وجود

... loading ...

وجود

منڈیلا کی جماعت کا سیاسی مستقبل خطرے میں

هفته 10 ستمبر 2016 منڈیلا کی جماعت کا سیاسی مستقبل خطرے میں

anc

مقامی انتخابات میں بدترین شکستوں اور باہمی تقسیم در تقسیم نے جنوبی افریقہ کی حکمران افریقن نیشنل کانگریس کے اقتدار اور صدر جیکب زوما کے سیاسی مستقبل کو خطرے میں ڈال دیا ہے۔

1994ء سے عظیم سیاسی شخصیت نیلسن منڈیلا کی جماعت افریقن نیشنل کانگریس ملک میں باآسانی انتخابات جیتتی آئی ہے اور ہمیشہ ملک کی سب سے بڑی سیاسی جماعت رہی ہے۔ لیکن گزشتہ ماہ کے شہری انتخابات میں دارالحکومت پریٹوریا، اقتصادی مرکز جوہانسبرگ اور بندرگاہ پورٹ ایلزبتھ تینوں میں گرفت ڈھیلی پڑی ہے جس نے پارٹی کی کمزوری عیاں کرکے رکھ دی ہے۔

“اے این سی کا زوال: اب کیا ہوگا؟” نامی کتاب کے مصنف پرنس میشیل کا کہنا ہے کہ “اے این سی کو تین شیطانوں نے ختم کیا، بدعنوانی، گروہ بندی اور ایسی قیادت جس کی ساکھ نہیں۔”

گوکہ جماعت ہمیشہ گروہ بندیوں اور تقسیم میں رہتی ہے لیکن 3 اگست کے مقامی انتخابات میں شکست نے سب کچھ عیاں کردیا ہے۔ رواں ہفتے پارٹی کے اندر کے مخآلف گروہ جوہانسبرگ میں باہم الجھ پڑے جس میں زوما کے مخالفین نے پارٹی صدر دفتر پر قبضہ کرنے کی دھمکی دی تھی۔

صدر زوما سے بڑے پیمانے پر استعفے کے مطالبات کے باوجود کئی ماہرین سمجھتے ہیں کہ وہ جماعت کے ڈھانچے پر مضبط گرفت رکھیں گے اور اپنے وسیع نیٹ ورک کے ذریعے وفاداریاں حاصل کرتے رہیں گے۔ ان کا کہنا ہے کہ پارٹی کے اندر دو انتہائی ہیں، ایک زوما حامی اور دوسرے ان کے مخالف – لیکن درمیان میں ایسے افراد ہیں جو فی الحال صدر کو برداشت کر رہے ہیں۔

رواں سال کے اختتام پر جماعت نے نئے سیاسی رہنما کا انتخاب کرنا ہے جو 2019ء کے قومی انتخابات میں صدر کے لیے لڑے گا کیونکہ زوما مسلسل تیسری بار انتخاب نہیں لڑ سکتے۔

چند تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ ملک کو نسل پرستانہ حکومت سے آزادی دلوانی والی مشہور سیاسی جماعت 2019ء کے انتخابات میں 50 فیصد سے کم ووٹ حاصل کرے گی۔ بڑھتی ہوئی بے روزگاری، ترقی کی شرح کی کمی اور سفید فامون کے اقتدار کے خاتمے کے بعد سے اب تک غریب افراد کی زندگیوں میں حقیقی تبدیلیاں نہ آنے کی وجہ سے عوام میں بڑے پیمانے پر بے چینی موجود ہے۔

74 سالہ جیکب زوما نسل پرست حکومت کے دور میں نیلسن منڈیلا کے ساتھ روبن جزیرے کی جیل میں قید تھے، اب کئی اسکینڈلز میں پھنسے ہوئے ہیں۔ انہیں آئین کی خلاف ورزی کا بھی مرتکب ٹھیرایا گیا جب انہوں نے اپنے نجی گھر کی تعمیر کے لیے سرکاری خزانے سے پیسہ لیا۔

اب اےاین سی کے پرانے سیاسی اتحادی بھی تبدیلی کے لیے پر تول رہے ہیں۔ کمیونسٹ پارٹی دو دہائیوں سے ان کی با اعتماد اتحادی ہے لیکن گزشتہ ماہ اس نے اے این سی کی قیادت کو گھمنڈی اور علیحدہ علیحدہ قرار دیا۔

یہ صورت حال حزب اختلاف کی جماعتوں کے لیے سازگار حالات پیدا کر رہی ہے جس میں سخت گیر بائیں بازو کے اکنامک فریڈم فائٹرز بھی شامل ہیں جنہیں تین سال پہلے اے این سی کے سابق نوجوان رہنما جولیئس مالیما نے قائم کیا تھا۔


متعلقہ خبریں


کورونا وبا سے کروڑوں بچوں کا تعلیمی نقصان، یونیسیف کی تحقیقی رپورٹ وجود - بدھ 26 جنوری 2022

کورونا وائرس کی وبا کے نتیجے میں جتنی بڑی تعداد تعلیمی سلسلے سے دور ہوئی اس پر قابو پانا لگ بھگ ناممکن ہے۔ یہ بات اقوام متحدہ کے ادارہ برائے اطفال (یونیسیف) کی جانب سے جاری ایک تحقیقی رپورٹ میں بتائی گئی ہے۔ تحقیق میں بتایا گیا کہ غریب اور متوسط ممالک کے 10 سال کے 70 فیصد بچے ای...

کورونا وبا سے کروڑوں بچوں کا تعلیمی نقصان، یونیسیف کی تحقیقی رپورٹ

انگلینڈ سے فتح کے باوجود جنوبی افریقہ سیمی فائنل کی دوڑ سے باہر وجود - اتوار 07 نومبر 2021

ٹی20 ورلڈ کپ میں جنوبی افریقہ نے وین ڈر ڈوسن اور ایڈن مرکرم کی عمدہ بیٹنگ کی بدولت انگلینڈ کو سنسنی خیز مقابلے کے بعد 10رنز سے شکست دے دی لیکن اس کے باوجود وہ سیمی فائنل کی دوڑ سے باہر ہو گئی،جنوبی افریقہ نے مقررہ اوورز میں 2 وکٹوں کے نقصان پر 189رنز بنائے،انگلینڈ کی ٹیم مقررہ او...

انگلینڈ سے فتح کے باوجود جنوبی افریقہ سیمی فائنل کی دوڑ سے باہر

جو پیسہ ذات پر لگایا فوراً واپس کریں، جنوبی افریقہ کے صدر سے مطالبہ وجود - پیر 27 جون 2016

جنوبی افریقہ میں صدر جیکب زوما کو کہا گیا ہے کہ وہ سرکاری خزانے کے وہ 5 لاکھ ڈالرز واپس کریں جو انہوں اپنی نجی رہائش گاہ کی تعمیر پر صرف کیے تھے۔ مارچ میں ملک کی اعلیٰ ترین عدالت نے پایا تھا کہ صدر نے ایسا کرکے آئین کی خلاف ورزی کی ہے اور اب انہیں یہ رقم واپس کرنا ہوگی۔ آئینی...

جو پیسہ ذات پر لگایا فوراً واپس کریں، جنوبی افریقہ کے صدر سے مطالبہ

جنوبی افریقہ، باکسنگ نے کھلاڑی کی جان لے لی وجود - جمعرات 17 ستمبر 2015

جنوبی افریقہ میں باکسنگ کے ایک مقابلے کے بعد ایک کھلاڑی چل بسا۔ صوبہ مشرقی کیپ کے شہر فریئر میں ہونے والے مقابلے کے پہلے ہی راؤنڈ میں ایمزوانیلے کومپولو نامی باکسر ناک آؤٹ ہوگئے۔ اکھاڑے میں گرنے کے بعد وہ بے ہوش ہوگئے اور بالآخر چل بسے۔ وزیر کھیل فیکائل ایمبالولا نے کہا ہے کہ...

جنوبی افریقہ، باکسنگ نے کھلاڑی کی جان لے لی

مضامین
چائلڈپورنوگرافی وجود پیر 05 دسمبر 2022
چائلڈپورنوگرافی

بول کہ سچ زندہ ہے اب تک وجود پیر 05 دسمبر 2022
بول کہ سچ زندہ ہے اب تک

عوامی مقبولیت بھی پَل بھر کا تماشہ ہے وجود پیر 05 دسمبر 2022
عوامی مقبولیت بھی پَل بھر کا تماشہ ہے

عمرکومعاف کردیں وجود اتوار 04 دسمبر 2022
عمرکومعاف کردیں

ٹرمپ اور مفتے۔۔ وجود اتوار 04 دسمبر 2022
ٹرمپ اور مفتے۔۔

اب ایک اور عمران آرہا ہے وجود هفته 03 دسمبر 2022
اب ایک اور عمران آرہا ہے

اشتہار

تہذیبی جنگ
بابری مسجد کا 30 واں یوم شہادت ، بھارتی عدلیہ کا گھناؤنا کردار وجود منگل 06 دسمبر 2022
بابری مسجد کا 30 واں یوم شہادت ، بھارتی عدلیہ کا گھناؤنا کردار

1993کے ممبئی دھماکوں کی آڑ میں مسلمانوں کو بدنام کرنے کی سازش رچائی گئی، بھارتی صحافی وجود پیر 05 دسمبر 2022
1993کے ممبئی دھماکوں کی آڑ میں مسلمانوں کو بدنام کرنے کی سازش رچائی گئی، بھارتی صحافی

امریکا نے القاعدہ ، کالعدم ٹی ٹی پی کے 4رہنماؤں کوعالمی دہشت گرد قرار دے دیا وجود جمعه 02 دسمبر 2022
امریکا نے القاعدہ ، کالعدم ٹی ٹی پی کے 4رہنماؤں کوعالمی دہشت گرد قرار دے دیا

برطانیا میں سب سے تیز پھیلنے والا مذہب اسلام بن گیا وجود بدھ 30 نومبر 2022
برطانیا میں سب سے تیز  پھیلنے والا مذہب اسلام بن گیا

اسرائیلی فوج نے 1967 کے بعد 50 ہزار فلسطینی بچوں کو گرفتار کیا وجود پیر 21 نومبر 2022
اسرائیلی فوج نے 1967 کے بعد 50 ہزار فلسطینی بچوں کو گرفتار کیا

استنبول: خود ساختہ مذہبی اسکالر کو 8 ہزار 658 سال قید کی سزا وجود جمعه 18 نومبر 2022
استنبول: خود ساختہ مذہبی اسکالر کو 8 ہزار 658 سال قید کی سزا

اشتہار

شخصیات
موت کیا ایک لفظِ بے معنی جس کو مارا حیات نے مارا وجود هفته 03 دسمبر 2022
موت کیا ایک لفظِ بے معنی               جس کو مارا حیات نے مارا

ملک کے پہلے وزیراعظم لیاقت علی خان کے بیٹے اکبر لیاقت انتقال کر گئے وجود بدھ 30 نومبر 2022
ملک کے پہلے وزیراعظم لیاقت علی خان کے بیٹے اکبر لیاقت انتقال کر گئے

معروف صنعت کار ایس ایم منیر انتقال کر گئے وجود پیر 28 نومبر 2022
معروف صنعت کار ایس ایم منیر انتقال کر گئے
بھارت
بھارت کو اقتصادی محاذ پر جھٹکا، جی ڈی پی میں کمی کا امکان وجود منگل 06 دسمبر 2022
بھارت کو اقتصادی محاذ پر جھٹکا، جی ڈی پی میں کمی کا امکان

بابری مسجد کا 30 واں یوم شہادت ، بھارتی عدلیہ کا گھناؤنا کردار وجود منگل 06 دسمبر 2022
بابری مسجد کا 30 واں یوم شہادت ، بھارتی عدلیہ کا گھناؤنا کردار

1993کے ممبئی دھماکوں کی آڑ میں مسلمانوں کو بدنام کرنے کی سازش رچائی گئی، بھارتی صحافی وجود پیر 05 دسمبر 2022
1993کے ممبئی دھماکوں کی آڑ میں مسلمانوں کو بدنام کرنے کی سازش رچائی گئی، بھارتی صحافی

بھارت،پہلی سے آٹھویں جماعت کے اقلیتی طلباء کو اب اسکالر شپ نہیں ملے گی، بھارتی حکومت وجود پیر 05 دسمبر 2022
بھارت،پہلی سے آٹھویں جماعت کے اقلیتی طلباء کو اب اسکالر شپ نہیں ملے گی، بھارتی حکومت
افغانستان
کابل، پاکستانی سفارتی حکام پر فائرنگ، ناظم الامور محفوظ رہے، گارڈ زخمی وجود جمعه 02 دسمبر 2022
کابل، پاکستانی سفارتی حکام پر فائرنگ، ناظم الامور محفوظ رہے، گارڈ زخمی

افغان مدرسے میں زوردار دھماکے میں 30 افراد جاں بحق اور 24 زخمی وجود بدھ 30 نومبر 2022
افغان مدرسے میں زوردار دھماکے میں 30 افراد جاں بحق اور 24 زخمی

حنا ربانی کھر کی قیادت میں پاکستان کا اعلیٰ سطح کا وفد دورہ افغانستان کے لیے روانہ وجود منگل 29 نومبر 2022
حنا ربانی کھر کی قیادت میں پاکستان کا اعلیٰ سطح کا وفد دورہ افغانستان کے لیے روانہ
ادبیات
کراچی میں دو روزہ ادبی میلے کا انعقاد وجود هفته 26 نومبر 2022
کراچی میں دو روزہ ادبی میلے کا انعقاد

مسجد حرام کی تعمیر میں ترکوں کے متنازع کردار پرنئی کتاب شائع وجود هفته 23 اپریل 2022
مسجد حرام کی تعمیر میں ترکوں کے متنازع  کردار پرنئی کتاب شائع

مستنصر حسین تارڑ کا ادبی ایوارڈ لینے سے انکار وجود بدھ 06 اپریل 2022
مستنصر حسین تارڑ کا ادبی ایوارڈ لینے سے انکار