وجود

... loading ...

وجود
وجود

سوشل میڈیا ایک بہت بڑا دھوکاہے

بدھ 17 اگست 2022 سوشل میڈیا ایک بہت بڑا دھوکاہے

سوشل میڈیا ایک بہت بڑا دھوکہ ہے. یہ ہمیں انسان سے حیوان بنا رہا ہے اور ہم انسانی
ہمدردی سے محروم ہوتے جا رہے ہیں. یہ اس شخص کے الفاظ ہیں، جو خود بہت
عرصہ سوشل میڈیا پر سرگرم رہا۔ دنیا میں اس وقت تقریبا آدھی دنیا سوشل میڈیا پر
دیوانی ہے، چار ارب 62 کروڑ افراد دن رات کی پیڈ، اور اسکرین سے جڑے ہوئے
ہیں۔ اس تعداد میں ہرسال اضافہ ہورہا ہے، 2017 میں یہ تعداد صرف 2 ارب 73 کروڑ
تھی، اور پانچ سال بعد یہ تعداد پانچ ارب 85 کروڑ ہوجائے گی۔ پاکستان میں بھی یہ
جنون تیزی سے بڑھ رہا ہے، موبائیل ہمارے ہاتھ سے چپک کر رہ گیا ہے، آپ اسے
اپنے سے دور کردیں، تھوڑی دیر بعد ہی ایک نشئی کی طرح آپ اسے ڈھونڈتے نظر
آئیں گے۔
پاکستان میں اس وقت 8 کروڑ 90 لاکھ افراد انٹرنیٹ استعمال کرتے ہیں۔جن میں سے
سات کروڑ 17 لاکھ افراد سوشل میڈیا پر سرگرم رہتے ہیں۔ اس میں سے بھی زیادہ
تعداد یوٹیوب کی دیوانی ہے۔ ہر شخص اپنے بجٹ کا ایک حصہ موبائیل کمپنیوں اور
انٹرنیٹ کمپنیوں کو دیتا ہے۔ اور اس کے ساتھ ہی اپنی زندگی کے قیمتی لمحات بھی۔
ہاشم رضا بھی ایک ایسا ہی نوجوان تھا، جو سوشل میڈیا ، سماجی تنظیموں اور سماجی
امدادی کاموں میں مصروف رہا، ڈیڑھ برس پہلے اسے کینسر کی بیماری کا پتہ چلا۔ اور
وہ سوکھ کر ہڈیوں کا ڈھانچہ بن گیا۔ اور بیماری سے جنگ لڑتے لڑتے رخصت ہوگیا۔
زندگی کے سکھانے کا اپنا ہی انداز ہے۔ ہاشم رضا نے بھی جاتے جاتے زندگی سے
بڑے اہم سبق سیکھے۔ جاتے جاتے وہ اپنے دوستوں کو جو نصیحت کر گیا۔ وہ ایسی ہیں
کہ ہمیں ان پر توجہ دینی چاہیئے۔ اس نے اپنی وال پر لکھا کہ خود کو اللہ کے سپرد کر
دیں کہ آپ کے کنٹرول میں کچھ بھی نہیں ہے. آپ ناقابلِ تسخیر ہرگز نہیں ہیں۔آپ کے
گھر والے سب سے پہلے ہیں اور ماں کی محبت کا نعم البدل کوئی بھی نہیں ہے۔ آپ
بیماری میں ہیں اور اگرچہ آپ بستر سے ہلنے کے قابل بھی نہیں اور آپ کا درد ناقابلِ
برداشت ہو تو تب بھی آپ کے پاس اپنے رب کا شکرگزار ہونے کے لیے بہت کچھ
موجود ہے۔ اس پر شکر ادا کریں۔ ہم بہت محدود ہستی ہیں جو بعض اوقات کسی خاص
معاملے کی وجہ یا وقت کا تعین تبھی کر پاتے ہیں جب بہت دیر ہو چکی ہوتی ہے۔آپ
کے ہونے یا نہ ہونے سے کچھ خاص لوگوں کے سوا کسی کو کوئی فرق نہیں پڑتا. لہٰذا
آپ جاننے کی کوشش کریں کہ آپ کی زندگی میں وہ خاص لوگ کون ہیں اور ان کی
پہلے سے ہی قدر کیجیے۔
کچھ لوگ اپنے بن کر آپ سے خوب فائدے اٹھاتے رہتے ہیں
لیکن وہ مشکل وقت میں آپ کے کسی کام نہیں آتے. ایسے لوگوں سے خبردار رہیں اور
امید مت رکھیں۔ تھوڑے مگر ستھرے، کم مگر مخلص لوگوں سے دوستی رکھیں۔ زندگی
میں مفت ملی ہوئی چھوٹی چھوٹی نعمتوں کی قدر کیجیے۔کسی سے بات چیت، پارک میں
چہل قدمی کرنا، باقاعدہ کھانا کھانا، ہنسنا، بھرپور نیند لینا اور چھوٹے موٹے کام کرنے
کے قابل ہونا، یہ وہ نعمتیں ہیں کہ جو شاید آپ کے لیے معمولی ہوں لیکن میں آج ان سے
محروم ہوں اور ان کے لیے ترستا ہوں۔ اپنی مصروف زندگی سے وقت نکال کر کسی کی
تیمارداری کرنا بیمار کے لیے بہت اہمیت رکھتا ہے. اسی وجہ سے یہ ہمارے پیارے
رسول صلی اللہ علیہ و آلہ و سلم کی سنت بھی ہے۔جانیں کہ آپ کے لیے واقعی اہم کیا
ہے. وہ چیزیں جنہیں میں اپنے لیے بہت اہم سمجھتا رہا لیکن بیمار پڑا تو وہ میرے لیے
بالکل غیراہم ہو کر رہ گئیں۔ کچھ عام لوگ آپ کے لیے آپ کے دوستوں سے بڑھ کر
اچھے ثابت ہوتے ہیں۔ ان کی قدر کریں۔ یاد رکھیں۔سوشل میڈیا ایک بہت بڑا دھوکہ ہے.
یہ ہمیں انسان سے حیوان بنا رہا ہے اور ہم انسانی ہمدردی سے محروم ہوتے جا رہے
ہیں۔اس دھوکے میں پڑنا بہت آسان ہے کہ میرے بغیر دنیا نہیں چل پائے گی مگر سچ یہ
ہے کہ اسے ہمارے ہونے یا نہ ہونے سے کوئی فرق نہیں پڑتا۔میں خود بھی سوشل میڈیا
پر رہتا ہوں۔ لیکن یہ میرے کام کا ایک حصہ ہے۔ لیکن ہمیں اس پر اپنی ساری توانائی
صرف نہیں کرنی چاہیے یہی میں آپ سے چاہتاہوں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔


متعلقہ خبریں


مضامین
دوستوں سے ریاکی بات نہ کر وجود اتوار 02 اکتوبر 2022
دوستوں سے ریاکی بات نہ کر

چالیں اور گھاتیں وجود هفته 01 اکتوبر 2022
چالیں اور گھاتیں

ایران میں پرتشدد مظاہروں کے سلگتے ہوئے انگارے وجود جمعرات 29 ستمبر 2022
ایران میں پرتشدد مظاہروں کے سلگتے ہوئے انگارے

وزیرِ اعظم کا گھر غیر محفوظ تو محفوظ ہے کیا ؟ وجود بدھ 28 ستمبر 2022
وزیرِ اعظم کا گھر غیر محفوظ تو محفوظ ہے کیا ؟

بلوچستان ،کابینہ میں ردو بدل کی باتیں وجود بدھ 28 ستمبر 2022
بلوچستان ،کابینہ میں ردو بدل کی باتیں

چند ان کہی کہانیاں وجود منگل 27 ستمبر 2022
چند ان  کہی کہانیاں

اشتہار

تہذیبی جنگ
مودی حکومت کی اقلیتوں کے خلاف کارروائی، مسلم مذہبی گروپ پر 5 سال کی پابندی لگا دی وجود جمعرات 29 ستمبر 2022
مودی حکومت کی اقلیتوں کے خلاف کارروائی، مسلم مذہبی گروپ پر 5 سال کی پابندی لگا دی

پاک بھارت میچ کے باعث ہندو مسلم کشیدگی برمنگھم تک پہنچ گئی وجود بدھ 21 ستمبر 2022
پاک بھارت میچ کے باعث ہندو مسلم کشیدگی برمنگھم تک پہنچ گئی

برلن میں مسلم کمیونٹی کو ناموافق حالات کا سامنا ہے، جرمن حکومت کے پینل کا اعتراف وجود پیر 19 ستمبر 2022
برلن میں مسلم کمیونٹی کو ناموافق حالات کا سامنا ہے، جرمن حکومت کے پینل کا اعتراف

بھارت:مسلمان طلبا سے پڑھائی کا حق چھین لیا گیا، 17 ہزار طالبات اسکول چھوڑنے پر مجبور وجود جمعه 16 ستمبر 2022
بھارت:مسلمان طلبا سے پڑھائی کا حق  چھین لیا گیا، 17 ہزار طالبات اسکول چھوڑنے پر مجبور

بے روزگاری کا خوف، بھارتی مسلمان شناخت تبدیل کرنے لگے وجود اتوار 11 ستمبر 2022
بے روزگاری کا خوف، بھارتی مسلمان شناخت تبدیل کرنے لگے

نائن الیون، ورلڈ ٹریڈ سینٹر پر حملوں کو 21 برس بیت گئے وجود اتوار 11 ستمبر 2022
نائن الیون، ورلڈ ٹریڈ سینٹر پر حملوں کو 21 برس بیت گئے

اشتہار

بھارت
تمام خواتین کو اسقاط حمل کا اختیار ہے، بھارتی سپریم کورٹ کا اپنے ہی فیصلے کے خلاف فیصلہ وجود جمعرات 29 ستمبر 2022
تمام خواتین کو اسقاط حمل کا اختیار ہے، بھارتی سپریم کورٹ کا اپنے ہی فیصلے کے خلاف فیصلہ

مودی حکومت کی اقلیتوں کے خلاف کارروائی، مسلم مذہبی گروپ پر 5 سال کی پابندی لگا دی وجود جمعرات 29 ستمبر 2022
مودی حکومت کی اقلیتوں کے خلاف کارروائی، مسلم مذہبی گروپ پر 5 سال کی پابندی لگا دی

جھوٹے ٹوئٹر اکاؤنٹس:امریکی یونیورسٹی اسٹین فورڈ نے بھارت کو بے نقاب کردیا وجود جمعه 23 ستمبر 2022
جھوٹے ٹوئٹر اکاؤنٹس:امریکی یونیورسٹی اسٹین فورڈ نے بھارت کو بے نقاب کردیا

بھارت، ریپ کے بعد جلائی گئی دلت لڑکی دورانِ علاج دم توڑ گئی وجود بدھ 21 ستمبر 2022
بھارت، ریپ کے بعد جلائی گئی دلت لڑکی دورانِ علاج دم توڑ گئی
افغانستان
افغا ن طالبان حکومت کا پہلا بین الاقوامی تجارتی معاہدہ وجود بدھ 28 ستمبر 2022
افغا ن طالبان حکومت کا پہلا بین الاقوامی تجارتی معاہدہ

قتل کی دھمکی کے ساتھ ملا برادر کو ان کی رہائش گاہ کی تصویر بھیجی تھی، ٹرمپ وجود هفته 24 ستمبر 2022
قتل کی دھمکی کے ساتھ ملا برادر کو ان کی رہائش گاہ کی تصویر بھیجی تھی، ٹرمپ

یو این کی جانب سے لڑکیوں کے اسکول کھولنے پر زور، طالبان نے نیا وزیر تعلیم مقرر کر دیا وجود جمعه 23 ستمبر 2022
یو این کی جانب سے لڑکیوں کے اسکول کھولنے پر زور، طالبان نے نیا وزیر تعلیم مقرر کر دیا

افغانستان کے صوبے لوگر میں سیلاب سے تباہی، 20 افراد جاں بحق وجود پیر 22 اگست 2022
افغانستان کے صوبے لوگر میں سیلاب سے تباہی، 20 افراد جاں بحق
ادبیات
مسجد حرام کی تعمیر میں ترکوں کے متنازع کردار پرنئی کتاب شائع وجود هفته 23 اپریل 2022
مسجد حرام کی تعمیر میں ترکوں کے متنازع  کردار پرنئی کتاب شائع

مستنصر حسین تارڑ کا ادبی ایوارڈ لینے سے انکار وجود بدھ 06 اپریل 2022
مستنصر حسین تارڑ کا ادبی ایوارڈ لینے سے انکار

پاکستانی اور سعودی علما کی کئی سالہ کاوشوں سے تاریخی لغت کی تالیف مکمل وجود منگل 04 جنوری 2022
پاکستانی اور سعودی علما کی کئی سالہ کاوشوں سے تاریخی لغت کی تالیف مکمل

پنجابی بولتا ہوں، پنجابی میوزک سنتاہوں اور پنجابی ہوں، ویرات کوہلی وجود جمعرات 23 دسمبر 2021
پنجابی بولتا ہوں، پنجابی میوزک سنتاہوں اور پنجابی ہوں، ویرات کوہلی
شخصیات
مسلم دنیا کے معروف اسکالر شیخ یوسف القرضاوی انتقال کر گئے وجود پیر 26 ستمبر 2022
مسلم دنیا کے معروف اسکالر شیخ یوسف القرضاوی انتقال کر گئے

سابق صدر جنرل ریٹائرڈ پرویز مشرف کے پرنسپل سیکریٹری طارق عزیز انتقال کر گئے وجود پیر 19 ستمبر 2022
سابق صدر جنرل ریٹائرڈ پرویز مشرف کے پرنسپل سیکریٹری طارق عزیز انتقال کر گئے

ملکہ الزبتھ دوئم 96 برس کی عمر میں چل بسیں وجود جمعرات 08 ستمبر 2022
ملکہ الزبتھ دوئم 96 برس کی عمر میں چل بسیں

عامر لیاقت کی تدفین کردی گئی، نماز جنازہ بیٹے نے پڑھائی وجود جمعه 10 جون 2022
عامر لیاقت کی تدفین کردی گئی، نماز جنازہ بیٹے نے پڑھائی