وجود

... loading ...

وجود
وجود
ashaar

طیارے زمین پر۔۔

جمعه 01 مارچ 2019 طیارے زمین پر۔۔

دوستو، منگل کی صبح عین فجر کے وقت بزدل دشمن فوج کے جہازوں نے پاکستانی سرحدوں میں داخل ہوکر اپنے ناپاک عزائم پورے کرنے کی کوشش کی، لیکن بہادر شاہین جیسے ہی جھپٹے تو پھر بھارتی جہازوں نے پلٹ کر بھی نہیں دیکھا، بلکہ جہازوں کی رفتار بڑھانے کے لیے ایک ہزار کلوگرام سے زائد بارودی مواد بھی گرادیا، تاکہ بھاگ نکلنے میں آسانی ہو۔۔ پاکستانی سوشل میڈیا صارفین نے بھارتی سرجیکل اسٹرائیک کے جھوٹے دعوے کا پول کھولتے ہوئے کہا کہ بھارتی فضائیہ حملے میں صرف درختوں کو مارنے میں کامیاب ہوئی ہے۔ سوشل میڈیا پر بھارتی فضائیہ کا مذاق اڑاتے ہوئے کہا گیا کہ 42 فوجیوں کی ہلاکت پربھارتی فضائیہ نے بالا کوٹ کے صرف 8 درخت مار گرائے۔ایک شہری نے لکھا کہ ۔۔ایک ہزار کلوگرام بارودی حملہ سے کوئی جانی و مالی نقصان نہیں ہوا لیکن صرف 300 کلوگرام بارودی مواد نے 45 بھارتی فوجی ہلاک کردیے شاید بھارتی دھماکا خیز مواد ملاوٹ شدہ ہے۔
بھارتی جہاز چار کلومیٹر اندر تک پاکستانی علاقے میں گھسے جس پر ہمارے ایک پٹواری دوست نے طنزیہ کہا کہ۔۔ اب بات چار حلقوں سے بڑھ کر چارکلومیٹر پر آپہنچی ہے۔۔ دلچسپ بات تو یہ ہے کہ بھارتی میڈیا جس طرح پراپیگنڈا کررہا ہے ،اس پر ہنسنے کے سوا کوئی چارہ نہیں، ویسے بھی بھارتی چینلز پر کامیڈی کے پروگرامز کم ہی ہوتے ہیں، ایک کپل شرما بے چارہ کچھ نہ کچھ کرتا رہتا ہے،وہ بھی ہمارے لیجنڈ فنکاروں کی ناکام نقالی کرتا ہے۔۔بھارتی میڈیا پاکستان پرحملے کو بڑھاچڑھا کر پیش کرتے ہوئے دعویٰ کررہے ہیں کہ ساڑھے تین سو دہشت گردوں کو بھی مارڈالا۔۔بارہ بھارتی جہازوں کے پائلٹس شاید بم گرانے کے بعد اندھیرے میں نیچے اُترے، مرنے والوں کی نعشیں گنتی کیں،پھر جہاز میں بیٹھے اور ’’پُھرررررر‘‘ سے اڑ گئے۔۔یقین کریں بھارتی چینلز پر چلنے والی خبریں دیکھ کر ایسا لگ رہا تھا جیسے یہ حملہ نہیں بلکہ کسی بالی وڈ مووی کا کوئی اسکرپٹ ہو۔۔ایک پاکستانی شہری نے بھارتی فون کا مذاق اڑاتے ہوئے کہا کہ ۔۔بھارتی جہازوں نے بالاکوٹ میں درختوں پر پہلے بارود گرایا اور ہارے ہوئے لوگوں کی طرح بھاگ گئے، ہم اپنے شہید ہونے والے درختوں کی ایک ایک شاخ اور ایک ایک پتے کا حساب لیں گے۔سینئر ’’ دانش وڑ‘‘ اپنا تجزیہ دیتے ہوئے کہتے ہیں کہ ۔۔جب کوئی لڑائی کے وقت ڈر کر بھاگ رہا ہو تو سب سے پہلے اپنی جوتیاں اْتار کر پھینکتا ہے۔ بھارتی طیاروں کو بھی اسی صورتحال کا سامنا کرنا پڑا تو اضافی سامان پھینک کر بھاگے۔
بالی وڈ اسٹار عامر خان کی ایک سپرہٹ مووی کانام تارے زمیں پر تھا۔۔لیکن جس طرح بھارتی طیارے گرائے گئے،اب بالی وڈ کو ’’ طیارے زمین پر‘‘ بھی لازمی بنانی چاہئے۔۔ کچھ عرصہ پہلے جب چند بھارتی پائلٹس روس میں تربیت کے لیے گئے تو وہاں روسی انسٹرکٹر نے انہیں بتایا کہ۔۔یہ والا بٹن دبانے سے طیارہ اوپر جائے گا، اس بٹن کو دبانے سے دائیں جانب مڑے گا، یہ والا بٹن دباؤگے تو طیارہ بائیں جانب مڑجائے گا۔۔ اور کوئی سوال؟؟ ایک پائلٹ نے پوچھا، سر جی آپ نے طیارہ زمین پر اتارنے کا طریقہ تو بتایا نہیں۔۔جس پر روسی انسٹرکٹر مسکرا کر بولا۔۔وہ پاکستانی پائلٹس پر چھوڑ دو، وہ آپ کے طیارے پائلٹ سمیت خود ہی زمین پر اتارلیں گے۔۔ویسے سنا ہے کہ بھارتی وزیراعظم نریندرا مودی نے تمام بھارتی جنگی جہازوں پر ’’ خیرنال جا۔خیرنال آ‘‘ لکھوانے کاحکم جاری کردیا ہے۔۔یہ بھی سننے میں آیا ہے کہ بھارتی پائلٹس نے احتجاج کیا ہے کہ ہمیں کورس کے دوران ایم ایم عالم والا واقعہ تو پڑھایا ہی نہیں گیا، جس نے ایک منٹ میں پانچ بھارتی جہاز گراکر ریکارڈ بنایاتھا۔۔ ہمارے ایک دوست پوچھ رہے تھے کہ ، یار یہ بتانا کہ دہلی میں زونگ فورجی چلے گا یا نہیں، یا پھر نئی سم لینی ہوگی؟؟۔۔ ہمارے کچھ دوست بیٹھ کر پلاننگ بنارہے تھے کہ یار اگر جنگ میں ہم بچھڑ گئے تو سب نے ’’تاج محل‘‘ کے سامنے ملنا ہے۔۔ہمارے ایک دوست نے ہمیں میسیج کیا کہ ۔۔انڈیا کے دوجہاز گرانے کی خوشی میں پاکستانی حکومت نے انتیس،تیس اور اکتیس فروری کو ملک بھر میں عام تعطیل کا اعلان کیا ہے۔۔
ہمارے پیارے دوست کا کہنا ہے کہ ۔۔ بھارت کی جانب سے پاکستان کو ٹماٹر بھیجنے کی پابندی اصل میں ہماری قوم کو اندھا کرنے کی سازش ہے، اس غذائی اٹیک کے مودی سرکار کی نظر میں کافی ’’دوررس‘‘ اثرات مرتب ہوسکتے ہیں۔۔ ٹماٹر میں’’ بیٹا کیروٹین ‘‘ہوتا ہے جسے ہمارا جسم وٹامن اے میں تبدیل کرتا ہے , وہی وٹامن اے پھر ہماری جلد کو صحت مند رکھتا ہے اور ہماری آنکھوں کی بینائی کو مضبوط کرتا ہے ۔ یعنی کہ اگر بھارتی ٹماٹر پاکستان نہیں آئیں گے تو ایک تو کسی بھی قسم کی کڑاہی کا مزہ نہیں آئے گا۔۔دوسرا پاکستانی قوم کی بینائی کمزور ہوگی، پاکستانی نوجوان کی نظریں کسی کرینہ،کترینہ ،عالیہ،پریانکا اور کسی دوسرے بالی ووڈ حسینہ پر نہیں پڑے گی ،دشمن بڑا مکار نکلا جس نے ایک ٹماٹر کی پابندی سے ہمارے کئی ارادے بدل دیے۔۔مودی سرکار نے شاید یہ سوچ کر بھی اپنے معصوم ٹماٹر روک لیے کہ پاکستانی تو اس کی بھی چٹنی بنادیتے ہیں۔۔پکڑے گئے پائلٹ نے بھی یہاں کھانا کھانے سے یہ کہہ کر انکارکردیا کہ سالن میں ٹماٹر نہیں ہیں۔۔ ویسے سوچنے والی بات ہے سو روپے کا بھگوان خرید کر اس سے لاکھوں روپے مانگنے والی قوم ہمارا کیا مقابلہ کرے گی؟؟سوشل میڈیا پر ایسے ایسے بھارتی نوجوان ہمیں ’’تڑیاں‘‘ لگارہے ہیں جنہیں خود ’’گلوکوز‘‘ کی اشد ضرورت ہے۔۔
پاکستان نے جس بھارتی پائلٹ کو گرفتارکیا ہے۔۔اس کا نام ’’ابھی نندن ‘‘ ہے، جو بہت ہی گھریلو ٹائپ لگتا ہے، دیوانی، جٹھانی اور نند کا رشتہ یاد دلادیتا ہے۔۔ وہ بے چارہ دوران تفتیش مختلف بہانے گھڑتا رہا، کبھی کہتا تھا کہ اُوبر اور کریم کی رائیڈ اٹھانے پاکستان آیا تھا۔۔ کبھی بتارہا تھا کہ اسے پاکستان دھوکے سے لایا گیا،اسے موبائل فون پر میسیج ملا تھا کہ ۔۔مبارک ہو آپ کا بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام میں پچیس ہزار روپے کا انعام نکلا ہے، آکر لے جاؤ۔۔ویسے شکر ہے اللہ کا لاکھ لاکھ کہ۔۔بھارتی پائلٹ کے پاس پہلے فوجی جوان پہنچ گئے، اگر پاکستانی پولیس پہلے پہنچ جاتی تو چائے پانی لے کر اسے چھوڑ دیتی، یا پھر اس کا جعلی مقابلہ کردیتی۔۔یاپھر چرس۔ شراب کی بوتلیں بھی برآمد کر سکتی تھی۔۔۔اس وقت جنگ کا ماحول بناہواہے۔۔ ایک انڈین پائلٹ نے وائرلیس پر کہا۔۔ ہیلو سر، اس وقت میں پاکستان میں گھس چکا ہوں اس وقت میں پاکستانی فوج کو دیکھ سکتا ہوں وہ میرے بالکل قریب اور سامنے ہیں۔۔انڈین چیف نے حکم دیا۔۔شاباش،فوری حملہ کردو۔۔ انڈین پائلٹ بیچارگی سے بولا۔۔ سر، او مینو ہلن نئی دے رہے حملہ کیتھوں کراں؟؟؟
اور اب چلتے چلتے آخری بات۔۔پھر یوں ہوا کہ دونوں ممالک کے دفاعی بجٹ بڑھ گئے اور عوام بھوک افلاس سے تڑپتی رہ گئی۔۔جنگ کا نتیجہ مکمل تباہی ہوتا ہے، دشمن ہلکا نہ لے ہمیں۔۔ وفاکروگے وفا کریں گے، جفاکروگے جفاکریں گے، ہم آدمی ہیں تمہارے جیسے، جو تم کروگے وہ ہم کریں گے۔۔


متعلقہ خبریں