وجود

... loading ...

وجود
وجود
ashaar
دل پھر طوافِ کوئے ملامت کو جائے ہے! وجود - منگل 15 جون 2021

ساکھ لیڈر کے لیے کرنسی کی طرح ہے۔ اس کے بغیر وہ ایک دیوالیہ پن کی شکار دکھائی دیتی ہے۔ مگر ذہنی اور روحانی دیوالیے کے شکار معاشروں میں رہنما ساکھ کی زیادہ پروا نہیں کرتے۔ وہ عزت یا ساکھ کے بارے میں'' اُس بازار کی مخلوق'' کی طرح سوچتے ہیں جو سمجھتی ہے کہ عزت اللہ نے بہت دی ہے ، جتنی چلی جائے کم نہیں ہوتی۔ نواز لیگ کے صدر شہباز شریف اور پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو وفاقی میزانیہ پیش کیے جانے کے بعدپارلیمنٹ کے باہر اکٹھے دکھائی دیے تو اس حسین منظر کی تاریخ نے بلائیں لیں۔ یہ ...

دل پھر طوافِ کوئے ملامت کو جائے ہے!

غلامی سے نجات ! وجود - منگل 15 جون 2021

حقیقت اور دعویٰ دو الگ الگ باتیں ہیں ، یہ الگ بات کہ ہمارے حکمران باتیں بھی بہت کرتے ہیں اور دعوے مگر اس سے بھی زیادہ لیکن جب حقیقت آشکارہوتی ہے تو دل کو بہت رنج ہوتا ہے جیسے نازک سے آبگینوں کو ٹھیس پہنچتی ہو ۔ تازہ ترین ایک خبر ملاحظہ فرمائیں دل و دماغ کے دریچے کھل جائیں گے۔ ہرروز اس قوم کی تنزلی کی داستانیں پڑھ پڑھ کر دل دکھتاہے جس سے بخوبی اندازہ لگایا جا سکتاہے، اس ملک کے ساتھ کیا کِیا جارہاہے ۔ ماضی کا ایک ورق ملاحظہ فرمائیں سابقہ خادم ِ اعلیٰ کے دور ِ حکومت میں پنجاب ...

غلامی سے نجات !

آج پھر تصویریں سونے نہیں دیتیں؟ وجود - پیر 14 جون 2021

یہ برماکے مسلمانوںکی حالت ِ زارکا نوحہ ہے یامیرے بندلبوںکی چیخیں ، میںنہیں جانتا۔ لیکن ظلم کے خلاف آوازبلندکرنے کی کوشش کی ہے۔ شاید عالمی ضمیر جاگ اٹھیںآج دل پھرسے مضطرب ہے۔ بے قراری،بے سکونی حواس پر طاری ہے ۔ میرے چاروں طرف فضا میں خون کی بو رچی ہوئی محسوس ہورہی ہے، جیسے سانس لینا بھی دوبھرہوگیاہو۔ میرے ارد گرد آہوں،سسکیوں اور بین کرتی آوازیں حا وی ہوتی جارہی ہیں ۔میں خوفزدہ ہوں ذرا سی آہٹ پر بھی سہم سہم جاتاہوں کبھی بچوں کی چیخیں۔کبھی نوجوان لڑکیوں کی آہ و بکا۔کبھی مر...

آج پھر تصویریں سونے نہیں دیتیں؟

امریکا کی گھڑی اور طالبان کا وقت وجود - پیر 14 جون 2021

  جنوب امریکی علاقے کے ریڈانڈین قبائل سے تعلق رکھنے والے ایک سردار نے کبھی کہا تھا کہ ’’ جب سفید آدمی پہلی بار ہماری سرزمین پر آیا تھا تو اس کے پاس بائبل تھی اور ہمارے پاس وافر رزق، قیمتی ہیرے جواہرات اور زرخیز اراضی تھی لیکن اَب سفید آدمی کے پاس ہماری تمام وسیع و عریض زرخیز اراضی ہے جبکہ ہمارے پاس صرف بائبل رہ گئی ہے‘‘۔ امریکیوںکے توسیع پسندانہ عزائم کی حقیقت کو سمجھنے کے لیے ضروری ہے کہ ریڈ انڈین قبیلہ کے سردار کے کہے گئے درج بالا جملہ پر ہزار بار غور وفکر کیا جا...

امریکا کی گھڑی اور طالبان کا وقت

شہریت ترمیمی قانون کا‘خاموش ’نفاذ وجود - پیر 14 جون 2021

کورونا پرقابو پانے میں اپنی ناکامیوں کو چھپانے کے لیے مودی سرکار ان ہی فرقہ وارانہ موضوعات میں پناہ ڈھونڈھ رہی ہے جو ہمیشہ سے اس کے لیے نجات کاکام دیتے رہے ہیں۔ ایسے نازک دور میں جب کہ حکومت کو اپنی تمام توجہ ملک کے عوام کو کورونا سے بچانے اور ویکسین کی شدید قلت کو پورا کرنے پر صرف کرنی چاہئے ، وہ عوام کی توجہ بھٹکانے کے لیے فرقہ وارانہ موضوعات کو ہوا دے رہی ہے ۔ ورنہ کیا وجہ ہے کہ اچانک اس شہریت ترمیمی قانون کو نافذ کرنے کی جانب پیش قدمی شروع کردی گئی ہے جس پر گزشتہ سال پورے...

شہریت ترمیمی قانون کا‘خاموش ’نفاذ

جگنوئوں کامدفن وجود - هفته 12 جون 2021

آپ نے گھپ ٹوپ اندھیری رات میں جگنوئوںکو چمکتے تو دیکھاہوگاروشنی کی کرنیں جگنوکے جسم سے پھوٹتی ہیں تو ایک عجب بے نام سااحساس ہوتاہے اور قدرت کے اس کمال پر حیرت بھی۔۔۔کالی رات میں جگنوکو دیکھ کر یہ بھی گمان ہوتاہے جیسے کسی نے مشعل اٹھارکھی ہو ۔کبھی کبھی سوچتاہوں وعدے،امید اور خواب بھی جگنوکی مانند ہوتے ہیںمایوسی میں بھی مسلسل جدوجہدکرنے کی ترغیب دیتے رہتے ہیں جینے کا حوصلہ ملتاہے تو دل جیسے پھرسے جوان ہو جاتاہے۔ایک بزنس مین نے اپنے بیٹے کو نصیحت کی کہ کامیابی کے لیے زندگی میں ...

جگنوئوں کامدفن

مشرقِ وسطیٰ کا بدلتا منظرنامہ وجود - هفته 12 جون 2021

اسرائیل کے معرضِ وجود میں آتے ہی مشرقِ وسطیٰ کا امن و سکون غارت ہو گیا تھا اب بھی یہ خطہ مسلسل جنگوں کا مرکز ہونے کی بناپر عدمِ استحکام کا شکارہے لیکن کچھ عرصہ سے غیر متوقع واقعات کی بنا پر منظر نمامے ایسی تبدیلی آئی ہے جس کے بارے چند برس قبل سوچا بھی نہیں جا سکتا تھااب بھی بہت سے لوگ انہونیوں سے ورطہء حیرت میں ہیں مثلاََ وہی عرب ممالک جو کبھی اسرائیل کے بدترین مخالف تھے اب اُن کی مخالفانہ جذبات کی برف پگھل رہی ہے متحدہ عرب امارات نے تو صیہونی ریاست سے بغیر ویزہ آمدو رفت ک...

مشرقِ وسطیٰ کا بدلتا منظرنامہ

میرے ڈپریشن کا علاج کیسے ہوا؟ وجود - هفته 12 جون 2021

(مہمان کالم) زوئی بویئر موسم گرما میں مَیں 26 سال کی ہوئی تو شکاگو کے نواح میں اپنے والدین کے گھر منتقل ہو گئی کیونکہ اب میرے لیے اپنا خیال رکھنا ممکن نہ تھا۔ میں اپنی زندگی میں زیادہ تر ڈپریشن کا شکار رہی ہوں مگر پانچ سال پہلے موسم گرما میں میرے لیے ڈپریشن ناقابل برداشت ہو گیا تھا۔ میں کئی کئی دن صوفے پر بیٹھے گزار دیتی اور شاید ہی کوئی بات کرتی تھی۔ میرا دماغ اس قدر سست ہو گیا تھا کہ مجھے بولنے کے لیے الفاظ ہی نہیں ملتے تھے۔ میں پوری پوری رات جاگتی رہتی اور میرا ذہن سوچ...

میرے ڈپریشن کا علاج کیسے ہوا؟

نیندکیوں رات بھرنہیں آتی؟ وجود - جمعه 11 جون 2021

یہ شعر آپ میں سے بیشترنے یقینا سناہوگا کون کہتا ہے موت آئی تومر جائوںگا میں تو دریا ہوں سمندرمیں اترجائوں گا اس کا مطلب ہے موت ۔۔زندگی کے تسلسل کا ہی نام ہے یہ بات عین اسلام ہے ۔۔۔کوئی فوت ہو جائے تو کہا جاتاہے فلاں کا انتقال ہوگیا ،یعنی وہ اس دنیا سے اگلی دنیا میں ٹرانسفرہوگیا ،انتقال کی ٹرم زمین کی خریدو فروخت میں بھی استعمال کی جاتی ہے آپ نے یہ بھی سناہوگا ،فلاں بزرگ کا وصال ہوگیا وصال کے معانی ہی ملنے کے ہیں ہجروصال سے اولیاء کرام، شاعروںاور عاشقوں کا گہرا رشتہ ہے ،...

نیندکیوں رات بھرنہیں آتی؟

بے ہودہ انسان وجود - جمعه 11 جون 2021

دوستو،ہر انسان کو اپنی زندگی میں ایک سے زائد بے ہودہ انسانوں سے واسطہ ضرور پڑتا ہے۔۔ بے ہودگی کی کوئی حد اور سرحد نہیں ہوتی۔۔ کسی وقت بھی کوئی بھی بے ہودگی کرسکتا ہے، اس کا سب سے بہترین علاج صرف یہی ہے کہ بے ہودگی کرنے والے کو نظرانداز کردیں، کیوں کہ آپ نے اس کی بے ہودگی کانوٹس لیا یا کوئی ری ایکشن (ردعمل) دیا تو پھر بے ہودہ انسان کی بے ہودگیاں مزید بڑھتی جائیں گی، آپ نے مزید پریشان ہوجانا ہے۔۔بے ہودہ انسان ایک دو بار بے ہودگی کرتا ہے لیکن جب اسے احساس ہوجائے کہ اسے نظراندا...

بے ہودہ انسان

کووڈ سے برازیلی بچوں کی اموات وجود - جمعه 11 جون 2021

(مہمان کالم) پیٹر ہوٹیز برازیل میں وبائی امراض سے تباہی کی جدید تاریخ میں دیکھا گیا ہے کہ اکثر اوقات بچے موت اور معذوری کا شکار ہوئے ہیں۔ جب 2007-08ء میں وہاں ڈینگی بخار پھیلا تو مرنے والوں میں نصف سے زیادہ تعداد بچوں کی تھی۔ جب 2015ئ￿ میں زکا وائرس پھیلنے سے حاملہ خواتین اس کی لپیٹ میں ا?ئیں تو 1600سے زائد نوزائیدہ برازیلی بچوں میں مائیکرو سیفلے کا پیدائشی نقص پایا گیا۔ یہ تعداد دنیا کے کسی بھی ملک سے زیادہ تھی۔ نظام تنفس کا وائرس سب سے زیادہ برازیلی بچوں میں پھیلا تو ...

کووڈ سے برازیلی بچوں کی اموات

اندرکی خباثت وجود - جمعرات 10 جون 2021

کچھ لوگوںکو بانی ٔ پاکستان سے اللہ واسطے کا بیرہے اس بغض کا وہ اظہار وقتاً فوقتاً کرتے ہیں یہ وہ لوگ ہیں جن کو پاکستان نے عزت دی یہ لاکھوں کروڑوں مراعات بھی لے رہے ہیں پاکستان کے دم سے ان کی سیاست ہے لیکن جب بھی موقع ملتاہے ان کے اندرکا منافق سامنے آجاتاہے کتنے ہی نام نہاد سیاستدان ہیں جن کی زندگی کی ساری رونقیں پاکستان کے دم قدم سے ہیں جوکھاتے تو پاکستان کا ہیں لیکن ان کے منہ سے کبھی اس ملک کے لیے کلمہ ٔ خیرنہیں نکلا وقتاً فوقتاً ہی ان کے اندرکی خباثت باسی کڑھی کی طرح بلبلے...

اندرکی خباثت

نہتا کراچی شر پسندوں کے نرغے میں وجود - جمعرات 10 جون 2021

6 جون 2021 کے بدقسمت دن پاکستان کے سب سے بڑے شہر کراچی میں بحریہ ٹاؤن کو مبینہ طور پر سندھی قوم پرست جماعتوں کی طرف سے بدترین دہشت گردی اور اشتعال انگیزی کا نشانہ بنایا گیا ۔مذکورہ واقعہ میں بحریہ ٹاؤن کی جانب سے مبینہ طور پر مقامی گوٹھوں کو مسمار کرنے کے خلاف سندھ کی قوم پرست جماعتوں، مزدور و کسان تنظیموں اور متاثرین کی جانب سے’ ’غیر قانونی قبضے چھڑوانے کے لیے‘ ‘ہونے والے نام نہاد احتجاج کے دوران شر پسند عناصرنے بحریہ ٹائون میں داخل ہو کر اربوں روپے کی قیمتی املاک کو ناقابل...

نہتا کراچی شر پسندوں کے نرغے میں

ٹرمپ اور ٹرمپ ازم: بائیڈن حکومت کے لیے بڑا چیلنج وجود - جمعرات 10 جون 2021

(مہمان کالم) راس ڈودیٹ گزشتہ موسم خزاں اور سرما میں امریکی صدر نے ایک غیر موثر مگر سنگین نتائج کی حامل حکمت عملی کے ذریعے بھرپور کوشش کی کہ ریپبلکن ارکان کی مدد سے اس الیکشن کے نتائج کو الٹ دیا جائے جس میں وہ واضح شکست کھا چکے تھے۔ انہیں ابھی تک یہ یقین ہے کہ معلق ریاستوں کے آڈٹ کے نتیجے میں اس سال موسم گرما میں وہ پھر سے وائٹ ہائوس میں براجمان ہو جائیں گے۔ بہت سے ایسے حاشیہ بردار‘ جنہوں نے پہلے بھی ان کے اس گمان کی حوصلہ افزائی کی تھی‘ آج بھی اسی کوشش میں لگے ہوئے ہیں۔...

ٹرمپ اور ٹرمپ ازم: بائیڈن حکومت کے لیے بڑا چیلنج

بلوچستان میں فورسز پر حملوں کے پیچھے کون؟ وجود - بدھ 09 جون 2021

بلوچستان کے اندر پھر فورسز پر حملوں میں تیزی دیکھنے کو ملی ہے۔ خصوصاً 8اکتوبر2001ء کے بعد جب افغانستان میں طالبان کی حکومت ختم کی گئی تو بلوچستان میں واضح طور شورش ، بم دھماکوں، اغواء برائے تاوان اور ہدفی قتل کے واقعات ہونے لگے۔ افغانستان پر امریکی قبضے اور بھارتی بالادستی کے بعد بلوچستان کی بلوچ شدت پسند تنظیموں کے لیے پناہ گاہ تربیت گاہ بنا۔ سابق فاٹا میں ٹی ٹی پی وغیرہ کے خلاف جون2014ء شروع ہونے والے آپریشن ضرب عضب کے بعد ان مذہبی تنظیموں کا محفوظ ٹھکانہ بھی افغانستان بنا...

بلوچستان میں فورسز پر حملوں کے پیچھے کون؟

چار کی چودھراہٹ۔۔ وجود - بدھ 09 جون 2021

کالج لائف میں ایک فلم دیکھی تھی، جس میں ایک کردار کا ایک ڈائیلاگ آج تک دماغ میں گھومتا ہے، سمجھ سمجھ کے سمجھو، سمجھ سمجھ کے سمجھنا بھی ایک سمجھ ہے، سمجھ سمجھ کے جو نہ سمجھے، میری سمجھ میں وہ ناسمجھ ہے۔۔۔واقعی ہماری سمجھ میں آج بھی کچھ باتیں نہیں آتیں،ہماری طرح آپ لوگوں کو بھی کچھ باتیں سمجھ نہیں آتی ہوں گی، تو آئیے کچھ ایسی باتیں کرتے ہیں جس آپ کو سمجھ آتی ہیں نہ ہمیں۔۔ باباجی سے جب ہم نے پوچھا۔۔ محبت شادی سے پہلے کرنی چاہیئے یا بعد میں؟ تو وہ کہتے ہیں، اس سے کوئی فر...

چار کی چودھراہٹ۔۔

حادثے اور غیر ذ مہ داریاں وجود - بدھ 09 جون 2021

قیامِ پاکستان سے ہی مختلف قسم کے حادثے ہماری تاریخ کا حصہ ہیں لیکن افسوسناک امر یہ ہے کہ آج تک کسی حادثے کی وجوہات کا تعین کرنے کی کوشش ہی نہیں ہوئی اسی وجہ سے کسی زمہ دار کو سزا نہیں مل سکی یہ غیر زمہ داری اور لاپرواہی کی انتہا ہے اور تلخ سچ یہ ہے کہ اسی غیر زمہ داری کی بنا پر حادثے ہماری تاریخ کا حصہ بن گئے ہیں اور قیمتی جانیں ضائع ہو رہی ہیں اگر کسی ایک حادثے کی غیر جانبدارانہ انکوائری کرائی جاتی اور زمہ داروں کو کیفرِ کردار تک پہنچایا جاتا توآج موجودہ صورتحال نہ ہوتی او...

حادثے اور غیر ذ مہ داریاں

اسیرکی توبہ وجود - منگل 08 جون 2021

میدان ِ جنگ میں بڑے زورکارن پڑاہواہے متحارب ایک دوسرے پر بڑی شد ومدسے حملہ آورہیں ہرکوئی دشمن کو زیر کرنے کے لیے بڑی جواں مردی سے لڑرہاتھا اس دوران ایک مسلمان سپاہی کو پہاڑ کی کھوہ میں ایک بوتل ملی جس میں کوئی سیال شے تھی اس نے بوتل کھولی تو اس کی بو نے بتلادیا کہ وہ شراب ہے اس صحابی کوؓ نہ جانے کیا سوجھی کہ وہ غٹا غٹ پی گیا پھر ام الخائث نے جب اثر اثر دکھایا تو وہ الٹی سیدھی حرکتیں کرنے لگاسعد بن ابی وقاص رضی اللہ عنہ سپہ سالار کو خبر ہوئی تو انہوں نے انتہائی غضب ناک ہوکر ح...

اسیرکی توبہ

کوئی ساتھی نہیں قبرکا وجود - پیر 07 جون 2021

قبروںکی حرمت یاخوف اب دلوںسے رخصت ہوگیاہے یہ الگ بات کہ بااثرلوگوںنے مال ِ غنیمت سمجھ کر قبرستانوںپرقبضے کرلیے ہیں شہروں اور دیہاتوں کے درمیان کوئی تمیز نہیں حکومت بھی اس طرف توجہ کرنے سے گریزاں، گریزاں۔۔اکثروبیشتر قبرستانوں میں سارا دن سارا دن بھنگیوں چرسیوںکا آنا جانا لگارہتا ہے یعنی مرنے کے بعد بھی کوئی سکون نہیں ۔شہر سے دورقبرستان کے احاطہ میں چندموالی ایک کٹیا میں روزانہ موج میلہ کرتے۔ کبھی کبھارکوئی اپنے کسی پیارے کی قبرپر پانی چھڑکانے کے لیے کہتا تو کوئی نہ کوئی اٹھتا...

کوئی ساتھی نہیں قبرکا

سندھ کی پبلک اور سروس کا کمیشن وجود - پیر 07 جون 2021

پبلک سروس کمیشن یہ نام تو آپ نے بارہا، ہرکس و ناکس کی زبان سے سنا ہی ہوگا۔ یاد رہے کہ دنیا کے ہر ملک میں پبلک سروس کمیشن کا قیام اس لیے عمل میں لایا جاتا ہے کہ اہم ترین ملازمتوں کے تقرر و تبادلے میں میرٹ اور اہلیت کو فروٖغ حاصل ہوسکے۔ شاید اسی لیے پبلک سروس کمیشن کو دنیا بھر میں میرٹ جانچنے اور پرکھنے کا آخری قابل قدر ’’انتظامی مقام ‘‘سمجھا جاتاہے۔ عام طور پر کسی بھی ملک میں پبلک سروس کمیشن کا ایک ہی خود مختار ادارہ کافی و شافی ہوتاہے اور ابتدا میں ہمارے وطن عزیز میں بھی می...

سندھ کی پبلک اور سروس کا کمیشن

توبہ کا دروازہ وجود - اتوار 06 جون 2021

عزت پر دولت کو ترجیح دینے والے ہزار عذرتراشیں ،لاکھ تاویلیں دیں ایک جھوٹ کو چھپانے کے لیے 100جھوٹ بولنا ہی پڑتے ہیں یہ الگ بات کہ کچھ منہ پر زیادہ سے بیشتر نجی محفلوں میں بڑے شرمناک تبصرے کرتے ہیں لیکن وہ کبوترکی طرح آنکھیں بندکرکے یہ سمجھ لیتے ہیں میں بلی کی نظروںسے چھپ گیا ہوں کسی کو کچھ پتہ نہیں چلا حالانکہ انہیں پتہ بھی نہیںچلتا وہ لوگوںکی نظروںسے کب گرجاتے ہیں اور نظروںسے گرنا بے حیائی سے کم نہیں۔درویش اپنے دھن میں کہے جارہا تھا اس کے چاروں اطراف لوگوںکا ہجوم تھا درویش ...

توبہ کا دروازہ

ہد۔وانہ۔۔ وجود - اتوار 06 جون 2021

دوستو، گرمیوں میں تربوز کھانے کا الگ ہی مزہ ہے، گزشتہ کالم میں ہم نے گرمیوں کی ایک اور سوغات آم کا ذکر کیا تھا، اس بار تربوز کی باری ہے، جسے پنجابی میں ’’ہدوانہ‘‘ بھی کہتے ہیں۔۔ آپ نے نوٹ کیا ہوگا کہ جب آپ تربوز والے سے تربوز خریدتے ہیں تو وہ پہلے ایک تربوز اٹھاتا ہے، اسے ٹھوک بجا کر رکھ دیتا ہے، پھر دوسرے والے کو اٹھا کر اس کے ساتھ بھی یہی سلوک کرتا ہے، پھر تیسرا تربوز اٹھا کر اس کے ساتھ بھی ایکشن ری پلے کرتا ہے اور وہی آپ کے ہاتھ میں تھمادیتا ہے۔۔لیکن جب آپ گھر آکر چی...

ہد۔وانہ۔۔

چین: شرح آبادی میں کمی اور پالیسی میں تبدیلی وجود - اتوار 06 جون 2021

(مہمان کالم) ویوین وینگ جب چین نے شادی شدہ جوڑوں کو تین بچے پیدا کرنے کی جازت دی تو سرکاری نیوز میڈیا نے اسے ایک عظیم تبدیلی قرار دیا جو ترقی کا باعث بنے گی مگر پورے ملک میں اس اعلان پر ناراضی کا اظہار کیا گیا۔ خواتین نے اس تشویش کا اظہار کیا کہ اس سے آجر خواتین کو امتیازی سلوک کا نشانہ بناتے ہوئے چھٹی دینے سے گریز کریں گے۔ نوجوان طبقے کا کہنا ہے کہ ہم بمشکل اپنی ضروریات پوری کر رہے ہیں‘ بچوں کی پرورش کیسے کریں گے؟ ورکنگ کلاس والدین کہتے ہیںکہ زیادہ بچوں کا مالی بوجھ ن...

چین: شرح آبادی میں کمی اور پالیسی میں تبدیلی

ہروقت کاہنسناتجھے بربادنہ کردے وجود - هفته 05 جون 2021

ابھی موقع ہے اعمال نامہ کھلا ہے سانسیں آرہی ہیں۔ زبان باتیں کرنے میں مشغول ہے جسم میں حرارت ہے۔بدن توانا۔۔توبہ کی جا سکتی ہے جو ہاتھ دعا کے لیے اٹھانے پر قادر ہیں ہاتھ اٹھا لیں جوسکت نہیں رکھتے دل ہی دل میں اپنے گناہوںکی معافی مانگ لیں۔۔توبہ دل سے کی جائے توقبول ہوتی ہے اللہ کے حضور اشک ِ ندامت کی بڑی قدرہے ۔ ہروقت کا ہنسنا تجھے برباد نہ کردے تنہائی کے لمحوں میں کبھی رو بھی لیا کر دوسروںکا مذاق اڑانے والے،رعونت سے تنی گردنیں،لوگوںکوبلکتے سسکتے دیکھ کر بھی رحم نہ کھانے وال...

ہروقت کاہنسناتجھے بربادنہ کردے