وجود

... loading ...

وجود
وجود
ashaar
ادبی بیساکھیاں وجود - اتوار    29    اپریل    2018

یہ شہرِ نگاراں اس لحاظ سے بھی اپنی الگ شناخت رکھتا ہے کہ ہر روز جہاں شعرو ادب و فنونِ لطیفہ کی محفلیں سجتیں اور تقریبات منعقد ہوتی رہتی ہیں۔ اچھے شعرا و شاعرات، ادیب و فنکار کی تخلیقات و فن پارے داد و تحسین حاصل کرتے رہتے ہیں وہیں پر ایسے گھس بیٹھیے بھی کچھ ادبی بیساکھیوں کے سہارے شہرِ شعر و ادب میں قد بڑھانے کی کوششوں میں مصروف نظر آتے ہیں۔ اسی حوالے سے جب کسی ”شاعرہ“ کے شعری مجموعے کی تقریبِ رونمائی کا شانداردعوت نامہ نظر سے گزرے تو شدید افسوس اور دکھ کے ملے جلے مراحل سے گ...

ادبی بیساکھیاں

کراچی کی ادبی ڈائری وجود - اتوار    29    اپریل    2018

صفدر علی انشا کے مجموعے’ ’ آبیل…‘‘ کی رسمِ اجرا معروف مزاح گو شاعر،صحافی اور اُستاد پروفیسر صفدر علی انشا کے پہلے مزاحیہ شعری مجموعے’’ آبیل …‘‘کی رسمِ اجرا ٗ پاکستان امریکن کلچرل سینٹر میں ہوئی جس کی صدارت پروفیسر منظر ایوبی نے کی، مہمانِ خصوصی جناب مسلم شمیم اورتقریب کے میزبان پروفیسر ہارون رشید تھے،اظہارِ خیال کرنے والوں میں ،ظہیر خان،ڈاکٹر نزہت عباسی اورجمال احمد جمال تھے،ارشد ندیم نے ابتدائی کلمات ادا کیے،پروفیسر ہارون رشید نے کہا کہ پی اے سی سی میں ادیبوں کے ساتھ شام...

کراچی کی ادبی ڈائری

کراچی کی ادبی ڈائری وجود - اتوار    22    اپریل    2018

٭حلقہ اربابِ ذوق ،کراچی کی ہفتہ وار نشست حلقہ اربابِ ذوق ،کراچی کی ہفتہ وار نشست پاکستان سیکرٹیریٹ میں منعقد ہوئی۔ سب سے پہلے جمیل عباسی نے افسانہ بعنوان ’’کچا‘‘پیش کیا۔ گفتگو کا آغاز کرتے ہوئے شکیل شہزاد نے کہا کہ افسانے میں کرب کے شکار افراد کا زبردست المیہ پیش کیا گیا ہے۔ پلاٹ بہترین ہے۔ ایک پہلو نظر انداز کردیا گیا، عمومی طور پر معذور بچوں کو مار کے علاوہ جنسی تشدد کا سامنا بھی ہوتا ہے۔ علی بابا نے کہا ، کہانی کی بنت اچھی ہے، جملے طاقتور ہیں، مرکزی کردار احساسِ کمتری کا...

کراچی کی ادبی ڈائری

زبان پر پہرے بندی کی منظم سازشیں ناکام ہوگئیں، "بول" بولنے لگا! وجود - بدھ    19    اکتوبر    2016

بول ٹی وی بولنے لگا۔ گزشتہ سولہ ماہ سے بول ٹی وی نیٹ ورک کے خلاف ہونے والی منظم سازشوں کے باوجود ادارے نے انتہائی نامساعد حالات میں اپنی نشریات کا آغاز کردیا ہے جس نے  ذرائع ابلاغ کے   تمام حلقوں  میں ایک خوشگوار فضاء پیدا کردی ہے اور عامل صحافیوں میں خاصا گرمجوشی کا ماحول پیدا کیا ہے۔ بول ٹی وی کی انتظامیہ نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر یہ اعلان کیا  ہے کہ چینل نے منگل کی شام چھ بجے سے اپنی نشریات کا آغاز کردیا ہے۔ یہ بول ٹی وی کی طرف سے ذرائع ابلاغ کے مختلف حلقوں میں سولہ ما...

زبان پر پہرے بندی کی منظم سازشیں ناکام ہوگئیں،

ایگزیکٹ: شعیب شیخ نے رہائی کے بعد "پہلے سے بھی زیادہ" کا نعرہ لگا دیا! وجود - پیر    05    ستمبر    2016

ایگزیکٹ کے سی ای اور شعیب شیخ نے یکم ستمبر کو رہا ہونے کے بعد گزشتہ روز ایگزیکٹ کے دفتر کا اپنی والدہ کے ساتھ دورہ کیا ۔ جہاں تمام ایگزیکٹین موجود تھے۔ شعیب شیخ نے اس موقع پر اپنے خطاب میں ایگزیکٹ کے ملازمین کو یہ خوشخبری سنائی کہ ابتلا کے پندرہ ماہ میں اُن کے تمام دفاتر اور کاروبار کی بندشوں کے باوجود وہ اپنے تمام ملازمین کو پندرہ ماہ کی پوری کی پوری تنخواہ ادا کریں گے۔ اُنہوں نے اعلان کیا کہ ایگزیکٹ پاکستان کے تمام افسران اور عملے کو مئی 2015ء سے اب تک کی سب تنخواہیں ملیں گ...

ایگزیکٹ: شعیب شیخ نے رہائی کے بعد

پیمرا کی طرف سے عمران خان کی تیسری شادی کی غلط خبر نشر کرنے پر 13 چینلز پر جرمانہ عائد وجود - اتوار    28    اگست    2016

پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کی تیسری شادی سے متعلق غلط خبر نشر کرنے پر پیمرا نے تیرہ نیوز چینلز پر پانچ پانچ لاکھ روپے کا جرمانہ عائد کردیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق پیمرا (پاکستان الیکٹرانک میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی )کی جانب سے جاری کردہ بیان کے مطابق ادارے کے شکایات سیل نے پاکستان تحریک انصاف کی تحریری درخواست پر ملک کے تیرہ نجی نیوز چینلز کو عمران خان کی شادی سے متعلق بغیر تصدیق خبر نشر کرنے پر پانچ پانچ لاکھ روپے کا جرمانہ کردیا ہے۔ جن چینلز کو جرمانہ کی...

پیمرا کی طرف سے عمران خان کی تیسری شادی کی غلط خبر نشر کرنے پر 13 چینلز پر جرمانہ عائد

مصر، خاتون میزبانوں کی نوکری موٹاپے کی وجہ سے خطرے میں وجود - جمعه    19    اگست    2016

مصر کے سرکاری میڈیا نے آٹھ خاتون میزبانوں کو ان کے موٹاپے کی وجہ سے معطل کردیا ہے۔ مصری ریڈیو اور ٹیلی وژن یونین نے ان خواتین کو ایک ماہ تک اپنی خوراک کم کرنے اور وزن گھٹانے کا عندیہ دیا ہے ورنہ انہیں ملازمت سے نکال دیا جائے گا۔ یونین کی سربراہ صفا حجازی نے آٹھ خواتین میزبان کو ٹیلی وژن پر آنے سے روک دیا ہے اور انہیں اپنی خوراک کم کرکے وزن کو قابو میں لانے کا حکم دیا ہے۔ یہ خبر بہت تیزی سے عالمی سطح پر پھیلی اور برطانیہ میں ٹیلی گراف اور امریکا میں نیو یارک ٹائمز جیسے موق...

مصر، خاتون میزبانوں کی نوکری موٹاپے کی وجہ سے  خطرے میں

لندن میں دوسری انٹرنیشنل میڈیا کانفرنس: آخر جھگڑا کیا ہے؟ باسط علی - جمعه    29    جولائی    2016

لندن میں دوسری انٹرنیشنل میڈیا کانفرنس حسب پروگرام 22 سے 24 جولائی دوشہروں میں منعقد ہوئی۔ اور حسب عادت اس کانفرنس کے حوالے سے پاکستان اور برطانیہ کے پاکستانی حلقوں میں خاصا مخالفانہ شور بھی اُٹھا۔ پاکستانی ذرائع ابلاغ کے مختلف اداروں میں پائے جانے والی شکررنجی اور مسابقت کا جذبہ اب سیاسی تعصبات سے آگے بڑھتے بڑھتے عداوت میں تبدیل ہو چکا ہے۔ جس کے نتیجے میں کسی بھی پروگرام سے خالص اختلاف رائے کا اظہار ایک ناممکن عمل بن چکا ہے بلکہ اب اختلاف رائے دراصل اختلاف شخصیات کا روپ دھا ...

لندن میں دوسری انٹرنیشنل میڈیا کانفرنس: آخر جھگڑا کیا ہے؟

روپرٹ مرڈاک فوکس نیوز کے قائم مقام چیئرمین بن گئے وجود - اتوار    24    جولائی    2016

بدچلنی و بدمعاملگی کے الزامات کے بعد فوکس نیوز کے مشہور زمانہ سی ای او راجر ایلز نے باضابطہ طور پر عہدے سے استعفیٰ دے دیا ہے۔ گو کہ یہ محض ایک رسمی کارروائی ہی رہ گئی تھی کیونکہ معاملات خاصے آگے نکل گئے تھے لیکن باضابطہ اعلان ہونا ابھی باقی تھا، اب وہ بھی ہو چکا ہے اور یہ فوری طور پر نافذ العمل ہوگا۔ جاری کردہ اعلامیہ کے مطابق راجر ایلز نے چیئرمین اور سی ای او فوکس نیوز چینل اور فوکس بزنس نیٹ ورک اور چیئرمین فوکس ٹیلی وژن اسٹیشنز کے عہدوں سے استعفیٰ دے دیا ہے۔ روپرٹ مرڈاک...

روپرٹ مرڈاک فوکس نیوز کے قائم مقام چیئرمین بن گئے

میڈیا پر آنے والی بیشتر خبریں جعلی ہوتی ہیں، معروف امریکی صحافی وجود - جمعرات    21    جولائی    2016

امریکا کی معروف صحافی، مصنف اور سابق صدر بل کلنٹن کی سیاسی مشیر رہنے والی نومی وولف کہتی ہے کہ مین اسٹریم میڈیا میں آنے والے بیشتر پروگرام جعلی خبروں اور حکومتی پروپیگنڈے پر مشتمل ہوتے ہیں۔ "امریکی اب اس حقیقت کو جاننے لگے ہیں کہ وہ خبروں میں زیادہ تر جو کچھ سنتے ہیں وہ درحقیقت جعلی ہوتا ہے۔" ایک تقریب میں خطاب کرتے ہوئے نومی وولف نے کہا کہ ایک صحافی کی حیثیت سے یہ الفاظ ادا کرتے ہوئے میں بتا نہیں سکتی کہ دل پر کتنا بڑا پتھر رکھنا پڑ رہا ہے، لیکن ہم ایسے دور میں داخل ہو ...

میڈیا پر آنے والی بیشتر خبریں جعلی ہوتی ہیں، معروف امریکی صحافی

100 کروڑ روپے کا بھتہ، مشہور بھارتی چینل کے دو ایڈیٹرز گرفتار وجود - جمعه    08    جولائی    2016

دہلی پولیس کی کرائم برانچ نے زی گروپ کے دو ایڈیٹرز کو گرفتار کرلیا ہے جن کے خلاف کانگریس کے رکن اسمبلی نوین جندل نے شکایت درج کروائی تھی کہ انہوں نے ایک مشہور اسکینڈل میں جندل گروپ کے حوالے سے ایک خبر جاری نہ کرنے کے بدلے میں کمپنی کی جانب سے 100 کروڑ روپے کے اشتہارات کا "بھتہ" طلب کیا تھا۔ گرفتار ہونے والے صحافیوں سدھیر چودھری اور سمیر اہلووالیا زی نیوز اور زی بزنس چينلوں کے ایڈیٹوریل سربراہان ہیں۔ دونوں کے خلاف مجرمانہ سازباز اور بھتہ خوری کے مقدمات درج کیے جانے کا امکا...

100 کروڑ روپے کا بھتہ، مشہور بھارتی چینل کے دو ایڈیٹرز گرفتار

عامر لیاقت پر تین دن کے لیے پابندی لگا دی گئی وجود - منگل    28    جون    2016

تھا جس کا انتظار شاہکار آ گیا۔ رمضان کے نام پر ہر سال "عکاظ کا میلہ" سجانے کی قبیح روایت ڈالنے والے عامر لیاقت حسین بھی بالآخر پیمرا کی "پکڑ" میں آ گئے ہیں جن پر تین روز کے لیے پابندی عائد کردی گئی ہے یعنی آئندہ تین دن تک وہ "انعام گھر" کی میزبانی نہیں کر سکتے۔ علاوہ ازیں چینل کو بھی معذرت کرنے اور عامر لیاقت کو بھی معافی مانگنے کا حکم دیا گیا ہے اور ایسا نہ کرنے کی صورت میں پروگرام پر مکمل پابندی لگانے کا بھی کہا ہے۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ اُن پر یہ پابندی عین اُس وقت لگائی گئی...

عامر لیاقت پر تین دن کے لیے پابندی لگا دی گئی

پیمرا نے اشتعال انگیز گفتگو کرنے والے حمزہ علی عباسی پر پابندی ہٹانے کا عندیہ دے دیا! وجود - منگل    21    جون    2016

پیمرا (پاکستانی الیکٹرانک میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی) نے 20 جون بروز پیر اپنے نئے نوٹیفکیشن میں دو ٹیلی ویژن چینلز کو رمضان نشریات کے دوران "نامناسب جملے" نشر کرنے پر معذرت مانگنے کی ہدایت جاری کی ہے اور اس کے ساتھ ہی پابندی کے شکار میزبانوں پر سے پابندی ہٹانے کا عندیہ بھی دے دیا ہے۔ پیمرا نے اپنے نوٹیفکیشن میں ہی دونوں ٹیلی ویژن کے موقف بھی پیش کر دیئے ہیں۔ جس کے مطابق آج ٹی وی اور نیوز ون نے یقین دہانی کرائی ہے کہ وہ رسمی معذرت نشر کرکے " پروگرامز کے باعث ہونے والے انتشار...

پیمرا نے اشتعال انگیز گفتگو کرنے والے حمزہ علی عباسی پر پابندی ہٹانے کا عندیہ دے دیا!

آج ٹی وی کے حمزہ علی عباسی اور ٹی وی ون کے شبیر ابوطالب پر پیمرا کی جانب سے پابندی عائد وجود - هفته    18    جون    2016

پیمرا (پاکستان الیکٹرانک میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی ) کی جانب سے معروف اداکار حمزہ علی عباسی اور اینکر شبیر ابوطالب کورمضان ٹرانسمیشن کرنے پر پابندی عائد کر دی گئی ہے۔ حمزہ علی عباسی نے رمضان ٹرانسمیشن کے دوران قادیانیوں کے مسئلے پر 1973 کے پارلیمنٹ کے فیصلے کے خلاف نہ صرف گفتگو کی تھی بلکہ بعد کے تمام پروگرام میں وہ اس کادفاع بھی کرتے رہے۔ اُن کے اس رویئے پر سماجی رابطوں کے ذرائع میں اُنہیں شدید تنقید کا نشانہ بنایا گیا۔ حیرت انگیز طور پر اس مسئلے پر پاکستان کے مرکزی ذرائع ابلا...

آج ٹی وی کے حمزہ علی عباسی اور ٹی وی ون کے شبیر ابوطالب پر پیمرا کی جانب سے پابندی عائد

بول ٹی کے حق میں خیبر پختونخوا اسمبلی کی قرارداد منظور وجود - جمعرات    26    مئی    2016

سندھ اسمبلی کے بعد خیبر پختونخوا اسمبلی نے بھی بول میڈیا گروپ کے حق میں متفقہ قرارداد منظور کرلی۔ بدھ کے روز ڈپٹی اسپیکر خیبر پختونخوا اسمبلی ڈاکٹر مہر تاج روغانی کی زیر صدارت ہونے والے اجلاس میں صوبائی اسمبلی نے بول میڈیا گروپ کو غیر قانونی ہتھکنڈوں اور متنازع طریقوں سے جبراً بند کیے جانے پر شدید تشویش کا اظہار کیا۔ قرارداد پاکستان تحریک انصاف کے رکن خیبر پختونخوا اسمبلی اور پارلیمانی سیکریٹری جاوید نسیم نے پیش کی۔ عوامی نیشنل پارٹی کے جعفرشاہ، پاکستان پیپلز پارٹی کی نگہ...

بول ٹی کے حق میں خیبر پختونخوا اسمبلی کی قرارداد منظور

پیمرا کا صائب قدم: جرائم پر مبنی ٹی وی پروگرام پر پابندی عائد کرنے کا اعلان وجود - هفته    21    مئی    2016

پیمرا (پاکستان الیکٹرانک میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی) نے ایک صائب قدم اُٹھاتے ہوئے ٹی وی چیینلز پرزنا بالجبر، قتل اور خودکشی سمیت تمام جرائم کی ڈرامائی تشکیل یعنی تمثیل کاری پر پابندی عائد کرنے کا اعلان کردیا ہے۔ چیئرمین پیمرا ابصار عالم نے وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں ایک پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ اتھارٹی نے ایسے تمام پروگراموں پر پابندی عائد کرنے کا فیصلہ کیا ہے جن میں قتل، خودکشی جیسے جرائم کی تمثیل کاری کی گئی ہو۔ پیمرا کی جانب سے پابندی کا اطلاق آئندہ ماہ سے ہوگا۔ ...

پیمرا کا صائب قدم: جرائم پر مبنی ٹی وی پروگرام پر پابندی عائد کرنے کا اعلان

آزادی صحافت میں چالیس ممالک امریکا سے آگے کیوں؟ وجود - منگل    26    اپریل    2016

آزادی صحافت کے لیے کام کرنے والی عالمی تنظیم رپورٹرز ودآؤٹ بارڈرز (آر ایس ایف) کے '2016ء پریس فریڈم انڈیکس' کے مطابق 180 ممالک میں امریکا 41 ویں نمبر پر ہے، یعنی 40 ممالک میں آزادی صحافت کا حال امریکا سے بہتر ہے۔ اس درجے کی وجہ ایڈورڈ سنوڈین جیسے رازوں سے پردہ اٹھانے والوں کے خلاف اعلان جنگ، بڑے پیمانے پر عوام کی نگرانی اور صحافیوں کی حفاظت کے لیے قانون نہ ہونا ہیں، جو صحافیوں کو ذرائع یا دیگر خفیہ معلومات ظاہر نہ کرنے کے حق کی ضمانت نہیں دیتا۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ روا...

آزادی صحافت میں چالیس ممالک امریکا سے آگے کیوں؟

ذرائع ابلاغ پر عوامی اعتماد نہ ہونے کے برابر، دلچسپ سروے وجود - منگل    19    اپریل    2016

ناقص خبریں اور متعصبانہ رویہ، ذرائع ابلاغ پر عوام کا اعتماد دنیا بھر میں بری طرح مجروح ہو رہا ہے۔ یہاں تک کہ سوشل میڈیا پر شکوک میں بھی اضافہ کیا ہے۔ اس وقت صرف 6 فیصد امریکی ہیں جو میڈیا پر کافی اعتماد رکھتے ہیں۔ لیکن یہ اعتماد بھی درستگی، توازن اور شفافیت کے عام صحافتی اصولوں کی ہونے والی پیروی سے زیادہ ہے۔ معلومات کے ذرائع تو روز بروز بڑھتے جا رہے ہیں، لیکن "حقیقت خرافات میں کھو" رہی ہے۔ امریکی اب ایسی خبروں پر زیادہ بھروسہ کرتے ہیں جو تازہ ترین ہوں، مختصر ہوں اور قابل ب...

ذرائع ابلاغ پر عوامی اعتماد نہ ہونے کے برابر، دلچسپ سروے

جنگ گروپ نے صحافتی ضابطہ اخلاق پامال کردیا وجود - جمعه    11    مارچ    2016

جنگ جیو گروپ نے اے کے ڈی سیکورٹیز کے خلاف اپنی منظم مہم میں پیشہ صحافت کے تمام اخلاقی اصولوں کو پامال کر دیا ہے۔ جس کے ثبوت ہر گزرتے دن ملتے جارہے ہیں۔ وجود ڈاٹ کام کے لیے یہ ایک افسوسناک صورت حال ہے کہ پاکستان کے سب سے بڑے ابلاغی ادارے کے دعوے دار جنگ اور جیو گروپ کس اوچھے اور چھوٹے پن کے ساتھ جہانگیر صدیقی سے میر شکیل الرحمان کے رشتے کو نبھانے کی خاطر صحافتی ضابطہ اخلاق کے تمام تقاضوں کو پامال کررہا ہے۔ جہا نگیر صدیقی نے مختلف ہتھکنڈوں سے 200 ارب روپے کی بدعنوانی کی ہے جس ک...

جنگ گروپ نے صحافتی ضابطہ اخلاق پامال کردیا

بول ٹی وی کے لائسنس کی منسوخی غیر قانونی ہے، چیئرمین سینیٹ قائمہ کمیٹی وجود - بدھ    02    مارچ    2016

سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے اطلاعات کے چیئرمین کامل علی آغا نے کہا ہے کہ بادی النظر میں یہ ثابت ہوتا ہے کہ بول ٹی وی کے لائسنس کی منسوخی غیر قانونی ہے اور میری نظر میں بول ٹی وی کو این او سی و سیکورٹی کلیئرنس جاری کے بعد واپس لینا درست نہیں جبکہ پیمرا کے قائم مقام چیئرمین کے فیصلے پر مستقل چیئرمین اب درست فیصلہ کر سکتا ہے۔ کامل علی آغا نے مزید کہا ہے کہ این او سی کی منسوخی کی غلطی قانونی نظر نہیں آ رہی اور یہ غلطی بول کے موقف کی تائید کر رہی ہے۔ ایسا لگتا ہے کہ کچھ طاقت ور...

بول ٹی وی کے لائسنس کی منسوخی غیر قانونی ہے، چیئرمین سینیٹ قائمہ کمیٹی

ڈاکٹر شاہد مسعود کی شکایت پر پرویز رشید کے بیانات کا نوٹس! بازی پلٹ بھی سکتی ہے ! وجود - پیر    29    فروری    2016

پاکستان میں اختلاف کے طور طریقے اور تنقید کی حدود وقیود کا مسئلہ سنگین سے سنگین ہوتا جارہا ہے۔ سیاست دان ایک دوسرے کے خلاف نہایت ناشائستہ زبان استعمال کرنے کے عادی ہو چکے ہیں۔ اور اب یہ رویہ ذرائع ابلاغ میں بھی در آیا ہے۔ ٹیلی ویژن انڈسٹری کے پھیلاؤ نے زبان وبیان کو زیادہ پست کردیا ہے۔ مگر ڈاکٹر شاہد مسعود کی شکایت پر پیمرا نے ایک دلچسپ قدم اُٹھایا ہے۔ ذرائع ابلاغ اور سیاست کے مختلف حلقوں میں پیمرا کےقدم کو نہایت دلچسپی سے دیکھا جارہا ہے۔ کیونکہ کچھ اسی قسم کی شکایات سیا...

ڈاکٹر شاہد مسعود کی شکایت پر پرویز رشید کے بیانات کا نوٹس! بازی پلٹ بھی سکتی ہے !

پیمرا کی طرف سے غیر اخلاقی لفظ کے ٹیلی ویژن پر نشر ہونے کا نوٹس: ملا جلاردِ عمل وجود - جمعه    22    جنوری    2016

پاکستان الیکٹرانک میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی(پیمرا) کی جانب سے 21 جنوری کو نیوز / کرنٹ افیئرز کے تمام چینلز کو ایک "ایڈوائس بھیجی گئی ہے ۔ جس میں ڈائریکٹر جنرل آئی ایس پی آر لیفٹیننٹ جنرل عاصم سلیم باجوہ کی براہ راست پریس کا نفرنس کے دوران میں رات نو بج کر پانچ منٹ پر ایک غیر اخلاقی لفظ کے نشر ہونے پر توجہ دلائی گئی ہے۔ واضح رہے کہ چار سدہ میں باچا خان یونیورسٹی پر عسکریت پسندوں کے حملےپر اُسی روز 20 جنوری کی شب پاک فوج کے ترجمان کی جانب سے پریس کانفرنس کے دوران میں ایک ...

پیمرا کی طرف سے غیر اخلاقی لفظ کے ٹیلی ویژن پر نشر ہونے کا نوٹس: ملا جلاردِ عمل

امریکی چینل فوکس نیوز کے 60 فیصد 'حقائق' دراصل جھوٹ وجود - منگل    19    جنوری    2016

امریکا کے مشہور، بلکہ بدنام زمانہ، فوکس نیوز کے 60 فیصد 'حقائق' دراصل جھوٹ ہوتے ہیں، یعنی اس نے تو پاکستان کے چینلز کو بھی پیچھے چھوڑ دیا۔ امریکا میں ٹیلی وژن چینلوں کی درستگی کو جانچنے والے ایک ادارے 'پنڈت فیکٹ' نے بتایا ہے کہ امریکا کے عوام سے جھوٹ بولنے میں فوکس نیوز کے بعد سی این این اور ایم ایس این بی سی پیش پیش ہین۔ فوکس نیوز کی "سچائی" پر تنقید کوئی نئی خبر نہیں، اب تو یہ کہا جاتا ہے کہ فوکس نیوز کی یہ خبر سچی نکلی۔ لیکن بدقسمتی یہ ہے کہ یہ امریکا میں دیکھا جان...

امریکی چینل فوکس نیوز کے 60 فیصد 'حقائق' دراصل جھوٹ

الجزیرہ امریکا کی بندش کا اعلان کردیا گیا وجود - هفته    16    جنوری    2016

الجزیرہ امریکا نے رواں سال 30 اپریل تک اپنے کیبل ٹیلی وژن اور ڈیجیٹل آپریشنز بند کرنے کا اعلان کیا ہے۔ یہ فیصلہ کرتے ہوئے الجزیرہ کا کہنا ہے کہ دراصل ان کے کاروبار کا انداز امریکا میں ذرائع ابلاغ کی مارکیٹ کو درپیش اقتصادی مسائل کی وجہ سے مزید جاری نہیں رہ سکتا۔ الجزیرہ امریکا کی بندش عوام کے ساتھ ساتھ خاص طور پر ان تمام افراد کے لیے مایوس کن خبر ہے جو طویل المیعاد مستقبل کے لیے ادارے میں انتھک محنت کر رہے تھے۔ ملازمین کو ادارے کی جانب سے جو ای میل بھیجی گئی ہے اس میں الج...

الجزیرہ امریکا کی بندش کا اعلان کردیا گیا

ڈاکٹر عامر لیاقت حسین کا جیو انٹرٹینمنٹ سے پھر استعفیٰ:اصل کھیل کیا ہے؟ باسط علی - بدھ    16    دسمبر    2015

عامر لیاقت حسین جیو انٹرٹینمنٹ کی صدارت سے ایک بار پھر مستعفی ہو گئے ہیں۔ اُنہیں اس عہدے پر ۲؍نومبر ۲۰۱۵ء کو دوبارہ فائز کیا گیا تھا۔ صرف تیرہ روز میں اُنہوں نے اچانک ایک عجیب وغریب اعتراض داغ کر اپنے عہدے کو چھوڑنے کا اعلان بذریعہ ٹوئٹر کر دیا ہے۔ عامر لیاقت حسین نے جیو نیوز پر ۱۶؍ دسمبر کو نیوز ریڈرز کی جانب سے آرمی پبلک اسکول کی یونیفارم پہن کر خبریں پڑھنے پر اعتراض کیا ہے۔ نیوز ریڈرز کی جانب سے یہ یونیفارم شہدائے پشاور کی یاد میں اظہارِ یکجہتی کے لئے پہنے گئے ہیں...

ڈاکٹر عامر لیاقت حسین کا جیو انٹرٹینمنٹ سے پھر استعفیٰ:اصل کھیل کیا ہے؟

دنیا ٹی وی کے نقطۂ نظر پروگرام میں حسین حقانی کی نکتہ آفرینیاں اور شوشل میڈیا کی شہنائیاں رضوان رضی - جمعرات    29    اکتوبر    2015

گزشتہ دنوں مجیب الرحمن شامی کے دنیا ٹی وی پر پروگرام ’’نقطۂ نظر ‘‘ دیکھنے کا اتفاق ہوا، جس میں انہوں نے امریکہ میں سابق پاکستانی سفیر جناب حسین حقانی کو مہمان تبصرہ نگار کے طور پر لیا تھا۔ حسین حقانی کا اس پروگرام میں وہی رویہ تھا جو گھر میں سب سے نالائق اور نکھٹو بچے کا ہوتا ہے۔ وہ بچہ جو والدین کی طرف سے اصلاح پر اُلٹا یہ سناتا رہتا ہے کہ ’’کیا میں آپ کا بیٹا نہیں ہوں؟ یا مجھے باہر سے اُٹھا کر لائے تھے؟ یا پھر مجھے گھر سے نکال دیں یا میں گھر سے چلا جاتا ہوں‘‘۔ بدقسمتی سے ای...

دنیا ٹی وی کے نقطۂ نظر پروگرام میں حسین حقانی کی نکتہ آفرینیاں اور شوشل میڈیا کی شہنائیاں

دنیا ٹیلی ویژن سے افتخار احمد فارغ: الیکشن سیل میں کوئی کارکردگی نہیں دکھا سکے! باسط علی - اتوار    18    اکتوبر    2015

پاکستان کے مرکزی ذرایع ابلاغ کی کوئی کل سیدھی نہیں۔ چنانچہ یہاں ہر چیز غیر یقینی ہوتی ہے۔ ٹیلی ویژن کی چکاچوند دنیا میں تو روز نیے نیے شگوفے پھوٹتے ہیں۔ اب نیا کھڑاگ خود کھڑاگ کھڑے کرنے کے شوقین مشہور ٹی وی میزبان افتخار احمد کے متعلق ہی کھڑا ہوا ہے۔افتخار احمد نے دنیا ٹی وی سے بھی استعفیٰ دے دیا ہے۔ اُنہوں نے اپنے "ٹوئیٹ " میں یہ کہا ہے کہ اُن کے لیے یہ ایک تاریخی تجربہ تھا۔ مگر دنیا ٹی وی کے اندرونی حالات کو جاننے اور سمجھنے والے بخوبی آگاہ ہے کہ وہاں آدمی کے لیے کوئی تجربہ...

دنیا ٹیلی ویژن سے افتخار احمد فارغ: الیکشن سیل میں کوئی کارکردگی نہیں دکھا سکے!

حوثی باغیوں نے گیارہ صحافیوں کو یرغمال بنا لیا وجود - منگل    01    ستمبر    2015

حوثی باغیوں نے یمن کے دارالحکومت صنعاء میں گیارہ صحافیوں کر یرغمال بنا لیا ہے۔انسانی حقوق اور ذرائع ابلاغ کی مختلف تنظیموں نے صحافیوں کو حراست میں لئے جانے کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔اور ان تمام یرغمال صحافیوں کی رہائی کامطالبہ کیا ہے۔ خلیج کے نشریاتی ادارہ العربیہ ٹی وی کی روداد (رپورٹ) کے مطابق صحافیوں کی عالمی تنظیم "مراسلون بلا حدود" نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ حوثی باغیوں نے رواں برس 9 جون کو صنعا کے ایک ہوٹل پر دھاوا بولا تھا اور وہاں مقیم گیارہ صحافیوں کو اغو...

حوثی باغیوں نے گیارہ صحافیوں کو یرغمال بنا لیا