وجود

... loading ...

وجود
وجود
ashaar

چین کی اقتصادی ترقی کی کلید ڈیجیٹل معیشت میں بے پناہ اضافہ

جمعرات 22 دسمبر 2016 چین کی اقتصادی ترقی کی کلید ڈیجیٹل معیشت میں بے پناہ اضافہ

گزشتہ چند برسوں کے دوران ڈیجیٹل معیشت چین کی اقتصادی ترقی اور فروغ کی کلید ثابت ہواہے، مثال کے طورپر 2015میںجی ڈی پی میں سروس سیکٹر کا حصہ 50فیصد سے بھی تجاوز کرگیاتھا اور 2016کی پہلی ششماہی میںمعاشی ترقی میں اس کی شرح 59.7فیصد تک ریکارڈ کی گئی۔
ڈیجیٹل معیشت چین کی روایتی صنعتوں کی اپ گریڈنگ اور تبدیلی میں بھی اہم کردار ادا کررہی ہے، صنعتی روبوٹس ،3ڈی پرنٹرز، ڈرونز اور دوسرے جدید ترین مصنوعی نئے اکیوئپمنٹس کے استعمال میں اضافہ ہورہاہے، جبکہ بڑے ڈیٹا ،کلائوڈ کمپیوٹنگ اور انٹرنیٹ جیسے ذرائع کے استعمال میں روز بروز توسیع ہورہی ہے۔
ہواوے اور گرے جیسی چینی کمپنیاں عالمی صنعتی سلسلے میں اوسط کے مقام سے بڑھ کر اونچی یعنی اعلیٰ سطح پر پہنچ گئی ہیں، جبکہ 7کمپنیاں جن میں ٹینسینٹ،علی بابا اوربیدو کا شمار اب دنیا کے انٹرنیٹ کے 20سب سے بڑے اداروں میں ہونے لگاہے۔
توقع کی جاتی ہے کہ اگلے برسوں کے دوران چین میں ڈیجیٹل معیشت زیادہ تیزی سے آگے بڑھے گی اور اسے بہت تیزرفتاری کے ساتھ فروغ ملے گا۔ڈیجیٹل معیشت میںتیزی کے ساتھ فروغ پذیر ہونے کے امکانات کااندازہ اس طرح بھی لگایاجاسکتاہے کہ چین کی اپنی انفارمیشن کی ضروریات 2025تک 12ٹریلین یوآن یعنی کم وبیش 1.74ٹریلین ڈالر تک پہنچ جانے کی توقع ہے،جبکہ اس عرصے کے دوران ای کامرس کی مالیت 67ٹریلن یوآن تک پہنچ جانے کی امید ہے۔
جہاںتک روایتی صنعتوں کو ڈیجیٹل معیشت میں ڈھالنے کا تعلق ہے تو کلائوڈ کمپیوٹنگ ، بڑے ڈیٹا، اشیا اور مصنوعی انٹیلی جنس کے لیے انٹرنیٹ کے استعمال میں تیزی سے اضافہ ہوگا اور زمین اور لیبر کے بارے میںبڑے ڈیٹا کو اہم عنصر کی حیثیت حاصل ہوجائے گی۔
اسمارٹ مینوفیکچرنگ ایک نئے صنعتی انقلاب کی قیادت کررہی ہے ،اس کے نتیجے میں ڈیجی ٹلائزیشن، ورچولائزیشن اورانٹیلی جنٹ ٹیکنالوجی کسی بھی پراڈکٹ کا لائف سرکل بن جائے گی۔انٹرنیٹ کی بنیاد پر سروس پر مبنی ذاتی نوعیت کی پروڈکشن مینوفیکچرنگ کا نیاطریقہ بن جائے گا اور عالمگیریت اورسروس کی بنیاد پر مینوفیکچرنگ پلیٹ فارم کی بنیاد پر تجارت یاکاروبار صنعتی اداروں کانیا طریقہ کار بن جائے گا۔
آنے والے دنوں میں شہری اور دیہی علاقوں میں ڈیجیٹل استعمال کا موجودہ فرق بتدریج کم ہوجائے گا اور ڈیجیٹل معیشت کی ترقی کے لیے چین میںانفرااسٹرکچر کی ترقی میں مزید تیزی اور بہتری آئے گی۔ڈیجیٹل معیشت کے لیے انفرااسٹرکچر کی ترقی کے منصوبوںپر کام پہلے ہی شروع کیاجاچکاہے۔اور اب فکسڈ براڈ بینڈ 95فیصد انتظامی دیہات اور قصبوں تک پھیل چکاہے اور 100میگا بائٹس کا آپٹیکل فائبر بنیادی طورپر شہری اور دیہی دونوں علاقوں کو کور کررہاہے۔
ڈیجیٹل معیشت کے لیے بہتر انفرااسٹرکچر سے دیہی اور کم ترقی یافتہ علاقوں کے شہریوں کو اس میں شریک ہونے کے زیادہ مواقع ملیںگے۔2015کے اواخر میں 780دیہات اپنی پراڈکٹس ٹائوبائو میں آن لائن فروخت کرنے کی پوزیشن میں آچکے تھے۔ ٹائوبائو چین میں صارفین کے لیے ای کامرس کاسب سے بڑا پلیٹ فارم ہے۔ بڑی تعداد میں کاشتکار اپنی مصنوعات یاپیداوار ای کامرس پلیٹ فارم کے ذریعے فروخت کرتے ہیں اور دیہی علاقوں کے دوروں کے فروغ کے لیے خدمات پیش کرتے ہیں، جبکہ بڑی تعدادمیں تارکین ورکرز اور کالجوں سے فارغ التحصیل ہونے والے گریجویٹس خود اپنا کاروبار شروع کرنے کے عزم کے ساتھ اپنے آبائی گھروں کوواپس جارہے ہیں۔
ڈیجیٹل معیشت عالمگیریت کے فروغ میں بھی مددگار ثابت ہورہی ہے،چین آزادانہ تجارت اور باہمی تجارتی انتظامات کی حمایت کرتاہے اور تجارت کی آزادی کو فروغ دیتاہے۔ چین ڈیجیٹل معاشی ترقی کے ذریعے عالمی معیشت کی ترقی میں تعاون کرے گا۔ چین اب اپنی ملکی معیشت کو صرف انٹرنیٹ پلس ہی نہیں کررہاہے بلکہ اپنی ڈیجیٹل مارکیٹ کو مزید وسعت دینے اور اسے کھولنے کاعزم بھی رکھتاہے تاکہ پوری دنیاکی معیشتوں کے فائدے کے لیے ملکی اورعالمی مارکیٹوں میں تیزی سے ہم آہنگی اور تعاون پیدا ہوسکے۔
رواں سال11نومبر کو سنگل ڈے شاپنگ کارنیول میں علی بابانے (ٹائوبائوجس کی ذیلی تنظیم ہے) ٹائوبائو کا ایک بین الاقوامی ورژن پیش کیا جس کو روس، اسپین،امریکا ،فرانس اور دوسرے ممالک کے 6.21ملین آن لائن خریدار مل گئے اور ان ملکوں کے خریداروں نے اس پلیٹ فارم سے 35.78 ملین ڈالر مالیت کے آرڈر دئے۔
چین بیلٹ اور سڑکوں کی تعمیر اور فروغ (سلک روڈ اکنامک بیلٹ اور 21ویں صدی کی میری ٹائم سلک روڈ) کے ساتھ ہی چین اس روٹ کے ساتھ 65ممالک میں کام کرے گا۔ ڈیجیٹل معیشت کی ترقی کو انٹری پوائنٹ کی حیثیت سے تعاون اور کراس بارڈر ای کامرس کو ایک انسٹرومنٹ کے طورپر فروغ دے رہاہے۔ چین علاقائی اورعالمی تجارت ،سرمایہ کاری گنجائش اور استعمال میں تعاون، ڈیجیٹل سروس اور تجارت کے نئے مواقع شروع کرنے اور آزادانہ تجارتی نیٹ ورک کے بیلٹ اور سڑک کی تعمیر میں مدد دے رہاہے۔
عالمی تجارت کے فروغ کے حوالے سے ان کوششوں کے نتیجے میں چین کی معاشی ترقی کی رفتار میں نمایاں اضافہ ہورہاہے،اور اگر یہ کوششیںجاری رہیںتو وہ دن دور نہیں جب معاشی ترقی کی دوڑ میں چین امریکا، برطانیہ ،جرمنی اورفرانس سے بھی کہیں آگے نکل جائے گا۔ اس کے ساتھ ہی یہ بھی ایک حقیقت ہے کہ چین کے تعاون سے دنیا کے بہت سے دیگر ممالک بھی معاشی ترقی کی راہ پر چل نکلیں گے، یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ چین کی جانب سے نئے ترقیاتی بینک اور سرمایہ کاری کے لیے مالیاتی اداروں کے قیام نے ترقی پزیر ممالک کو عالمی بینک اور بین الاقوامی مالیاتی فنڈ کے چنگل سے نکالنے میں اہم کردار ادا کیا ہے جبکہ چین کی جانب سے تعمیر کی جانے والی راہداریاں ترقی پذیز ممالک کو اپنی مصنوعات اور خام مال بہتر قیمت پر فروخت کرنے کے مواقع حاصل ہورہے ہیں۔
چی فولن


متعلقہ خبریں


سعودی وزارتِ انصاف کا کورونا سے نمٹنے کے لیے امید افزا پیغام وجود - پیر 06 اپریل 2020

سعودی عرب کی وزارتِ انصاف نے کرونا وائرس کے خلاف جنگ کے تناظر میں ایک حوصلہ افزا ویڈیو پیغام جاری کیا ہے اور مقامی کمیونٹی کو ایک روشن مستقبل کی نوید دی ہے ۔میڈیارپورٹس کے مطابق وزارتِ انصاف نے ٹویٹر پر یہ ویڈیو پیغام جاری کیا ۔اس میں کہا گیاکہ لوگ ایک مرتبہ پھر ایک دوسرے سے ملیں گے ،ایک دوسرے سے مصافحے کریں گے ،اسکول دوبارہ کھلیں گے ،نمازیں ادا کی جائیں گی، اسٹیڈیمز دوبارہ شائقین سے بھریں گے ،طیارے فضائوں میں اڑانیں بھریں گے لیکن تب تک ہمیں کرونا وائرس کے خلاف لڑائی جاری رکھ...

سعودی وزارتِ انصاف کا کورونا سے نمٹنے کے لیے امید افزا پیغام

میت کو غسل دینے سے کرونا وائرس پھیلنے کا اندیشہ ہے ،سعودی وزارت صحت وجود - پیر 06 اپریل 2020

سعودی عرب کی وزارت صحت کے ترجمان محمد العبد العالی نے بتایا ہے کہ مملکت میں کرونا کے مزید 140 کیس سامنے آئے ہیں جس کے بعد کل متاثرہ افراد کی تعداد 2179 ہوگئی ہے ۔ ان میں 1730 کو معمولی نوعیت کی بیماری ہے ۔میڈیارپورٹس کے مطابق کرونا کے حوالے سے روزانہ کی بریفنگ کے دوران وزارت صحت کے ترجمان کا کہنا تھا کہ سعودی عرب میں اب تک کرونا سے 29 افراد ہلاک اور 420 صحت یاب ہوئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم کرونا سے متعلق افواہوں پرنہیں بلکہ مصدقہ سرکاری معلومات پر انحصار کرتے ہیں۔ سعودی وزارت...

میت کو غسل دینے سے کرونا وائرس پھیلنے کا اندیشہ ہے ،سعودی وزارت صحت

تیسری طاقت نے ایران ، امریکا کو جنگ کے دہانے پر لا کھڑا کیا ،رکن پارلیمنٹ وجود - پیر 06 اپریل 2020

ایران کے ایک سرکردہ سیاست دان اور رکن پارلیمنٹ حشمت اللہ نے دعویٰ کیا ہے کہ امریکا اور ایران ایک تیسرے فریق کی وجہ سے غیرمعمولی طورپر جنگ کے دہانے پر پہنچ گئے ۔ میڈیارپورٹس کے مطابق ایرانی رکن پارلیمنٹ حشمت اللہ فلاحت پیشہ ایران کی قومی سلامتی اور خارجہ تعلقات کمیٹی کے رکن بھی ہیں کا کہناتھا کہ اگر امریکا اور ایران کے درمیان جنگ چھڑتی ہے تو یہ دونوں ملکوں کے ساتھ زیادتی ہوگی کیونکہ اس کا اصل سبب ایک تیسرا فریق ہے ۔حشمت اللہ فلاحت پیشہ نے امریکا اور ایران کے درمیان لڑائی کرانے...

تیسری طاقت نے ایران ، امریکا کو جنگ کے دہانے پر لا کھڑا کیا ،رکن پارلیمنٹ

وبا جاری رہی تو رمضان میں بھی مساجد بند رہیں گی ، مصری وزیر اوقاف وجود - پیر 06 اپریل 2020

مصری وزیر برائے اوقاف نے اعلان کیا ہے کہ اگر کورونا وائرس کی وباء اسی طرح بدستورموجود رہی تو رمضان المبارک کے دوران بھی مساجد بند کردی جائیں گی۔میڈیارپورٹس کے مطابق مصری وزیر اوقاف ڈاکٹر محمد مختار نے ایک بیان میں کہا کہ وباء کے خاتمے سے پہلے مساجد کھولنے کا کوئی پروگرام نہیں۔ مساجد وبا کے ختم ہونے کے بعد ہی کھلیں گی۔مصری وزیر برائے اوقاف نے اس بات پر زور دیا کہ اگر رمضان المبارک میں یہ وائرس موجود رہتا ہے تو ہم اپنے آپ کو محفوظ رکھنے اور خدا کے قانون کی پاسداری کے لیے مساجد...

وبا جاری رہی تو رمضان میں بھی مساجد بند رہیں گی ، مصری وزیر اوقاف

مصر میں بڑی تبدیلی کا یقین،اردوان کے دفتر کے سربراہ کی ٹیلی فونک گفتگو افشا وجود - پیر 06 اپریل 2020

ترکی کے صدر رجب طیب اردوان کے دفتر کے ایک سینئر ذمہ دار کی افشا ہونے والی آڈیو ریکارڈنگ سے ظاہر ہوتا ہے کہ مذکورہ ذمے دار نے سابق مصری صدر محمد مرسی کی معزولی کے بعد مصر میں انارکی پر شرط باندھی تھی۔میڈیارپورٹس کے مطابق مذکورہ آڈیو ریکارڈنگ نارڈیک مانیٹر ویب سائٹ نے جاری کی ہے ۔ ویب سائٹ کے مطابق اردوان کے دفتر کے سربراہ حسن دوآن نے یہ شرط باندھی تھی کہ محمد مرسی کی معزولی کے تین سے پانچ سال بعد الاخوان المسلمین تنظیم کی بڑے پیمانے پر واپسی ہو گی۔ مرسی کو عوامی احتجاج کے ن...

مصر میں بڑی تبدیلی کا یقین،اردوان کے دفتر کے سربراہ کی ٹیلی فونک گفتگو افشا

دنیا بھر میں کورونا سے ہلاکتوں کی تعداد 59 ہزار سے تجاوز وجود - هفته 04 اپریل 2020

دنیا بھر میں کورونا وائرس کے باعث ہلاکتوں کی تعداد 59 ہزار 172 ہوگئی، 10 لاکھ 98 ہزار 762افراد عالمی وبا کا شکار ہوگئے ، چین میں کورونا سے ہلاک افراد کی یاد میں ایک دن کا سوگ منایا گیا ۔اٹلی میں کورونا سے مرنے والوں کی تعداد 14 ہزار 681 ہوگئی۔ ایک لاکھ 19 ہزار 827افراد عالمی وبا کی لپیٹ میں ہیں۔ سپین میں کورونا سے 11 ہزار 198 افراد موت کے منہ میں چلے گئے ۔ فرانس میں اب تک 6 ہزار 507 افراد کورونا سے ہلاک ہوچکے ہیں۔برطانیہ میں 3 ہزار 605 افراد جان سے گئے ۔ جرمنی میں 1275، چین م...

دنیا بھر میں کورونا سے ہلاکتوں کی تعداد 59 ہزار سے تجاوز

کورونا کے بعد آنے والی وبائیں زیادہ ہلاکت خیز ہوسکتی ہیں،بل گیٹس وجود - هفته 04 اپریل 2020

مائیکرو سافٹ کے بانی بل گیٹس نے خبردار کیا ہے کہ کورونا کے بعد آنے والی وبائیں کہیں زیادہ ہلاکت خیز ہوسکتی ہے ۔ انہوں بیان میں نے کہا کہ کورونا قدرتی وبا ہے اور خوش قسمتی سے اموات کی شرح بھی کم ہے ۔ ا نہوں نے کہا کہ اگلی وبائیں قدرت کے ساتھ حیاتیاتی دہشت گردی سے بھی آسکتی ہیں۔خیال رہے کہ بل گیٹس نے 2015 میں بھی ایک عالمی وبا کے متعلق پیش گوئی کرتے ہوئے کہا تھا دنیا اگلی وبا کیلئے تیار نہیں۔بل گیٹس نے پانچ سال قبل کہا تھا کہ وبا پوری دنیا پھیل سکتی ہے کیوں کہ تمام ممالک آپس می...

کورونا کے بعد آنے والی وبائیں زیادہ ہلاکت خیز ہوسکتی ہیں،بل گیٹس

اسیران کے معاملے کو انسانی بنیادوں پر ڈیل کرنا چاہتے ہیں ،حماس وجود - هفته 04 اپریل 2020

اسلامی تحریک مزاحمت (حماس)کے ترجمان فوزی برھوم نے کہا ہے کہ غزہ کی پٹی میں جماعت کے سیاسی شعبے کے سربراہ یحییٰ السنوار نے اسرائیل کے ساتھ قیدیوں کے تبادلے کی ڈیل کے لیے جو فارمولہ پیش کیا ہے اس سے یہ ثابت ہوتا ہے کہ حماس اسرائیل کے ساتھ قیدیوں کے تبادلے کی ڈیل کے لیے سنجیدہ ہے ۔انہوں نے ایک بیان میں کہا کہ حماس اسیران کے معاملے کو انسانی بنیادوں پر ڈیل کرنا چاہتی ہے ۔ یحییٰ السنوار کا فارمولہ اس کا سب سے بڑا ثبوت ہے ۔خیال رہے کہ گذشتہ روز غزہ میں حماس کے سیاسی شعبے کے صدر یحی...

اسیران کے معاملے کو انسانی بنیادوں پر ڈیل کرنا چاہتے ہیں ،حماس

مقبوضہ کشمیر میں آبادی کا تناسب بدلنے کی بھارتی سازش، پاکستان کی شدید مذمت وجود - جمعرات 02 اپریل 2020

ترجمان دفتر خاجہ عائشہ فاروقی نے کہا ہے کہ پاکستان مقبوضہ جموں وکشمیر میں آبادی کا تناسب تبدیل کرنے کی بھارتی حکومت کی تازہ ترین غیرقانونی کوششوں کی شدید مذمت کرتے ہوئے انہیں مسترد کرتا ہے ۔ جموں وکشمیر تشکیل نو آرڈر2020ایک اور غیرقانونی بھارتی اقدام ہے جس کا مقصد بھارت کے زیرقبضہ جموں وکشمیر کے ڈومیسائل قوانین کو تبدیل کرنا ہے ۔ یہ بین الاقوامی قانون اور چوتھے جینیوا کنونشن کی صریحا خلاف ورزی ہے ۔ انہوںنے جاری بیان میں کہا کہ تازہ ترین بھارتی قدام بھی 5 اگست 2019کے بھارت کے ...

مقبوضہ کشمیر میں آبادی کا تناسب بدلنے کی بھارتی سازش، پاکستان کی شدید مذمت

کورونا وائرس کے تیزی سے پھیلا ئوپر تشویش ہے ، ڈبلیوایچ او وجود - جمعرات 02 اپریل 2020

صحت سے متعلق اقوام متحدہ کے عالمی ادارے ڈبلیو ایچ او کے ڈائریکٹر جنرل تیدروس ادھانوم نے کورونا وائرس کے تیزی سے پھیلا ئو پر تشویش کا اظہار کیا اور کہا کہ کورونا سے نمٹنے کیلئے سب کو ملکر کوشش کرنا ہوگی۔ڈبلیو ایچ او کے ڈی جی تیدروس ادھا نوم نے جنیوا میں پریس بریفنگ کے دوران کہاکہ پچھلے ہفتے کورونا کے پھیلا میں تیزی دیکھی گئی جو ایک تشویشناک صورتحال ہے ۔اس مہلک وبا کو فوری طور پر سب کو مل کر روکنے کی ضرورت ہے بصورت دیگر بڑا جانی نقصان ہوگا۔ انہوں نے کہاکہ مہلک وبا کے باعث ایک ہ...

کورونا وائرس کے تیزی سے پھیلا ئوپر تشویش ہے ، ڈبلیوایچ او

کورونا وائرس، چین سے امدادی سامان لے کر طیارہ پاکستان پہنچ گیا وجود - جمعرات 02 اپریل 2020

کا خصوصی طیارہ چین سے امدادی سامان لے کر پاکستان پہنچ گیا۔پی آئی اے کی پرواز پی کے 8552 چین سے کورونا وائرس سے متعلق امدادی سامان لے کر اسلام آباد پہنچا۔ جہاز میں 20 کنٹینرز پر مشتمل امدادی سامان لایا گیا جس میں ٹیسٹنگ کٹس، گلوز اور ماسک شامل ہیں۔ترجمان پی آئی اے کے مطابق کسٹمز کلیئرنس کے بعد سامان نیشنل ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی(این ڈی ایم اے )حکام کے حوالے کر دیا گیا۔واضح رہے کہ پی آئی اے کا خصوصی طیارہ گذشتہ روز امدادی سامان لینے چین گیا تھا۔

کورونا وائرس، چین سے امدادی سامان لے کر طیارہ پاکستان پہنچ گیا

مقبوضہ جموں و کشمیر،سابق وزرا ئے اعلیٰ کی مراعات ختم وجود - بدھ 01 اپریل 2020

مقبوضہ جموں و کشمیر کے سابق وزرا اعلی کو حاصل خصوصی مراعات والے قانون کو مرکزی حکومت نے جموں و کشمیر تنظیم نو قانون 2019 کے تحت اختیارات کے ذریعے منسوخ کر دیا ہے ۔ بھارتی میڈیا کے مطابق مرکزی حکومت نے سٹیٹ لیجسلیٹر ممبرز پنشن ایکٹ 1984 کے سیکشن 3 کو منسوخ کر دیا ہے جس سے اب سابق وزرا اعلی کو ملنے والی مراعات حاصل نہیں ہوں گی۔اس سیکشن کے تحت سابق وزرا اعلی کو بغیر کرایہ سرکاری رہائش گاہ، مفت ٹیلیفون سروس، مفت بجلی، گاڑی، پٹرول اور طبی سہولیات ملتی تھیں۔ اس کے علاوہ ان کو سرکار...

مقبوضہ جموں و کشمیر،سابق وزرا ئے اعلیٰ کی مراعات ختم