تاجر کے درمیان جنگ میں صحافی ہار جائے تو بچ جانا والا تاجر حقائق سے ایسے ہی سفاکانہ چاندماری کرتا ہے۔ وہ اپنی ہی تحریروں کا خود ہدف ...

پیٹ کا معاملہ !

سی پیک ،معدنی معاہدے اور بلوچستان جلال نورزئی - جمعرات 11 اکتوبر 2018

بلوچستان اپنی طویل ساحلی پٹی، زیر زمین بیش بہا معدنی دولت اور جغرافیہ کے لحاظ سے انتہائی اہمیت کا حامل صوبہ ہے ۔ اس کی تزویراتی ہیت ماضی اور قریب کی تاریخ میں دنیا کی نظروں میں رہی ہے ۔ اس انفرادیت کی بناء پر یہ خطہ آج بھی مرکز نگاہ ہے ۔ زار شاہی اور کمیونسٹ روس کاگرم پانیوں تک رسائی کا خواب پورا نہ ہوسکا۔جن کا راستہ پہلے سے قابض انگریزوں نے روکے رکھا تھا۔روسی بھی استعماری ارادوں کے ساتھ بڑھنا چاہتے تھے خاص کر کمیونسٹ روس اپنی اشتراکی، الحادی نظریات اور فوجی و استبدادی قوت کے...

سی پیک ،معدنی معاہدے اور بلوچستان

بات ہوگئی ہے!! محمد طاہر - پیر 08 اکتوبر 2018

موضوع شہبا زشریف کی گرفتاری ہی ہے، مگر کم بخت علی مختارنقوی مقطع میں سخن گسترانہ بات کی طرح آٹپکے ہیں! علی مختار نقوی بائیں بازو کی سیاست کرتے تھے، سیاست میں جھکولے کھاتے رہے، اُبھر سکے نہ کہیں باریابی پاسکے۔ کسی نے سمجھایا کہ جیل جانے کی صورت نکالیں ، کامیابی قدم چومنے لگے گی۔ عامل سنیاسی باوا ٹائپ سیاسی کامیابی کا فارمولا پاکر شادماں شادماں اپنے دوست ایس ایس پی نیو ٹاؤن کے پاس جا پہنچے۔یہ فیلڈ مارشل ایوب کا عہد آمریت تھا۔ علی مختار نقوی نے اپنی مشکل بیان کرتے ہوئے جیل جانے...

بات ہوگئی ہے!!

مُر غابی کے شکار کا اجازت نامہ انوار حسین حقی - اتوار 07 اکتوبر 2018

حکومتِ پنجاب کے محکمہ تحفظِ جنگلی حیات و پارکس نے وائلڈ لائف ایکٹ کے مطابق مُرغابی کے موسمِ شکار کا اعلان کر دیا ہے۔ شکاری حضرات ہفتہ اور اتوار کو مستند شوٹنگ لائسنس کے ساتھ 31 مارچ 2019 ء تک مرغابی کا شکار کھیل سکیں گے۔ گیم ریزرو میں ڈائریکٹر جنرل جنگلی حیات و پارکس پنجاب کے جاری کردہ خصوصی اجازت نامہ کے ساتھ شکار کھیلا جا سکتا ہے۔ پنجاب کے ایک سرکاری محکمے کا یہ ایک بظاہر عام سا اور روایتی حُکم نامہ ہے جو غالباً ہر سال جاری کیا جاتا ہے۔ لیکن اس سرکاری پروانے کی آڑ میں بدیسی...

مُر غابی کے شکار کا اجازت نامہ

مہاجرین کی پاکستانی شہریت کا مسئلہ جلال نورزئی - هفته 06 اکتوبر 2018

وزیراعظم پاکستان عمران خان نے اپنے دورہ کراچی کے دوران پاکستان میں پیدا ہونے والے افغانوں اور بنگالیوں کے پاکستانی شہریت کے حق کی بات کی۔ اس پر 18ستمبر کو بلوچستان نیشنل پارٹی کے سربراہ، رکن قومی اسمبلی سردار اختر مینگل نے اسمبلی میں نکتہ اعتراض اٹھایا۔ جواب میں عمران خان نے کہا کہ 1951ء کے قانون کے مطابق جو بچہ پاکستان میں پیدا ہوتا ہے اس کا حق ہے کہ اسے پاکستان کی شہریت دی جائے۔اس میں شک نہیں کہ یورپ سمیت دیگر کئی ممالک کے قوانین کے تحت وہاں پیدا ہونے والے بچوں کو شہریت دے ...

مہاجرین کی پاکستانی شہریت کا مسئلہ

اُردو ، شاہ محمود قریشی اور فاطمہ قمر انوار حسین حقی - جمعرات 04 اکتوبر 2018

29 اور 30 ستمبر کی درمیانی شب نیویارک میں اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے پاکستان کے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی مخاطب ہوئے۔ نئی پاکستانی حکومت کے نمائندے کا عالمی سطح پر یہ پہلا خطاب تھا۔ ایک طویل عرصے کے بعد پاکستان کی جانب سے کسی بھی عالمی فورم پر اس طرح کا جرائتمندانہ موقف سُننے کو ملا ہے۔جنرل محمد ضیاء الحق مرحوم کا دور پاکستان کے عالمی کردار کے حوالے سے آخری دور ثابت ہوا۔ ان کا دور اگرچہ آمرانہ تھا لیکن پاکستان نے اپنا عالمی کردار بھرپور طریقے سے ادا کیا تھا ۔ پندرھویں ہجر...

اُردو ، شاہ محمود قریشی اور فاطمہ قمر

ہے گرمی آدم سے ہنگامۂ عالم گرم محمد طاہر - اتوار 30 ستمبر 2018

بساطِ خاک سے ہم اٹھتے ہیں!!یہ سرشار کردینے والے لمحات ہیں۔ وزیرِ خارجہ شاہ محمود قریشی نے اقوامِ متحدہ کی جنرل اسمبلی سے خطاب فرمایا ۔ اللہ اکبر ! یہ خطاب نہیں، پاکستان نے اقوام عالم میں اپنا سر اُٹھایا ہے۔ایسے تاریخ ساز لمحات کو سیاسی تعصبات کی بھینٹ نہیں چڑھنا چاہئے۔وزیر خارجہ کا دورۂ نیویارک کامیاب رہا۔ یہ اپنی نوعیت کا پہلا دورہ ہے جس میں پاکستان کی ایک خارجہ پالیسی نظر آئی۔ پاکستان نے اقوام متحدہ کے عالمی منچ پر ایک زبردست تحرک پیدا کیا۔ بھارت اور امریکا کے برسوں سے جار...

ہے گرمی آدم سے ہنگامۂ عالم گرم

بشریٰ بی بی انوار حسین حقی - اتوار 30 ستمبر 2018

ایک روز قبل ایک نجی ٹی وی چینل پر خاتونِ اول محترمہ بشریٰ بی بی محوِ گفتگو تھیں۔ ایک عالَم اس کا کئی مہنیوں سے منتظر تھا۔ محترمہ بشریٰ بی بی کو اس سال کے آغاز سے قبل ہی ہماری قومی زندگی میں جگہ مل گئی تھی ۔ عمران خان کے چاہنے والوں سے زیادہ وہ اُن کے مخالفین کے ہاں زیر بحث رہیں۔ ان کے حوالے سے طرح طرح کے افسانے گھڑے گئے ۔ میاں نواز شریف کے تین دہائیوں کے اقتدار میں اُن کی خوشہ چینی کی سند پانے والے قلمکاروں کی کھیپ نے کیا کُچھ نہیں کہا ، کیسی کیسی کہانیاں تخلیق نہیں کی گئیں ۔...

بشریٰ بی بی

عید الفطر خوشیوں بھرا عظیم اسلامی تہوار میاں اشرف عاصمی ایڈوکیٹ - جمعه 15 جون 2018

عید الفطر دراصل بہت سی خوشیوں کا مجموعہ ہے۔ ایک رمضان المبارک کے روزوں کی خوشی، دوسری قیام شب ہائے رمضان کی خوشی، تیسری نزول قرآن، چوتھی لیلۃ القدر اور پانچویں اللہ تعالیٰ کی طرف سے روزہ داروں کے لیے رحمت و بخشش اور عذاب جہنم سے آزادی کی خوشی۔ پھر ان تمام خوشیوں کا اظہار صدقہ و خیرات جسے صدقہ فطر کہا جاتا ہے، کے ذریعے کرنے کا حکم ہے تاکہ عبادت کے ساتھ انفاق و خیرات کا عمل بھی شریک ہو جائے۔ یہی وہ وجوہات ہیں جن کی بناء پر اسے مومنوں کے لیے ’’خوشی کا دن‘‘ قرار دیا گیا۔تہوار کسی...

عید الفطر خوشیوں بھرا عظیم اسلامی تہوار

نگران وزیر اعلیٰ ۔۔بلوچستان پر ایک اور کرم نوازی ! جلال نورزئی - جمعرات 14 جون 2018

بلوچستا ن کے نگران وزیر اعلیٰ کا تقرر ہو ہی گیا ۔ گویا علائو الدین مری نامی شخص کو نگران وزیر اعلیٰ کا منصب دے کر بلوچستان پر ایک اور مہربانی و کرم نوازی کر لی گئی !۔ یہ شخص مستونگ ضلع کا رہائشی ہے ۔ والد بیوروکریٹ تھے خود کاروبار کرتے ہیں۔گاڑیوں کا بزنس بھی ہے ۔افغانستان سے ا سمگل کی گئی گاڑیوں کی خریدو فروخت بھی کرتے تھے یا شاید اب بھی کرتے ہیں ۔ایران سے ا سمگل شدہ پیٹرول کا بیوپاری بھی رہا ہے ۔حالیہ سینیٹ انتخابات میں بھی آزاد حیثیت سے امیدوار تھے۔ عبدالقدوس بزنجو اور ان ...

نگران وزیر اعلیٰ ۔۔بلوچستان پر ایک اور کرم نوازی !

پیٹ کے تقاضے اور دل کی بات محمد طاہر - پیر 11 جون 2018

ایک بے گناہ کی پھانسی کے ہنگام کسی نے جلاد سے پوچھا کہ اُسے کیامحسوس ہو رہا ہے؟اُس نے فوراً کہا کہ صاحب پیٹ کی بات اور ہے اور دل کی بات اور!!!قومی صحافت کا ماجرا بھی مختلف نہیں۔ ہمارے تجزیہ کار روسی دانشور لیمو نوف کی طرف منقسم ہیں۔ مگر ان میں لیمونوف کی مانند دانش بھی نہیں چھلکتی کہ اُن کی حمایت و مخالفت کو ایک دانشورانہ آہنگ میں بُھگت لیا جائے۔جُگت بازیاں، پھبتیاں اور الفاظ کی میناکاریاں ان کا طرہ امتیاز ہے۔کسی کے ہاں اچانک املتاس کے پھولوں سے دانشوری کا پیلارنگ چڑھا ہے۔کوئ...

پیٹ کے تقاضے اور دل کی بات

بلوچستان اسمبلی کا بد مزہ اختتام جلال نورزئی - هفته 09 جون 2018

اکتیس مئی2018ء کو بلوچستان اسمبلی نے بدمزگی،بداخلاقی اور بدتمیزی کے ماحول میں مدت پوری کرلی۔ سچی بات یہ ہے کہ تحریک عدم اعتماد کے بعد اسمبلی فی الواقع بے وزن ،بے توقیر بلکہ پتلی تماشا بن کر رہ گئی۔ یہی حال وزیراعلیٰ ہاؤس کا رہا ۔ چند لوگ صوبے کے بادشاہ گر بن گئے تھے۔ 30مئی کے اجلاس میں غل غپاڑے کا ماحول بن گیا تھا۔ پشتونخوامیپ کے رکن نصراللہ اور سرفراز بگٹی اُلجھ پڑے ۔ سرفراز بگٹی نے تو حد ہی کردی کہ مارنے پیٹنے پر اُتر آنے کی کوشش کی۔ جھگڑا سبی یونیورسٹی کے نام پر ہوا جسے می...

بلوچستان اسمبلی کا بد مزہ اختتام

ریحام کی کتاب اور بحران کی سائنس  محمد طاہر - جمعرات 07 جون 2018

پاکستان عظیم بحرانوں کے نرغے میں ہے ۔ مگر کچھ لوگ اس سے لذت کشید کرتے ہیں۔ریحام خان خود کوئی مسئلہ نہیں یہ بحران دربحران تہہ داریوں کی ایک پرت ہے۔ اس میں سوچنے سمجھنے کے بہت پہلو ہیں۔ کاش عسکری ادارے اس پر غور کریں! میکاولی طرزِ فکر میں بحران کا انتظام بحران سے کیا جاتا ہے۔ خارجی وداخلی دائروں میں اس کی الگ الگ شکلیں ہوتی ہیں۔ سابق صدر اوباما کے چیف آف اسٹاف راہم ایمانوال سے انگریزی کا جملہ منسوب کیا جاتا ہے کہ 147NEVER WASTE A GOOD CRISIS148 (ایک اچھے بحران کو کبھی ضائع ن...

ریحام کی کتاب اور بحران کی سائنس 

سیف اللہ نیازی اور جہانگیر ترین انوار حسین حقی - بدھ 06 جون 2018

کپتان اور ان کی جماعت نے فاروق بندیال کے معاملے پر ایک بڑی آزمائش کا سامنا کیا ہے۔ مبینہ طور پر راولپنڈی کے علاقے ’’ترنول‘‘ میں ایک مسلم لیگی دوست کے گھر فاروق بندیال سے ملاقاتیں اور اُس کی پارٹی میں شمولیت کی راہ ہموار کرنے والے ابھی تک شاد کام نظر آتے ہیں انہیں اپنے اس’’ کارنامے‘‘ پر کوئی ندامت بھی نہیں ہے ۔اسی طرح یہ بھی کہا جاتا ہے کہ جہانگیر ترین اور ان کے ساتھی پارٹی میں ہمیشہ پرانے کارکنوں سے نبرد آزما رہے ہیں ۔اس ’’لابی‘‘ کی جانب سے معاملات کو اپنی گرفت میں رکھنے ک...

سیف اللہ نیازی اور جہانگیر ترین

دوستی ۔۔۔۔۔ حقیقت کے آئینے میں میاں اشرف عاصمی ایڈوکیٹ - منگل 05 جون 2018

فراز نے برسوں پہلے کہا تھا کہ تم تکلف کو بھی اخلاص سمجھتے ہو فراز ۔دوست ہوتا نہیں ہر ہاتھ ملانے ولا۔ انسان جب تک خود صاحب اولاد نہیں ہوجاتا اور اُس کے بچے جوان نہیں ہوجاتے اُسکی زندگی میں دوستوں کی دوستی کی چاشنی بہت زیادہ اہمیت کی حامل ہوتی ہے پھر گھریلو مصروفیات زندگی کو اِس دور میں داخل کردیتی ہیں کہ انسان اپنے دوستوں سے رابطے میں کمی کا شکار ہوجاتا ہے۔ لیکن دوستی کے اِس جذے کی اہمیت سے انکار نہیں کیا جاسکتا۔حضرت علیؓ کا قول ہے وہ شخص غریب ہے جس کا کوئی دوست نہیں ہے۔ انسا...

دوستی ۔۔۔۔۔ حقیقت کے آئینے میں

مقبوضہ بیت المقدس میں امریکی سفارخانے کی منتقلی آخری قسط محمد انیس الرحمٰن - منگل 05 جون 2018

اسی مقصد کی خاطر مصر میں اخوان المسلمون کی حکومت ایک سال کے لیے بننے دی گئی اگر صدر مرسی کی قیادت میں اخوانی مصر میں حکومت نہ بناتے تو اس وقت بے شک کوئی اور لیبرل حکومت قاہرہ میں ہوتی لیکن اخوان کے نام پر ایک طاقتور اپوزیشن بھی موجود ہوتی لیکن اخوانیوں نے اقتدار کی جلدی میں اپنی تاریخ کی بھیانک ترین غلطی کر ڈالی، نتائج سب کے سامنے ہیں۔اخوانیوں کی مصر میں حکومت بننے دینے کے دو بڑے مقاصد تھے سب سے پہلے دیگر عرب ملکوں کو خبردار کرنا کہ اگر اسی قسم کا جمہوری عمل عالم عرب کے اس اہ...

مقبوضہ بیت المقدس میں امریکی سفارخانے کی منتقلی آخری قسط

مقبوضہ بیت المقدس میں امریکی سفارخانے کی منتقلی محمد انیس الرحمٰن - پیر 04 جون 2018

گزشتہ  دنوں دوانتہائی اہم واقعات رونما ہوئے جو آگے چل کر دنیا میں بہت بڑی تبدیلی کا سبب بننے والے ہیں۔پہلا تو امریکی سفارتخانے کا مقبوضہ بیت المقدس منتقل کیا جانا ہے اس کے بعد امریکی صدر ٹرمپ کا ایران کے ساتھ کیا جانے والا جوہری معاہدہ ختم کرنے کا اعلان ۔ان فیصلوں کی روشنی میں ہمیں اچھی طرح جان لینا چاہئے کہ نام نہاد ’’عالمی امن‘‘ کے قیام کے لیے بنایا جانے والا اقوام متحدہ کا ادارہ عملًا ختم ہوچکا ہے۔ اس کی ’’ افادیت‘‘ یہیں تک تھی۔ ویسے تو اس نام نہاد ادارے کا وجود نائن الیو...

مقبوضہ بیت المقدس میں امریکی سفارخانے کی منتقلی

بدی کے سر چشمے جلال نورزئی - هفته 02 جون 2018

بلوچستان  میں آئے روز کسی نہ کسی جگہ آپریشن رد الفساد کے تحت دہشتگردوں کے خلاف کارروائی کی خبریں سامنے آتی ہیں۔ دہشتگرد پکڑے جاتے ہیں، مارے جاتے ہیں اور ان کے ٹھکانوں اور کمین گاہوں سے بڑی تعداد میں اسلحہ کی برآمدگی ہوتی ہے۔ فورسز پر حملوں اور عام لوگوں کی ٹارگٹ کلنگ کی خبریں بھی برابر آتی ہیں ۔کسی کو مخبر کے نام پر ، کسی کو پنجابی کے نام پر یا کوئی مذہب کی اپنی اختراع و تعبیر کے تحت قتل کر دیا جاتا ہے۔ آخر الذکر گروہوں نے بلاشبہ مشکل اور خوف کی صورتحال پیدا کر رکھی ہے۔...

بدی کے سر چشمے

نادان فیصلہ ساز انوار حسین حقی - هفته 02 جون 2018

نئے  پاکستان کے لیے کپتان کی جدوجہد کا دوسرا یا تیسرا سال تھا ۔ وہ کوئٹہ میں تھے ۔ایک چھوٹے سے جلسے کے بعد کسی کے ہاں کھانے پر مدعو ہوئے ۔ اس سے پہلے عمران خان نے جلسے میں اپنی تقریر کے دوران جن عزائم کا اظہار کیا تھا وہ تقریباً وہی تھے جو آج کل کی تقریر کا بھی لازمی حصہ ہوتے ہیں ۔ کھانے کی دعوت میں موجود سب شرکاء خاص کر بزرگوں کو ان کی کسی کامیابی کا یقین نہیں تھا۔آپس کی چہ میگوئیوں میں عمران خان کا مذاق اُڑایا جا رہا تھا ۔ ایک صاحب نے کہا کہ آج ان کے جلسے میں دو سو آدمی...

نادان فیصلہ ساز

ایٹمی پاکستان کے خلاف غلیظ سازشیں ڈاکٹر میاں احسان باری - جمعه 01 جون 2018

پاکستان 57اسلامی ممالک میں وہ واحد ملک ہے جو کہ ایٹمی صلاحیت رکھتا ہے اسی لیے تمام سامراجی واسلام دشمن قوتوں بالخصوص یہود و نصاریٰ اور ہندو گماشتوں کی نظر وں میں کھٹکتا رہتا ہے سبھی اسلام دشمن قوتیں پاکستان کے بطور نظریاتی مملکت وجود میں آجانے کے پہلے دن سے ہی اسے مٹاڈالنے کے لیے کوشاں رہی ہیں گو جناب بھٹو نے مشرقی پاکستان کے بنگلہ دیش بن جانے پرا قتدار سنبھالا تھا اور حمود الرحمٰن کمیشن نے اس وقت کے فوجی آمر یحیٰی خان بنگلہ بدھو مجیب الرحمٰن اورخواہش اقتدار رکھنے والے پاکستا...

ایٹمی پاکستان کے خلاف غلیظ سازشیں

الیکشن کمیشن کرنے کے ضروری کام؟ ڈاکٹر میاں احسان باری - منگل 29 مئی 2018

الیکشن کمیشن اپنے موجودہ رویوں سے غیر متعصب اور غیر جانبدار ادارہ کے طور پر اپنی ساکھ بحال کر چکا ہے اس کا جھکائو قطعاً کسی سیاسی گروہ یا پارٹی کی طرف نہ ہے اس کے ممبران اعلیٰ عدالتوں کے ججز رہے ہیںاور بطور ججز ہائیکورٹ اور سپریم کورٹ انہوں نے اہم فیصلے کیے ہیں۔ ان کی اعلیٰ انصاف پر مبنی کارکردگیوںکی ہی وجہ سے انہیں الیکشن کمیشن جیسے ادارہ کے اہم ترین عہدو ں پر تعینات کیا گیا تھا ان ممبران میں سبھی ہی پاکستان کو نظر یاتی مملکت بنانے کے لیے کوشاں ہیں اور انتخابات کو غیر جانبدر...

الیکشن کمیشن کرنے کے ضروری کام؟

عمران خان اور پرویز مشرف کی لاعلمی انوار حسین حقی - اتوار 27 مئی 2018

اکتوبر 2002 ء میں پرویز مشرف کے جرنیلی استبداد کا سورج النصف النہار پر تھا ۔ ماحول کیا ہوگا اور امکانات کا رُخ کس جانب ہوگا ۔ جب کُہرا پھیلا لگتا ہو سورج بھی میلا لگتا ہو ہر شخص اکیلا لگتا ہو سمجھو یہ کہ بستی اُجڑے گی کپتان میانوالی کے سنگلاخ پہاڑوں اور دریائے کرم کے پہلو میں آباد آریاؤں کی قدیم بستی کنڈل اور بابر شاہ کی گذر گاہ عیسیٰ خیل میں اپنی انتخابی مہم میں مصروف تھے ۔ انہیں ایک کال موصول ہوئی ۔۔۔کچھ دیر علیحدگی میں فون سُننے کے بعد وہ اپنے ساتھیوں کے درمیان آ...

عمران خان اور پرویز مشرف کی لاعلمی

تراویح کے نام پر طوفانِ بدتمیزی الطاف ندوی کشمیری - هفته 26 مئی 2018

رہی آٹھ رکعات والی حدیث جو بخاری شریف میں ہے اور سند کے اعتبار سے بہت قوی ہے جس کی روای حضرت عائشہ ؓ ہیں اور جس پردور حاضر میں ہمارے بھائی اہلحدیث عمل کرتے ہیں اورعلمائِ اہلحدیث کا دعویٰ ہے کہ یہ روایت تراویح اور تہجدکے متعلق ہے جبکہ مقلدین اسے تہجد پر محمول کرتے ہیں ۔سلف میں سے بہت سے کبار علماء اور ائمہ بیس کے ساتھ ساتھ آٹھ رکعت کے بھی قائل رہے ہیں متقدمین میں امام ابن حجر عسقلانیؒ ،ابن نجیم،ابن ہمامؒ،علامہ سیوطیؒ،امام ابو العباس قرطبیؒ جبکہ متا خرین علما ء کی فہرست بہت ط...

تراویح کے نام پر طوفانِ بدتمیزی

جام کمال۔۔۔۔ نئی جماعت ‘‘باپ’‘ کے صدر جلال نورزئی - هفته 26 مئی 2018

بلوچستان  کے اندر ابن الوقت سیاست دانوں کی کوئی کمی نہیں، جن کی نظریں خالصتاً اقتدار اور مفادات پر جمی رہتی ہیں۔ بدعہدی، دغا اور چال بازیوں کو سیاست، جمہوری اصول اور روایات کا نام دیا جاتا ہے۔ یہ لوگ مقتدر حلقوں کے اشاروں پر اپنا قبلہ تبدیل کرتے رہتے ہیں۔ ایک بڑی تعداد ان موقع پرستوں کی نئی جماعت میں جمع ہوگئی ہے، یعنی بلوچستان میں سیاست کے نام پر مستقبل کی پیش بندی ’بلوچستان عوامی پارٹی‘ کے نام سے ہوئی ہے۔ اس میں کئی ایسے نام ہیں جو منتخب ہوتے آرہے ہیں، اس لیے آئندہ ہونے و...

جام کمال۔۔۔۔ نئی جماعت ‘‘باپ’‘ کے صدر

تراویح کے نام پر طوفانِ بدتمیزی  الطاف ندوی کشمیری - هفته 26 مئی 2018

جب کسی قوم کے عقل وشعورمیں بگاڑ آجاتا ہے اور وہ فی الفور ہوش کے ناخن نہ لے توتسلسل کے ساتھ بگڑ تی چلی جاتی ہے یہاں تک کہ وہ بے عقلی اور بے شعوری کے کاموں کو بھی عقلمندی کے کام سمجھنے لگتی ہے ،یہی حال ہمارا ہے ۔ہم بگاڑ میں اتنے آگے نکل چکے ہیں کہ اب مذہب اور اس کے احکام بھی ہمارے اس ظلم سے نہیں بچ پاتے ہیں اسکی وجہ یہ ہے کہ ہم سراپا بگاڑ اور فساد ہیں اور ہماری وجہ سے ہر سو بگاڑ اور فساد پھیل جاتا ہے ۔یہ ہمارا اصل مرض ہے جس کو ہم تاویل کر کے چھپاتے پھرتے ہیں ۔مگر وقت وقت پر ہما...

تراویح کے نام پر طوفانِ بدتمیزی 

فلسطینی مسلمانوں کا قتل عام کیوں اور کیسے؟ ڈاکٹر میاں احسان باری - بدھ 23 مئی 2018

امریکی صدر ٹرمپ نے بالآخرپورے عالم اسلام کی دشمنی لیکراپنے سفارتخانے کا مقبوضہ فلسطین (غزہ) کی سرزمین پر گذشتہ دنوںافتتاح کر ہی ڈالاایسی قرارداد تو سابق ادوار میں ہی امریکی حکمرانوں نے پاس کر رکھی تھی مگر کسی سابقہ امریکی صدر کوایسی اسلام دشمنانہ حرکت کی جرآت نہ ہوتی تھی کہ ملت اسلامیہ ایسے عمل کا سخت رد عمل دے گی مگرٹرمپ کے دور میں امریکن بر بریت اور دہشت گردی کھل کر دنیا کے سامنے آچکی مگر چونکہ اسرائیلیوں نے ٹرمپ کو صدر منتخب کروانے میں اس کی بھرپور امداد کی تھی اور سبھی...

فلسطینی مسلمانوں کا قتل عام کیوں اور کیسے؟

زرد رُتوںکا تسلط اور مکافات عمل انوار حسین حقی - منگل 22 مئی 2018

سیاست اور سماج کی رُت کیسی ہی رہی ہو، موسم کتنابھی بے فیض اور ناسازگار کیوں نہ ہو ،کالم نگارنے کتھا بیان کرنے میں اس قدر زیادہ سُستی یا تامل سے کبھی کام نہیں لیا۔ لیکن گزشتہ تین ہفتوں سے کچھ لکھا ہی نہیں گیا ۔کافی دن سفر کی نذر ہوئے ۔ لکھنے پڑھنے کے کمرے میں سانپ گھُسا پھر واپس چلا گیا یا غائب ہو گیا لیکن اُس کا خوف چھ سات دن کا عرصہ بھی ساتھ لے گیا ۔ 29 ؍ اپریل کو مینارِ پاکستان لاہور اور پھر 12 مئی کو کراچی میں منعقد ہونے والے پاکستان تحریک انصاف کے جلسوں میں عمران خان کی ت...

زرد رُتوںکا تسلط اور مکافات عمل

پاک افغان سرحد پرآہنی دیوار کی تنصیب جلال نورزئی - اتوار 20 مئی 2018

افغانستان کے غیر یقینی حالات پاکستان پر بُری طرح اثر انداز ہیں افغانستان سے ملحق طویل سر حد غیر محفوظ ہے ۔اور یہ صورتحال حال پاکستان کے لیے باعث تشویش ہے ان سرحدوں کی کماحقہ نگرانی و حفاظت یقینی بنائی جاتی ہے تو دہشت گرد عملیات اور ان کے کُل پرزوں پر قابو پایا جا سکتا ہے ۔اس مقصد کے تحت پاک افغان سرحد پر پنجپائی کے مقام پر آہنی باڑ کی تنصیب کا کام شروع ہوگیا ہے۔ افواج پاکستان کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ 8 مئی 2018ء کو پنجپائی پہنچے اور وہاں قبائلی عمائدین کی تقریب سے خطاب...

پاک افغان سرحد پرآہنی دیوار کی تنصیب

ووٹ کے اصل حقدار کون؟ ڈاکٹر میاں احسان باری - اتوار 20 مئی 2018

انتخابات  کی تاریخ جب قریب آتی ہے تو ہر شخص اس سوچ میں غرق ہو جاتا ہے کہ اپنا قیمتی ووٹ کس کو دے؟کس امیدوار کے انتخابی نشان پر اپنی تصدیقی مہر ثبت کریں ؟کس کو راہنما مانے؟اپنی رائے کس کے حق میں استعمال کرے؟عوام پر واضح رہنا چاہیے کہ ووٹ صرف کاغذ کی پرچی نہیں جو بغیر سوچے سمجھے مہر لگا کر کسی کے بھی حق میں ڈال دی جائے بلکہ یہ آپ کی قیمتی رائے ہے یہ آپ کے پاس صرف ایک امانت ہی نہیں بلکہ ایک شہادت ہے "اور اللہ کی رضا مندی کے لیے شہادت د و"(القرآن) اگر آپ اپنی رائے ایسے شخص ک...

ووٹ کے اصل حقدار کون؟

پروفیسر محمد رفیع بٹ نے بندوق کا انتخاب کیوں کیا؟  الطاف ندوی کشمیری - هفته 19 مئی 2018

’’پروفیسر محمد رفیع بٹ کی شہادت‘‘کے بعدبھارتی میڈیا نے چپ سادھ لی ہے جبکہ 1990ء سے لیکر 2013ء تک یہ تاثر دیا گیا کہ کشمیر کی جہادی تنظیموں میں شامل نوجوانوں کی اکثریت جاہلوں یا کم لکھے پڑھے لوگوں کی ہے حالانکہ یہ تاثر تب بھی غلط تھا اور یہ بحث آج بھی سرے سے غلط اور بیکار ہے۔ سوشل میڈیا کے ذرائع سے پریشان نئی دہلی کا کورپٹ میڈیا یہ سب چھپانے کی پوزیشن میں نہیں ہے نہیں تو سوال پوچھا جا سکتا ہے کہ1990ء میں عسکری ٹریننگ کے لیے آزاد کشمیر جانے والے پروفیسر معین الاسلام ،امریکن ائر...

پروفیسر محمد رفیع بٹ نے بندوق کا انتخاب کیوں کیا؟ 

پروفیسر محمد رفیع بٹ نے بندوق کا انتخاب کیوں کیا الطاف ندوی کشمیری - جمعه 18 مئی 2018

آج کل ہر گلی اور گھر میں ایک ہی موضوع پر بحث جاری ہے کہ پروفیسر محمد رفیع بٹ نے اعلیٰ ترین سرکاری نوکری چھوڑ کر انتہائی پر خطر راستہ کیوں اختیار کیا تھا؟کوئی کہتا ہے یہ مایوسی کی علامت ہے کہ ایک پی،ایچ،ڈی اسکالر اچھی نوکری ملنے کے بعد اس کو ٹھوکر مار کر وہ راستہ اختیار کرے جس کے قدم قدم پر موت سایے کی طرح پیچھا کرتی ہے ۔کوئی کہتا ہے کہ یہ جذبہ جہاد اور شوقِ شہادت ہے جس میں یہ نہیں دیکھا جاتا ہے کہ میرا منصب کیا ہے اور میری پوزیشن کیا ہے ۔کوئی کہتا ہے کہ اس کی وجہ مسئلہ کشمیر...

پروفیسر محمد رفیع بٹ نے بندوق کا انتخاب کیوں کیا

آگ سا دیکھا سلگتے ! محمد طاہر - جمعرات 17 مئی 2018

رئیس المتغزلین میر تقی میر نے کہا تھا: جسے شب آگ سا دیکھاسلگتے اُسے پھر خاک ہی پایا سحر تک نوازشریف کے انجام سے قطع نظر ابھی تو وہ ایک شب طاری کیے اور آگ بنے ہوئے ہیں۔میر کا بیان ہی کیفیت کو سازگار ہے کہ جدھر پھر نظر دیکھوں لگ جائے آگ دم دم کُشی لب پہ کھیلے ہیں ناگ نوازشریف تُل گئے ہیں کہ قومی مفادات کو آگ میں جھونک کر ذاتی مفادات کی ہنڈیا چڑھائیں گے۔ اُنہیں کون روک سکتا ہے۔ ایک کے بعد ایک وہ بحران پیدا کررہے ہیں۔ اُنہوں نے ڈان کو دیے انٹرویو سے جس بحران کو دانستہ جنم د...

آگ سا دیکھا سلگتے !

کسانوں کے لیے ضروری ازخود نوٹس ڈاکٹر میاں احسان باری - بدھ 16 مئی 2018

گناکی فصل نے بالخصوص سندھ اور جنوبی پنجاب کے کسانوں کے گھروں میں حشر برپا کرڈالا ہے اغلب امکان یہی ہے کہ آئندہ جنوبی پنجاب کے کسان گنا کی فصل کم کم ہی کاشت کریں گے پی ٹی آئی کے سابق جنرل سیکریٹری ترین صاحب نے ہائیکورٹ میں رٹ کرکے شریفوں کے عزیزوں کی شوگر ملز کو بند کرڈالنے کا حکم لے لیا تھا اور یہ بھی کہ انہیں فوراً یہاں سے اکھاڑ لیا جائے اگر کسانوں کو پہلے ایسے کسی عمل کا علم ہوتا تو وہ لاکھوں ایکڑ فالتو گناکاشت ہی نہ کرتے بندملوں والے علاقہ میں ڈیڑھ لاکھ ایکڑسے زائد گنا ف...

کسانوں کے لیے ضروری ازخود نوٹس

انانیت ! محمد طاہر - منگل 15 مئی 2018

کسی بھی سیاسی رہنما میں ایک رتبے کا احساس مغربی تصورِ سیاست میں مباح ہے۔ مگر عظمت ایک مختلف چیز ہے۔ نکسن نے کمال کا فقرہ لکھا:عظیم قوموں کی رہنمائی کرنے والے ’’چھوٹے لوگ‘‘ کسی بڑے بحران کے دوران عظمت کی کسوٹی پر اپنے آپ کو واضح طور پر کامیاب ثابت کرنے میں ناکام رہتے ہیں‘‘۔نوازشریف ا س کی بدترین مثال ہے۔ جن کی انانیت پاکستان سے بڑھ چکی ہے۔ وہ کوئی چرچل بھی نہیں ، عظمت جن پر ٹوٹ کر برستی تھی۔جو اپنی قوم کو عظیم بحرانوں سے نکال لائے تھے۔ جنگ عظیم کا بار جنہوں نے اُٹھایا تھا۔ پھر...

انانیت !

سابق وزیر اعظم کے حق میں کالم کیوںاور کیسے؟ ڈاکٹر میاں احسان باری - پیر 14 مئی 2018

میاں نواز شریف عدالتی فیصلوں سے تاحیات نا اہل ہو چکے اور اعلیٰ عدالت نے پارٹی قیادت سے بھی محروم کرڈالامگر پارٹی انہیں ہی اصلی اور وڈاقائد تسلیم کرتی ہے۔ بقول ان کے ممبران "خلائی مخلوق"کے دبائو سے اڑان بھر کر کسی دوسری منڈیر پر بیٹھتے جارہے ہیں ۔ان کے متعلق بھارتی اخبار نے ایک کالم کے ذریعے الزام عائد کیا ہے کہ انہوں نے تقریباً5؍ارب ڈالرز غیر قانونی طور طریقوں سے یعنی منی لانڈرنگ کے ذریعے بھارت بھجوائے ہیں وہ رقوم کہاں وصول ہوئیں ؟کس کاروبار میں لگی؟ یا کس شخص کے نام بھیجی گئ...

سابق وزیر اعظم کے حق میں کالم کیوںاور کیسے؟

جناحؒ کی تصویر ہٹانے کی مذموم کوشش وجود - اتوار 13 مئی 2018

ریاض احمد چوہدری بھارتی معاشرے میں انتہا پسندی کا رجحان بہت تیزی سے پھیل رہا ہے۔ تاریخ گواہ ہے کہ مسلمان حکمرانوں نے ہمیشہ مقامی آبادی کو اپنے اقتدار میں شریک کیا اور انہیں فوج اور انتظامیہ میں اہم عہدوں پر فائز کیا۔ مگر اس کے جواب میں ہمیشہ نفرت ، غداری اور دھوکہ ہی ملا۔ آج بھی مسلمانوں کو خوف زدہ کرنے والے واقعات کو مختلف مقامات پر دہرا کر یہ ثابت کرنے کی کوشش کی جارہی ہے کہ اس ملک میں مسلمانوں کا عرصہ حیات اب ان مٹھی بھر لوگوں کی مرضی و منشاء میں پھنسا ہوا ہے۔ المیہ یہ ...

جناحؒ کی تصویر ہٹانے کی مذموم کوشش

خلائی مخلوق یا خدائی مخلوق ڈاکٹر میاں احسان باری - هفته 12 مئی 2018

میاں نوازشریف پہلیاں ہی سناتے رہتے ہیں کہ بوجھو تو جانیں ان کے اس بیان پرکہ میرا مقابلہ کسی عمران زرداری سے نہیںبلکہ خلائی مخلوق سے ہے میڈیا پر عجیب و غریب بحث چھڑ گئی ہے ٹی وی چینلز پر اینکر حضرات اب مزے لے لے کر اس پربحث و مباحثہ کر رہے ہیں۔ بلاول نے تو یہاں تک کہہ ڈالا کہ اگر میاں صاحب کا مقابلہ بقول ان کے خلائی مخلوق سے ہے تو وہ خلاء میں جائیں اور اس کا مقابلہ کریں ویسے بھی انتخابات سے قبل ایسی راگنی چھیڑ ٖڈالنا کوئی مناسب عمل نہیں وہ جتنا بھی چھپائیںان کی نظر میںتو واضح ...

خلائی مخلوق یا خدائی مخلوق

سنگبازی کا افسوسناک رُخ الطاف ندوی کشمیری - جمعرات 10 مئی 2018

(آخری قسط) اسی روز دوسرا واقع اسی شوپیان میں بھی پیش آیاکہ ترکہ وانگام شوپیان میں فورسز اور عسکری نوجوانوں کے درمیان جاری خون ریز جھڑپ کے دوران گولی لگنے سے ایک کمسن طالب علم شہیدہوا جبکہ دس دیگر زخمی ہوگئے ہیں جن میں ایک نوجوان کو انتہائی نازک حالت میں سرینگر منتقل کیا گیا ہے۔کمسن طالب علم کی شہادت کے خلاف شوپیان ،کولگام اور پلوامہ اضلاع میں حالات پھر کشیدہ ہوگئے اور لوگ گھروں سے نکل کر احتجاجی مظاہرے کرنے لگے۔حکام نے جنوبی علاقوں میں انٹرنیٹ سہولیات کو معطل کردیا ہے۔تفصی...

سنگبازی کا افسوسناک رُخ

ہزارہ عوام کا بر حق احتجاج جلال نورزئی - جمعرات 10 مئی 2018

کوئٹہ کے ہزارہ عوام دو دہائیوں سے زیر عتاب ہیں۔ وحشت، سفاکیت اور ظلم و جبر کا وہ کونسا حربہ ہے جو ان پر آزمایا نہ گیا ہو۔ یہ لوگ ا پنے خدو خال کی وجہ سے دہشتگردوں کے لیے آسان ہدف بنے ہوئے ہیں۔ وادی کوئٹہ کے مشرقی و مغربی پہاڑ کے دامن میں ان کی آبادیوں کے تحفظ کے لیے خاطر خواہ اقدامات اُٹھائے جاچکے ہیں۔ تاہم انہیں تعلیم، ملازمتوں،کاروبار اور محنت و مزدوری کے لیے آمدروفت کے دوران نشانہ بناہی لیا جاتا ہے ۔ بلاتفریق جنس و عمر مارے جارہے ہیں۔2013ء کے علمدار روڈ خودکش حملوں کے ...

ہزارہ عوام کا بر حق احتجاج

سنگ باری کا افسوسناک رُخ الطاف ندوی کشمیری - بدھ 09 مئی 2018

سرزمین کشمیر اپنی تاریخ اور جغرافیا ہی کے اعتبار سے مختلف نہیں بلکہ یہاں اخلاق و کردار بھی بڑا انوکھا ہے بالخصوص ہمارے حکمرانوں اور لیڈروں میں یہ مرض اس قدر گٹھیا اور ناقابل علاج شکل اختیار کر چکا ہے کہ ہر شریف النفس اسے دور بھاگنے میں ہی عافیت محسوس کرتا ہے ۔کشمیر میں تحریک کشمیر کے پس منظر میں سیاسی اختلافات نے ’’انسانی قدروں‘‘کو بھی متاثر کردیا ہے اور اس حد تک کر دیا ہے کہ آپ کے تصور سے بھی بالاتر ۔یہاں لوگ سیاسی بنیادوں پر ہی تعزیت اوراظہارِ ہمدردی بھی کرتے ہیں ۔جو جس مس...

سنگ باری کا افسوسناک رُخ

ہمارا پلاننگ کمیشن کیا کر رہا ہے؟ ڈاکٹر میاں احسان باری - منگل 08 مئی 2018

مملکت خدا ددا پاکستان کا پلاننگ کمیشن غالباً گہری نیند سویا پڑا رہتا ہے کوئی تو ایسا پیداواری پروجیکٹ شروع کیا جا تا جس سے کوئی آمدن بھی ہوتی رہتی ہر بڑے پروجیکٹ کی تجویز غالباً ناشتہ کی میز پر خاندان ِ شریفاں و دیگر ناشتہ کیبنٹ کے افراد کے ذہن میں آتی ہے اور پھر اس پر عملدر آمد کا حکم جاری ہو جا تا ہے پچھلے سالوں میں تمام ایسی ا سکیمیں شروع کی گئی ہیں جن کے مکمل ہو جانے پر بھی ایک دھیلہ کی واپسی ممکن نہیں ہے کاش کالا باغ ڈیم یا اس طرح کے دوسرے منصوبے شروع ہو جاتے ان کا نا...

ہمارا پلاننگ کمیشن کیا کر رہا ہے؟

پی ٹی آئی کا بیانیہ وجود - پیر 07 مئی 2018

ریاض احمد چوہدرہ موجودہ اسمبلیوں کی میعاد پوری ہونے والی ہے اور اس کے بعد نئی اسمبلیوں کے انتخابات ہونا ہیں۔ اس لیے ہر سیاسی جماعت پبلک جلسے کر کے اپنا انتخابی منشور بیان کر رہی ہے۔ اسی تناظر میں پی ٹی آئی، مسلم لیگ (ن)، پیپلزپارٹی، ایم کیو ایم پاکستان، پی ایس پی، اے این پی، جماعت اسلامی، جمعیت علماء اسلام(ف)، پختون خوا ملی عوامی پارٹی، مسلم لیگ (ق) ، تحریک لبیک اور متحدہ مجلس عمل سمیت انتخابات میں حصہ لینے والی ہر سیاسی، دینی جماعت اور اتحاد نے گزشتہ دو ماہ سے اپنے پبلک جل...

پی ٹی آئی کا بیانیہ

مسلمان پہلے اپنے گھر کی خبر لیں الطاف ندوی کشمیری - هفته 05 مئی 2018

(قسط نمبر:2) ان طبقات کے ساتھ ہی ساتھ مغرب کی تقلید میں ایک وسیع لکھی پڑھی مسلم آبادی نے اپنی گردنوں میں سیکو لر ازم اور لبرل ازم کا طوق ڈال دیاہے یہ طبقہ شدت اور انتہا پسندی میں کسی متشدد ملا یا مولوی سے کچھ بھی کم نہیں ہوتے ہیں۔کہنے کو یہ نرم مزاج اور خوش طبیعت ہو تے ہیں مگر صرف دین بیزاروں کے لیے۔ان کا رویہ اسلام پسندوں کے تئیں انتہائی معاندانہ اور جارحانہ ثابت ہوا ہے۔ مصطفیٰ کمال اتا ترک نے ترکی میں خلافت کے خاتمے کے باضابط سرکاری اعلان کے بعد جس صورتحال سے ترکی کے ساتھ...

مسلمان پہلے اپنے گھر کی خبر لیں

سانپ بھی مرجائے اورلاٹھی بھی نہ ٹوٹے ڈاکٹر میاں احسان باری - هفته 05 مئی 2018

کوئٹہ شہر پھر دہشت گردوں کے نشانہ پر ہے گزشتہ دنوں تین اکٹھے خود کش حملے کیے گئے ہیں بعد ازاں کوئٹہ کی ہزارہ برادری کے افراد کو ٹارگٹ کلنگ کے ذریعے مار ڈالا گیا انہوں نے دھرنا دیا اور بھوک ہڑ تال کی وزیر داخلہ منانے کے لیے گئے مگر انہوں نے احتجاج ختم کرنے سے انکار کردیااور چیف آف آرمی اسٹاف جنرل باجوہ سے ملے بغیر احتجاج ختم نہ کرنے کا اعلان کردیا جنرل باجوہ گئے ان کے عمائدین سے مذاکرات کرکے ان کا احتجاج ختم کروایاہزارہ برادری کے افراد مستقل فرقہ وارانہ دہشت گردوں کی ہٹ لسٹ ...

سانپ بھی مرجائے اورلاٹھی بھی نہ ٹوٹے

مسلمان پہلے اپنے گھر کی خبر لیں الطاف ندوی کشمیری - جمعه 04 مئی 2018

ہر مسلم اور غیر مسلم ملک میں گذشتہ کئی سو برس سے صرف ہم مر رہے ہیں آخر کیوں؟ کچھ احباب اس کو اعزاز کی بات سمجھتے ہیں اور مجھے ایسوں کی عقل پر ماتم کرنے کو جی کرتا ہے۔ کچھ فکر مند ہیں صرف ان مسلمانوں کے لیے جو ان کے ہم مسلک ہیں یا ہم فکر ہیں یہ بھی ایک نئی لعنت ہے کہ ہم مسلمانوں سے محبت صرف اس وقت کرتے ہیں جب ہمیں یقین ہو جاتا ہے کہ وہ ہمارے مسلک یا مکتبہ فکر کے ہیں ! جبکہ انسانیت اور اسلام اسے بہت بلند وبالا تصور لیکر آیا ہے۔ قرآن کا خطاب یاایھاالناس اور یاایھاالانسان اس ک...

مسلمان پہلے اپنے گھر کی خبر لیں

سرمایہ داروںکے ہاتھ کھلوناڈالر ڈاکٹر میاں احسان باری - جمعه 04 مئی 2018

کرنسی سرمایہ داروں کا پرانا ہتھیار ہے اور ہمارے ہاں اسٹیٹ بنک کرنسی مارکیٹ کا ریگو لیٹر مانا جا تا ہے اگر ہم پاکستانی روپے کی قیمت کم ہو نے سے نہ روکیں گے تو مہنگائی کا جن طوفان بن کر اٹھکیلیاں کرتا ہو اہمیں روند ڈالے گاپرانے درآمدی اشیاء کے آرڈرز کے تحت بھی روپے کی قیمت کی کمی کے آثار نمایاں ہو نا شروع ہو جاتے ہیں آمدہ رمضا ن المبارک کے ماہ کے دوران ڈالر کی روز بروز افزونی کی وجہ سے تقریباً سبھی درآمد کی جانے والی ضروری اشیاء کی قیمتوں میں 18تا25فیصد تک اضافہ ہوجانا قدر...

سرمایہ داروںکے ہاتھ کھلوناڈالر

شام میں ’’عالمی جنگ‘‘ کا بگل بج گیا…؟؟ محمد انیس الرحمٰن - جمعرات 03 مئی 2018

جس وقت 2016ء میں پوٹن کی قیادت میں روس نے مشرقی یوکرین میں مداخلت کا آغاز کیا تو اس وقت اس کی نظر درحقیقت کرایمیا کی اس واحد بندرگاہ پر لگی ہوئی تھی جسے 1955ء میں اس نے خود ہی یوکرین کے حوالے کردیا تھا لیکن اس مرتبہ اس کا سب سے بڑا ھدف اس اہم ترین بندرگاہ کا قبضہ دوبارہ حاصل کرنا تھا جو اس نے جلد ہی حاصل کرکے امریکا اور یورپ کو آنے والے حالات سے خبردار کردیا۔اسی بنیاد پر اس نے 1967ء میں مصر سے نکلنے کے بعد دوبارہ مشرق وسطی میں تدخل کی پالیسی اختیار کی تھی اور اپنے پرانے اتح...

شام میں ’’عالمی جنگ‘‘ کا بگل بج گیا…؟؟

دہشت گردی کی نئی لہر جلال نورزئی - جمعرات 03 مئی 2018

امریکاکے عراق اور افغانستان پر فوجی قبضے کے بعد دہشتگردی کو فروغ ملا ہے۔ داعش نے عراق سے سراُٹھایا ۔ اس کی شاخیں کئی ممالک تک پھیل گئیں۔ یہ تنظیم دوسری دہشتگرد تنطیموں کے لیے بھی مرکزی حیثیت کی حامل بنی۔ افغانستان کے جنگجو اس پرچم کے نیچے جمع ہونا شروع ہوئے۔ امریکا نے القاعدہ ختم کرنے کے لیے افغانستان پر فوجی یلغار کردی۔وہ ختم ہوئے مگر جنگ افغانستان پر جاری رکھی۔یقینی طور پر مقصد افغانستان پر قبضہ کرنا تھا جس میں وہ اپنے افغان ہمنواوں کے تعاون سے کامیاب ہوا۔ اس طرح مقبوضہ افغ...

دہشت گردی کی نئی لہر

شام میں ’’عالمی جنگ‘‘ کا بگل بج گیا…؟؟ محمد انیس الرحمٰن - بدھ 02 مئی 2018

آخر کارشام پر امریکی حملے سے مشرق وسطی میں بڑی جنگ کا بگل بج گیا۔اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل انٹونیو گوٹرس António Guterres نے اسے دوبارہ سرد جنگ کا آغاز قراردیا ہے لیکن اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل کے اس تبصرے کو زمینی حقائق کے برخلاف سمجھا جائے گا کیونکہ حقائق یہ ہیں کہ اب سرد جنگ کی گنجائش باقی نہیں رہی دنیا کے اہم محاذوں پر معاملات گرم ہوچکے ہیں۔ نیٹو نے روس کے گرد واقع بالٹک ریاستوں میں بھاری اسلحے کی ترسیل گذشتہ ایک برس سے جاری رکھی ہوئی ہے تو دوسری جانب روس کرائمیا ...

شام میں ’’عالمی جنگ‘‘ کا بگل بج گیا…؟؟

بجٹ، شناختی کارڈ اور پٹرول بم! ڈاکٹر میاں احسان باری - پیر 30 اپریل 2018

نیا بجٹ الفاظ کے گورکھ دھندے کے سوا کچھ بھی نہیں۔آبی منصوبے یکسر نظر انداز کر دیے گئے ہیں۔حالانکہ بھارت مودی کی اسلام اور پاکستان دشمنی کی وجہ سے تاریخ کا سب سے بڑا آبی دہشت گرد ثابت ہوا ہے۔ بھارت نے پچھلے سال کی نسبت1/3حصہ پانی بھی پاکستان کی طرف نہیں چھوڑا۔بجٹ میں کم ازکم کسی بڑے بند کی تعمیر کے لیے رقوم نہ رکھناملک اور قوم کے ساتھ بڑی زیادتی کے مترادف ہے۔ 10فیصد تنخواہ اور پنشن میں اضافہ اونٹ کے منہ میں زیرہ کی مانند ہے۔ ایپکا و دیگر ملازمین کی تنظیموں نے اسے یکسر مسترد ...

بجٹ، شناختی کارڈ اور پٹرول بم!

اپوزیشن کے خلاف بھارتی حکومت کے اوچھے ہتھکنڈے وجود - جمعه 27 اپریل 2018

ریاض احمد چوہدری حقیقت یہ ہے کہ بھارتی سرکاری این آئی اے ایجنسی اپنے مخالفین کو دبانے کیلیے استعمال کرتی ہے۔ بہت سے واقعات میں ثابت ہوا ہے کہ مذکورہ ایجنسی نے اپوزیشن پارٹیوں اور ان کے اہم رہنماؤں کو گرفتار کیا اور ان کے خلاف کرپشن، بدعنوانی اور دیگر مقدمات کی تفتیش شروع کی۔ حکومتی مفاد میں بیان دینے یا حکومت کی مخالفت ترک کرنے پر انہیں چھوڑ دیا گیا۔ ان پر کسی قسم کا کوئی مقدمہ قائم نہیں کیا جاتا۔ جو لوگ حکومت کی بات نہ مانیں انہیں بدترین مقدمات میں پھنسا دیا جاتا ہے۔ جب ت...

اپوزیشن کے خلاف بھارتی حکومت کے اوچھے ہتھکنڈے

واحد دجالی معاشی نظام میں دنیا کوجکڑنے کا منصوبہ محمد انیس الرحمٰن - جمعرات 26 اپریل 2018

(قسط نمبر 3) اب سوال پیدا ہوتا ہے کہ کوئی حکومت یا بینک اس وقت بٹ کوائن کرپٹو کرنسی کی ملکیت ظاہر نہیں کررہاچین اور امریکا میں تاحال اس میں لین دین پر پابندی ہے تو پھر دجالی حکومت اسے کیسے استعمال کرے گی؟ اس کا جواب اس طرح دیا جاسکتا ہے کہ جس انداز میں کاغذ کی کرنسی کے بعد ڈیبٹ اور کریڈیٹ کارڈز کو ایک سہولت کے طور پر دنیا کے سامنے متعارف کرایا گیا ہے اور اب لوگوں نے اسے ’’سہولت‘‘ کے طور پر قبول بھی کرلیا ہے اسی طرح آنے والے دنیا میں بٹ کوائن کرپٹو کرنسی بھی ایک سہولت کے طور...

واحد دجالی معاشی نظام میں دنیا کوجکڑنے کا منصوبہ

سامراجی غلطیاں !افغانستان پھر جل اٹھا! ڈاکٹر میاں احسان باری - جمعرات 26 اپریل 2018

سامراج کا شاید مطلب ہی غلطیاں کرنا اور مخالفین پر ظلم و تشددکے پہاڑ توڑنا ہو تا ہے کبھی کسی سامراجی طاقت نے امن و سکون کے پھول نہیں برسائے یہ ہمیشہ ہی آگ اگلتے اور تند و تیز بیانات کے ذریعے مخالفین کو کچل ڈالنے کے مشن پر قائم رہتے ہیںخواہ اس میں ان کاکتنا ہی اپنا جانی و مالی نقصان کیوں نہ ہو جائے امریکہ اربوں ڈا لر خرچ کر کے بھی ڈیڑھ درجن سے بھی زائد سالوں سے افغانستان میں نیٹو افواج جیسے بڑے فوجی اتحاد کے ذریعے بھی قطعاً کوئی کامیابی حاصل نہیں کر سکا اوباما تو اس مسئلہ کے ف...

سامراجی غلطیاں !افغانستان پھر جل اٹھا!

واحد دجالی معاشی نظام میں دنیا کوجکڑنے کا منصوبہ محمد انیس الرحمٰن - بدھ 25 اپریل 2018

(قسط نمبر:2) شروع میں جس وقت بٹ کوائن کو متعارف کرایا گیا تھا تو اس کی ایک حد رکھی گئی تھی کہ21 ملین سے زیادہ بٹ کوائن متعارف نہیں کرائے جائیں گے اور اس تعداد کو 2140ء تک مکمل ہونا تھالیکن آج تک تقریبا 16ملین بٹ کوائن وجود رکھتے ہیں۔ اس سے اندازہ لگایا جاسکتا ہے کہ اس طلب کس تیزی کے ساتھ بڑھ رہی ہے۔ اس بات کو بھی مدنظر رکھیں کہ ضروری نہیں کہ ایک بٹ کوائن جس کی اس وقت قیمت تقریبا پاکستانی چھ لاکھ روپے ہے آپ پورا ایک بٹ کوائن ہی خریں بلکہ آپ اس کا کچھ حصہ بھی کرید سکتے ہیںا...

واحد دجالی معاشی نظام میں دنیا کوجکڑنے کا منصوبہ

واحد دجالی معاشی نظام میں دنیا کوجکڑنے کا منصوبہ محمد انیس الرحمٰن - منگل 24 اپریل 2018

دنیاتغیرات کے دھانے پر آن کھڑی ہوئی ہے سیاسی اورمعاشرتی تبدیلیوں کے ساتھ ساتھ دنیا کے موسموں کو جنگی مقاصد کے لیے استعمال کرنے کی خاطر ان کا کنٹرول بھی حاصل کیا گیااور اب عالمی معاشی تغیر کا مرحلہ شروع ہوچکا ہے۔ بٹ کوائن Bitcoinکرپٹوکرنسی کی شکل میں دنیا میں نئے دجالی معاشی نظام کی ابتدا کردی گئی ہے۔ اس وقت اس نئی کرنسی پر بینکوں کا کنٹرول نہیں ہے لیکن آگے جاکر اس کا کنٹرول دنیا بھر کو مانیٹر کرنے والے مرکزی ’’یروشلم بینک ‘‘ کے پاس ہوگا جہاں سے پل بھر میں دنیا کی قوموں کو امی...

واحد دجالی معاشی نظام میں دنیا کوجکڑنے کا منصوبہ

گدھا پالیسی انوار حسین حقی - اتوار 22 اپریل 2018

خیبر پختونخواہ کی حکومت کے حوالے سے ایک زبردست بلکہ گدھا نواز قسم کی خبر یہ موصول ہوئی ہے کہ’’ گدھوں کی افزائش کے لیے خیبر پختونخواہ کی حکومت ایک جامع پالیسی متعارف کروا رہی ہے۔ پالیسی پر عملدرآمد کے لیے ابتدائی طور پر 400 ایکٹر اراضی حاصل کر لی گئی ہے۔ اس اراضی پر جدید ترین سہولتوں سے آراستہ ’’ گدھا بریڈنگ فارم ہاؤس ‘‘ تعمیر کیے جائیں گے ۔ کے پی کے کی حکومت اس پالیسی کو صوبائی لائیو سٹاک پالیسی 2018 ء کے تحت متعارف کروا رہی ہے۔ دستاویزات سے ملنے والی اطلاع کے مطابق گدھوں ...

گدھا پالیسی

گیا وقت پھرہاتھ آتا نہیں! ڈاکٹر میاں احسان باری - اتوار 22 اپریل 2018

پانی یا دولت کا مکمل بھرا ہو ا کنواں ہی کیوں نہ ہواس میں کسی طرف سے تازہ پانی شامل یا مزید رقوم داخل نہ ہوں تو خرچ ہو تے ہوتے اسے بحر حال ختم ہو جانا ہے کہ یہی قانون قدرت ہے دولت کے خزانے لٹتے رہیں تو ختم ہی ہو جائیں گے شریفوں کی لیگ کے لبا لب بھرے ہوئے ووٹوں کے بوروں میں سوراخ ہو چکا تو وہ بھی بتد ریج ختم ہوں گے ستر سالوں سے انگریزوں کی نا جائز اولادوں کے وارثان ٹوڈی جاگیردار ظالم وڈیرے کیا کبھی وفادار ہو سکتے ہیں تجربہ بتاتا ہے کہ ایسا سوچنا بھی محال ہے انتہائی سیانے لیڈر ج...

گیا وقت پھرہاتھ آتا نہیں!