وجود

... loading ...

وجود
وجود
ashaar

شاعری چھوڑو

اتوار 19 ستمبر 2021 شاعری چھوڑو

دوستو، ہمارے وزیراعظم نے بیرون ملک دورے کے دوران ایک عوامی اجتماع میں شاعری کرنے والے ایک صاحب کو شعر کہنے سے روکتے ہوئے کہا۔۔ شعروشاعری بعد میں کریں گے ابھی بزنس کی باتیں کریں۔۔ کپتان کا یہ کلپ سوشل میڈیا پر کافی وائرل ہوا، دل جلوں اور پٹواریوں نے تو کپتان کے خوب لتے لیے۔۔ لیکن ہمارے خیال میں ملک کو ایک پریکٹیکل وزیراعظم کی ضرورت ہے ، جو خوابوں اور خیالوں کی دنیا سے باہر آکر اپنی قوم ، اپنے ملک کے لیے عملی اقدامات کرے تاکہ عوام کو ذہنی سکون میسر آسکے۔۔ کپتان چونکہ ہمارے ہم نام ہی ہیں اس لیے کپتان کی یہ عادت ہمارے اندر بھی بدرجہ اتم موجود ہے، ہمیں بھی شعروشاعری سے کوئی شغف نہیں۔ ہمارے سامنے اگر کوئی شعر سنانے لگے تو ہمیں سیکنڈوں میں نیند آنی شروع ہوجاتی ہے۔ نیند سے پہلے آنے والی جمائیاں اس بات کا سگنل ہوتی ہیں کہ شاعری سے دور رہو ورنہ دنیا و مافیہا سے بے خبر ہوجاؤ گے۔۔آج ہم شاعری تو نہیں کریں گے لیکن شاعروں کے حوالے سے کچھ اوٹ پٹانگ باتیں کرتے ہیں تاکہ آپ لوگوں کی آج کی چھٹی خوشگوار گزرے۔۔
ایک شاعر کو اپنی شاعری پر بہت ناز تھا ایک دن وہ اپنی بیوی سے کہنے لگا کہ دیکھنا میں اپنی شاعری سے دنیا بھر میں آگ لگا دونگا۔۔بیوی نے جل کرکہا۔۔گھرمیں ماچس نہیں ہے، ذرا ایک شعر چولہے میں بھی ڈالنا۔۔ایک شاعر کو کسی جرم میں پولیس نے گرفتار کر لیا۔ عدالت میں مقدمہ چلا۔ تو جج نے پوچھا۔آپ اپنی صفائی میں کچھ کہنا پسند کریں گے؟شاعر نے بڑی معصومیت سے کہا۔۔ جی بس،اپنی تازہ غزل سنانا پسند کروں گا۔۔لڑکپن کے دو دوست، طویل عرصے کے بعد ملے تو ایک دوسرے کا احوال پوچھنے لگے۔ صحت اور کاروبار کی باتیں ختم ہوئی۔ تو آخر میں ایک نے پوچھا۔ بھائی تمہارے کتنے لڑکے ہیں۔دوسرے نے سرد آہ بھرتے ہوئے کہا۔ دو تھے۔۔پہلے نے ڈرتے ڈرتے پوچھا، کیا مطلب،دو تھے؟دوسرے نے اداس لہجے میں کہا۔۔ ایک شاعر ہوگیا ہے۔۔ایک شاعر کی شادی ہوئی تو دلہن نے پہلے ہی روز کہہ دیا۔ مجھے کھانا پکانا نہیں آتا۔۔شاعر مسکراکرکہنے لگا۔۔فکرنہ کروبیگم، یہاں کھانا پکانے کی نوبت ہی نہیں آتی۔۔ایک شخص نے مکان کرائے پر لینا تھا۔ مالک مکان نے کہا تمہارے پاس کوئی شور کرنے والی چیز جیسے ٹیپ، ٹی وی، بچے وغیرہ تو نہیں ؟؟وہ بیچارا شاعر تھا، اس نے کہا۔۔ جب میں لکھتا ہوں تو رات کی خاموشی میں میرے قلم کے کاغذ پر چلنے سے ہلکی ہلکی سی آواز آتی ہے۔مالک مکان نے کہا ۔۔بس پھر وہ قلم چھوڑ کر آنا ہے تو آ جاؤ۔۔کسی شاعر کا تخلص ’’زخمی ‘‘ تھا، وہ کسی کام سے اپنے ایک دوست کے گھر گیا۔۔ دستک کے جواب میں اندر سے کسی نے پوچھا۔۔ کون ہے؟؟ شاعر نے لہک کر کہا۔۔جی زخمی۔۔ اندر سے برجستہ جواب آیا۔۔ اسپتال اگلی گلی میں۔۔ایک شاعر کو ہر بات میں یہ کہنے کی عادت تھی، نمونہ پیش کیا ہے۔ ایک روز وہ بازار میں جارہے تھے، کسی صاحب سے ٹکراگئے۔ وہ صاحب جل کر بولے۔۔’’یہ کیا بدتمیزی ہے۔‘‘شاعر نے حسب عادت کہا۔۔نمونہ پیش کیا ہے۔۔ انگلش کے لیکچرر نے طالب علموں کو بتایا۔ انگریزی کا نہایت ممتاز اور مشہور شاعر ملٹن نابینا تھا۔دوسرے روز لیکچرر صاحب نے جاننا چاہا کہ ان کے اسٹوڈنٹس نے یہ بات یاد رکھی تھی یا نہیں؟ چنانچہ انہوں نے پوچھا۔ کیا آپ بتا سکتے ہیں کہ ملٹن کی شخصیت میں کیا نقص تھا؟ہماری طرح کاایک ’’ذہین و فطین‘‘ شاگرد جلدی سے کھڑا ہوا اور کہنے لگا۔۔ یہی کہ وہ شاعر تھا۔۔
مشاعرے میں ایک شاعر صاحب اپنا کلام سنا رہے تھے ِشاعر صاحب کافی عمررسیدہ تھے اس لیے دانتوں کی بتیسی نقلی لگی ہوئی تھی۔۔شاعر صاحب نے کہا ۔۔ایک شعر سنئے صاحب۔۔یہ کہتے ہوئے شاعر صاحب کی بتیسی زمین پر گر گئی۔۔ ِشاعرصاحب نے بتیسی کوزمین سے اٹھا کر کر منہ میں فٹ کیا ِپھر دوبارہ کہا ۔۔ایک شعر سنئے صاحب۔۔ یہ کہتے ہوئے شاعر صاحب کی بتیسی دوبارہ گر گئی۔۔شاعر صاحب نے بتیسی کو اٹھا کر دوبارہ منہ میں فٹ کیا اورتیسری مرتبہ دوبارہ کہا ۔۔ایک شعر سنیئے صاحب!۔۔اورشومئی قسمت اس بار بھی بتیسی دوبارہ زمین پر گر گئی ِپریشان ہو کے مجمع میں سے ایک صاحب نے کھڑے ہو کرکہا ِ۔۔شاعر صاحب کچھ سناؤ گے بھی یا بار بار کیسٹ ہی بدلتے رہو گے ِ۔۔ایک نوجوان اور ابھرتا ہوا شاعر جب پہلی بار عینک لگا کر آیا تو بوڑھے شاعر نے کہا۔۔عینک لگا کر تم بالکل بجو لگتے ہو۔۔نوجوان شاعر برجستہ بولا۔۔عینک اتار دوں تو پھر آپ مجھ کو بجو لگتے ہیں۔۔ایک فلمی شاعر نے اپنی بیوی سے کہا۔ میری اگلی نظم کا عنوان ہوگا۔آگ،پانی اور دھواں۔۔ بیگم کو شاعری سے سخت چڑ تھی۔ وہ غصے سے بولی۔ ایک لفظ میں کیوں نہیں کہتے۔’’حقہ‘‘۔۔پنجاب کے ایک گاؤں میں ایک مشاعر ہو رہا تھا۔ایک شاعر کو اپنا کلام پیش کرنے کے لیے اسٹیج پر بلایا گیا۔شاعر نے اپنا کلام شروع کیا۔۔اندھیراہو رہا ھے کسی کِرن کو جگا دو۔۔یہ سنتے ہی مجمع میں موجود ایک دیہاتی کھڑاہوا اور غصے سے کہنے لگا۔۔ تم ہوتے کون ہو کسی کی ’’رن‘‘ کو جگانے والے۔۔ واضح رہے کہ پنجابی زبان میں ’’رن‘‘ بیوی کو کہتے ہیں۔۔کسی مشاعرے میں ایک نو مشق شاعر اپنا غیر موزوں کلام پڑھ کر سنا رہے تھے۔ اکثر شعراء آدابِ محفل کو ملحوظِ خاطر رکھتے ہوئے خاموش تھے، لیکن جوش ملیح آبادی پورے جوش و خروش سے ایک ایک مصرعے پر داد و تحسین کی بارش کیے جا رہے تھے۔ گوپی ناتھ احسن نے انہیں ٹوکتے ہوئے کہا۔۔قبلہ! یہ آپ کیا کر رہے ہیں؟۔۔جوش صاحب نے بڑی متانت سے جواب دیا۔۔منافقت۔۔
ایک دفعہ ایک شخص نے مرزا غالب کے سامنے شراب کی برائیاں بیان کیں اور کہا کہ شرابی کی دعا قبول نہیں ہوتی۔ مرزا صاحب بولے ۔۔بھائی جس کو شراب میسر ہے اس کو اور کیا چاہیے جس کے لیے دعا مانگے۔۔جوش ملیح آبادی کی کسی نظم پر ایک سکھ نے داد دی کہ۔۔دیکھو پٹھان ہو کر کتنی عمدہ شاعری کر رہا ہے۔ جوش صاحب بولے۔۔دیکھوسکھ ہو کر کتنی عمدہ داد دے رہا ہے۔۔ایک دفع جون ایلیا نے اپنے بارے میں لکھا ’’میں ناکام شاعر ہوں‘‘۔ اس پر مشفق خواجہ نے مشورہ دیا۔۔جون صاحب! اس قسم کے معاملات میں احتیاط سے کام لینا چاہیے۔ اہلِ نظر آپ کی دس باتوں سے اختلاف کے باوجود ایک آدھ بات سے اتفاق بھی کر سکتے ہیں۔۔نامور شاعر منیر نیازی صاحب شادی کے بعد کراچی آئے تو’’جون ایلیا‘‘ سے ملاقات ہو گئی۔ جون ایلیا نے کہا ۔۔منیر خان تمہارے تو آدھے بال سفید ہو گئے ہیں۔۔منیر نیازی کہنے لگے۔۔شادی کے بعد جو مجھ پہ گزری اگر تم پر گزرتی تو تمہارا تو خون بھی سفید ہو جاتا۔۔۔اسرارالحق مجاز نے عالمِ مد ہوشی میں ایک صاحبِ ذوق خاتون سے کہا، ’’میں ڈکشن کا ماسٹر ہوں‘‘۔۔خاتون نے دل لگی کی خاطر سوال کیا کہ ’’پھر جوش ملیح آبادی کیا ہیں؟‘‘ تو مجاز بولے ’’وہ ڈکشنری کے ماسٹر ہیں‘‘۔۔
اور اب چلتے چلتے آخری بات۔۔جب سے ہوش سنبھالا ہے پاکستانی کرنسی صرف ٹاس کے وقت ہی اوپر جاتے دیکھی ہے۔۔ خوش رہیں اور خوشیاں بانٹیں۔۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔


متعلقہ خبریں


مضامین
چین اور امریکا کے درمیان ہائپر سونک جنگ کی کتھا وجود پیر 25 اکتوبر 2021
چین اور امریکا کے درمیان ہائپر سونک جنگ کی کتھا

مسلم آبادی بڑھنے کا سفید جھوٹ وجود پیر 25 اکتوبر 2021
مسلم آبادی بڑھنے کا سفید جھوٹ

ابن ِعربی وجود اتوار 24 اکتوبر 2021
ابن ِعربی

اصل ڈکیت وجود اتوار 24 اکتوبر 2021
اصل ڈکیت

ایک خوفناک ایجادکی کہانی وجود هفته 23 اکتوبر 2021
ایک خوفناک ایجادکی کہانی

مہنگائی اور احتجاج وجود هفته 23 اکتوبر 2021
مہنگائی اور احتجاج

امریکا میں ڈیلٹا وائرس میں کمی وجود هفته 23 اکتوبر 2021
امریکا میں ڈیلٹا وائرس میں کمی

بھوک اورآنسو وجود جمعه 22 اکتوبر 2021
بھوک اورآنسو

جام کمال کی عداوت میں منفی سرگرمیاں وجود جمعرات 21 اکتوبر 2021
جام کمال کی عداوت میں منفی سرگرمیاں

دل پردستک وجود جمعرات 21 اکتوبر 2021
دل پردستک

مثالی تعلقات کے بعد خرابی کاتاثر وجود جمعرات 21 اکتوبر 2021
مثالی تعلقات کے بعد خرابی کاتاثر

شہدائے کارساز‘‘ کے لواحقین کو چارہ گر کی تلاش ہے وجود جمعرات 21 اکتوبر 2021
شہدائے کارساز‘‘ کے لواحقین کو چارہ گر کی تلاش ہے

اشتہار

افغانستان
افغانستان کے پڑوسیوں کا اجلاس کل،طالبان کا شرکت نہ کرنے کا اعلان وجود پیر 25 اکتوبر 2021
افغانستان کے پڑوسیوں کا اجلاس کل،طالبان کا شرکت نہ کرنے کا اعلان

افغانستان کی صورتحال ، امریکی نائب وزیر خارجہ آج اسلام آباد پہنچیں گی وجود جمعرات 07 اکتوبر 2021
افغانستان کی صورتحال ، امریکی نائب وزیر خارجہ آج اسلام آباد پہنچیں گی

طالبان کا داعش کے خلاف کریک ڈاؤن کا حکم وجود جمعرات 30 ستمبر 2021
طالبان کا داعش کے خلاف کریک ڈاؤن کا حکم

طالبان حکومت کے بعد پاکستان کی افغانستان کیلئے برآمدات دگنی ہوگئیں وجود جمعه 17 ستمبر 2021
طالبان حکومت کے بعد پاکستان کی افغانستان کیلئے برآمدات دگنی ہوگئیں

امریکا کا نیا کھیل شروع، القاعدہ آئندہ چند سالوں میں ایک اور حملے کی صلاحیت حاصل کر لے گی،ڈپٹی ڈائریکٹر سی آئی اے وجود بدھ 15 ستمبر 2021
امریکا کا نیا کھیل شروع،  القاعدہ آئندہ چند سالوں میں ایک اور حملے کی صلاحیت حاصل کر لے گی،ڈپٹی ڈائریکٹر سی آئی اے

اشتہار

بھارت
موبائل فون خریدنے کے لیے بھارتی خاوند نے اپنی بیوی فروخت کردی وجود پیر 25 اکتوبر 2021
موبائل فون خریدنے کے لیے بھارتی خاوند نے اپنی بیوی فروخت کردی

علیحدہ کشمیر مانگ رہے ہیں تو دے دو، فوجی کی بیوہ مودی کے خلاف صف آرا وجود جمعرات 21 اکتوبر 2021
علیحدہ کشمیر مانگ رہے ہیں تو دے دو، فوجی کی بیوہ مودی کے خلاف صف آرا

بھارت،چین کے درمیان 17 ماہ سے جاری سرحدی کشیدگی پر مذاکرات ناکام وجود منگل 12 اکتوبر 2021
بھارت،چین کے درمیان 17 ماہ سے جاری سرحدی کشیدگی پر مذاکرات ناکام

مزاحمتی تحریک سے وابستہ کشمیریوں کے خلاف بھارتی کارروائیوں میں تیزی لانے کا منصوبہ وجود هفته 09 اکتوبر 2021
مزاحمتی تحریک سے وابستہ کشمیریوں کے خلاف بھارتی کارروائیوں میں  تیزی لانے کا منصوبہ

مرکزی بینک آف انڈیاا سٹیٹ بینک آف پاکستان کا 45 کروڑ 60 لاکھ کا مقروض نکلا وجود جمعه 08 اکتوبر 2021
مرکزی بینک آف انڈیاا سٹیٹ بینک آف پاکستان کا 45 کروڑ 60 لاکھ کا مقروض نکلا
ادبیات
پکاسو کے فن پارے 17 ارب روپے میں نیلام وجود پیر 25 اکتوبر 2021
پکاسو کے فن پارے 17 ارب روپے میں نیلام

اسرائیل کا ثقافتی بائیکاٹ، آئرش مصنف نے اپنی کتاب کا عبرانی ترجمہ روک دیا وجود بدھ 13 اکتوبر 2021
اسرائیل کا ثقافتی بائیکاٹ، آئرش مصنف نے اپنی کتاب کا عبرانی ترجمہ روک دیا

بھارت میں ہندوتوا کے خلاف رائے کو غداری سے جوڑا جاتا ہے، فرانسیسی مصنف کا انکشاف وجود جمعه 01 اکتوبر 2021
بھارت میں ہندوتوا کے خلاف رائے کو غداری سے جوڑا جاتا ہے، فرانسیسی مصنف کا انکشاف

اردو کو سرکاری زبان نہ بنانے پر وفاقی حکومت سے جواب طلب وجود پیر 20 ستمبر 2021
اردو کو سرکاری زبان نہ بنانے پر وفاقی حکومت سے جواب طلب

تاجکستان بزنس کنونشن میں عمران خان پر شعری تنقید، اتنے ظالم نہ بنو،کچھ تو مروت سیکھو! وجود جمعه 17 ستمبر 2021
تاجکستان بزنس کنونشن میں عمران خان پر شعری تنقید، اتنے ظالم نہ بنو،کچھ تو مروت سیکھو!
شخصیات
سابق امریکی وزیرخارجہ کولن پاول کورونا کے باعث انتقال کرگئے وجود منگل 19 اکتوبر 2021
سابق امریکی وزیرخارجہ کولن پاول کورونا کے باعث انتقال کرگئے

معروف کالم نگار ڈاکٹر اجمل نیازی انتقال کر گئے وجود پیر 18 اکتوبر 2021
معروف کالم نگار ڈاکٹر اجمل نیازی انتقال کر گئے

سابق افغان وزیرِ اعظم احمد شاہ احمد زئی انتقال کر گئے وجود پیر 18 اکتوبر 2021
سابق افغان وزیرِ اعظم احمد شاہ احمد زئی انتقال کر گئے

ڈاکٹرعبدالقدیرخان کے لیے دو قبروں کا انتظام، تدفین ایچ8 میں کی گئی وجود اتوار 10 اکتوبر 2021
ڈاکٹرعبدالقدیرخان کے لیے دو قبروں کا انتظام، تدفین ایچ8 میں کی گئی

ڈاکٹر عبدالقدیر خان کی نمازِجنازہ ادا کردی گئی وجود اتوار 10 اکتوبر 2021
ڈاکٹر عبدالقدیر خان کی نمازِجنازہ ادا کردی گئی