وجود

... loading ...

وجود
وجود
ashaar

پاکستانی میڈیا پابندیوں کا نشانا، پاکستان پریس فریڈم رپورٹ

پیر 03 مئی 2021 پاکستانی میڈیا پابندیوں کا نشانا، پاکستان پریس فریڈم رپورٹ

جنوری 2020 سے اپریل 2021کے عرصہ میں پاکستانیوں کو ذرائع ابلاغ کے مواد پر بڑھتی ہوئی اظہار رائے کی پابندیوں کا نشانہ بنایا گیا اس طرح ملک میں آزادانہ اظہار رائے کے ماحول کو محدود کردیا گیا۔ پاکستان پریس فائونڈیشن(پی پی ایف)کی طرف سے جاری کردہ پاکستان پریس فریڈم رپورٹ 2020-2021 کے مطابق قتل، جسمانی حملوں،ماورائے قانون اغوا کے ساتھ ساتھ میڈیا کے اہلکاروں کو دھمکیوں اور گرفتاریوں کا سلسلہ بدستور جاری ہے ، گزشتہ سال بھی میڈیا کے تیار کیے جانے مواد کو براہ راست کنٹرول کرنے کی کوششوں پر توجہ رکھی گئی تھی۔ میڈیا ریگولیٹری اداروں کی جانب سے جاری کردہ ہدایات، تمام پلیٹ فارمز پر پابندی اور ایسے قوانین تیار کرنے کی کوششوں نے جو قانونی اضطراب میں اضافہ کرتے ہیں، ایسا ماحول پیدا کیا ہے جہاں میڈیا کو سنسر کیا جاتا ہے ، اور صحافیوں کو سیلف سنسر شپ کی طرف دھکیل دیا جاتا ہے ۔رپورٹ میں نوٹ کیا گیا ہے کہ کوویڈ 19 کے پھیلائو کے ساتھ اس نئے چیلنج کی شمولیت نے متعدد صحافیوں اور میڈیا پریکٹیشنرز کی جانیں لے لی ہیں۔ خود وائرس سے صحافیوں کی حفاظت کے علاوہ وبائی مرض نے پریس کی آزادی کے معاملے میں بھی نئے مسائل پیدا کردیئے ہیں۔ فرنٹ لائن پر صحافیوں کے کردار اور کورونا وائرس میں اضافے کے خطرے کے پیش نظر رپورٹ میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ میڈیا پریکٹیشنرز کو فرنٹ لائن ورکر سمجھا جائے اور ان کو حفاظتی ویکسینیشن مہیا کرنے میں ترجیح دی جانی چاہئے ۔چونکہ دنیا میں تیزی سے ٹوئٹر جیسے آن لائن پلیٹ فارمز پر انحصار کیا جا رہا ہے ، اس لئے پاکستان میں، سوشل میڈیا کے یہ پلیٹ فارمز، میڈیاپر بالخصوص کوڈ 19 پر رپورٹنگ کرنے والی خواتین صحافیوں پر ٹرولنگ اور مربوط حملوں کا ذریعہ بن گئے ۔ براڈکاسٹ میڈیا کے حوالے سے پاکستان میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی(پیمرا)نے ٹی وی چینلز کو وبائی مرض کی کوریج کرنے کی اجازت کے لئے ہدایات کے سیٹ بھی جاری کیے ہیں۔جنوری 2020 سے اپریل 2021 تک کے عرصے میں پاکستان پریس فانڈیشن (پی پی ایف)نے ریکارڈ کیا اپنے کام کی وجہ سے ایک صحافی کا قتل، گرفتاریوں اور نظربندی کے 10 واقعات، جبری اٹھائے جانے اور اغوا کے 4 واقعات، جسمانی حملوں کے 16واقعات، دھمکیوں کے 13واقعات، چھاپوں اور حملوں کے 4واقعات، انٹرنیٹ پر بڑی پابندی یا بلیک آٹ کے 5 واقعات، پیمرا کی 22 ہدایات جو آزادانہ اظہار رائے میں تخفیف کرتی ہیں، صحافیوں کے خلاف قانونی کارروائی کے 7واقعات اور قانون سازی کی 6 مثالوں نے پاکستان میں آزادانہ اظہار رائے کو منفی طور پر متاثر کیا ہے ۔اگرچہ صحافیوں کے خلاف جسمانی حملے کئی دہائیوں سے جاری ہیں، لیکن پاکستان میں اب تک میڈیا کے تحفظ کے لئے کوئی حفاظتی بل موجود نہیں ہے ۔ پی پی ایف بل کی منظوری کے لئے سرگرم طور پر لابنگ کررہی ہے اور وفاقی کابینہ سے اس پر عمل کرنے کی اپیل کرتی ہے ۔ لابنگ کی کوششوں میں، پی پی ایف نے اس معاملے پر سندھ کی صوبائی حکومت سے بھی لابنگ کی۔ صوبے کے لئے ایک علیحدہ ڈرافٹ بل تیار کیا گیا تھا اور حکومت سندھ نے اس بل کو صوبائی سطح پر منظور کرنے میں دلچسپی ظاہر کی ہے ۔ پاکستان پریس فریڈم رپورٹ 2021میں صحافیوں اور میڈیا پریکٹیشنرز کے تحفظ کے لئے موثر قومی اور صوبائی قانون سازی کرنے کا مطالبہ کیا گیا ہے جس کا کسی تاخیر کے بغیر نفاذ کیا جانا چاہئے ۔ملک میں ریگولیٹری اداروں حد سے زیادہ اثر و رسوخ سے کام کیا ہے اور مواد کو روکنے کے لئے حکومتی آلہ کار بن گئے ہیں۔ اگرچہ پیمرا براڈکاسٹ میڈیا کے لئے میڈیا ریگولیٹری ادارہ ہے ، لیکن اس کی 2020-21 کے دوران جاری کردہ ہدایات مواد پر سنسر کی حیثیت کے مترادف ہیں۔ پیمرا نے کوریج کے ان موضوعات پر جو ملک میں تازہ ترین اہم پیشرفت ہیں مکمل پابندی عائد کردی ہے ۔ اس کا نتیجہ میڈیا کے ذریعہ سنسرشپ کا نفاذ ہے جو ان پیشرفتوں کا احاطہ کرنے اور اپنے سامعین کو آگاہ کرنے سے قاصر ہیں۔ ان مکمل پابندیوں کے ذریعہ معلومات کے آزادانہ بہا کو محدود کردیا گیا ہے ۔ 2021کے محض چند مہینوں میں ہی، پیمرا نے قومی احتساب بیورو کو کوریج سے متعلق ہدایات جاری کیں، ممنوعہ تحریک لبیک (ٹی ایل پی) پارٹی کی کوریج پر پابندی عائد کی، اور صحافیوں کو کابینہ کے اجلاسوں کے ذرائع پر رپورٹنگ کرنے سے روک دیا۔آن لائن مواد کی نگرانی کے لئے قانون سازی کرنا ایک اور تشویشناک بات ہے ۔ جنوری میں، پاکستان ٹیلی مواصلات ایکٹ، 1996اور پی ای سی اے کے تحت وفاقی کابینہ نے سوشل میڈیا کے قواعد اور شہری تحفظ(آن لائن ہارم کے خلاف)قواعد2020کی منظوری دے دی۔میڈیا نے رپورٹ کیا ہے کہ یہ ڈریکونین قوانین حکومت کو مواد کی نگرانی پر ایک بہت بڑا کنٹرول دے سکتے ہیں ۔ ان قواعد نے زبردست مزاحمت کا سامنا کیا جس کی وجہ سے مارچ 2020 میں ان کو معطل کردیا گیا۔ نومبر 2020 میں، وزارت انفارمیشن ٹیکنالوجی نے غیر قانونی آن لائن مواد کو ختم کرنے اور مسدود کرنے (طریقہ کار، نظراندازی اور حفاظتی اقدامات)قواعد 2020 کو مشتہر کیا۔ ان قوانین کو عدالتوں میں چیلنج کیا گیا ہے ۔2020کے دوران، پاکستان ٹیلی مواصلات اتھارٹی (پی ٹی اے ) کے اقدامات کا صحافیوں کو براہ راست نقصان ہوا جس نے سوشل میڈیا پر مواد پر پابندی لگانے اور مواد کو آن لائن شیئر کرنے کو جرم قرار دیا۔ میڈیا کے کارکنوں کے خلاف سوشل میڈیا پر شیئر لردہ مواد کے لئے مجرمانہ شکایات درج کی گئیں۔رپورٹ میں زور دیا گیا ہے کہ حکومت اس بات کو یقینی بنائے کہ اسٹیک ہولڈرز انٹرنیٹ اور سوشل میڈیا سے متعلق قانون سازی، قواعد و ضوابط کے مسودے کے عمل میں فعال طور پر شامل ہوں۔سب سے اہم بات یہ ہے کہ پاکستان پریس فریڈم رپورٹ 2020-20121 میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ تقریبا مطلق استثنی کی موجودہ صورتحال کے خاتمے کے لئے ضروری ہے کہ، وفاقی اور صوبائی حکومتیں اس بات کو یقینی بنا ئیں کہ صحافیوں اور میڈیا پریکٹیشنرز کی یک طرفہ نظربندی اور تشدد، جبری گمشدگی، اغوا، اور قتل سے متعلق تمام معاملات میں قابل اعتماد تفتیش اور بھرپور فوجداری قانونی کارروائی کی جا ئے ۔ان پلیٹ فارمز پر مواد کو کنٹرول کرنے کے لئے قوانین اور قواعد بنانے کی بڑھتی کوششوں کے ساتھ آن لائن شیئر کردہ مواد کی براہ راست پولیسنگ کے نتیجے میں آن لائن دائرے میں آزادانہ اظہار رائے کے لئے جگہ تنگ ہوتی جارہی ہے جو روایتی میڈیا کے مقابلے میں زیادہ کھلی اور قابل رسائی تھی۔ آن لائن مواد کی پولیسنگ میں اضافہ ہوا ہے ، براڈکاسٹ میڈیا کے لئے مزید پابندی والی ہدایت جاری کی گئی ہے جبکہ پرتشدد حملوں کا سامنا کرنے والے صحافیوں کے تحفظ کا فقدان ہے ۔ یہ سال پاکستان میں آزادی ! صحافت کے لئے ایک تاریک تصویر پیش کرتا ہے۔


متعلقہ خبریں


پاکستان میں اہل اسلام عقیدت سے عید منارہے ہیں وجود - جمعرات 13 مئی 2021

پاکستان میں سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات کے ساتھ اہل اسلام آج انتہائی عقیدت سے عید الفطر منارہے ہیں۔ قبل ازیں مرکزی رویت ہلال کمیٹی کے چیئر مین عبد الخبیر آزاد نے اعلان کیا ہے کہ یکم شوال کا چاند نظر آگیا ہاور عید الفطر جمعرات کو ہوگی ۔ واضح رہے کہ یہ پاکستان میں اکیس سال کے بعد ایک ہی روز عید منانے کا موقع آیا ہے جب تمام صوبوں میں ایک ہی روز سب مل کر عید منارہے ہیں۔ بدھ کو عید الفطر کی رویت کیلئے مرکزی رویت ہلال کمیٹی کا اجلاس اسلام آباد میں چیئرمین مولاناعبدالخبیرآزاد ک...

پاکستان میں اہل اسلام عقیدت سے عید منارہے ہیں

وزیر اعظم اور شاہ سلمان کے درمیان ٹیلیفونک رابطہ ،فلسطین کی تازہ صورتحال پر اظہار تشویش وجود - جمعرات 13 مئی 2021

وزیر اعظم عمران خان اور سعودی عرب کے شاہ سلمان بن عبد العزیز کے درمیان ٹیلیفونک رابطہ ہوا جس میں فلسطین کی تازہ صورتحال پر اظہار تشویش کیا گیا ۔بدھ کو ہونے والے رابطے میں وزیر اعظم نے مسجد اقصیٰ میں فلسطینیوں پر اسرائیلی بہیمانہ حملے کی مذمت کی ۔وزیر اعظم نے کہاکہ اسرائیلی حملے انسانی اقدار اور بین الاقوامی قانون سے انحراف ہے ۔ وزیر اعظم عمران خان نے سعودی عرب کی خود مختاری سکیورٹی کیلئے پاکستان کے عزم کا اظہار کیا ۔وزیر اعظم عمران خان نے حرمین شریفین کے دفاع کے عزم کا بھی اظ...

وزیر اعظم اور شاہ سلمان کے درمیان ٹیلیفونک رابطہ ،فلسطین کی تازہ صورتحال پر اظہار تشویش

فلسطین کی صورتحال پر اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کا اجلاس آج پھر طلب وجود - جمعرات 13 مئی 2021

فلسطین کی کشیدہ صورتحال پر اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کا اجلاس (آج) پھر طلب کرلیا گیا۔اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل نے مقبوضہ فلسطینی علاقے میں تشدد بڑھنے پر سخت تشویش کا اظہار کیا ہے ۔یورپی پارلیمنٹ نے بھی اسرائیل سے فلسطینیوں پر حملے فوری بند کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ اسرائیلی حکومت فلسطینیوں کو بیدخل کرکے یہودی آباد کار بسانا چاہتی ہے ۔ امریکی وزیرخارجہ نے اسرائیل ہم منصب کوٹیلی فون کرکے کشیدگی ختم کرنیکا پیغام دیا ہے ۔عرب لیگ نے غزہ پٹی پر اسرائیلی فضائی حملوں کی مذم...

فلسطین کی صورتحال پر اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کا اجلاس آج پھر طلب

ترک صدر کا وزیراعظم کو فون، مسئلہ فلسطین کیلئے ملکر کام کرنے پر اتفاق وجود - جمعرات 13 مئی 2021

ترک صدر رجب طیب اردوان نے وزیراعظم عمران خان سے ٹیلیفونک رابطہ کر کے فلسطین پر اسرائیلی جارحیت و بربریت پر گفتگو کی ہے ۔تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان کو ترک صدررجب طیب اردوان نے ٹیلی فون کیا جس میں اسرائیلی بربریت اور جارحیت پر دونوں رہنماں نے تبادلہ خیال کیا۔دونوں رہنماوں نے اسرائیلی جارحیت و بربریت کی مذمت کی اور اتفاق کیا کہ مسلم ممالک کو مل کر اسرائیل کے ظالمانہ اقدامات کے خلاف آواز اٹھانی چاہیے ۔رہنماوں نے اس نکتے پر بھی اتفاق کیا کہ دونوں ممالک کے وزرائے خارجہ فلس...

ترک صدر کا وزیراعظم کو فون، مسئلہ فلسطین کیلئے ملکر کام کرنے پر اتفاق

سعودی عرب سمیت خلیجی ممالک میں عیدالفطر آج منائی جائے گی وجود - جمعرات 13 مئی 2021

سعودی عرب سمیت خلیجی ممالک میں عیدالفطر آج جمعرات کو منائی جائے گی۔غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق قطر ، فلسطین ، متحدہ عرب امارات، انڈونیشیا اور ملائیشیا میں بھی عید الفطر جمعرات کو ہو گی ۔اس کے علاوہ برطانیہ اور فرانس سمیت متعدد یورپی ممالک میں بھی عیدالفطر 13مئی کو منائی جائے گی۔خیال رہے کہ سعودی عرب میں بھی گزشتہ روز عید الفطر کا چاند نظر نہیں آیا تھا جس کے بعد اعلان کیا گیا تھا کہ عید الفطر بروز جمعرات منائی جائے گی۔افغانستا ن میں بھی شوال کا چاند نظر آیاجس کے ...

سعودی عرب سمیت خلیجی ممالک میں عیدالفطر آج منائی جائے گی

بھارت اور بنگلادیش میں شوال کاچاندنظرنہیں آیا، عید جمعہ کو ہوگی وجود - جمعرات 13 مئی 2021

بھارت اور بنگادیش میں شوال کاچاندنظرنہیں آیا جس کے بعدان ممالک میں عیدالفطر 14 مئی بروز جمعہ منائی جائے گی۔بھارت کی مرکزی رویت ہلال کمیٹی نے اعلان کیا کہ ملک بھر سے چاند نظر آنے کی کوئی شہادت موصول نہیں ہوئی۔مرکزی رویت ہلال کمیٹی کے مطابق بھارت میں عیدالفطرجمعہ 14مئی کو ہوگی۔ بھارت میں شاہی امام مسجد احمد بخاری نے اعلان کیا ہے کہ چاند نظر نہیں آیا ہے لہذا عیدالفطر جمعہ کے دن منائی جائے گی۔قواعد و ضوابط کے مطابق بھارت میں شاہی امام مسجد چاند نظر آنے یا نہ آنے کا اعلان کرتے ہیں...

بھارت اور بنگلادیش میں شوال کاچاندنظرنہیں آیا، عید جمعہ کو ہوگی

افغانستان سے غیر ملکی افواج کا منظم اور ذمہ دار انہ انخلا ء کرایا جائے ،چین وجود - جمعرات 13 مئی 2021

چین نے افغانستان سے غیر ملکی افواج کے منظم اور ذمہ دار انداز میں انخلا پر زور دیا ہے تاکہ عجلت میں ایسی کوئی کارروائی نہ کی جائے جس سے امن اور سلامتی عمل متاثر اور اس میں مداخلت ہو۔وزارت خارجہ کی ترجمانHua Chunyingنے بیجنگ میں بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ افغانستان میں وسیع اور تمام فریقوں پر مشتمل سیاسی نظام کیلئے کوششیں کرنی چاہئیں تاکہ تمام نسلی گروپ اور دھڑے سیاسی نظام میں شامل ہوں۔انہوں نے کہا کہ چین افغانستان میں امن و استحکام کے فروغ میں امداد دینے کیلئے تیار ہے ۔

افغانستان سے غیر ملکی افواج کا منظم اور ذمہ دار انہ انخلا ء کرایا جائے ،چین

اسرائیل فلسطین کشیدگی بڑھ کر جنگ کی طرف جاسکتی ہے ، اقوام متحدہ کا انتباہ وجود - جمعرات 13 مئی 2021

اقوام متحدہ نے خبردار کیا ہے کہ اسرائیل فلسطین کشیدگی بڑھ کر جنگ کی طرف جاسکتی ہے ۔اقوام متحدہ کے مشرق وسطی امن عمل کے نمانئدہ خصوصی ٹور وینیس لینڈ کا کہنا ہے کہ فلسطین میں لگی آگ کو فوری روکا جائے ، ہم جنگ کی طرف بڑھ رہے ہیں۔میڈیا رپورٹ کے مطابق اقوام متحدہ کے نمائندہ خصوصی کا کہنا ہے کہ غزہ میں جنگ کی قیمت تباہ کن ہوگی، غزہ میں کشیدگی کی قیمت عام لوگ چکا رہے ہیں، اقوام متحدہ صورتحال بہتر کرنے کے لیے تمام فریقین سے رابطے میں ہے ، تشدد کو اب روکا جائے ۔دوسری جانب اسرائیلی فوج...

اسرائیل فلسطین کشیدگی بڑھ کر جنگ کی طرف جاسکتی ہے ، اقوام متحدہ کا انتباہ

طالبان نے افغان دارالحکومت کابل کے مضافاتی ضلع پرقبضہ کرلیا وجود - جمعرات 13 مئی 2021

افغانستان کے طالبان نے افغان دارالحکومت کابل کے مضافات میں ایک ضلع پرقبضہ کرلیا۔افغان حکام کے مطابق سیکیورٹی فورسز نے نرکھ ضلع کے پولیس ہیڈ کوارٹر سے پسپائی اختیار کی۔اْدھر طالبان ترجمان نے بھی تصدیق کی ہے کہ طالبان نے ضلع نرکھ پر گزشتہ روز قبضہ کیا۔ترجمان کے مطابق طالبان نے پولیس ہیڈکوارٹراور ایک فوجی بیس پر بھی کنٹرول حاصل کرلیا ہے ۔ دوسری جانب افغان سیکیورٹی فورسز کی جانب سے ضلع پر قبضہ چھڑانے کیلئے آپریشن شروع کردیا گیا ۔

طالبان نے افغان دارالحکومت کابل کے مضافاتی ضلع پرقبضہ کرلیا

پی ڈی ایم رہنماؤں کا عید کے بعد حکومت مخالف تحریک شروع کرنے کا فیصلہ وجود - بدھ 12 مئی 2021

حزب اختلاف کی جماعتوں کے پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ کے رہنماؤں نے عید کے بعد حکومت مخالف تحریک شروع کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔میڈیا رپورٹ کے مطابق قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف شہباز شریف نے سابق وزیراعظم نواز شریف اور پی ڈی ایم کے سربراہ مولانا فضل الرحمان سے ٹیلی فونک رابطہ کیاہے ۔ٹیلی فونک بات چیت میں فیصلہ کیا گیا کہ حکومت کے خلاف فیصلہ کن راؤنڈ کے لیے مولانا فضل الرحمان عید کے بعد پی ڈی ایم میں شامل جماعتوں کے قائدین سے ملاقاتیں کریں گے ۔گفتگو کے دوران حکومت کی جانب سے شہباز...

پی ڈی ایم رہنماؤں کا عید کے بعد حکومت مخالف تحریک شروع کرنے کا فیصلہ

ہماری کوئی لڑائی نہیں تھی ،راولپنڈی سے صلح ہوگئی ہے ، محمد زبیر وجود - بدھ 12 مئی 2021

مسلم لیگ (ن )کے رہنما و سابق گورنر سندھ محمد زبیر نے کہا ہے کہ ہماری کوئی لڑائی نہیں تھی ،راولپنڈی سے صلح ہوگئی ہے ۔ نجی ٹی وی کے مطابق محمدزبیر نے کہا کہ سیزفائر یاصلح کے بارے میں نہیں پتہ لیکن ہمارے تعلقات اچھے ہیں ہم جب مطمئن ہوں گے تواس کاباقاعدہ بتائیں گے بھی۔محمدزبیر نے کہا کہ میری ملاقاتیں ہوتی تھیں توکبھی ڈیل یاکوئی ریلیف نہیں مانگا، کسی کوبھی حب الوطنی کی ضرورت نہیں ہے ۔انہوں نے کہا کہ عمران خان جذباتی شخص ہیں استعفے دینے پڑے تووہ اسمبلی توڑدیں گے ملک میں انارکی نہیں...

ہماری کوئی لڑائی نہیں تھی ،راولپنڈی سے صلح ہوگئی ہے ، محمد زبیر

پاکستان کی غزہ میں اسرائیل کے فضائی حملوں کی شدید مذمت وجود - بدھ 12 مئی 2021

پاکستان نے غزہ میں اسرائیل کے فضائی حملوں کی شدید مذمت کرتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ عالمی برادری فلسطین میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کو ختم کرائے ۔ ترجمان دفتر خارجہ زاہد حفیظ چوہدری نے کہاکہ اسرائیل کے فضائی حملوں کے نتیجے میں بچوں سمیت متعدد بے گناہ فلسطینی جاں بحق اور زخمی ہوئے ۔ترجمان دفتر خارجہ نے کہاکہ رمضان کے مقدس مہینے میں مسجد اقصی پر حملے قابل مذمت اقدام ہے ۔ انہوںنے کہاکہ اسرائیلی افواج کی جانب سے فلسطینیوں پر طاقت کے استعمال سے کئی اموات اور افراد زخمی ہوئے ہیں ۔...

پاکستان کی غزہ میں اسرائیل کے فضائی حملوں کی شدید مذمت