وجود

... loading ...

وجود
وجود
ashaar

ظالم بیویاں۔۔

اتوار 03 اکتوبر 2021 ظالم بیویاں۔۔

دوستو، لفظ ظالم اردو زبان میں عربی سے آیا ہے، جس کے معنی ہیں، ظلم و ستم کرنے والا، زورزبردستی کرنے والا، سنگ دل،ستم گر، بے رحم وغیرہ۔۔ لیکن نوجوانوں میں ایک اور ’’ظالم‘‘ بھی معروف ہے، مثال کے طور پر کہیں بہت ہی خوب صورت لڑکی جارہی ہوتو ایک نوجوان دوسرے سے بے ساختہ کہہ اٹھے گا۔۔ ہائے کیا ظالم لڑکی ہے یار۔۔ حالانکہ اس لڑکی نے کوئی ظلم نہیں کیا ہوتا ۔۔ اسی طرح کوئی بھی چیز جو من کو بھاجائے نوجوان اسے ’’ظالم‘‘ سے تشبیہہ دیتے ہیں، جیسا کہ۔۔ کیا ظالم چائے بنائی ہے۔۔ وغیرہ وغیرہ۔۔ اسی طرح آج ہم اپنی اوٹ پٹانگ باتیں۔۔ اصلی ظالم اور نوجوانوں کے ظالم سے متعلق ہی کریں گے۔۔ یعنی جب ہم ظالم بیویاں کہہ رہے ہیں تو اس کے دونوں مطلب نکالے جاسکتے ہیں۔۔
ایک رپورٹ میں انکشاف ہوا ہے کہ سعودی عرب میں پانچ فیصد مرد بیویوں کے ہاتھوں سے پٹتے ہیں۔عرب میڈیا کی رپورٹ کے مطابق انسداد گھریلو تشدد کمیٹی کے سربراہ کا کہنا ہے کہ بعض حالات میں بیویوں کی طرف سے شوہروں کوانتہائی تشدد اور جسمانی اذیت کا بھی سامنا کرنا پڑتا ہے۔رپورٹ کے مطابق کمیٹی سربراہ نے بتایا کہ اس وقت ان کے پاس ایک کیس ایسا بھی ہے جس میں ایک شوہر کو اس کی بیوی نے بجلی کی تار سے پیٹا ہے۔۔انہوں نے بتایا کہ اس طرح کے بے شمار کیسز سامنے آئے ہیں جن میں بیویوں نے شوہروں پر ہاتھ تو نہیں اٹھائے مگر روزانہ گالم گلوچ اور تحقیر و تذلیل کا نشانہ بنایا ہے۔اس حوالے سے انہوں نے مزید بتایا کہ بیشتر کیسز میں شوہر کی عمر بیوی سے زیادہ ہوتی ہے، جب وہ بوڑھا ہوتا ہے تو اس کی جوان بیوی گھریلو تشدد کا نشانہ بناتی ہے۔بعض حالات ایسے بھی ہیں جن میں شوہر بڑھاپے کی وجہ سے یا کسی بیماری کی وجہ سے معذور ہوجاتا ہے تو اسے بیوی کی طرف سے تشدد کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔۔باباجی فرماتے ہیں ہیں کہ اس رپورٹ سے ثابت یہ ہوا کہ کوئی بھی بوڑھا جوان بیوی سے شادی نہ کرے گا، ورنہ ’’بزتی‘‘ پکی اور پٹنا لازمی ہے فیر۔۔
ہمارے پیارے دوست کہتے ہیں کہ۔۔بیویاں آتی ہیں ہیر کی طرح،میٹھی ہوتی ہیں کھیر کی طرح،نمکین ہوتی ہیں پنیر کی طرح۔۔لیکن کچھ سال بعد۔۔چیرتی ہیں تیر کی طرح،کردیتی ہیں فقیر کی طرح،نظر رکھتی ہیں ’’شبیر‘‘ کی طرح۔۔اسی لیے پھر خاوند کے ہاتھ انجام کو پہنچتی ہیں۔۔بے نظیر کی طرح۔۔ہمارے یہاں عام طور پر سمجھاجاتا ہے کہ بیویاں مظلوم ہیں ،ایسا نہیں ہے جناب، اقوام متحدہ کے ایک سروے کے مطابق شوہروں کی دھلائی میں مصری خواتین پہلے نمبر پر ہیں جبکہ برطانیا اور بھارت کی خواتین اپنے شوہروں کی درگت بنانے میں دوسرے نمبر پر رہیں۔ سروے کے مطابق شوہروں پر بھی جوتوں ،بیلنوں،ڈنڈوں اور بیلٹوں کا کہیں کہیں آزادانہ استعمال ہوتا ہے،سروے میں یہ بھی بتایا گیا کہ اگر خواتین کو شوہر پر تشدد کا موقع نہ ملے تو وہ انہیں برا بھلا کہہ کر اور گالیاں نکال کر اپنے دل کی بڑھاس نکال لیتی ہیں۔۔۔
جاپان اور ہالینڈ میں کی گئی ایک تحقیق سے معلوم ہوا ہے کہ طویل عرصے تک ساتھ رہنے والے میاں بیوی کی صحت اور بیماریاں تک ایک دوسرے جیسی ہوجاتی ہیں۔اس تحقیق کیلیے ہالینڈ میں رہنے والے 28,265 جبکہ جاپان کے 5,391 جوڑوں کی صحت سے متعلق معلومات کا جائزہ لیا گیا جو کئی سال کے دوران جمع کی گئی تھیں۔آن لائن ریسرچ جرنل ’’ایتھروکلیروسس‘‘ کے تازہ شمارے میں شائع ہونے والی اس تحقیق سے معلوم ہوا ہے کہ طویل عرصہ ایک دوسرے کے ساتھ گزارنے والے میاں بیوی نہ صرف اپنی عادتوں کے لحاظ سے ایک دوسرے جیسے ہوجاتے ہیں بلکہ ان کی جسمانی ہیئت، بلڈ پریشر اور بیماریاں بھی ایک دوسرے سے بہت ملنے جلنے لگتی ہیں۔اب تک یہ خیال کیا جاتا ہے کہ صحت اور بیماریوں کے حوالے سے میاں بیوی صرف اسی وقت ایک جیسے ہوتے ہیں کہ جب وہ ایک دوسرے کے قریبی رشتہ دار ہوں۔تاہم نئی تحقیق سے بظاہر اس خیال کی نفی ہوتی ہے کیونکہ اس میں کئی جوڑے ایسے تھے جن میں شوہر اور بیوی کی ایک دوسرے سے دور پرے کی رشتہ داری بھی نہیں تھی لیکن لمبے عرصے تک ساتھ رہنے کے بعد ان کی بیماریاں اور صحت سے متعلق کیفیات میں خاصی مماثلت پیدا ہوگئی تھی۔ماہرین کا کہنا ہے کہ شاید اس کی بڑی وجہ یہ ہے کہ شوہر اور بیوی (اپنی خوشی سے یا حالات کی مجبوری کے تحت) ایک دوسرے جیسی عادت اور مزاج اختیار کرلیتے ہیں۔اس کے نتیجے میں ان کی ذہنی و جسمانی صحت سے تعلق رکھنے والی کیفیات تک آپس میں بہت ملنے لگتی ہیں۔اس تحقیق کا اصل نکتہ یہ ہے کہ بیوی اور شوہر کی زندگی ایک دوسرے کے ساتھ بے حد مضبوطی سے بندھی ہوتی ہے لہذا صحت بہتر بنانے سے متعلق کوششوں میں ان دونوں کا ایک ساتھ شریک ہونا ضروری ہے ورنہ صرف ایک کی سخت کوشش بھی شاید کوئی خاص فائدہ نہ پہنچا سکے۔
ایک تھانے میں فون آیا۔۔فلاں علاقے میں بیوی نے شوہر کو قتل کردیا ہے۔۔ بیوی آلہ قتل کے ہمراہ ابھی گھر میں ہی ہے۔۔ فوری پولیس بھیجو۔۔۔ فون سنتے ہی فوری طور پر پولیس موبائل کو جائے وقوعہ کے لیے روانہ کیا گیا۔۔ تین گھنٹے بعد ایس ایچ او کو خیال آیا ہے کہ۔۔ ایک قتل کی اطلاع پر پولیس موبائل کوروانہ کیا تھامگر اس کی جانب سے اب تک کوئی اپ ڈیٹ نہیں ملی ۔۔ ایس ایچ او نے پولیس پارٹی کے انچارج کو فون کیا۔۔ہیلو۔۔۔ شیدے۔۔آگے سے جواب ملا، جی سرجی،حکم۔۔ایس ایچ او نے پوچھا، اوئے شیدے کیا رپورٹ ہے؟۔۔شیدے نے کہا۔سرجی، اطلاع درست تھی،ہم موقع پر پہنچ گئے تھے۔۔تھانیدار نے پھر پوچھا۔۔اوئے شیدے۔۔ مگر بیوی نے اپنے شوہر کو قتل کیوں کیا؟شیدے نے جواب دیا۔۔سرجی، وہی بتارہا ہوں۔۔ بیوی بہت نفاست پسند ہے،اس نے کمرے میں فنائل کی ٹاکی ماری تھی۔۔ اور شوہر کو منع کیا تھا کہ گندے جوتوں سے کمرے میں نہ آنا۔۔شوہر بیچارے سے غلطی ہوگئی اور کمرے میں گندے جوتوں کے نشانات بن گئے۔۔ بس پھر کیا تھا۔۔ بیوی نے پسٹل سے دو فائر کیے جو سیدھے شوہر کے سرپرلگے اور وہ موقع پر ہی ٹھنڈا ہوگیا۔۔تھانیدار نے پورا وقوعہ سن کر کہا۔۔اوئے شیدے۔۔تو بیوی کو اب تک اریسٹ کیوں نہیں کیا؟آگے سے جواب آیا۔۔سرجی،وہ کچن میں ہے۔۔تھانیدار نے اس بار غصے سے کہا۔۔اوئے شیدے، پکڑتے کیوں نہیں اسے؟آگے سے بیچارگی کے عالم میں جواب آیا۔۔سرجی۔۔ فنائل کی ٹاکی جو لگی ہوئی ہے اس کے سوکھنے کا انتظار کررہے ہیں سرجی۔۔
اور اب چلتے چلتے آخری بات۔۔ وہ لوگ جنہوں نے سردی اور گرمی صرف کھڑکیوں میں سے دیکھی ہو اور بھوک صرف کتابوں میں پڑھی ہو، وہ عام آدمی کی قیادت نہیں کرسکتے۔خوش رہیں اور خوشیاں بانٹیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔


متعلقہ خبریں


مضامین
کون نہائے گا وجود منگل 07 دسمبر 2021
کون نہائے گا

دوگززمین وجود پیر 06 دسمبر 2021
دوگززمین

سجدوں میں پڑے رہناعبادت نہیں ہوتی! وجود پیر 06 دسمبر 2021
سجدوں میں پڑے رہناعبادت نہیں ہوتی!

چین کی عسکری صلاحیت’’عالمی رونمائی‘‘ کی منتظر ہے! وجود پیر 06 دسمبر 2021
چین کی عسکری صلاحیت’’عالمی رونمائی‘‘ کی منتظر ہے!

دوگززمین وجود اتوار 05 دسمبر 2021
دوگززمین

یورپ کا مخمصہ وجود هفته 04 دسمبر 2021
یورپ کا مخمصہ

اے چاندیہاں نہ نکلاکر وجود جمعه 03 دسمبر 2021
اے چاندیہاں نہ نکلاکر

تاریخ پررحم کھائیں وجود جمعرات 02 دسمبر 2021
تاریخ پررحم کھائیں

انوکھی یات۔ٹو وجود جمعرات 02 دسمبر 2021
انوکھی یات۔ٹو

وفاقی محتسب واقعی کام کرتاہے وجود جمعرات 02 دسمبر 2021
وفاقی محتسب واقعی کام کرتاہے

ڈی سی کی گرفتاری اور سفارشی کلچر وجود جمعرات 02 دسمبر 2021
ڈی سی کی گرفتاری اور سفارشی کلچر

ماں جیسی ر یاست اور فہیم۔۔۔ وجود جمعرات 02 دسمبر 2021
ماں جیسی ر یاست اور فہیم۔۔۔

اشتہار

افغانستان
اقوام متحدہ میں افغانستان کی نمائندگی کا فیصلہ ملتوی وجود بدھ 08 دسمبر 2021
اقوام متحدہ میں افغانستان کی نمائندگی کا فیصلہ ملتوی

طالبان کے خواتین سے متعلق حکم نامے کا خیرمقدم کرتے ہیں، تھامس ویسٹ وجود اتوار 05 دسمبر 2021
طالبان کے خواتین سے متعلق حکم نامے کا خیرمقدم کرتے ہیں، تھامس ویسٹ

15 سالہ افغان لڑکی برطانوی اخبار کی 2021 کی 25 با اثر خواتین کی فہرست میں شامل وجود هفته 04 دسمبر 2021
15 سالہ افغان لڑکی برطانوی اخبار کی 2021 کی 25 با اثر خواتین کی فہرست میں شامل

طالبان کی خواتین کو جائیداد میں حصہ دینے،شادی مرضی سے کرانے کی ہدایت وجود جمعه 03 دسمبر 2021
طالبان کی خواتین کو جائیداد میں حصہ دینے،شادی مرضی سے کرانے کی ہدایت

جھڑپ میں ایران کے 9سرحدی گارڈز ہلاک ہوئے،طالبان وجود جمعه 03 دسمبر 2021
جھڑپ میں ایران کے 9سرحدی گارڈز ہلاک ہوئے،طالبان

اشتہار

بھارت
بابری مسجد شہادت کے 29 برس بیت گئے وجود منگل 07 دسمبر 2021
بابری مسجد شہادت کے 29 برس بیت گئے

بھارت ، ٹیکس میں کمی، پیٹرول 8روپے فی لیٹرسستا ہوگیا وجود جمعرات 02 دسمبر 2021
بھارت ، ٹیکس میں کمی، پیٹرول 8روپے فی لیٹرسستا ہوگیا

بھارت میں مشتعل ہجوم کی چرچ میں تھوڑ پھوڑ ،عمارت کو نقصان،ایک شخص زخمی وجود بدھ 01 دسمبر 2021
بھارت میں مشتعل ہجوم کی چرچ میں تھوڑ پھوڑ ،عمارت کو نقصان،ایک شخص زخمی

بھارت میں نفرت جیت گئی، فنکار ہار گیا،مسلم کامیڈین وجود پیر 29 نومبر 2021
بھارت میں نفرت جیت گئی، فنکار ہار گیا،مسلم کامیڈین

بھارت میں ہندوانتہا پسندوں کی نماز جمعہ کے دوران ہلڑ بازی وجود هفته 27 نومبر 2021
بھارت میں ہندوانتہا پسندوں کی نماز جمعہ کے دوران ہلڑ بازی
ادبیات
جرمن امن انعام زمبابوے کی مصنفہ کے نام وجود منگل 26 اکتوبر 2021
جرمن امن انعام زمبابوے کی مصنفہ کے نام

پکاسو کے فن پارے 17 ارب روپے میں نیلام وجود پیر 25 اکتوبر 2021
پکاسو کے فن پارے 17 ارب روپے میں نیلام

اسرائیل کا ثقافتی بائیکاٹ، آئرش مصنف نے اپنی کتاب کا عبرانی ترجمہ روک دیا وجود بدھ 13 اکتوبر 2021
اسرائیل کا ثقافتی بائیکاٹ، آئرش مصنف نے اپنی کتاب کا عبرانی ترجمہ روک دیا

بھارت میں ہندوتوا کے خلاف رائے کو غداری سے جوڑا جاتا ہے، فرانسیسی مصنف کا انکشاف وجود جمعه 01 اکتوبر 2021
بھارت میں ہندوتوا کے خلاف رائے کو غداری سے جوڑا جاتا ہے، فرانسیسی مصنف کا انکشاف

اردو کو سرکاری زبان نہ بنانے پر وفاقی حکومت سے جواب طلب وجود پیر 20 ستمبر 2021
اردو کو سرکاری زبان نہ بنانے پر وفاقی حکومت سے جواب طلب
شخصیات
جنید جمشید کی پانچویں برسی آج منائی جائے گی وجود منگل 07 دسمبر 2021
جنید جمشید کی پانچویں برسی آج منائی جائے گی

نامور شاعر ، مزاح نگار پطرس بخاری کی 63 ویں برسی آج منائی جائیگی وجود اتوار 05 دسمبر 2021
نامور شاعر ، مزاح نگار پطرس بخاری کی 63 ویں برسی آج منائی جائیگی

سینئر صحافی ضیاءالدین ا نتقال کر گئے وجود پیر 29 نومبر 2021
سینئر صحافی ضیاءالدین ا نتقال کر گئے

پاکستانی سائنسدان مبشررحمانی مسلسل دوسری بار دنیا کے بااثرمحققین میں شامل وجود جمعرات 25 نومبر 2021
پاکستانی سائنسدان مبشررحمانی مسلسل دوسری بار دنیا کے بااثرمحققین میں شامل

سکھ مذہب کے بانی و روحانی پیشواباباگورونانک کے552ویں جنم دن کی تین روزہ تقریبات کا آغاز وجود جمعه 19 نومبر 2021
سکھ مذہب کے بانی و روحانی پیشواباباگورونانک کے552ویں جنم دن کی تین روزہ تقریبات کا آغاز