وجود

... loading ...

وجود
وجود

شادی یات

بدھ 12 جنوری 2022 شادی یات

دوستو،برطانیا میں ایک مرد اور عورت اپنی اپنی شادی بچانے کے لیے ’میرج تھراپی کورس‘ کرنے گئے اور وہاں ایک دوسرے کی محبت میں گرفتار ہو کر اپنے اپنے شریک حیات سے طلاق لے کر باہم شادی کر لی۔میڈیا رپورٹس کے مطابق ایما نامی خاتون کا اپنے شوہر کے ساتھ تعلق سرد مہری کا شکار ہو چکا تھا۔ اسی طرح میتھیو پروئن نامی شخص کے ازدواجی تعقات بھی تلخی کا شکار تھے۔یہ دونوں اپنی اپنی شادی بچانے کے لیے اس تھراپی کورس میں گئے اور وہاں ان دونوں کے درمیان دوستی ہو گئی جو کچھ عرصے میں محبت میں بدل گئی اور وہ اپنے جن پارٹنرز کے ساتھ شادی بچانے کے لیے کورس میں گئے تھے، ان سے طلاق لے کر باہم میاں بیوی بن گئے۔ رپورٹ کے مطابق اب ایما اور میتھیو کی شادی کو 15سال کا عرصہ گزر چکا ہے اور وہ خوش و خرم زندگی گزار رہے ہیں۔ وہ ایسٹ سسیکس کے علاقے میں 2003میں اس ڈویلپمنٹ کورس میں پہلی بار ملے تھے۔ایما نے بتایا ہے کہ میتھو کی محبت میں گرفتار ہونے کے بعد مجھے علم ہو گیا کہ اب وقت آ گیا ہے کہ میں اپنے پہلے شوہر سے طلاق لے لوں۔ جب میں نے میتھیو سے اس حوالے سے بات کی تو اس نے بھی ایسے ہی خیالات کا اظہار کیا اور پھر ہم دونوں نے اپنے اپنے پارٹنر سے علیحدگی اختیار کر لی اور اکٹھے رہنے لگے۔ اس کے ایک سال بعد ہم نے شادی کر لی۔ میں اور میتھیو باہم جس قدر خوشگوار زندگی گزار رہے ہیں، ہم نے اپنے اپنے پارٹنرز کے ساتھ کبھی ایک دن بھی اتنا خوشگوار نہیں گزارا تھا۔
برطانیا کے حوالے سے ایک اور پکی خبریہ ہے کہ۔۔برطانیا میں ایک دلہن نے اپنی شادی کی تقریب میں 70سال سے زائد عمر کے لوگوں کی شرکت پر پابندی عائد کر دی۔ ایک برطانوی اخبارکی رپورٹ کے مطابق اس دلہن نے اپنے اس فیصلے کے متعلق ویب سائٹ ’Reddit‘ پر صارفین کو بتایا ہے۔ وہ اپنی پوسٹ میں لکھتی ہے کہ 70سال سے زائد عمر کے لوگ بہت افسردہ رہتے ہیں اور ڈپریشن کے شکار لگتے ہیں اور میں نہیں چاہتی کہ تقریب میں مہمانوں کی توجہ مجھ سے ہٹ کر ان عمر رسیدہ لوگوں کی طرف ہو، لہٰذا میں نے ان کو مدعو نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔دلہن لکھتی ہے کہ ’’میرے اس فیصلے کو میری فیملی اور دوست احباب میں تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے۔اب آپ لوگ ہی بتائیں کہ کیا مجھے حق نہیں پہنچتا کہ اپنی شادی کے دن میں اپنی مرضی چلا سکوں؟‘‘ دلہن نے یہ پوسٹ انٹرنیٹ صارفین کی حمایت حاصل کرنے کے لیے کی تھی تاہم یہاں بھی لوگوں نے اسے کڑی تنقید کا نشانہ بناڈالا۔اکثر صارفین کمنٹس میں اسے ایک خودغرض خاتون قرار دے رہے ہیں۔ ایک شخص نے لکھا ہے کہ ’’تم ایک بدتر انسان ہو۔ اگر میں تمہارا رشتہ دار یا دوست ہوتا تو اس حرکت پر تمہاری شادی سے انکار کر دیتا۔‘‘
بھارتی ریاست مدھیہ پردیش کے ضلع اندور میں عدالت نے خود سے 27 سال چھوٹی بیوی کے ساتھ ناروا سلوک کرنے والے شوہر کی ضمانت کی درخواست خارج کردی۔بھارتی میڈیا کے مطابق اندور کے ایک بڑے سنار نے اکتوبر میں خود سے 27 برس چھوٹی دلت لڑکی سے شادی کی تھی۔ خاتون نے پولیس کو درج کرائی گئی شکایت میں بتایا کہ اس کے 67 سالہ شوہر نے شادی کی پہلی ہی رات اپنی نقلی بتیسی سے اس کے جسم پر کاٹ لیا۔ خاتون کے مطابق اس کی مخالفت پر شوہر نے دھمکی دی کہ وہ بہت امیراور بارسوخ آدمی ہے اور میرے پورے خاندان کو قتل کرادے گا۔ خاتون نے پولیس کو اپنے زخم دکھائے جن کی میڈیکل رپورٹ میں بھی تصدیق ہوگئی۔ پولیس نے شوہر کی نقلی بتیسی ضبط کرتے ہوئے اسے حراست میں لے لیا۔ بعد ازاں ملزم کو عدالت میں پیش کیا گیا جس نے اس کی ضمانت مسترد کردی۔ایک صاحب اخبار پڑھ رہے تھے اچانک انہیں ایک آرٹیکل نظر آیا۔۔’’بیوی کو قابو میں کیسے رکھیں ؟ ‘‘۔۔اتنی خوشی ہوئی کہ دھڑکن بڑھ گئی ،پورا آرٹیکل ایک ہی سانس میں پڑھ لیا۔لکھا تھا۔۔۔ صبح ٹہلنے جائیں ،زیادہ ہری سبزیاں کھائیں ، غصہ نہ کریں ،کھانے پینے کا دھیان رکھیں ،ریگولر چیک اپ کرائیں ، وغیرہ وغیرہ۔۔بعد میں پھر سے عنوان پڑھا۔دماغ خراب ہوگیا۔۔لکھا تھا۔’’بی پی کو قابو میں کیسے رکھیں ؟۔۔اب کل آنکھیں چیک کرانے جاناہے۔
آپ نے میاں بیوی کے مابین طلاق کے بعد جائیداد کی تقسیم یا بچوں کی حوالگی کا معاملہ تو سنا ہوگا لیکن اب اسپین میں پالتو جانوروں کی حوالگی کا عمل بھی قانونی دائرے میں لانے پر غور جاری ہے۔اطلاعات کے مطابق اسپین میں پالتو جانوروں کی ’فلاح و بہبود‘ پر سنجیدگی سے غور کیا جارہا ہے جس کے تحت میاں بیوی کے مابین طلاق یا علیحدگی کی صورت میں مشترکہ تحویل حاصل کی جاسکے گی۔پالتو جانوروں کی حوالگی کا عمل فرانس اور پرتگال میں بھی قانونی دائرے میں ہوتا ہے جہاں ججوں کو پابند کیا جاتا ہے کہ وہ پالتو جانوروں کو ایک ملکیت والی اشیا سمجھنے کے بجائے احساسات پر مبنی مخلوق سمجھیں۔ماہرین قانون کاکہنا ہے کہ ۔۔ جانور خاندان کا حصہ ہیں اور جب کوئی خاندان الگ ہونے کا فیصلہ کرتا ہے تو جانور کی تقدیر کو بھی اسی اہمیت کے ساتھ کنٹرول کیا جانا چاہیے جو خاندان کے دیگر افراد کی قسمت کا ہے۔اکتوبر میں میڈرڈ کے ایک جج نے ایک غیر شادی شدہ جوڑے کو کتے کی مشترکہ تحویل میں دے دیا تھا جس نے عدالتی فیصلے پر درخواست کی تھی کہ علیحدگی کے بعد پالتو جانور کو کس کے ساتھ رہنا چاہیے۔ کتا ان میں سے ہر ایک کے ساتھ ایک ماہ گزارتا ہے اور دونوں قانونی طور پر ذمہ دار ہیں۔جانوروں کے حقوق کے سرگرم ’رائٹس اینڈ اینیملز‘ قانونی تبدیلیوں کے سلسلے میں اسے ایک بڑا اہم قدم تصور کیا ہے۔خیال رہے کہ یورپی ممالک میں شامل اسپین میں پالتو جانوروں کی ملکیت کا معاملہ بہت زیادہ ہے اور بائیں بازو کی مخلوط حکومت جانوروں کے حقوق کے لیے مزید قانون سازی کا ارادہ رکھتی ہے، جس میں سرکس میں جنگلی جانوروں پر پابندی اور دکانوں میں پالتو جانوروں کی فروخت کو روکنا شامل ہے۔
اور اب چلتے چلتے آخری بات۔۔ٹھنڈکے ساتھ ساتھ دکھ بھی بڑھ رہے ہیں۔۔خوش رہیں اور خوشیاں بانٹیں۔۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔


متعلقہ خبریں


مضامین
سعودی عرب میں ہر گھنٹے سات طلاقوں کے کیسز رپورٹ وجود منگل 25 جنوری 2022
سعودی عرب میں ہر گھنٹے سات طلاقوں کے کیسز رپورٹ

حق دو کراچی کو وجود پیر 24 جنوری 2022
حق دو کراچی کو

ہندوستان کی شبیہ کون داغدار کررہاہے؟ وجود پیر 24 جنوری 2022
ہندوستان کی شبیہ کون داغدار کررہاہے؟

خود کو بدلیں وجود پیر 24 جنوری 2022
خود کو بدلیں

تجارتی جنگیں احمقوں کا کھیل وجود هفته 22 جنوری 2022
تجارتی جنگیں احمقوں کا کھیل

دھرنے،احتجاج اور مظاہرے وجود هفته 22 جنوری 2022
دھرنے،احتجاج اور مظاہرے

بھارت میں وزیر تعلیم نے حجاب کو ڈسپلن کی خلاف ورزی قرار دے دیا وجود جمعه 21 جنوری 2022
بھارت میں وزیر تعلیم نے حجاب کو ڈسپلن کی خلاف ورزی قرار دے دیا

تحریک انصاف اور پورس کے ہاتھی وجود جمعه 21 جنوری 2022
تحریک انصاف اور پورس کے ہاتھی

بلوچستان میں نئی سیاسی بساط وجود جمعه 21 جنوری 2022
بلوچستان میں نئی سیاسی بساط

کورونا،بھنگ اور جادو وجود جمعه 21 جنوری 2022
کورونا،بھنگ اور جادو

ترک صدر کا ممکنہ دورہ سعودی عرب اور اس کے مضمرات ؟ وجود جمعرات 20 جنوری 2022
ترک صدر کا ممکنہ دورہ سعودی عرب اور اس کے مضمرات ؟

قومی سلامتی پالیسی اور خطرات وجود بدھ 19 جنوری 2022
قومی سلامتی پالیسی اور خطرات

اشتہار

افغانستان
افغانستان میں امریکی شہری کا قبولِ اسلام، اسلامی نام محمد عیسیٰ رکھا وجود پیر 24 جنوری 2022
افغانستان میں امریکی شہری کا قبولِ اسلام، اسلامی نام محمد عیسیٰ رکھا

افغانستان،ہرات میں دھماکہ، 7 افراد جاں بحق، 9 زخمی وجود اتوار 23 جنوری 2022
افغانستان،ہرات میں دھماکہ، 7 افراد جاں بحق، 9 زخمی

اسلامی ممالک طالبان حکومت کو تسلیم کریں، افغان وزیراعظم کا مطالبہ وجود جمعرات 20 جنوری 2022
اسلامی ممالک طالبان حکومت کو تسلیم کریں، افغان وزیراعظم کا مطالبہ

طالبان کا شمالی مغربی شہر میں بدامنی کے بعد فوجی پریڈ کے ذریعے طاقت کا مظاہرہ وجود منگل 18 جنوری 2022
طالبان کا شمالی مغربی شہر میں بدامنی کے بعد فوجی پریڈ کے ذریعے طاقت کا مظاہرہ

افغان صوبہ بادغیس میں شدید زلزلہ،ہلاکتوں کی تعداد30 سے تجاوز وجود منگل 18 جنوری 2022
افغان صوبہ بادغیس میں شدید زلزلہ،ہلاکتوں کی تعداد30 سے تجاوز

اشتہار

بھارت
بھارت کا چین پر سرحد سے لاپتا نوجوان کو اغوا کرنے کا الزام وجود جمعه 21 جنوری 2022
بھارت کا چین پر سرحد سے لاپتا نوجوان کو اغوا کرنے کا الزام

بھارت میں وزیر تعلیم نے حجاب کو ڈسپلن کی خلاف ورزی قرار دے دیا وجود جمعه 21 جنوری 2022
بھارت میں وزیر تعلیم نے حجاب کو ڈسپلن کی خلاف ورزی قرار دے دیا

بھارتی آرمی چیف اور وزیر داخلہ کی گرفتاری کیلئے برطانیہ میں درخواست دائر وجود جمعرات 20 جنوری 2022
بھارتی آرمی چیف اور وزیر داخلہ کی گرفتاری کیلئے برطانیہ میں درخواست دائر

بھارت،کالج میں حجاب پہننے والی مسلم طالبات کو کلاس سے نکال دیا گیا وجود بدھ 19 جنوری 2022
بھارت،کالج میں حجاب پہننے والی مسلم طالبات کو کلاس سے نکال دیا گیا

سرحدی تنازع،نیپال کی بھارت سے سڑکوں کی یکطرفہ تعمیر روکنے کی اپیل وجود منگل 18 جنوری 2022
سرحدی تنازع،نیپال کی بھارت سے سڑکوں کی یکطرفہ تعمیر روکنے کی اپیل
ادبیات
پاکستانی اور سعودی علما کی کئی سالہ کاوشوں سے تاریخی لغت کی تالیف مکمل وجود منگل 04 جنوری 2022
پاکستانی اور سعودی علما کی کئی سالہ کاوشوں سے تاریخی لغت کی تالیف مکمل

پنجابی بولتا ہوں، پنجابی میوزک سنتاہوں اور پنجابی ہوں، ویرات کوہلی وجود جمعرات 23 دسمبر 2021
پنجابی بولتا ہوں، پنجابی میوزک سنتاہوں اور پنجابی ہوں، ویرات کوہلی

غلاف کعبہ کی سلائی میں عربی کا ثلث فانٹ استعمال کرنے کی وضاحت جاری وجود جمعرات 23 دسمبر 2021
غلاف کعبہ کی سلائی میں عربی کا ثلث فانٹ استعمال کرنے کی وضاحت جاری

دنیا کی 1500 زبانیں معدوم ہونے کا خطرہ وجود منگل 21 دسمبر 2021
دنیا کی 1500 زبانیں معدوم ہونے کا خطرہ

سقوط ڈھاکہ پر لکھی گئی نظمیں وجود جمعرات 16 دسمبر 2021
سقوط ڈھاکہ پر لکھی گئی نظمیں
شخصیات
دنیا کی کم عمر مائیکرو سافٹ سرٹیفائیڈ کو بچھڑے 10 برس بیت گئے وجود هفته 15 جنوری 2022
دنیا کی کم عمر مائیکرو سافٹ سرٹیفائیڈ کو بچھڑے 10 برس بیت گئے

مولانا طارق جمیل کی اپنے طوطےاور بلی کے ہمراہ دلچسپ ویڈیو وائرل وجود منگل 11 جنوری 2022
مولانا طارق جمیل کی اپنے طوطےاور بلی کے ہمراہ دلچسپ ویڈیو وائرل

ہے رشک ایک خلق کو جوہر کی موت پر ۔ یہ اس کی دین ہے جسے پروردگار دے وجود بدھ 05 جنوری 2022
ہے رشک ایک خلق کو جوہر کی موت پر        ۔ یہ اس کی دین ہے جسے پروردگار دے

سرگودھا کی تاریخ کا سب سے بڑا جنازہ : مولانا اکرم طوفانی سپرد خاک وجود پیر 27 دسمبر 2021
سرگودھا کی تاریخ کا سب سے بڑا جنازہ : مولانا اکرم طوفانی سپرد خاک

قائداعظم کے خطاب کا تحقیقی جائزہ (خواجہ رضی حیدر) وجود هفته 25 دسمبر 2021
قائداعظم کے خطاب کا تحقیقی جائزہ  (خواجہ رضی حیدر)