وجود

... loading ...

وجود
وجود
ashaar

مغفرت کی نوید

منگل 01 مئی 2018 مغفرت کی نوید

خلق کا ئنا ت کی رحمت ہر لمحہ ،ہر ساعت ،ہر گھڑی اپنے بند وں کی طرف متوجہ ہوتی ہے اور اﷲرب ذوالجلال اپنے بندوں پر انعامات واکرامات فرما تا رہتا ہے ۔اور خو د ارشا د فرما تا ہے ۔’’وان تعدوانعمۃ اﷲلاتحصوھا‘‘کہ اگر تم اﷲکی نعمتوں کو شما ر کرنا چاہو تو تم ان کا احاطہ نہیں کرسکتے،مثلاًآنکھ ،کان ،ناک اور دیگر اعضاء انسانی ان میں سے ہر ایک نعمت عظیم نعمت ہے اور دوسرے مقام پر فرمان خداوندی ہے ۔’’وماکان عطا ربک محظوراً‘‘تمہا رے رب کی نعمتیں رُکی ہوئی نہیں ہیں ،الغرض نعمتیں ،رحمتیں اور برکتیں لامحدود ہیں اور عطا ئے خداوندی لازوال ہے مگر حصول نعمت کے اوقا ت واند از مختلف ہوتے ہیں کہ کون کب اور کس اند از سے اﷲکی نعمتوں کو حاصل کرنے کی سعی کرتا ہے ۔

اسی سلسلے کی ایک کڑی شب برأت ہے کہ جس میں اﷲرب ذوالجلال کی عطا ء نعمت اس قدر وسیع ہو جا تی ہے کہ اﷲرب ذوالجلال قبیلہ بنو کلب کی بکریوں کے بالو ں کے برابر اپنے بند وں کی مغفرت فرما تا ہے ۔

شعبا ن کا مہینہ ایسا ہے جس میں نیکیوں کے دروازے کھل جا تے ہیں اور بر کا ت کا نزول ہو تا ہے ،گناہ چھوڑدیئے جاتے ہیں اور برائیاں مٹادی جاتی ہے اور تمام مخلو ق میں سے بہتر ین شخصیت نبی کریم ﷺکی با رگاہ بے کس پناہ میں کثرت سے ہدیہ درود وسلام بھیجا جا تا ہے۔

حضرت انس رضی اﷲتعالیٰ عنہ فرماتے ہیںکہ رسول کریم ﷺنے فرمایا شعبان کو ا س لیے شعبان کہتے ہیں کہ اس میں رمضان المبا رک کے لیے بہت زیا دہ نیکیاں پھو ٹتی ہیں ۔حضرت عائشہ رضی اﷲتعالیٰ عنہا فرما تی ہیں کہ آپ علیہ السلام کو تمام مہینو ں میں سے شعبان زیا دہ پسند تھا ۔آپ علیہ السلام سے بہترین روزوں کے با رے میں پو چھا گیا تو آپ نے فرمایا رمضان کی تعظیم کے لیے شعبان کے روزے رکھنا ۔یہی وجہ ہے کہ آپ علیہ السلام شعبان کے مہینے میں دوسرے مہینوں کی نسبت زیادہ روزے رکھتے تھے ۔شب برأت کی فضیلت کے بارے میں قرآن میں ارشاد ہے ۔ترجمہ ’’ہم نے (قرآن)کوبرکت والی رات اُتارا‘‘(سورہ الدخان )

اﷲتعالیٰ نے اس رات کو مبارک فرمایا ،کیونکہ اہل زمین کے لیے اس رات میں رحمت ،برکت ،خیر گناہوں سے معافی اور نزول مغفرت ہے ۔اس بات کے ثبوت کے لیے یہ حدیث کا فی ہے ۔حضرت عائشہ رضی اﷲعنہا نے فرمایا کہ ایک رات میں نے نبی کریم ﷺکو بستر پر نہیں پایا میں (آپ کی تلا ش میں )گھر سے نکلی ،میں نے دیکھا آپ بقیع (کے قبروستان )میں موجو د ہیں اور آپ کا سر آسمان کی طرف اٹھا ہو اہے ۔حضور کریم ﷺنے مجھے دیکھ کر فرمایا کیا اس با ت کا اندیشہ ہے کہ اﷲاور اس کا رسول تمہا ری حق تلفی کریں گے !میں نے عرض کیا میں یہ سمجھی کہ آپ کسی اور بی بی کے یہاں تشریف لے گئے ہیں ۔حضور نبی کریم ﷺنے فرمایا ،نصف شعبان کی رات میں اﷲتعالیٰ دنیا کے آسمان پرجلوہ فرماتا ہے اور بنو کلب کی بکریوں کے شمار سے زیا دہ لوگوں کی بخشش فرماتا ہے ۔حضور علیہ السلام نے فرمایا کہ جب شعبان کی پند رہویں رات ہو تو رات کو جا گواور اس کے دن کا روزہ رکھو۔جب سورج غروب ہوتا ہے اس وقت سے اﷲتعالیٰ اپنی شان کے مطا بق آسمان دنیا پرنزول فرماتا ہے اور اعلان کرتا ہے کہ کوئی مغفرت طلب کرنے والا ،تاکہ میں اس کو رزق دوں،ہے کوئی مصیبت زدہ تاکہ میں اس کو اس سے نجا ت دویہ اعلان فجر تک جا ری رہتا ہے ،حضور ﷺ نے مجھ سے فرمایا کہ کیا تم جا نتی ہو کہ اس رات (پند رہویں شب )میں کیا ہو تا ہے ۔؟آپ علیہ السلام نے فرمایا اس رات اس سال کے اولاد آدم سے ہر پیداہونے والے کانام لکھ لیا جا تا ہے اور اس سال ہر مرنے والے کا نام لکھ دیا جا تا ہے اوراس سال ان کا رزق نازل کیا جا تا ہے ۔میں نے عرض کیا یا رسول اﷲ،کیا کوئی شخص بھی اﷲسبحانہ تعالیٰ کی رحمت کے بغیر جنت میں داخل نہیں ہو گا ،آپ نے فرمایا کوئی بھی اﷲکی رحمت کے بغیر جنت میں داخل نہیں ہوگامیں نے عرض کیا یا رسول اﷲآپ بھی نہیں ؟آپ نے اپنا ہا تھ سر پر رکھ کر تین مرتبہ فرمایا میں بھی نہیں الایہ کہ اﷲتعالیٰ مجھے اپنی رحمت کے ساتھ ڈھانپ لے ۔متعدد احادیث میں یہ بشارت ہے کہ اﷲتعالیٰ نصف شعبان کی شب مسلمانوں کے گناہوں کو معاف فرمادیتا ہے ،اب مسلمانوں کو چاہئے کہ اس رات کو موقع غنیمت سمجھ کر اپنی مغفرت کروالیں کیونکہ حضرت ابو ہریرہ رضی اﷲتعالیٰ عنہ نے بیان فرمایا کہ حضور علیہ السلام نے ارشاد فرمایا بے شک ایک بندہ گناہ کرتا ہے پھر کہتا ہے اے میرے رب میں نے گناہ کرلیا تومجھے بخش دے ۔تواس کا رب فرماتا ہے کیا میرے بندہ کومعلوم ہے کہ اس کا رب ہے جو اسکے گناہ معاف بھی کرتاہے اور گرفت بھی کرتاہے ،میں نے اپنے بندے کومعاف کردیا ۔

حضرت عباس رضی اﷲتعالیٰ عنہ فرماتے ہیں کہ جس نے توبہ کرنے کو لا زم کرلیا اﷲتعالیٰ اس کے لیے ہر تنگی سے ایک راستہ نکا ل دیتا ہے اور ہر غم سے ایک خوشی نکال دیتا ہے اور اس کو وہا ں سے رزق دیتا ہے جہا ں سے ا س کا گمان بھی نہیں ہوتا ۔

برأت کے معنی ہے نجات ،شب برأت کامعنی ہے گناہوں سے نجا ت کی رات اور گناہوں کی نجا ت توبہ سے ہو تی ہے ،تو اس رات میں اﷲتعالیٰ سے زیادہ سے زیادہ توبہ واستغفار کرنا چاہئے ۔مسلمانوں کو چاہئے کہ اس رات میں اپنے گناہوں پر بھی توبہ کریں ،اور اپنے والدین کے لیے بھی استغفار کریں ۔

حضرت ابو ہریرہ رضی اﷲتعالیٰ عنہ بیان کرتے ہیں کہ رسول اﷲﷺنے ارشاد فرمایا کہ اﷲتعالیٰ ارشاد فرماتا ہے کہ ایک نیک بندے کاجنت میں ایک درجہ بڑھادیاجائے گا وہ کہے گا یہ کس کی وجہ سے ملا ۔اﷲتعالیٰ ارشاد فرمائے گا تیرے بیٹے کی وجہ سے کیونکہ اس نے تیرے لیے استغفار کیاہے۔حضور علیہ السلام نے فرمایا قبر میں مردہ اس طرح ہو تا ہے جس طرح دریا میں ڈوبنے والا اپنے بچاؤ کے لیے فریا د کررہا ہووہ مردہ قبر میں باپ ماں بھا ئی یا دوست کی دعا کا انتظا ر کررہا ہو تا ہے کہ کوئی اس کے لیے مغفرت کی دعا کرے ،پھر جب اسے کسی کی دعا پہنچ جا تی ہے تو اس کو وہ دعا دنیا اور مافیھا سے زیا دہ محبوب ہو تی ہے اور بے شک اﷲتعالیٰ زمین والوں کی دعاؤں سے قبر والوں پر پہا ڑوں کی مثل (ہدیہ )داخل فرماتا ہے اور مردوں کے لیے زندوں کاہدیہ ان کے لیے مغفرت کی دعا کرنا ہے ۔ایک عارف نے کہا !میری دعا قبو ل ہوجائے پھر بھی میں اﷲتعالیٰ کا شکر ادا کرتا ہو ں اور اگر میری دعا قبول نہ ہو پھر بھی اﷲکا شکر اداکرتا ہوں ،کسی نے کہا آپ کی دعا قبو ل ہوپھر تو اﷲتعالیٰ کا شکر ادا کرنے کی وجہ سمجھ آتی ہے مگر دعا قبول نہ ہونے پر شکر کس بات پر؟عارف نے کہا کہ ہر چند کہ میری دعا قبول نہیں ہوئی لیکن اﷲتعالیٰ کامجھ پر یہ کرم کم تو نہیں ہے کہ اس نے مجھے اپنے درکا منگتا بنا یا ہو ا ہے ۔

اس رات جن کی بخشش نہیں ہوتی
مسلمانوں پرلازم ہے کہ ان گنا ہو ں سے اجتناب کریں جن کی وجہ سے اس رات بھی بندہ کی مغفرت نہیں ہو تی حالا نکہ اس رات اﷲتعالیٰ کی عطا ومغفرت بہت عام ہوتی ہے اور غروب آفتاب سے لے کر طلو ع فجر تک اس کی رحمت کی برسات ہو تی رہتی ہے ۔ان گناہوں میں شرک ہے ۔٭قتل ناحق ہے ،٭زنا ہے ،٭ایک مسلمان کا دوسرے مسلمان سے کینہ اوربغض رکھنا ،ان گناہوں میں بڑا گناہ ٭والدین کی نافرمانی ہے، یعنی والدین کے نافرمان کی مغفرت اس رات نہیں۔ ٭شرابی ٭چغل خوری کرنے والا ،٭غیبت کرنے والا ،٭قطع رحمی کرنے والے کی بھی اس رات مغفرت نہیں ہوگی ۔ہاں ایک صورت ہے کہ یہ تمام لوگ اپنے گناہوں سے سچی توبہ کریں اور صلح رحمی کرلیں ۔تو اﷲکی رحمت وسیع ہے ۔

اس رات کے معمولات
اس رات میں عمو ما ًصلوۃ والتسبیح پڑھی جا تی ہے ،اس کے علاوہ کثرت سے نو افل پڑھنے چاہئیں ،قرآن کی تلاوت کے ساتھ ساتھ ذکرواذکا ر کی کثرت کرنی چاہئے ،خصوصا ًاستغفار کی کثرت کرنا چاہئے ۔صلوٰۃ الخیر اداکرنی چاہئے ،جس کا طریقہ یہ ہے کہ ایک سورکعت نوافل اس طرح پڑھے کہ ہر رکعت میں سورہ الفاتحہ کے بعد 10مرتبہ سورہ اخلا ص پڑھے اس کے اجروثواب بے شما ر ہے۔ ہرچند کہ شب برأت میں نفلی عبا دات کی فضیلت ہے تاہم جن لوگوں کی کچھ فرض نمازیں چھوٹی ہوئی ہوں وہ ان مقدس راتوں میں اپنی قضا ء نمازوں کو پڑھیں اسی طرح نفلی روزوں کے بجائے جو فرض روزے چھوٹ گئے ہوں ان روزوں کی قضا ء کریں ۔

اس شب میںآتش بازی
پٹاخے ، وغیرہ لہو ولعب میں مشغول ہونااور بچوں کو اس قسم کی واہیات اشیاء خرید کر دیناشرعاً و اخلاقاً قطعاًمنع ہیں۔آتش بازی میں روپیہ ضائع ہو تا ہے ،اور وقت بھی خراب ہوتا ہے۔ اس رات کو آتش بازی جیسے فضو ل و لغوکا م میں گزار دینا ہی بد نصیبی ہے۔ اس لہوولعب میں لوگ زخمی بھی ہوتے ہیں جان سے بھی چلے جاتے ہیں ،خود بھی پریشان ہوتے اور دوسروں کو بھی پریشان کرتے ہیں، نہ خودعبادت کرتے ہیں اور نہ دوسروں کوکرنے دیتے ہیں۔یہ کارِ شیطان ہے جس سے بچنا ازحد ضروری ہے ۔کیونکہ اﷲتعالیٰ اس شب میں انعام و اکرام کی بارش فرماتا ہے، مغفرت و رحمت کے ابواب کھو لتاہے ۔جودو عطأ کے خوان اتارتاہے اور ہم اس مبارک اور مقدس شب میں لہوولعب میں مشغول ہو کر اس کی روحانی برکات سے محروم رہتے ہیں ۔اس لیے ہمیں چاہئے کہ اس شب مغفرت کا استقبال اطاعت وعبادت ،استغفار و اذکار میں مشغول ہوکر کریں۔


متعلقہ خبریں


دنیا بھر میں کورونا سے ہلاکتوں کی تعداد 59 ہزار سے تجاوز وجود - هفته 04 اپریل 2020

دنیا بھر میں کورونا وائرس کے باعث ہلاکتوں کی تعداد 59 ہزار 172 ہوگئی، 10 لاکھ 98 ہزار 762افراد عالمی وبا کا شکار ہوگئے ، چین میں کورونا سے ہلاک افراد کی یاد میں ایک دن کا سوگ منایا گیا ۔اٹلی میں کورونا سے مرنے والوں کی تعداد 14 ہزار 681 ہوگئی۔ ایک لاکھ 19 ہزار 827افراد عالمی وبا کی لپیٹ میں ہیں۔ سپین میں کورونا سے 11 ہزار 198 افراد موت کے منہ میں چلے گئے ۔ فرانس میں اب تک 6 ہزار 507 افراد کورونا سے ہلاک ہوچکے ہیں۔برطانیہ میں 3 ہزار 605 افراد جان سے گئے ۔ جرمنی میں 1275، چین م...

دنیا بھر میں کورونا سے ہلاکتوں کی تعداد 59 ہزار سے تجاوز

کورونا کے بعد آنے والی وبائیں زیادہ ہلاکت خیز ہوسکتی ہیں،بل گیٹس وجود - هفته 04 اپریل 2020

مائیکرو سافٹ کے بانی بل گیٹس نے خبردار کیا ہے کہ کورونا کے بعد آنے والی وبائیں کہیں زیادہ ہلاکت خیز ہوسکتی ہے ۔ انہوں بیان میں نے کہا کہ کورونا قدرتی وبا ہے اور خوش قسمتی سے اموات کی شرح بھی کم ہے ۔ ا نہوں نے کہا کہ اگلی وبائیں قدرت کے ساتھ حیاتیاتی دہشت گردی سے بھی آسکتی ہیں۔خیال رہے کہ بل گیٹس نے 2015 میں بھی ایک عالمی وبا کے متعلق پیش گوئی کرتے ہوئے کہا تھا دنیا اگلی وبا کیلئے تیار نہیں۔بل گیٹس نے پانچ سال قبل کہا تھا کہ وبا پوری دنیا پھیل سکتی ہے کیوں کہ تمام ممالک آپس می...

کورونا کے بعد آنے والی وبائیں زیادہ ہلاکت خیز ہوسکتی ہیں،بل گیٹس

اسیران کے معاملے کو انسانی بنیادوں پر ڈیل کرنا چاہتے ہیں ،حماس وجود - هفته 04 اپریل 2020

اسلامی تحریک مزاحمت (حماس)کے ترجمان فوزی برھوم نے کہا ہے کہ غزہ کی پٹی میں جماعت کے سیاسی شعبے کے سربراہ یحییٰ السنوار نے اسرائیل کے ساتھ قیدیوں کے تبادلے کی ڈیل کے لیے جو فارمولہ پیش کیا ہے اس سے یہ ثابت ہوتا ہے کہ حماس اسرائیل کے ساتھ قیدیوں کے تبادلے کی ڈیل کے لیے سنجیدہ ہے ۔انہوں نے ایک بیان میں کہا کہ حماس اسیران کے معاملے کو انسانی بنیادوں پر ڈیل کرنا چاہتی ہے ۔ یحییٰ السنوار کا فارمولہ اس کا سب سے بڑا ثبوت ہے ۔خیال رہے کہ گذشتہ روز غزہ میں حماس کے سیاسی شعبے کے صدر یحی...

اسیران کے معاملے کو انسانی بنیادوں پر ڈیل کرنا چاہتے ہیں ،حماس

مقبوضہ کشمیر میں آبادی کا تناسب بدلنے کی بھارتی سازش، پاکستان کی شدید مذمت وجود - جمعرات 02 اپریل 2020

ترجمان دفتر خاجہ عائشہ فاروقی نے کہا ہے کہ پاکستان مقبوضہ جموں وکشمیر میں آبادی کا تناسب تبدیل کرنے کی بھارتی حکومت کی تازہ ترین غیرقانونی کوششوں کی شدید مذمت کرتے ہوئے انہیں مسترد کرتا ہے ۔ جموں وکشمیر تشکیل نو آرڈر2020ایک اور غیرقانونی بھارتی اقدام ہے جس کا مقصد بھارت کے زیرقبضہ جموں وکشمیر کے ڈومیسائل قوانین کو تبدیل کرنا ہے ۔ یہ بین الاقوامی قانون اور چوتھے جینیوا کنونشن کی صریحا خلاف ورزی ہے ۔ انہوںنے جاری بیان میں کہا کہ تازہ ترین بھارتی قدام بھی 5 اگست 2019کے بھارت کے ...

مقبوضہ کشمیر میں آبادی کا تناسب بدلنے کی بھارتی سازش، پاکستان کی شدید مذمت

کورونا وائرس کے تیزی سے پھیلا ئوپر تشویش ہے ، ڈبلیوایچ او وجود - جمعرات 02 اپریل 2020

صحت سے متعلق اقوام متحدہ کے عالمی ادارے ڈبلیو ایچ او کے ڈائریکٹر جنرل تیدروس ادھانوم نے کورونا وائرس کے تیزی سے پھیلا ئو پر تشویش کا اظہار کیا اور کہا کہ کورونا سے نمٹنے کیلئے سب کو ملکر کوشش کرنا ہوگی۔ڈبلیو ایچ او کے ڈی جی تیدروس ادھا نوم نے جنیوا میں پریس بریفنگ کے دوران کہاکہ پچھلے ہفتے کورونا کے پھیلا میں تیزی دیکھی گئی جو ایک تشویشناک صورتحال ہے ۔اس مہلک وبا کو فوری طور پر سب کو مل کر روکنے کی ضرورت ہے بصورت دیگر بڑا جانی نقصان ہوگا۔ انہوں نے کہاکہ مہلک وبا کے باعث ایک ہ...

کورونا وائرس کے تیزی سے پھیلا ئوپر تشویش ہے ، ڈبلیوایچ او

کورونا وائرس، چین سے امدادی سامان لے کر طیارہ پاکستان پہنچ گیا وجود - جمعرات 02 اپریل 2020

کا خصوصی طیارہ چین سے امدادی سامان لے کر پاکستان پہنچ گیا۔پی آئی اے کی پرواز پی کے 8552 چین سے کورونا وائرس سے متعلق امدادی سامان لے کر اسلام آباد پہنچا۔ جہاز میں 20 کنٹینرز پر مشتمل امدادی سامان لایا گیا جس میں ٹیسٹنگ کٹس، گلوز اور ماسک شامل ہیں۔ترجمان پی آئی اے کے مطابق کسٹمز کلیئرنس کے بعد سامان نیشنل ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی(این ڈی ایم اے )حکام کے حوالے کر دیا گیا۔واضح رہے کہ پی آئی اے کا خصوصی طیارہ گذشتہ روز امدادی سامان لینے چین گیا تھا۔

کورونا وائرس، چین سے امدادی سامان لے کر طیارہ پاکستان پہنچ گیا

مقبوضہ جموں و کشمیر،سابق وزرا ئے اعلیٰ کی مراعات ختم وجود - بدھ 01 اپریل 2020

مقبوضہ جموں و کشمیر کے سابق وزرا اعلی کو حاصل خصوصی مراعات والے قانون کو مرکزی حکومت نے جموں و کشمیر تنظیم نو قانون 2019 کے تحت اختیارات کے ذریعے منسوخ کر دیا ہے ۔ بھارتی میڈیا کے مطابق مرکزی حکومت نے سٹیٹ لیجسلیٹر ممبرز پنشن ایکٹ 1984 کے سیکشن 3 کو منسوخ کر دیا ہے جس سے اب سابق وزرا اعلی کو ملنے والی مراعات حاصل نہیں ہوں گی۔اس سیکشن کے تحت سابق وزرا اعلی کو بغیر کرایہ سرکاری رہائش گاہ، مفت ٹیلیفون سروس، مفت بجلی، گاڑی، پٹرول اور طبی سہولیات ملتی تھیں۔ اس کے علاوہ ان کو سرکار...

مقبوضہ جموں و کشمیر،سابق وزرا ئے اعلیٰ کی مراعات ختم

طیارہ بردار امریکی بحری بیڑے پر کورونا کی وبا تیزی سے پھیلنے لگی وجود - بدھ 01 اپریل 2020

طیارہ بردار امریکی بحری بیڑے پر کورونا کی وبا تیزی سے پھیلنے لگی ،کورونا وائرس نے جہاں دنیا کے جدید ترین ممالک کو گھٹنے ٹیکنے پر مجبور کر دیا ہے وہیں سپرپاور امریکا کی فوج بھی اس وائرس کے سامنے بے بس نظر آتی ہے ۔کورونا وائرس کے باعث اب تک دنیا میں سب سے زیادہ ایک لاکھ 86 ہزار سے زائد کیسز امریکا سے سامنے آ چکے ہیں جب کہ امریکا میں اموات بھی چین اور اسپین سے زیادہ ہو گئی ہیں جہاں اب تک 4 ہزار سے زائد لوگ زندگی کی بازی ہار چکے ہیں۔امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ملک میں وبا سے دو لاکھ...

طیارہ بردار امریکی بحری بیڑے پر کورونا کی وبا تیزی سے پھیلنے لگی

امریکا میں کورونا سے دو پاکستانی جاں بحق وجود - بدھ 01 اپریل 2020

امریکی ریاست نیویارک میں کورونا وائرس میں مبتلا دو پاکستانی جان کی بازی ہار گئے ۔ یک میڈیا رپورٹ کے مطابق انتقال ہونے والے سید عطاالرحمان کورونا وائرس سے متاثر ہو گئے تھے جن کا تعلق کراچی سے تھا۔ان کے علاوہ کورونا سے جنگ لڑتے ہوئے پاکستانی امریکن روحیل خان بھی نیویارک میں دم توڑ گئے ۔ ریاست ٹیکساس میں بھی ایک پاکستانی ڈاکٹر اور تعمیراتی شعبے سے تعلق رکھنے والے شخص میں بھی کورونا کی علامات پائی گئی ہیں اور دونوں کا تعلق بھی کراچی سے ہے ۔واضح رہے کہ امریکی ریاست نیو یارک کورونا...

امریکا میں کورونا سے دو پاکستانی جاں بحق

کورونا وائرس سے دنیا بھر میں طبی آلات کی قلت ،طبی عملہ بھی کم پڑ گیا وجود - بدھ 01 اپریل 2020

کورونا وائرس کی وجہ سے دنیا بھر میں جہاں طبی آلات کی قلت پیدا ہوگئی ہے ، وہیں طبی عملہ بھی کم پڑ گیا ہے جب کہ ہسپتالوں سمیت کئی دیگر جگہوں کو عارضی آئسولیشن سینٹرز اور قرنطینہ میں تبدیل کردیا گیا ہے لیکن اس باوجود کئی ممالک میں کورونا تیزی سے پھیل رہا ہے ۔عام ہسپتالوں میں قرنطینہ سینٹرز بنانے اور وہاں پر دیگر مریضوں کے علاوہ زیادہ تر کورونا وائرس کے مریضوں کا علاج کرنے سمیت دنیا بھر میں دیگر بیماریوں میں مبتلا مریض پریشانیوں کا شکار ہیں، یہاں تک کہ امریکا اور برطانیہ جیسے مما...

کورونا وائرس سے دنیا بھر میں طبی آلات کی قلت ،طبی عملہ بھی کم پڑ گیا

کورونا وائرس 202 ممالک تک پھیل گیا ،ہلاکتیں 42 ہزار سے تجاوز وجود - بدھ 01 اپریل 2020

کورونا وائرس نے 202ممالک میں پنجے گاڑ لئے ، دنیا بھر میں مرنے والوں کی تعداد 42 ہزار 156 ہو گئی ۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق کورونا وائرس کی مہلک وبا نے 202ممالک کو اپنی لپیٹ میں لے لیا ، اٹلی میں صورتحال سب سے خوفناک ہے جہاں 12448 افراد ہلاک اور 1 لاکھ 5 ہزار 7 سو92 افراد کورونا سے متاثر ہو چکے ہیں۔اسپین میں کورونا سے 8 ہزار چار سو چونسٹھ افراد ہلاک ہو گئے ۔ چین میں کرونا سے مرنے والوں کی تعداد 3 ہزار تین سو پانچ ہے ۔ جرمنی میں کورونا سے سات سو پچھتر افراد ہلاک، فرانس میں...

کورونا وائرس 202 ممالک تک پھیل گیا ،ہلاکتیں 42 ہزار سے تجاوز

اقوام متحدہ نے کورونا وائرس جنگ عظیم دوئم کے بعد بدترین بحران قرار دیدیا وجود - بدھ 01 اپریل 2020

اقوام متحدہ نے کورونا وائرس کو جنگ عظیم دوئم کے بعد بدترین بحران قرار دے دیا۔ترجمان اقوام متحدہ نے کہا کہ کورونا وائرس سے دنیا کے ہر ملک کو عدم استحکام، بدامنی اور تنازعات کھڑے ہونے کا خطرہ ہے ۔انہوں نے بتایا کہ کورونا کے ثرات سے دنیا میں ڈھائی کروڑ افراد بیروزگار ہو جائیں گے ۔ا نہوں نے کہا کہ ترقی پذیر ممالک غریب ملکوں کی مدد کریں ورنہ وبا جنگل کی آگ کی طرح پھیلنے کا خدشہ ہے۔

اقوام متحدہ نے کورونا وائرس جنگ عظیم دوئم کے بعد بدترین بحران قرار دیدیا