وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان عالیانی بہت ساری خوبیوں اور صلاحیتوں کے مالک ہیں۔ نواز شریف کی حکومت میں ان کے پاس وزیر مملکت برائے پیٹرولیم و قدرتی وسائل کا قلمدان تھا۔ اس وزارت کے دوران اپنے دامن کو بُرائیوں سے بچائے رکھا۔ گو کہ مقتدرہ کے زیر اثر ہیں۔ جس سے شاید ہی کوئی بچا ہو، ہر ایک کسی نہ کسی لحاظ کے تحت زیر اثر ہی رہا ہے۔ سیاست و قیادت میں...

متحدہ قومی موومنٹ پر ہرگزرتاد ن تنگ سے تنگ ہوتا جارہا ہے۔ بانی متحدہ کے خود کش حملے نے اسے ٹکڑوں میں تقسیم کردیا ۔ ایم کیوایم کے ساتھ اب وہی کچھ ہورہا ہے جو کبھی ایم کیوایم نے کراچی اور اہلِ کراچی کے ساتھ کیا تھا۔ ہر ایک کا سانس بند کرنے اور ہر ایک پر زمین تنگ کردینے والی متحدہ اب اسی انجام سے دوچار ہے۔ایم کیوایم کے لیے ان دنوں سب...

اپنے حالیہ دورہ لاہور کے دوران وزیر اعظم عمران خان نے پنجاب کے وزیر اعلیٰ سردار عثمان بزدار پر اپنے مکمل اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے ان کی خوابیدہ صلاحیتوں کے جلد اُجاگر ہونے کی اُمید کا دیا روشن کیا ہے۔ وزیر اعظم کو اپنے انتخاب پر اعتماد کا اعادہ اس لیے بھی کرنا پڑا کہ عثمان بزدار کو سیاست میں حاسدین کے ساتھ ساتھ بیوروکریسی کی جانب سے بھی مخالفت کا سامنا ہے۔...

دیکھیئے! حضرت علامہ اقبال کا دن کب طلوع ہوتا ہے، جب ماہ ربیع الاول ہمارے دلوں کی دہلیز پردستک دے رہا ہے۔ کبھی وہ دن تھے جب لطف اللہ خان شہر قائد میں اپنے آواز خزانے کے ساتھ رونق بڑھاتے تھے۔ گاہے اُن کی خدمت میں حاضر ہوتا ، اور قدیم ادوار کی عمیق آوازوں میں گداختہ گم ہوجاتا۔ ہائے یہ شورش کا انٹرویو تھا، اکابرین کی قطار سے لگاتار آتے آخری شہشوارِخطابت!!!ماہر القادری...

گوادر کے گہرے پانی کی بندرگاہ کی شہرت و چرچا دنیا بھر میں ہے ۔ یہ بندرگاہ تاحال پوری طرح فعال نہیں۔ آمرپرویز مشرف کے دوراقتدار میں کوسٹل ہائی وے کی تعمیر مکمل ہوئی۔ یہ منصوبہ ان سے قبل میاں نواز شریف کی حکومت کے پیش نظر تھا۔ چنانچہ پرویز مشرف کے دور میں چند دیگر شاہراہوں پر( جو گوادر کو ملک کے دوسرے علاقوں سے منسلک کرتی ہے) پیشرفت ہوئی۔ کوسٹل ہائی وے...

خوارزم شاہی سلطنت ایشیاء کی سب سے بڑی مملکت تھی ۔جس کی فرمانروائی سلطان محمد خوارزم شاہ کے پاس تھی ۔ سلطان محمد خوارزم شاہ جلال الدین خوارزم کے والد تھے ۔ اُدھر انسانی تاریخ کے سفاک کردار، تہذیب انسانی سے نا بلدچنگیز خان منگول ،چین ، تمخاج، ترکستان کی بالائی منطقوں تک رسائی کے بعد آگے کی جانب بڑھنے کی تدبیر و سوچ بچار میں لگا تھا۔ سلطان محمد خوارزم کی سلطنت و...

یہ ایک نئے عہد کی کتاب ہے، جس کا ابھی دیباچہ بھی نہیں لکھا جاسکا۔ مگر لوگ اتنے اُتاؤلے ہو گئے کہ ابھی سے اس کا تتمہ پڑھنے کو بے تاب ہیں۔ پاکستانی سیاست کا بارہواں کھلاڑی اب پہلا بلے باز بن چکا ہے، یہاں تک کہ قومی سیاست کا کپتان بھی۔ دوسری طرف پہلے بلے بازی کرنے والے دونوں سیاسی جماعتوں کے قائدین بارہویں کھلاڑی بننے کے خوف میں مبتلا ہیں۔ پاکستانی کرکٹ کی...

چین اکتوبر 1949ء کو ماؤزے تنگ اور چُواین لائی جیسے قدآور رہنماؤں کی قیادت میں بھوک، افلاس،بد عنوانیوں، خانہ جنگیوں اور نیم نو آبادیاتی دور سے نکل آیا۔ یہ کمیونسٹ انقلاب تھا ۔حالانکہ سویت یونین کی صورت میں اشتراکی طاقت کا طوطی نصف د نیا میں بولتا تھا۔ جو چاہتا تھا کہ چین بھی اس کا مطیع وزیر نگیں رہے۔جس کی سُرخ طاقت نے ساٹھ اور سترکی دہائیوں میں عملاً کو ششیں بھی کیں...

وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کے بعد صحافت کے’’ سیونگلیوں‘‘ نے اپنا کھیل شروع کردیا ہے۔ سیونگلی بھی کیا زبردست کردار ہے۔ ذرا جان لیجیے!انیسویں صدی کے کارٹونسٹ اور ناول نگار جارج ڈو موریئر اپنے زبردست ناول ٹرلبائی (Trilby) کے حوالے سے بہت مقبول ہوا۔ سیونگلی اُسی ناول کا ایک افسانوی کردا رہے جو ہپناٹزم کا ماہر تھا اور’’ بدنیتی ‘‘سے دوسروں کو اپنی مرضی کا تابع بناتا تھا۔ پاکستانی صحافت میں بھی کچھ...

ترک شاعر اور ناول نگار ناظم حکمت نے کہا: ’’غرض کہ یہ سب دل کا معاملہ ہے‘‘۔ رومانوی انقلابی کہلانے والے ناظم حکمت کا انتقال جون1963 ء کو ہوا، اُن کا سابقہ پاکستانی ذرائع ابلاغ کے ’’جغادریوں ‘‘ سے نہیں پڑا، وگرنہ وہ کہتے: ’’غرض کہ یہ سب پیٹ کا معاملہ ہے‘‘۔ ابھی ابھی ایک تحریر نظر سے گزری، کچھ لوگ نکتہ آفرینیوں میں گزارا کرتے ہیں۔ ایک صحافی اور تاجر کے درمیان جنگ میں صحافی ہار جائے...
اشتہارات