وجود

... loading ...

وجود
وجود
ashaar

روک سکوتو روک لو۔۔

اتوار 20 جون 2021 روک سکوتو روک لو۔۔

دوستو، اخبارات میں خبریں بھی کبھی کبھی بہت مزیدار سی بن جاتی ہیں۔۔ کچھ عرصہ پہلے ہم نے ایک سنگل کالم خبر کی سرخی دیکھی، روک سکوتوروک لو۔۔جلدی سے پوری خبر پڑھی تولکھا تھا،پشاور میں محکمہ بہبود آبادی کی ملازمہ نے تین بچیوں کو بیک وقت جنم دیا، روک سکو تو روک لو۔۔۔کراچی میں کتا مار مہم چلی تو کسی این جی او کی پریس ریلیز ایک اخبار کے سٹی پیچ پر لگی،جس میں این جی او نے مطالبہ کیا تھا کہ ، کتوں کے ساتھ ’’غیرانسانی‘‘ سلوک بند کیا جائے۔۔ جب اخبارات میں ہم کسی وزیر کا یہ بیان پڑھتے ہیں کہ ،کسی کو دہشت گردی کی اجازت نہیں دی جائے گی، جس پر ہمیں حیرت ہوتی ہے وہ کون سے دہشت گرد ہیں جو اجازت لے کر دہشت گردی کرتے ہیں۔۔
آج کل کے بچے بہت ہی زیادہ ذہین و فطین ہوگئے ہیں، ہر سوال کا جواب ان کی پٹاری میں موجود ہوتا ہے،ہم نے ایک بچے سے پوچھا، اگر پراٹھے اور پیزا کو مینارپاکستان کی ٹاپ سے نیچے پھینکا جائے تو سب سے پہلے زمین پہ کیا گرے گا؟۔۔ بچہ بولا۔۔پیزا، ہم نے وجہ پوچھی تو کہنے لگا۔۔ پیزا ’’ فاسٹ فوڈ‘‘ جو ہے۔۔ایک بچے نے ہم سے پوچھا، دہی جمانے کے لیے دودھ میں تھوڑا سا دہی ملانا لازمی ہوتا ہے، لیکن آج تک یہ سمجھ نہیں آیا جس نے پہلی بار دہی جمایا ہوگا وہ تھوڑا سا دہی کہاں سے لایا ہوگا؟۔۔کچھ بچے معصوم بھی ہوتے ہیں۔۔ایک بچہ اسکول سے گھر پہنچتے ہی ماں سے بولا، امی ،امی، دیکھئے تو میرے سر پر کیا ہے؟۔۔ماں نے غور سے دیکھ کر کہا، سر پر تو صرف بال ہیںاور کچھ نہیں ہے۔۔بچے نے بھولپن سے کہا، امی ، ماسٹر صاحب کتنے جھوٹے ہیں ، کہہ رہے تھے ہمارے امتحان سر پر ہیں۔۔۔ہمارے پیارے دوست کی عادت ہے،دنیا کا کوئی بھی مسئلہ ہو ،حل ان کی جیب میں ہوتا ہے۔۔ مشورے تو ایسے فری بانٹتے ہیں جیسے داتا دربار پر لنگر بانٹا جاتا ہے۔۔ ان کا مشورہ ہے۔۔اگر آپ کے بچے مٹی کھاتے ہیں تو انہیں تھوڑا سا سیمنٹ بھی کھلا دیا کریں تاکہ ان کی بنیاد مضبوط ہو۔۔مزید کہتے ہیں۔۔اگر آپ کے دانتوں میں کیڑا لگ گیا ہے تو آپ دو ہفتے تک بھوک ہڑتال کردیں، نامراد خود ہی بھوکا مر جائے گا۔۔یہ مشورہ بھی انہی کا ہے کہ ۔۔اگر آپ کو رات کو نیند نہیں آتی تو آپ چوکیداری شروع کردیں چلو کچھ پیسے ہی بن جائیں گے۔۔
پچھلے دنوں جب ٹماٹر کی شدید قلت ہوگئی تھی،انہی دنوں ایک گھر میں دو خاندان کے بڑے بیٹھ کر رشتے کی بات کررہے تھے، لڑکی والوں نے پوچھا، لڑکا کیا کرتا ہے؟۔۔ لڑکے والوں نے جواب دیا، جی ٹماٹروں کی ریڑھی لگاتا ہے۔۔لڑکی والے فوری بولے، بس جی جلدی سے منہ میٹھا کریں، ہماری طرف سے تو ہاں ہے۔۔انہی دنوں ایک خاتون سبزی لینے گئی، سبزی والے نے سبزی پر پانی چھڑکتے چھڑکتے بہت دیر لگا دی۔ تنگ آکرخاتون نے کہا ، جب یہ ٹماٹر ہوش میں آجائیں تو دو کلو دے دینا۔۔۔ کسی نے کہا کہ آج گرل فرینڈ نے ایزی لوڈ کی جگہ ٹماٹر مانگے ہیں۔۔کسی حکیم نے انوکھا انکشاف کیا،کہنے لگا۔۔ٹماٹر 20 روپے کلو ہوں تو خون پیدا کرتے ہیں،اور 200 روپے کلو ہوں تو گردوں میں پتھری پیدا کرتے ہیں۔۔ان دنوں میں ٹماٹر خریدنے والا بازار میں ایسے سینہ چوڑا کرکے چلتا تھا جیسے وہ کشمیر فتح کرکے آرہا ہو۔۔ہمارے گھر میں مہمان آئے تو ہم نے پلیٹ میں ایک ٹماٹر کاٹ کران کے سامنے رکھا، وہ کبھی ہمیں اور کبھی ’’ٹماٹر‘‘ کو دیکھتے،پھر حیرت سے پوچھنے لگے، یار تم کب سے اتنے امیر ہوگئے۔۔ہمارے پیارے دوست کہتے ہیں۔۔۔ اگر ٹماٹروں کی قمیت میں یونہی اضافہ ہوتا رہا تو وہ دن دور نہیں جب حق مہر میں بھی لڑکی والوں نے ٹماٹر لکھوانے کرنے ہیں۔۔
ایک چرسی جب تیسرے فلورسے نیچے گرا تو رش لگ گیا، لوگ اس کے اردگرد جمع ہوگئے اور پوچھا ، کیا ہوا بھائی؟۔۔ چرسی نے ادھ کھلی آنکھوں سے لیٹے لیٹے مجمع کو دیکھا پھر بڑی معصومیت سے بولا۔۔’’ مینوں کی پتا میں تے آپ ہونے آیا۔‘‘۔۔۔کچھ دوست شکوہ کرتے ہیں کہ آپ کے کالم میں کام کی باتیں کم اور فضولیات زیادہ ہوتی ہیں، زیادہ تر لطیفے بھرے ہوتے ہیں، اب مسئلہ یہی ہے ہماری پوری زندگی لطیفہ ہی ہے، جس موضوع پر کالم ہوتا ہے اس حوالے سے مزاحیہ باتیں یاد آتی رہتی ہیں تو لکھتا جاتا ہوں، اب وہ آپ کو لطیفہ لگے تو اسے ’’لطیفـ‘‘ پیرائے میں لیجئے اور غصہ سائیڈ پہ تھوک دیجئے۔۔اچھا،دلچسپ بات یہ ہے کہ اعتراض بھی وہی لوگ کرتے ہیں جو دکاندار کے پاس کہتے ہیں۔۔ وہ والا ’’ جوک‘‘ دینا۔۔دکاندار پوچھتا ہے ،کون سا والا؟۔۔ تو یہ لوگ کہتے ہیں۔۔ وہی والا جسے لوگ کہتے ہیں مارکیٹ میں نیاآیا ہے۔۔ایک لڑکی جب لالہ موسی کے اسٹیشن پر اتری تو وہاں سے گزرتے کسی پینڈو سے پوچھا۔۔ یہ کون سا اسٹیشن ہے۔۔ اس نے لڑکی کو اوپر سے نیچے تک غور سے دیکھا، پھر زوردار قہقہہ لگایااور ہنستے ہوئے کہنے لگا۔۔’’ جھلئے اے ریلوے ٹیشن اے۔۔۔‘‘۔۔معاملہ زنانی کا ہوتو ہر بندہ لحاظ کرجاتا ہے۔۔ایک چوہا شراب کے گلاس میں گر گیا ،باہر نکلا تو ’’ٹن ‘‘ہوگیا ،سامنے بلی دیکھ کر مونچھ کو تاؤ دیکر بولا۔۔ ذرا ادھر ادھر ہوجاؤ ،ایویں پھر لوگ کہیں گے کہ ایک ’’زنانی ‘‘کو پھینٹی لگا دی ہے۔۔۔
اب ذرا عقیدت کی ایک مثال بھی سنتے جائیں۔۔لوٹا ہوا مال برآمد کرنے کے لیے پولیس نے چھاپے مارنے شروع کیے۔لوگ ڈر کے مارے لوٹا ہوا مال رات کے اندھیرے میں باہر پھینکنے لگے۔ کچھ ایسے بھی تھے جنہوں نے اپنا مال بھی موقع پاکر اپنے سے علیحدہ کر دیا تاکہ قانونی گرفت سے بچے رہیں۔ایک آدمی کو بہت دقت پیش آئی۔ اس کے پاس شکر کی دو بوریاں تھیں جو اس نے پنساری کی دکان سے لوٹی تھیں۔ ایک تو وہ جوں کی توں رات کے اندھیرے میں پاس والے کنویں میں پھینک آیا، لیکن جب دوسری اٹھا کر اس میں ڈالنے لگا تو خود بھی ساتھ چلا گیا۔ شور سن کر لوگ اکٹھے ہوگئے۔ کنویں میں رسیاں ڈالی گئیں۔ دو جوان نیچے اترے اور اس آدمی کو باہر نکال لیا۔ لیکن چند گھنٹوں کے بعد وہ مرگیا۔دوسرے دن جب لوگوں نے استعمال کے لیے اس کنویں میں سے پانی نکالا تو وہ میٹھا تھا۔ اسی رات اس آدمی کی قبر پر دیے جل رہے تھے۔۔۔
اور اب چلتے چلتے آخری بات۔۔گرمی درخت لگانے سے کم ہو گی۔۔املی والا شربت پینے اور ٹنڈ کروانے سے نہیں۔۔خوش رہیں اور خوشیاں بانٹیں۔۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔


متعلقہ خبریں


مضامین
عمرؓکومعاف کردیں وجود جمعرات 29 جولائی 2021
عمرؓکومعاف کردیں

افغانستان میں امن اور کابل حکومت کی پروپیگنڈہ مہم وجود جمعرات 29 جولائی 2021
افغانستان میں امن اور کابل حکومت کی پروپیگنڈہ مہم

حیسکو قاتل بھی مقتول بھی وجود جمعرات 29 جولائی 2021
حیسکو قاتل بھی مقتول بھی

اگر اب بھی نہ جاگے۔پیگاسس جاسوسی اسکینڈل وجود جمعرات 29 جولائی 2021
اگر اب بھی نہ جاگے۔پیگاسس جاسوسی اسکینڈل

قوت گویائی کی بحالی میں کامیابی وجود منگل 27 جولائی 2021
قوت گویائی کی بحالی میں کامیابی

کون کہتاہے وجود اتوار 25 جولائی 2021
کون کہتاہے

اپنا دھیان رکھنا وجود اتوار 25 جولائی 2021
اپنا دھیان رکھنا

محکمہ بہبودی آبادی کے گریڈ چودہ کے ملازم کے اختیارات و مراعات!! وجود هفته 24 جولائی 2021
محکمہ بہبودی آبادی کے گریڈ چودہ کے ملازم کے اختیارات و مراعات!!

اپنوں کی حوصلہ شکنی حب الوطنی نہیں وجود هفته 24 جولائی 2021
اپنوں کی حوصلہ شکنی حب الوطنی نہیں

مسلماں نہیں راکھ کا ڈھیر ہے وجود بدھ 21 جولائی 2021
مسلماں نہیں راکھ کا ڈھیر ہے

مساوات، قربانی اور انعام وجود بدھ 21 جولائی 2021
مساوات، قربانی اور انعام

’’ایف آئی آر‘‘ کے خلاف سندھ حکومت کی قانونی کارروائی وجود بدھ 21 جولائی 2021
’’ایف آئی آر‘‘ کے خلاف سندھ حکومت کی قانونی کارروائی

اشتہار

افغانستان
امریکی جنگی طیاروں کے طالبان کے ٹھکانوں پر فضائی حملے وجود هفته 24 جولائی 2021
امریکی جنگی طیاروں کے طالبان کے ٹھکانوں پر فضائی حملے

افغان صدارتی محل میں نماز عید کے دوران راکٹ حملے کی ویڈیو وائرل وجود بدھ 21 جولائی 2021
افغان صدارتی محل میں نماز عید کے دوران راکٹ حملے کی ویڈیو وائرل

وزیر اعظم عمران خان نے افغان صدر اشرف غنی کو آئینہ دکھا دیا وجود هفته 17 جولائی 2021
وزیر اعظم عمران خان نے افغان صدر اشرف غنی کو آئینہ دکھا دیا

پاکستان سے 10ہزار جنگجو افغانستان میں داخل ہوئے ، اشرف غنی کا الزام وجود هفته 17 جولائی 2021
پاکستان سے 10ہزار جنگجو افغانستان میں داخل ہوئے ، اشرف غنی کا الزام

طالبان نے افغانستان کے شمالی علاقوں پر قبضہ کرلیا، امریکی میڈیا وجود پیر 12 جولائی 2021
طالبان نے افغانستان کے شمالی علاقوں پر قبضہ کرلیا، امریکی میڈیا

اشتہار

بھارت
بابری مسجد کی شہادت کے بعد مسلمان ہونے والے محمد عامر کی پر اسرار موت وجود اتوار 25 جولائی 2021
بابری مسجد کی شہادت کے بعد مسلمان ہونے والے محمد عامر کی پر اسرار موت

پیگاسس کے ذریعے جاسوسی،نریندر مودی نے غداری کا ارتکاب کیا، راہول گاندھی وجود هفته 24 جولائی 2021
پیگاسس کے ذریعے جاسوسی،نریندر مودی نے غداری کا ارتکاب کیا، راہول گاندھی

بھارت میں کورونا اموات سرکاری اعداد وشمار سے 10 گنا زیادہ ہوسکتی ہیں وجود بدھ 21 جولائی 2021
بھارت میں کورونا اموات سرکاری اعداد وشمار سے 10 گنا زیادہ ہوسکتی ہیں

افغانستان سے بھارتی سفارتکاروں کا انخلائ، سوشل میڈیا پہ مذاق اڑنے لگا وجود پیر 12 جولائی 2021
افغانستان سے بھارتی سفارتکاروں کا انخلائ، سوشل میڈیا پہ مذاق اڑنے لگا

نریندر مودی کی کابینہ میں شامل 42فیصدوزراء کے خلاف فوجداری مقدمات قائم ہیں'رپورٹ وجود پیر 12 جولائی 2021
نریندر مودی کی کابینہ میں شامل 42فیصدوزراء کے خلاف فوجداری مقدمات قائم ہیں'رپورٹ
ادبیات
عظیم ثنا ء خواں،شاعر اورنغمہ نگار مظفر وارثی کی دسویں برسی منائی گئی وجود جمعرات 28 جنوری 2021
عظیم ثنا ء خواں،شاعر اورنغمہ نگار مظفر وارثی کی دسویں برسی منائی گئی

لارنس آف عربیا، بچپن کیسے گزرا؟ وجود منگل 20 اکتوبر 2020
لارنس آف عربیا، بچپن کیسے گزرا؟

بیروت سے شائع کتاب میں اسرائیل نواز بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کا چہرہ بے نقاب وجود جمعرات 17 جنوری 2019
بیروت سے شائع کتاب میں اسرائیل نواز بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کا چہرہ بے نقاب

14واں بین الاقوامی کتب میلہ کراچی ایکسپوسینٹر میں ہوگا وجود پیر 10 دسمبر 2018
14واں بین الاقوامی کتب میلہ کراچی ایکسپوسینٹر میں ہوگا

شاعر جون ایلیا کو مداحوں سے بچھڑے 16 برس بیت گئے وجود جمعرات 08 نومبر 2018
شاعر جون ایلیا کو مداحوں سے بچھڑے 16 برس بیت گئے
شخصیات
188ارب ڈالر کے مالک ایلون مسک دنیا کے مالدار ترین آدمی بن گئے وجود جمعه 08 جنوری 2021
188ارب ڈالر کے مالک ایلون مسک دنیا کے مالدار ترین آدمی بن گئے

ہالی وڈ اداکار ادریس البا کی اہلیہ بھی کورونا سے متاثر وجود پیر 23 مارچ 2020
ہالی وڈ اداکار ادریس البا کی اہلیہ بھی کورونا سے متاثر

امریکی میگزین فوربز میں سب سے زیادہ کمانے والی شخصیات کی فہرست جاری وجود منگل 01 جنوری 2019
امریکی میگزین فوربز میں سب سے زیادہ کمانے والی شخصیات کی فہرست جاری

سال 2018، مختلف شعبہ ہائے حیات کی بہت سی عالمی شخصیات دنیا چھوڑ گئیں وجود بدھ 26 دسمبر 2018
سال 2018، مختلف شعبہ ہائے حیات کی بہت سی عالمی شخصیات دنیا چھوڑ گئیں

ماضی کی رہنما خواتین وجود پیر 14 مئی 2018
ماضی کی رہنما خواتین