وجود

... loading ...

وجود
وجود
ashaar

برما میں مسلمانوں کی نسل کشی ہوئی، دستاویزی شواہد منظرعام پر

منگل 27 اکتوبر 2015 برما میں مسلمانوں کی نسل کشی ہوئی، دستاویزی شواہد منظرعام پر

Genocide-Agenda

قطر کے معروف ٹیلی وژن چینل الجزیرہ نے انسانی حقوق کے مختلف اداروں کے ساتھ مل کر ایسے شواہد منظرعام پر لایا ہے جن سے ثابت ہوتا ہے کہ برما میں مسلمانوں کی نسل کشی کی گئی۔

دستاویزی شواہد، جن پر 8 ماہ تحقیق کی گئی ہے، سے معلوم ہوا ہے حکومت سیاسی فوائد سمیٹنے کے لیے مذہبی فسادات کروائے۔ اس تحقیق میں یل یونیورسٹی لاء اسکول، لونسٹائن کلینک، الجزیرہ انوسٹی گیٹو یونٹ اور فورٹیفائی رائٹس شامل رہے ہیں۔

لونسٹائن کلینک کا کہنا ہے کہ “جس پیمانے پر مظالم ڈھائے گئے ہیں اور جس طرح سیاست دانوں نے مسلمانوں کے حوالے سے گفتگو کی ہے، اس سے نسل کشی کے ارادے تو نظر آ ہی رہے ہیں۔”

دونوں اداروں کے شواہد کے مطابق حکومت سیاسی فوائد حاصل کرنے کے مذہبی تفرقہ کو ہوا دے رہی ہے۔ اس کے علاوہ مسلمانوں مخالف مظاہروں کو کو تحریک دینے ساتھ ساتھ برما کے عام باشندوں میں مسلمانوں کے خلاف نفرت پھیلائی جا رہی ہے اور اس کے لیے خوف کو بطور حربہ استعمال کیا جا رہا ہے۔ سخت گیر بدھ گروہوں کی مالی مدد بھی کی جا رہی ہے تاکہ وہ مسلمانوں کے لڑنے میں کام آئیں۔

برما میں 25 سال بعد پہلے عام انتخابات 8 نومبر کو ہوں گے اور فوج کی حمایت یافتہ متحدہ استحکام و ترقی پارٹی کے خلاف مسلمانوں کو دبانے اور انہیں ہدف بنانے کے دستاویزی شواہد موجود ہیں اور عینی شہادتیں بھی۔ الجزیرہ نے برما کے صدر اور حکومتی ترجمان سے بارہا رابطے کیے ہیں لیکن کوئی جواب نہیں دیا جا رہا۔

“جینوسائیڈ ایجنڈا” (Genocide Agenda) نامی نئی دستاویزی فلم میں پیش کردہ تحقیق قانونی و سفارتی ماہرین کے سامنے سوال اٹھاتی ہے کہ حکومت کی مہم مسلمانوں کے باضابطہ خاتمے کے لیے ہے؟

یونیورسٹی آف لندن کے پروفیسر پینی گرین، جو انٹرنیشنل اسٹیٹ کرائم انیشی ایٹو کے ڈائریکٹر بھی ہیں ، کہتے ہیں کہ “برما کے صدر تھین سین حکومتی مفادات کی خاطر مسلمانوں کے خلاف نفرت انگیزی پھیلانے کے لیے تیار ہیں، تاکہ وہ برماکے اندر مسلم آبادی کو دبا سکیں، انہیں تنہا کرسکیں اور عام معاشرے سے کاٹ سکیں۔ یہ نسل کشی کے عمل کا حصہ ہے۔”

گرین نے 2012ء کے فسادات پر کہا کہ “یہ مذہبی فسادات نہیں تھے، یہ مکمل طور پر منصوبہ بندی کے ذریعے کیا گیا تشدد تھا۔ جس کے لیے دور دراز علاقوں سے بدھ گروپوں کو لانے کے لیے تیز رفتار بسیں تک چلائی گئی تھیں۔ انہیں کھانے اور پینے کا سامان فراہم کیا گیا تھا۔ اس پر خرچ ہونے والا پیسہ لازمی کسی نہ کسی نے دیا ہوگا۔ یہ سب ظاہر کرتا ہے کہ تمام کام مکمل منصوبہ بندی کے ساتھ ہوا تھا۔”

اقوام متحدہ کے سابق رپورٹر برائے برما ٹامس اوجیا کوئنٹانا نے مطالبہ کیا ہے کہ نسل کشی کے معاملے پر صدر تھین سین اور داخلی امور اور تارکین وطن کے برمی وزراء کے خلاف تحقیق ہونی چاہیے۔

فلم میں ایک سرکاری فوجی دستاویز بھی پیش کی گئی ہے، جو عوام کے لیے تھی اور کہا گیا تھا کہ مسلمان انہیں چیر پھاڑ دیں گے۔ یعنی اس طرح خوف پھیلا کر مسلمانوں کے خلاف کارروائیوں کو ٹھیک ثابت کرنے کی کوشش کی گئی تھی۔ اس کے علاوہ ایک خفیہ دستاویز کے مطابق مختلف علاقوں میں ایک پیغام پھیلایا گیا تھا کہ ملک میں مذہبی فسادات کا خطرہ ہے تاکہ مقامی آبادی میں مسلمانوں سے خوف پیدا ہو۔ الجزیرہ یہ تمام دستاویزات ترجمے کے ساتھ پیش کررہا ہے۔

ایک سابق فوجی اہلکار نے نام ظاہر نہ کرنے پر الجزیرہ کو بتایا کہ اس پورے معاملے میں فوج پس پردہ ملوث ہے۔ “وہ تو براہ راست شامل نہیں لیکن سب کی ڈوریں فوج ہی ہلا رہی ہے۔”

فورٹیفائی رائٹس نامی گروپ کے بانی میٹ اسمتھ کہتے ہیں کہ معاملہ روہنگیا اور راکھائن ریاست کے معاملے میں نسل کشی کا امکان ہے اور ملک کے چند طاقتور ترین افراد کے خلاف بین الاقوامی سطح پر تحقیقات ہونی چاہئیں۔


متعلقہ خبریں


مسلمانوں کو انصاف کی امید چھوڑ دینی چاہیے! وجود - هفته 09 ستمبر 2017

بھار ت میں روہنگیا پناہ گزینوں کو مقامی افراد کے ہاتھوں مشکلات کا سامنا ہے۔ان دنوں حق اور انصاف کے بارے میں بات کرنا ایک خاصا مشکل کام ہے، خاص طور پر اس وقت جب آپ کی دلیل مسلمانوں کے حق میں جاتی ہو۔اگر کوئی مسلمان اس طرح کی بہکی بہکی باتیں کریں تو انھیں نظر انداز کیا جا سکتا ہے لیکن اگر کوئی ہندو ایسا کرے تو اس سے نمٹنا ضروری ہو جاتا ہے۔یہی وجہ ہے کہ مسلمانوں سے نفرت کرنے والوں نے جناح کے بجائے گاندھی کو قتل کیا تھا کیونکہ ہندو ہوتے ہوئے وہ جس انصاف کی بات کر رہے تھے وہ کچھ ...

مسلمانوں کو انصاف کی امید چھوڑ دینی چاہیے!

بینک کا خفیہ ڈیٹا منظرعام پر، صحافی، شاہی خاندان اور 'جاسوس' بھی شامل وجود - جمعرات 28 اپریل 2016

قطر نیشنل بینک کا خفیہ ڈیٹا منظر عام پر آ گیا ہے جس میں الجزیرہ کے صحافیوں کے علاوہ شاہی خاندان اور برطانوی جاسوسوں کی معلومات بھی سامنے آئی ہے۔ جس میں ذاتی بینک کھاتے اور پاس ورڈز تک موجود ہیں۔ قطر نیشنل بینک نے کہا ہے کہ وہ مبینہ ہیک پر تحقیقات کررہا ہے جس میں ان کے صارفین کی بڑی تعداد کے نام اور پاسورڈز سامنے آ گئے ہیں۔ ذرائع ابلاغ کے مطابق 1.4 گیگابائٹس کا ڈیٹا ہے جو کسی نامعلوم شخص نے آن لائن کردیا ہے۔ اس میں 1200 افراد اور اداروں کے بارے میں معلومات ظاہر ہوئی ہیں۔ ا...

بینک کا خفیہ ڈیٹا منظرعام پر، صحافی، شاہی خاندان اور 'جاسوس' بھی شامل

الجزیرہ امریکا کی بندش کا اعلان کردیا گیا وجود - هفته 16 جنوری 2016

الجزیرہ امریکا نے رواں سال 30 اپریل تک اپنے کیبل ٹیلی وژن اور ڈیجیٹل آپریشنز بند کرنے کا اعلان کیا ہے۔ یہ فیصلہ کرتے ہوئے الجزیرہ کا کہنا ہے کہ دراصل ان کے کاروبار کا انداز امریکا میں ذرائع ابلاغ کی مارکیٹ کو درپیش اقتصادی مسائل کی وجہ سے مزید جاری نہیں رہ سکتا۔ الجزیرہ امریکا کی بندش عوام کے ساتھ ساتھ خاص طور پر ان تمام افراد کے لیے مایوس کن خبر ہے جو طویل المیعاد مستقبل کے لیے ادارے میں انتھک محنت کر رہے تھے۔ ملازمین کو ادارے کی جانب سے جو ای میل بھیجی گئی ہے اس میں الج...

الجزیرہ امریکا کی بندش کا اعلان کردیا گیا

مضامین
عوام کے آئیڈیل وجود هفته 25 ستمبر 2021
عوام کے آئیڈیل

کھیل پر سیاست وجود هفته 25 ستمبر 2021
کھیل پر سیاست

سائنس بھی بھارتی سیاست کی بھینٹ چڑھنے لگی وجود هفته 25 ستمبر 2021
سائنس بھی بھارتی سیاست کی بھینٹ چڑھنے لگی

کفن کی جیب وجود جمعه 24 ستمبر 2021
کفن کی جیب

چھوٹے قد،بڑھتے مسلمان۔۔ وجود جمعه 24 ستمبر 2021
چھوٹے قد،بڑھتے مسلمان۔۔

ٹرمپ، جنرل مارک ملی اور چین وجود جمعه 24 ستمبر 2021
ٹرمپ، جنرل مارک ملی اور چین

کھیل کے ساتھ کھلواڑ کاعالمی تماشہ وجود جمعرات 23 ستمبر 2021
کھیل کے ساتھ کھلواڑ کاعالمی تماشہ

حیدرآباد دکن کا ہولو کاسٹ! وجود جمعرات 23 ستمبر 2021
حیدرآباد دکن کا ہولو کاسٹ!

خطہ پنجاب تاریخ کے آئینے میں وجود بدھ 22 ستمبر 2021
خطہ پنجاب تاریخ کے آئینے میں

ایشیا کا میدان وجود بدھ 22 ستمبر 2021
ایشیا کا میدان

قانون کا ڈنڈا وجود بدھ 22 ستمبر 2021
قانون کا ڈنڈا

اپوزیشن کے بغیر طاقتور احتجاج وجود بدھ 22 ستمبر 2021
اپوزیشن کے بغیر طاقتور احتجاج

اشتہار

افغانستان
طالبان حکومت کے بعد پاکستان کی افغانستان کیلئے برآمدات دگنی ہوگئیں وجود جمعه 17 ستمبر 2021
طالبان حکومت کے بعد پاکستان کی افغانستان کیلئے برآمدات دگنی ہوگئیں

امریکا کا نیا کھیل شروع، القاعدہ آئندہ چند سالوں میں ایک اور حملے کی صلاحیت حاصل کر لے گی،ڈپٹی ڈائریکٹر سی آئی اے وجود بدھ 15 ستمبر 2021
امریکا کا نیا کھیل شروع،  القاعدہ آئندہ چند سالوں میں ایک اور حملے کی صلاحیت حاصل کر لے گی،ڈپٹی ڈائریکٹر سی آئی اے

طالبان دہشت گرد ہیں تو پھر نہرو،گاندھی بھی دہشت گرد تھے، مہتمم دارالعلوم دیوبند کا بھارت میں کلمہ حق وجود بدھ 15 ستمبر 2021
طالبان دہشت گرد ہیں تو پھر نہرو،گاندھی بھی دہشت گرد تھے، مہتمم دارالعلوم دیوبند کا بھارت میں کلمہ حق

نئے افغان آرمی چیف نے عہدے کا چارج سنبھال لیا وجود بدھ 15 ستمبر 2021
نئے افغان آرمی چیف نے عہدے کا چارج سنبھال لیا

افغان قیادت نے مشکل کی گھڑی میں قطر کے تعاون کا شکریہ ادا کیا، سہیل شاہین وجود پیر 13 ستمبر 2021
افغان قیادت نے مشکل کی گھڑی میں قطر کے تعاون کا شکریہ ادا کیا، سہیل شاہین

اشتہار

بھارت
کملا ہیرس سے ملاقات، مودی شدید تنقید کی زد میں آگئے وجود هفته 25 ستمبر 2021
کملا ہیرس سے ملاقات، مودی شدید تنقید کی زد میں آگئے

مودی پر منشیات اسمگلنگ کے الزامات وجود جمعه 24 ستمبر 2021
مودی پر منشیات اسمگلنگ کے الزامات

پاکستان میں بم دھماکے کرنے کے لیے بھیجا گیا تھا،سابق'' را'' ایجنٹ کا اعتراف وجود جمعرات 23 ستمبر 2021
پاکستان میں بم دھماکے کرنے کے لیے بھیجا گیا تھا،سابق'' را'' ایجنٹ کا اعتراف

سکھوں کے قتل کا الزام' امریکی عدالت نے نریندر مودی کو سمن جاری کردیا وجود جمعرات 23 ستمبر 2021
سکھوں کے قتل کا الزام' امریکی عدالت نے نریندر مودی کو سمن جاری کردیا

بھارت‘ مذہبی اعتبار سے آبادی کے تناسب میں تبدیلی‘مسلم آبادی میں اضافہ وجود جمعرات 23 ستمبر 2021
بھارت‘ مذہبی اعتبار سے آبادی کے تناسب میں تبدیلی‘مسلم آبادی میں اضافہ
ادبیات
اردو کو سرکاری زبان نہ بنانے پر وفاقی حکومت سے جواب طلب وجود پیر 20 ستمبر 2021
اردو کو سرکاری زبان نہ بنانے پر وفاقی حکومت سے جواب طلب

تاجکستان بزنس کنونشن میں عمران خان پر شعری تنقید، اتنے ظالم نہ بنو،کچھ تو مروت سیکھو! وجود جمعه 17 ستمبر 2021
تاجکستان بزنس کنونشن میں عمران خان پر شعری تنقید، اتنے ظالم نہ بنو،کچھ تو مروت سیکھو!

طالبان کا ’بھگوان والمیکی‘ سے موازنے پر منور رانا کے خلاف ایک اور مقدمہ وجود منگل 24 اگست 2021
طالبان کا ’بھگوان والمیکی‘ سے موازنے پر منور رانا کے خلاف ایک اور مقدمہ

عظیم ثنا ء خواں،شاعر اورنغمہ نگار مظفر وارثی کی دسویں برسی منائی گئی وجود جمعرات 28 جنوری 2021
عظیم ثنا ء خواں،شاعر اورنغمہ نگار مظفر وارثی کی دسویں برسی منائی گئی

لارنس آف عربیا، بچپن کیسے گزرا؟ وجود منگل 20 اکتوبر 2020
لارنس آف عربیا، بچپن کیسے گزرا؟
شخصیات
سینئرصحافی و افغان امورکے ماہر رحیم اللہ یوسف زئی انتقال کر گئے وجود جمعه 10 ستمبر 2021
سینئرصحافی و افغان امورکے ماہر رحیم اللہ یوسف زئی انتقال کر گئے

بلوچستان کے قوم پرست رہنما ، سردار عطااللہ مینگل کراچی میں انتقال کرگئے وجود جمعه 03 ستمبر 2021
بلوچستان کے قوم پرست رہنما ، سردار عطااللہ مینگل کراچی میں انتقال کرگئے

سچے پاکستانی، سینئر کشمیری حریت رہنما سید علی گیلانی انتقال کرگئے وجود جمعرات 02 ستمبر 2021
سچے پاکستانی، سینئر کشمیری حریت رہنما سید علی گیلانی انتقال کرگئے

پاکستان کے امجد ثاقب ایشیا کا سب سے بڑا ایوارڈ جیتنے میں کامیاب وجود بدھ 01 ستمبر 2021
پاکستان کے امجد ثاقب ایشیا کا سب سے بڑا ایوارڈ جیتنے میں کامیاب

ڈاکٹر عبدالقدیر خان کی طبیعت بگڑ گئی وجود بدھ 01 ستمبر 2021
ڈاکٹر عبدالقدیر خان کی طبیعت بگڑ گئی