وجود

... loading ...

وجود
وجود
ashaar

پرتھوی میزائل کا ایک اورتجربہ ‘بھارت دنیا کو ایٹمی تباہ کاری میں جھونکے میں کوشاں

جمعه 23 جون 2017 پرتھوی میزائل کا ایک اورتجربہ ‘بھارت دنیا کو ایٹمی تباہ کاری میں جھونکے میں کوشاں


بھارت نے گزشتہ روز ایک اور پرتھوی میزائل کا تجربہ کرکے یہ ثابت کردیاہے کہ بھارتی حکمراں اس خطے کو اسلحہ کی دوڑ کامرکز بنانے کا تہیہ کئے ہوئے ہیں اور بھارتی حکمراں ہر حال میں اس خطے میں اپنی بالادستی قائم کرنے کے خواہاں ہیں۔
بھارتی فوجی ماہرین اور خود بھارتی فوج کے سربراہ جنرل راونت اس بات کا برملا اظہار کرچکے ہیں کہ بھارت کی فوجی حکمت عملی پاکستان پر تیزی سے حملہ کرکے اس کو ختم کرنا ہے اور اس مقصد کیلئے اس نے ایٹمی ہتھیار تیار کرلئے ہیں جبکہ ان کی جنگی تیاری کا سلسلہ جاری ہے ۔یہاں یہ بتانے کی ضرورت نہیں کہ بھارت نے اپنی ایٹمی طاقت کامظاہرہ 1974 میں پوکھران کے مقام پر ایٹمی دھماکہ کرکے کیاتھا اور اس کے ساتھ یہ بات بھی واضح ہوگئی تھی کہ امریکا اور دیگر مغربی ممالک بھارت کی ان جنگی تیاریوں میں نہ صرف یہ کہ اس کے ساتھ ہیں بلکہ اس کیلئے بھارت کو وسائل بھی فراہم کررہے ہیں۔ اس کے برعکس پاکستان نے جب مئی 1998 میں ایٹمی دھماکہ کیا تو امریکا نے پاکستان کے ساتھ اپنے دیرینہ تعلقات اور امریکا کیلئے پاکستان کی خدمات کو یکسر نظر انداز کرتے ہوئے نہ صرف یہ کہ پاکستان کی ہر طرح کی امداد بند کردی بلکہ دیگر مغربی ممالک کو بھی ایسا کرنے پر مجبور کیا۔
بھارت کی تمام تر جنگی تیاریوں اور دھمکیوںکے باوجود پاکستان نے بحر ہند کو ایٹمی تابکاری سے پاک علاقے کے طورپر برقرار رکھنے کی ہر ممکن کوشش کی لیکن بھارت نے پاکستان کی ان کوششوں کی پروا نہ کرتے ہوئے بحر ہند کو بھی ایٹمی اسلحہ کی دوڑ میں شامل کرنے کیلئے مسلسل اقدامات کئے جس کا اندازہ بھارت کی جانب سے روس کی امداد سے بحر ہند میں ایٹمی آبدوز کی تعیناتی اور ایٹمی اسلحہ کے استعمال کیلئے پلیٹ فارم کی تیاری کے حوالے سے کوششوں سے لگایاجاسکتاہے۔
عام طورپر یہ خیال کیاجارہاتھا کہ پاکستان کی جانب سے اپنی ایٹمی ہتھیاروں کی تفصیلات ظاہر کئے جانے کے بعد بھارت علاقے میں ایٹمی اسلحہ کی دوڑ سے الگ ہوجائے گا اور اس خطے کو ایٹم سے پاک بنانے کے حوالے سے پاکستان کی کوششوں میں اس کاساتھ دے گا لیکن اس کے برعکس بھارتی حکمرانوں نے پاکستان ہی نہیں بلکہ اس پورے خطے پر فوجی برتری اور بالادستی حاصل کرنے کیلئے فوجی مہم جوئی کا سلسلہ جاری رکھا ہواہے اورفضا سے فضا میں مار کرنے کے علاوہ زمین سے فضا میں اور زمین سے سمندر میں مار کرنے والے میزائلوں کی تیار ی کا سلسلہ شروع کردیا ہے، پرتھوی سلسلے کے تازہ ترین میزائل کا تجربہ بھارت کی ان ہی کوششوں کاثبوت ہے۔
اس حوالے سے اہم اور خطرناک بات یہ ہے کہ بھارت کی تمام تر فوجی تیاریوں اور حکمت عملیوں جس میں کولڈ ڈاکٹرائن اور جرمنی کی فوجی حکمت عملی کی طرز پر تیزی سے فوجی کارروائی کرکے مخالف کو جوابی حملے کے قابل نہ رہنے دینے کی حکمت عملی کا محور پاکستان ہے۔ان تمام تر تیاریوں کے باوجود ستم ظریفی یہ ہے کہ بھارت خود ہی پاکستان کی جانب سے جوابی دفاعی تیاریوںپر شور مچاتاہے اور اسے خطے میں امن کے خلاف قرار دینے کی کوششوں کے علاوہ پوری دنیا کو یہ باور کرانے کی بھی کوشش کرتارہاہے کہ پاکستان کے ایٹمی اسلحے دہشت گردوں کے ہاتھ لگ سکتے ہیں جس سے پوری دنیا شدید تباہی سے دوچار ہوسکتی ہے لیکن اس کے ساتھ ہی بھارت خود پراہار اور سوریہ قسم کے ایٹمی میزائلوں کی تیاری کے بارے میں کوئی وضاحت دینے کو تیار نظر نہیں آتا۔اس کے ساتھ ہی بھارت تیزی کے ساتھ بحر ہند میں بھی ایٹمی اسلحہ کا انبار جمع کرنے کیلئے کوشاں ہے اور اس کی ان کوششوں میں امریکا اس کی ہمنوائی اور سرپرستی کررہاہے کیونکہ امریکی فوجی قیادت کاخیال ہے کہ بحر ہند کے علاوہ جنوبی چین کے بحری علاقے اور اردگرد کے علاقوں میں چین کے بڑھتے ہوئے اثر ورسوخ کو روکنے اورا س کامقابلہ کرنے کیلئے بحر ہند میں متوازی بحری قوت کا وجود ضروری ہے۔امریکی فوجی قیادت کی اس حکمت عملی کی بنیادپر امریکا بھارت کو علاقے میں ایٹمی طاقت بڑھانے کا خواب پورا کرنے میں پوری مدد فراہم کررہاہے اور اس کے ساتھ ہی اسے نیوکلیئر سپلائیر گروپ کی رکنیت دینے کی بھی بھرپور کوشش کررہاہے ۔
بھارت کی بحری حکمت عملی کے حوالے سے 2015 میں سامنے آنے والے ڈاکومنٹس سے بھارت کی ایٹمی طاقت بننے کی خواہشات پوری طرح آشکارا ہوچکی ہیں اور یہ ظاہرہوچکاہے کہ بحر ہند میں ایٹمی آبدوزوں کی تعداد میں اضافے کے ساتھ ہی بھارت ایٹمی اور دوسری روایتی اسلحہ سے لیس فضا سے فضا اور سمندر اور زمین سے فضا اور سمندر میں مار کرنے والے ایٹمی اسلحہ کی تیاری اور اس کے استعمال کیلئے پلیٹ فارم کی تیاریوںمیں مصروف ہے جن میں آئی این ایس چکرا اور اکولہ کلاس کی روس سے لیز پر حاصل کی گئی آبدوز شامل ہے۔اس کے علاوہ بھارت 1999 سے جدید ترین ٹیکنالوجی سے لیس بحری جنگی جہاز تیار کرنے کے ایک پروجیکٹ پر مسلسل کام کررہاہے یہ کام بھارتی بحریہ، بھابھا ایٹمی ریسرچ سینٹر ، دفاعی ریسرچ اور ترقی سے متعلق ادارے کی مشترکہ نگرانی میں انجام دیاجارہاہے۔اس پروجیکٹ کے تحت بھارت اپنی پہلی بیلسٹک میزائل بردار آبدوز آئی این ایس ایری ہنٹ تیار کرچکاہے ،بھارت کی تیار کردہ یہ ایٹمی آبدوز سمندر میں ڈبکیاں لگانے کے مشکل ترین ٹیسٹ اور بیلسٹک میزائل داغنے کے تجربات میں کامیابی حاصل کرچکی ہے ۔اس کے علاوہ اس پروجیکٹ کے تحت ایک اور ایٹمی آبدوز آئی این ایس اریدھمان بھی تیار کی جاچکی ہے اور ضروری ٹیسٹ کے بعد کسی بھی وقت سمندر میں اتار دی جائے گی۔مارچ 2016 میں بھارت نے ایٹمی آبدوز سے درمیانے فاصلے تک مار کرنے والے کے 4 بیلسٹک میزائل چلانے کا کامیاب تجربہ کیاتھا یہ تجربہ بھارت نے اپنی تیار کردہ ایٹمی آبدوز آئی این ایس ایری ہنٹ سے بحیرہ بنگال میں کیاتھا۔اس کے بعد کے 4 اورکے5 اس کے ایٹمی اسلحہ کے ذخیرے میں شامل کرلئے گئے تھے اور اس سے بھارت کو حملہ کرنے کی دوسری دفاعی لائن مل گئی تھی۔
بھارتی بحریہ کی کارروائی کا محور بحر ہند ، بحر عرب اور بحیرہ بنگال ہیں اور یہ تینوں سمندر آبنائے ہرمز،باب المندب اور آبنائے ملاکہ کی طرح پوری دنیا کے مختلف خطوں سے رابطوں کا محور اور ان کی گزرگاہ ہیں۔اپنی اس بحری قوت کے ذریعہ اب بھارت ان علاقوں کی ناکہ بندی کرنے اور بعض ممالک کے جہازوں کی آمدورفت روکنے کیلئے استعمال کرسکتاہے۔جہاں تک پاکستان کا تعلق ہے تو پاکستان ابتدا ہی سے بحر ہند کو ایٹمی سے پاک علاقہ دیکھنا چاہتاہے اور اس کیلئے کوشش کرتارہاہے لیکن اس کے ساتھ ہی وہ علاقے میںطاقت کاتوازن قائم رکھنے کیلئے سول نیوکلیئر طاقت حاصل کرنے اور اسے برقرار رکھنے کا بھی خواہاں ہے۔جبکہ بھارت جنوبی ایشا اور بحر ہند میں امن اور استحکام کے ماحول کو تباہ کرنے پر تلاہواہے ۔ یہ صورت حال پوری عالمی برادری کیلئے لمحہ فکریہ کی حیثیت رکھتی ہے اور امریکا سمیت پوری عالمی برادری کو وقتی فوائد حاصل کرنے یا صرف چین کے خلاف گھیرا تنگ کرنے کی حکمت عملی کے تحت اس خطے کو جنگ کامیدان بنانے سے گریز کرنے پر توجہ دینی چاہئے ۔
ابن عماد بن عزیز


متعلقہ خبریں


عراق میں امریکی بیس پر حملے میں 34 امریکی فوجیوں کو دماغی چوٹیں آئیں،پینٹاگون وجود - هفته 25 جنوری 2020

پینٹاگون کا کہنا ہے کہ عراق میں امریکی بیس پر ایرانی حملے کے بعد 34 امریکی فوجیوں کو شدید دماغی چوٹ(ٹی بی آئی)کی تشخیص کی گئی ہے ۔ ایک ترجمان کے مطابق فی الحال 17 فوجیوں کی اب بھی طبی نگہداشت کی جا رہی ہے ۔اس سے قبل امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا تھا کہ آٹھ جنوری کو ایران کی طرف سے جنرل قاسم سلیمانی کی ہلاکت کے بدلے میں کیے جانے والے حملے میں کوئی بھی امریکی زخمی نہیں ہوا۔صدر ٹرمپ کے مطابق ایران پر جوابی حملہ نہ کرنے کا فیصلہ کسی بھی فرد کے زخمی نہ ہونے کے پیشِ نظر کیا گیا۔لیک...

عراق میں امریکی بیس پر حملے میں 34 امریکی فوجیوں کو دماغی چوٹیں آئیں،پینٹاگون

ترکی میںزلزلہ، متعدد عمارتیں زمین بوس،19افراد جاں بحق ،750زخمی وجود - هفته 25 جنوری 2020

ترکی کے مختلف علاقوں میں 6.8شدت کے زلزلے سے کئی عمارتیں منہدم ہوگئیں جس کے نتیجے میں 19افراد ہلاک، 750 سے زائد زخمی جبکہ 30افراد لاپتہ ہوگئے ،ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ہے ۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق ترکی کے مختلف علاقوں میں 6.8 شدت کے زلزلے سے کئی عمارتیں منہدم ہوگئیں اور زلزلے سے متاثرہ علاقوں میں عمارتوں کے ملبے تلے افراد کو نکالنے کیلئے امدادی کارروائیاں جاری ہیں۔ ترکی کے صوبائی گورنر نے کہا کہ مشرقی صوبے الازگ میں زلزلے سے 19افراد ہلاک اور 750سے زائد زخمی ہوگئے ،مزید ...

ترکی میںزلزلہ، متعدد عمارتیں زمین بوس،19افراد جاں بحق ،750زخمی

سعودی عرب کیساتھ ملکر کام کرنا چاہتے ہیں ،ایران وجود - جمعه 24 جنوری 2020

ایران نے مشرق وسطی کو درپیش مسائل کے حل اور خطہ میں کشیدگی کے خاتمے کے لیے سعودی عرب کے ساتھ مل کر کام کرنے کی خواہش کا اظہار کیا ہے ۔ غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق تہران میں ایرانی صدر کے چیف آف اسٹاف نے اپنے بیان میں کہا کہ ایران ، سعودی عرب کے ساتھ بہتر تعلقات کا خواہشمند ہے ، انہوں نے کہا کہ سعودی عرب اور ایران کے درمیان اچھے تعلقات دونوں ممالک کے لئے فائدہ مند ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں اپنے مسائل خود حل کرنے کی کوششیں کرنی چاہئیں ۔

سعودی عرب کیساتھ ملکر کام کرنا چاہتے ہیں ،ایران

چین،کرونا وائرس سے ہلاکتیں 26ہو گئیں ، 830 متاثر وجود - جمعه 24 جنوری 2020

چین میں کرونا وائرس سے ہلاکتوں کی تعداد بڑھ کر26 ہوگئی جبکہ830 افراد متاثر بھی ہوئے ۔ غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق کوروناوائرس کے باعث سب سے زیادہ متاثر ہونے والے شہر ووہان کے قریب 7شہروں میں ٹرانسپورٹ بند کر دی گئی جب کہ شہریوں کو جھیلوں، دریائوں اور نہروں پر جانے سے روک دیا گیا ۔عالمی ادارہ صحت(ڈبلیو ایچ او)نے اسے ہنگامی صورتحال قرار دیا ہے ۔ حکام نے کہا کہ کرونا وائرس کو عالمی وبا ئوقرار دینا قبل از وقت ہوگا۔ڈبلیو ایچ او نے کہا کہ اس وائرس کے پھیلا پر کڑی نظر رکھی جارہی ...

چین،کرونا وائرس سے ہلاکتیں 26ہو گئیں ، 830 متاثر

تہران، جنرل قاسم سلیمانی کا قریبی کمانڈر قاتلانہ حملے میں قتل وجود - جمعرات 23 جنوری 2020

ایران کی پیراملٹری فوج بسیج کے کمانڈرعبدالحسین مجدمی کو نامعلوم افراد نے فائرنگ کر کے ہلاک کر دیا ۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق کمانڈرعبدالحسین مجدمی کوصوبہ خوزستان کے شہردرخوین میں گھرکے سامنے نقاب پوش افراد نے نشانہ بنایا۔ پیراملٹری فوج کے سربراہ عبدالحسین مجدمی امریکی ڈرون حملے میں ہلاک ہونے والے جنرل قاسم سلیمانی کے ساتھی تھے ۔ موٹرسائیکل پر سوار دو بندوق برداروں نے حملہ کیا، حملہ آوروں کے چہرے ڈھکے ہوئے تھے اور چار گولیاں چلائی گئی ہیں۔ معاملے کی تفتیش جاری ہے تاہم اس ...

تہران، جنرل قاسم سلیمانی کا قریبی کمانڈر قاتلانہ حملے میں قتل

چین ، کرونا وائرس بے قابو، ہلاکتیں 17ہو گئیں وجود - جمعرات 23 جنوری 2020

چین کے شہر ووہان سے پھیلنے والا پراسرار کورونا وائرس اب ملک بھر کے دیگر شہروں میں بھی پھیلنے لگا ، چین کے صوبے ہوبائی کے دارلحکومت ووہان میں کورونا وائرس سے 17 افراد ہلاک ہو گئے ہیں جبکہ وائرس سے متاثر ہونے والوں کی تعداد 547 تک پہنچ گئی ۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق چین کے صحت حکام نے وائرس کے پھیلا سے بچنے کے لئے 1 کروڑ افراد پر مشتمل شہر ووہان کو مکمل طور سیل کرنے کی کوششیں شروع کر دی ہیں۔ چین میں ٹرینوں اور بس سروسز کا نظام معطل ہونے کے باعث قمری سال کی تعطیلات گزارن...

چین ، کرونا وائرس بے قابو، ہلاکتیں 17ہو گئیں

فرانسیسی صدر چرچ کے باہر اسرائیلی اہلکاروں کو دیکھ کر برہم وجود - جمعرات 23 جنوری 2020

فرانسیسی صدر ایمانویل میکرون چرچ کے دورے کے دوران فرانسیسی اہلکاروں کے ساتھ اسرائیلی سکیورٹی اہلکاروں کو دیکھ کربرہم ہو گئے ۔ ایمانویل میکرون نے انگریزی میں ڈانٹتے ہوئے اسرائیلی سکیورٹی اہلکار سے کہا کہ باہر جائوجو تم نے میرے سامنے کیا وہ بالکل پسند نہیں آیا، سب کو رولز معلوم ہیں ناں؟ یہ قواعد صدیوں سے ہیں، میرے ساتھ فرانسیسی اہلکار ہی رہیں گے ، قانون کا احترام کریں ۔واضح رہے کہ مقبوضہ بیت المقدس کا چرچ آف سینٹ این فرانس کی ملکیت ہے ، 1967 ء میں یہاں اسرائیلی قبضے کو بھی فران...

فرانسیسی صدر چرچ کے باہر اسرائیلی اہلکاروں کو دیکھ کر برہم

امریکا ، پولیس کے نسل پرستانہ رویے کے خلاف احتجاجی مظاہرے وجود - بدھ 22 جنوری 2020

امریکا میں نسل پرستی کے خلاف جدوجہد کرنے والی مختلف تنظیموں کے سینکڑوں کارکنوں نے پورٹ لینڈ شہر میں مظاہرے کیے ۔ غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق امریکی پولیس کے نسل پرستانہ رویئے کے خلاف اس مظاہروں کی کال بلیک لائف میٹر اور نسل پرستی کے خلاف جدوجہد کرنے والی دوسری تنظیموں نے دی تھی۔ مظاہرے کے شرکا نے زمین پر لیٹ کر پولیس کے نسل پرستانہ تشدد کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے حکومت سے لازمی اقدامات کی اپیل کی۔امریکہ میں کرائے جانے والے رائے عامہ کے تازہ جائزوں کے مطابق 56 فی صد امریکی شہ...

امریکا ، پولیس کے نسل پرستانہ رویے کے خلاف احتجاجی مظاہرے

مکیش امبانی مسلسل 12 ویں بار امیر ترین بھارتی قرار وجود - بدھ 22 جنوری 2020

بھارتی بزنس مین مکیش امبانی مسلسل 12 ویں مرتبہ بھارت کے امیر ترین شخص قرار پائے ، 2019 میں ان کی دولت 58.4 ارب ڈالر رہی۔ غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق بھارت کے 15 ارب پتی شخصیات کی مجموعی دولت 197.8 ارب ڈالر کے برابر ہے ۔ سالانہ رپورٹ کے مطابق 2019 میں متعدد بھارتی ارب پتی شخصیات کی دولت میں کمی ہوئی لیکن مکیش امبانی مسلسل 12 ویں مرتبہ بھارت کے امیر ترین شخص قرار پائے ۔15عشاریہ 3ارب ڈالر کے ساتھ بھارتی صنعت کار شیونادر دوسرے نمبر پر رہے ، جبکہ بھارت کے تیسرے امیر ترین شخص بی...

مکیش امبانی مسلسل 12 ویں بار امیر ترین بھارتی قرار

امریکا کی بزدلانہ کارروائی کا مردانہ وار جواب دیں گے ، ایران وجود - بدھ 22 جنوری 2020

ایران کی قدس فورس کے نئے سربراہ اسماعیل قانی نے امریکا کو مخاطب کرتے ہوئے کہا ہے کہ جنرل قاسم سلیمانی کو بزدلانہ حملے میں شہید کرنے والے امریکا پر مردانہ وار کارروائی کرکے جواب دیں گے ۔ غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق ایران کی قدس فورس کے سربراہ اسماعیل قانی نے کہا کہ امریکا نے بزدلوں کی طرح حملہ کرکے جنرل قاسم سلیمانی کو شہید کیا ہے جس کا ہم مردوں کی طرح بہادری سے جواب دیں گے ۔قدس فورس کے سربراہ نے کہا کہ ایران امریکا کی طرح پیچھے سے بزدلانہ وار نہیں کرتا بلکہ مردوں کی طرح سا...

امریکا کی بزدلانہ کارروائی کا مردانہ وار جواب دیں گے ، ایران

کورونا وائرس امریکا پہنچ گیا، پہلے متاثرہ شخص کی تصدیق وجود - بدھ 22 جنوری 2020

کورونا وائرس امریکا پہنچ گیا ، امریکی حکام کی جانب سے پہلے متاثرہ شخص کی تصدیق کی گئی ۔ غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق امریکی حکام کی جانب سے تصدیق کی گئی ہے کہ چائنا وائرس، یعنی کورونا وائرس سے متاثرہ ایک شخص کی تصدیق ہوئی ہے جو حال ہی میں چین کے سفر سے واپس آیا تھا۔امریکا کے سینٹر فار ڈیزیز کنٹرول (سی ڈی سی)کی جانب سے کہا گیا کہ چین میں دریافت ہونے والا وائرس امریکی شہر سیاٹل میں ایک ایسے شخص میں پایا گیا جو چین کے سفر سے واپس آیا تھا۔امریکہ میں پائے جانے والا مریض 30 کی دہ...

کورونا وائرس امریکا پہنچ گیا، پہلے متاثرہ شخص کی تصدیق

ٹرمپ عنقریب صدی کی ڈیل کے حوالے سے حتمی اعلان کرنے والے ہیں، امریکی عہدیدار وجود - منگل 21 جنوری 2020

  وائٹ ہائوس کے ایک عہدیدار نے کہا ہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کچھ دن میں مشرق وسطیٰ کے لیے اپنے مجوزہ امن منصوبے صدی کی ڈیل کے بارے میں حتمی اعلان کرنے کی تیاری کررہے ہیں۔ا نہوں نے غیرملکی خبررساں ادارے کو بتایا کہ صدی کی ڈیل کے حوالے سے صدرٹرمپ خود ہی کوئی فیصلہ کریں گے ۔اس فیصلے کے حوالے سے وقت ایک اہم عنصرہوگا کیونکہ اس معاملے میں تاخیرامریکی صدارتی انتخابات کی وجہ سے اس منصوبے کے مفاد میں نہیں ہوگی۔وائٹ ہائوس نے بحرین کے دارالحکومت منامہ میں امن سے خوشحالی کے نام...

ٹرمپ عنقریب صدی کی ڈیل کے حوالے سے حتمی اعلان کرنے والے ہیں، امریکی عہدیدار